BN

سپریم کورٹ کو قوانین، اداروں کے فیصلوں کے جائزہ کا اختیار ہے :چیف جسٹس

جمعرات 08 نومبر 2018ء





اسلام آباد(خبر نگار)چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا ہے سپریم کورٹ کو قوانین اور ریاستی اداروں کے فیصلوں کے جائزہ کا اختیار ہے ۔گزشتہ روز 2019 ویں نیشنل سکیورٹی اینڈ وار کورس کے شرکا کے وفد نے میجر جنرل عاصم ملک کی سربراہی میں چیف جسٹس سے ملاقات کی۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے چیف جسٹس نے کہا سپریم کورٹ کو عدالتی سکیم کے تحت مقننہ اور انتظامیہ کے اقدمات کا جائزہ لینے کا خصوصی اختیار حاصل ہے ۔ چیف جسٹس نے وفد کو ملک میں اختیارات کی تقسیم اور انتظامیہ، مقننہ اور عدلیہ کے کردار پر تفصیلی طور پر بتایا ۔چیف جسٹس نے کہار یاست کے تینوں ستونوں کا کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے ، بروقت اور سستے انصاف کی فراہمی کے لئے قوانین میں جدت لانا ضروری ہے ، پرانے قوانین کو جدید تقاضوں کے مطابق ڈھالنے کی ضرورت ہے ۔وفد میں پاک فوج کے افسران سمیت نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں زیر تربیت غیر ملکی فوجی افسران بھی شامل تھے ۔چیف جسٹس نے شرکا کے سوالات کے جوابات بھی دیئے ، وفد نے چیف جسٹس کا شکریہ ادا کیا۔ 

 

 



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں