BN

آئی ایم ایف کا مطالبہ ہے تاہم ڈالر مہنگا نہیں کرینگے؛ بھارت ہمیں بلیک لسٹ کرنا چاہتا ہے :وزیرخزانہ

جمعرات 14 مارچ 2019ء





اسلام آباد (خصوصی نیوز رپورٹر) وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ مہنگائی بڑھ رہی ہے او ر لوگوں کو تکلیف ہو رہی ہے لیکن یہ گزشتہ حکومت کی وجہ سے ہے ، مہنگائی کی شرح کم کرنے کیلئے اقدامات کر رہے ہیں ، بجٹ خسارہ 7فیصد سے کم رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ وزیر خزانہ نے قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا ن لیگ حکومت نے بجلی کی قیمت کو انتخابی مہم کیلئے استعمال کیا تھا، اس نے ایک سال میں توانائی شعبہ میں 450 ارب اور گیس کمپنیوں میں 150 ارب روپے کا نقصان کیا ،اب معیشت مستحکم دکھائی دے رہی ہے تاہم مہنگائی مزید بڑھ رہی ہے کیونکہ بجلی اور گیس کی قیمت بڑھ رہی ہے ۔ انہوںنے کہا آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کے قریب پہنچ چکے ، عالمی ادارہ ڈالر کا ریٹ بڑھانا چاہتا ہے لیکن حکومت ایسے اقدامات نہیں کرے گی،آئی ایم ایف کی سفارشات ہیں کہ بجلی اور گیس کے نقصانات کم کیے جائیں۔ انہوںنے کہا ایف اے ٹی ایف نے کچھ ٹارگٹ دیئے ہیں، اس کی سفارش پر کالعدم تنظیموں کو میڈیم رسک سے ہائی رسک قرار دیا گیا ، دوست ممالک نے بتایا بھارت پاکستان کو بلیک لسٹ کرانا چاہتا ہے ،ایف اہداف پر عملدرآمد کر کے ستمبر میں گرے لسٹ سے نکل جائیں گے ، ایف اے ٹی ایف پر ذیلی کمیٹی تشکیل دی جائے ، کمیٹی کو ان کیمرہ بریفنگ دوں گا۔ ادھر اسد عمر نے بزنس سمٹ میں کہا آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات کے نتائج عنقریب سامنے آجائیں گے ، چین کے ساتھ ایکسپورٹ کی سہولت کیلئے معاہدہ جلد تکمیل پا جائیگا ۔ انہوںنے کہا وزارت خزانہ میں پہلا سیکرٹری نئے طریقہ کار کے تحت لگایا جا رہا ہے ۔انہوں نے مزید کہا ایف بی آر،نادرا اورپرال کے درمیان ٹیکنالوجی کی بنیاد پر ٹیکس چوری روکنے کی کوشش کی جارہی ہے ،سیلز ٹیکس اور ٹرن اوور کے ساتھ انکم ٹیکس کے درمیان بھی ٹیکنالوجی کی بنیاد پر تجزیہ کاری کو استحکام دیا جارہا ہے ۔ 

 

 



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں