نئی دہلی(آن لائن) بھارت کی حکمران جماعت بی جے پی کے رہنما دلیپ گھوش نے بھارت میں 50 لاکھ مسلمانوں کو درانداز قرار دیتے ہوئے انہیں ملک بدر کرنے کی دھمکی دے دی ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق شہریت ترمیمی قانون ( سی اے اے ) اور ( این آر سی ) کے خلاف ملک بھر میں جاری احتجاج کے دوران گھوش نے یہ بیان دیا جو ایک نئی سیاسی بحث چھیڑنے کے لئے موجب بن سکتا ہے ۔ انہوں نے ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی پر براہ راست تنقید کرتے ہوئے کہا کہ مسلم دراندازوں کے ناموں کے خاتمے سے ممتا بنرجی ایک خاص برادری کے لوگوں کو راضی کرنے سے باز آ جائیں ۔انہوں نے کہاکہ سب سے پہلے دراندازوں کے نام ووٹر لسٹوں سے خارج کر دیئے جائیں گے تب ممتا بنرجی کسی کو راضی نہیں کر سکتیں ۔ گھوش نے ( سی اے اے ) اور ) این آر سی ) کے خلاف احتجاج کرنے پر کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کو بھی طعنہ دیتے ہوئے کہا کہ ان کے دلوں میں مسلم دراندازوں کا خون بہہ رہا ہے ۔