BN

مریم نواز کی طلبی کا سمن جاتی عمرہ میں موصول، لیگی رہنما نے جج کی مزید2 ویڈیوز جاری کردیں

جمعرات 11 جولائی 2019ء





لاہور،اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،اپنے نیوز رپورٹر سے ،نامہ نگار،مانیٹرنگ ڈیسک) نیب لاہور نے ایون فیلڈ ریفرنس میں جعلی ٹرسٹ ڈیڈ جمع کرانے کے مقدمے میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی طلبی کا سمن جاتی عمرہ میں موصول کرا دیا ۔ذرائع کیمطابق نیب نے گزشتہ روز پولیس کی خصوصی ٹیم کے ہمراہ نوٹس موصول کرایا۔ احتساب عدالت نے مریم نواز کے سمن تعمیل کے لیے نیب لاہور کو بھجوائے تھے ، سمن کے متن کے مطابق نیب بنام مریم نواز مقدمے میں فیڈرل جوڈیشل کمپلیکس جی الیون میں حاضری کو یقینی بنایا جائے ،سمن میں مریم نواز کو 19 جولائی کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے ۔ادھرمریم نواز نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی مزید 2 ویڈیوز جاری کردی ہیں۔ دونوں ویڈیوز اس ویڈیو کے تسلسل میں جاری کی گئی ہیں جو کچھ روز پہلے جاری کی گئی تھی جس میں جج ارشد ملک( ن) لیگ کے کارکن ناصر بٹ سے نواز شریف کی سزا کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے دیکھے گئے ۔مریم نواز نے ایک ویڈیو اس وقت کی جاری کی ہے جب ناصر بٹ جج ارشد ملک کے گھر گئے ۔ مریم نواز نے اس ویڈیو کے بارے میں بتایا جب ناصر بٹ جج ارشد ملک سے ملاقات کرنے گئے تو ان کی سبز نمبر پلیٹ والی آفیشل کار آئی جس کے ساتھ ناصر بٹ جج صاحب کی رہائشگاہ پر پہنچے ۔ یہ ویڈیو جج ارشد ملک کی جانب سے اپنی پریس ریلیز میں کئے جانے والے دعوؤں کو جھٹلادیتی ہے ۔مریم نواز نے ایک اور ویڈیو ناصر بٹ کے جج ارشد ملک کے گھر میں داخل ہوتے وقت کی شیئر کی ۔ اس کے بارے میں انہوں نے کہا ناصر بٹ جج صاحب کی رہائش گاہ میں داخل ہورہا ہے ، جج ارشد ملک اندر داخل ہوتے ہیں ، ناصر صاحب سے ملتے ہیں اور لائٹس آن کرتے ہیں۔ مریم نواز نے جاتی امرا کے باہر سپیڈ بریکرز توڑے جانے پر ردعمل میں کہا کہا ہے دشمن بھی خاندانی اور ظرف والا ہونا چاہیے ۔ٹویٹ میں انہوں نے کہا جن کو تم مجرم کہتے ہو ان کو مجرم ثابت کرنے کیلئے جو گھنائونا کھیل کھیلا اس کا بھانڈا پھوٹ گیا ہے ، اب تم ایک امریکی عدالت سے ثابت شدہ مجرم ہو، اس مقدمہ کا فیصلہ جج کو بلیک میل کرکے نہیں تمہارے خلاف ناقابل تردید شواہد کی بنیاد پر کیا گیا اس لحاظ سے یہ حکم صرف تم پر عائد ہوتا ہے ۔احتساب عدالت کے سمن موصول ہونے کی خبر کاعکس ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ذرائع سے خبر یں کیا لیک کرواتے ہو؟سامنے آکر بات کیا کرو،ہاں مجھے موصول ہوگیا ہے ،شکریہ،اب بلیک میلنگ کے ذریعے ججز کو ہراساں کرکے من پسند فیصلے لینے اور سلیکٹڈ کے لئے راستہ صاف کرنے والے نیب کورٹ میں ملاقات ہوگی انشاء اﷲ،یہ مجھے ہر قیمت پر گرفتار یا نظر بند کرنا چاہتے ہیں مگر میرے خلاف کچھ ہے نہیں اس لئے بیچاروں کو وہ جھوٹا کیس جس میں مجھے ایک بار سزا ہوچکی اورہائیکورٹ معطل کرچکی دوبارہ کھولنا پڑا،یہ اقدام غیر قانونی اور مضحکہ خیز ہے اس لئے چلے گا نہیں ، چینل کی نشریات صرف اس معاہدے پر بحال کی گئیں کہ وہ مریم نواز کا انٹرویو نشر نہیں کریں گے ۔ 

 

 



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں