لاہور(خصوصی نمائندہ)وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارکی زیر صدارت وزیراعلیٰ آفس میں ہونے والے اجلاس میں امن و امان کی صورتحال اور جرائم پر قابو پانے کیلئے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا جرائم کی بیخ کنی کے لئے زبانی جمع خرچ کے بجائے عملی اقدامات کیے جائیں،ڈکیتی ،راہزنی اوردیگر جرائم کے سدباب کیلئے ٹھوس حکمت عملی بنائی جائے کیونکہ عوام کی جان و مال کے تحفظ سے بڑھ کر کوئی ترجیح نہیں، وزیراعلیٰ نے سنگین جرائم میں ملوث اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کیلئے صوبہ بھر میں بھر پور مہم چلانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کے حوالے سے ہفتہ وار رپورٹ انہیں پیش کی جائے ۔ وزیراعلیٰ نے کہاجرائم کی شرح بڑھنے پر متعلقہ پولیس افسر سے جواب طلبی کی جائے گی، عوام کی جان و مال کے تحفظ میں تساہل برتنے والے افسروں کو جواب دینا ہوگا۔ امن وامان کی صورتحال کا باقاعدگی سے خود جائزہ لوں گا۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ پولیس کی جدید خطوط پر تربیت کے لئے ریفریشر کورسز کرائے جائیں اور پولیس فورس ہفتہ خوش اخلاقی منائے ۔ افسران عوام کے مسائل کے حل کیلئے اپنے دروازے کھلے رکھیں،سائل کو تھانوں میں تبدیلی کا احساس ہونا چاہیے ۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ پنجاب سے وزیر بلدیات عبدالعلیم خان اور صوبائی وزیر قانون محمد بشارت راجہ نے ملاقات کی۔وزیر اعلیٰ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہر لمحہ عوام کی خدمت کیلئے وقف ہے اورہمارا ایجنڈا صرف اورصرف عوام کی خدمت ہے ۔ فلاح عامہ کے پروگراموں کو مقررہ مدت میں مکمل کیا جائے گا ۔ وزیراعلیٰ پنجاب سے چین کے سفیریاؤجنگ(Mr۔ Yao Jing) نے ملاقات کی جس میں پاک چین تعلقات کے فروغ، سی پیک کے منصوبوں اور نئے شعبوں میں تعاون بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیراعلیٰ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا چین پاکستان کا انتہائی بااعتماد دوست ملک ہے اور ہم نئے پاکستان کی تعمیر و ترقی میں چین کے تعاون کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ عثمان بزدارنے فیصل آباد کے علاقے چک جھمرہ میں خاتون پر پولیس کے مبینہ تشدد کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے واقعہ کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے پولیس حکام سے رپورٹ طلب کر لی ہے ۔