BN

اثر چوہان



بھارت سے ہمارے ، محبت / نفرت کے مِلے جُلّے تعلقات؟


معزز قارئین!۔ اقوام متحدہ اور خاص طور پر "South Asia Association for Regional Cooperation" ۔( SAARC) ’’سارک‘‘کے رُکن ممالک پاکستان اور بھارت میں رسمی / غیر رسمی محبت / نفرت کے تعلقات ہیں ۔ جسے انگریزی زبان میں "Love Hate Relationship"کہا جاتا ہے ۔ 17 جولائی کو (پاکستان کے وقت کے مطابق شام کے 6 بجے )’’ عالمی عدالت ِ انصاف ‘‘ نے پاکستان کی قید میں (سزا یافتہ) کُل بُھوشن یادَو ۔بھارتی دہشت گرد / جاسوس کو بری اور رہا کرنے کی بھارت کی درخواستیں مسترد کردی تھیں ۔ عدالت نے فیصلہ کِیا کہ ’’ کُل بُھوشن یادَو
هفته 20 جولائی 2019ء

’’5 ہزارؔ سِکھ یاتری، روزانہ ؔ، پاکستان ؔآئیں گے؟‘‘

جمعرات 18 جولائی 2019ء
اثر چوہان
15 جولائی (پیرکو) قومی اخبارات میں شائع ہونے والی دو خبروں کا آپس میں گہرا تعلق ہے ۔ پہلی خبر یہ کہ ’’بھارتی پنجاب کے وزیر بلدیات، سیاحت و ثقافت ، نوجیت سِنگھ سِدھو ؔنے بھارتی پنجاب کے وزیراعلیٰ کیپٹن ( ر) امریندر سِنگھ سے اختلافات کی وجہ سے وزارت سے اپنا استعفیٰ ( آل انڈیا کانگریس کے صدر ) مسٹر راول گاندھی کو بھجوا دِیا ہے اور دوسری خبر کے مطابق ’’ حکومتِ پاکستان نے سارا سال 5 ہزار سکھ یاتریوں کو روزانہ "Visa Free" گوردوارہ کرتار پور آنے جانے کی اجازت دے دِی ہے‘‘۔ معزز قارئین !۔ یہ
مزید پڑھیے


’’ مزاج ؔشناس شیخ رشیدؔ اور تذکرہ ٔمہاراجا پورؔس؟‘‘

پیر 15 جولائی 2019ء
اثر چوہان
عوامی مسلم لیگ کے سربراہ ،وزیر ریلوے لال حویلی راولپنڈی والے شیخ رشید احمد ، ہر روز اور ہر موضوع پر کچھ نہ کچھ بولنے میں مہارت رکھتے ہیں ۔ پرسوں 13 جولائی کو ،موصوف نے ایک ہی نشست میں بہت کچھ کہا لیکن، مجھے اُن میں سے صرف تین باتوں سے دلچسپی ہے ۔ ایک یہ کہ بقول شیخ صاحب ’’ وزیراعظم عمران خان، امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کے لئے 20 جولائی کو امریکہ جا رہے ہیں ‘‘ لیکن، شیخ صاحب نے کہا کہ ’’ اللہ خیر کرے کیوں کہ دونوں لیڈروں کا مزاج ایک جیسا ہے
مزید پڑھیے


بغیر شناختی کارؔڈز، تاجروؔں کے نکاح ناؔمے؟

هفته 13 جولائی 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ 10 جولائی کو کراچی میں وزیراعظم عمران خان سے تاجروں کی ملاقات بے نتیجہ ختم ہوگئی تھی ، کیونکہ وزیراعظم نے یہ مطالبہ تسلیم کرنے سے انکار کردِیا تھا کہ ’’ 50 ہزار روپے سے زیادہ کی خریدو فروخت پر’’ کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ‘‘ کی شرط ختم کردِی جائے!‘‘۔ وزیراعظم نے کہا تھا کہ ’’ تاجروں کو بھی ٹیکس کی ادائیگی قوم کے دوسرے طبقے کو ساز دینا ہوگا ، کیونکہ قومی معیشت پرانے طریقے سے نہیں چلائی جائے گی‘‘۔ وزیراعظم کے اِس فیصلہ پر شناختی کارڈ کی شرط ختم کرنے کے لئے ہڑتال / ہڑتالوں کے
مزید پڑھیے


حضرت ِقتیل شِفائی کی یاد یں …!

