کراچی (کامرس رپورٹر) رائس ایکسپورٹرز ایسو سی ایشن آف پاکستان REAPکے مطابق مالی سال 2017-18میں چاول کی بر آمدات کا 2ارب ڈالر کا ہدف حاصل کر لیا گیا ہے ،گزشتہ مالی سال میں مجموعی طور پر40لاکھ23ہزار میٹرک ٹن چاول بر آمد کیا گیا جس کی مالیت تقریباََ 2ارب 5لاکھ 90ہزار ڈالر 243)ارب روپے (ہے جبکہ گذشتہ مالی سال میں اسی عرصے کے دوران34لاکھ46ہزار میٹرک ٹن چاول بر آمد کیا گیا تھا جسکی مالیت تقریباََ ایک ارب56کروڑ ڈالر تھی یعنی اس سال چاول کی برآمدات میں مقدار کے حساب سے 16.7فیصد اور مالیت کے حساب سے 27.7فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ اس سال باسمتی چاول کی بر آمدات 5لاکھ 1ہزار ٹن رہی جسکی مالیت 524ملین ڈالر ہے جبکہ نان باسمتی چاول کی مقدار 35 لاکھ 22ہزار ٹن رہی جسکی مالیت 1ارب 47کروڑ ڈالر ہے رائس ایکسپورٹرز ایسو سی ایشن آف پاکستان REAPکے سینیئر وائس چیئرمین رفیق سلیمان نے چاول کی برآمدات کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ آئندہ سال چاول کی بر آمدات کو کئی چیلنجز کا سامنا ہے ۔ کینیا پاکستانی چاول کا سب سے بڑا خریدار ہے ۔ گذشتہ مالی سال میں کینیا کو 4لاکھ 39ہزار ٹن چاول بر آمد کیا گیا جسکی مالیت 171ملین ڈالر ہے ۔کچھ عرصے پہلے کینیا میں پاکستانی چاول کر خصوصی در آمدی ڈیوٹی کی سہولت میسر تھی مگر اب انہوں نے پاکستانی چاول پر بھی 35فیصد یا 200ڈالر کی ڈیوٹی نافذ کر دی ہے ۔