جمعه 12 جولائی 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ کل 11 جولائی 2019ء کو اپنی طرز کے منفرد شاعر اور دانشور حضرت قتیل ؔشفائی کی 18 ویں برسی تھی۔ مَیں نے 92 نیوز چینل پر قتیل صاحب کی شاعری اور شخصیت کے بارے میں ایک پُر مغز اور معلومات افزاء پروگرام دیکھا تو، مجھے بقول شاعر … آئی جو ، اُن کی یاد ، تو آتی چلی گئی! قتیل صاحب ایک بھرپور زندگی گزار کر 11 جولائی 2001ء کو خالق حقیقی سے جا ملے تھے ۔ اُس روز مَیں ’’ آگرہ سربراہی کانفرنس‘‘ میں شرکت کے لئے صدر جنرل پرویز مشرف کی میڈیا ٹیم کے رُکن کی حیثیت
مزید پڑھیے




قائداؔعظمؒ، مادرِؔ ملّت ؒ کے "FAN" بلاول ؔبھٹو؟

جمعرات 11 جولائی 2019ء
اثر چوہان
9 جولائی کو اندرون و بیرون پاکستان قائداعظمؒ کی ہمشیرہ ، مادرِ ملّت کی 52 ویں برسی منائی گئی۔ اِس بار پہلی مرتبہ نواسۂ بھٹو اور نبیرۂ حاکم علی زرداری ۔ بلاول بھٹو زرداری کی طرف سے اَن جانے میں ، یا جان بوجھ کر ایک ایسا کمال ہوگیا جس نے مرحوم بھٹو کی سیاسی تاریخ اور آنجہانی حاکم علی زرداری کا جغفرافیہ بدل دِیاہے ۔ 9 جولائی کو پاکستانی وقت کے مطابق چھ بجے شام مجھے لندن میں کئی سال سے "Settle" میرے قانون دان بیٹے انتصار علی چوہان کا فون آیا اور اُس نے مجھے کہا کہ
مزید پڑھیے


’’اسوہ ٔ حضرت زینب س۔ جِدّو جہدِ مادرِ ملّت ؒ!‘‘

منگل 09 جولائی 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ آج 9 جولائی ہے اورآج کے دِن اہلِ پاکستان اور بیرونِ پاکستان ، فرزندان و دُخترانِ پاکستان اپنے اپنے انداز میں قائداعظمؒ کی ہمشیرہ ، مادرِ ملّت محترمہ فاطمہ جناحؒ کی 52 ویں برسی منا رہے ہیں ۔ مادرِ ملّت نے اپنے برادرِ عظیم ؒ کے شانہ بشانہ قیام پاکستان کے لئے جدوجہد کی لیکن، پاکستان کے گورنر جنرل کا منصب سنبھالنے کے بعد قائداعظم ؒنے اپنی ہمشیرہ کو مسلم لیگ اور حکومت میں کوئی عہدہ نہیں دِیا تھا؟۔ 27 اکتوبر 1958ء سے دسمبر 1964ء تک آمریت / جمہوریت کے تماشے کے بعد فیلڈ مارشل صدر محمد
مزید پڑھیے


شریفین ، زرؔدارِین ، بادشاہوں ؔکی سفارشوں ؔکے محتاجؔ؟

هفته 06 جولائی 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ کل 5 جولائی تھی ۔ اُس سے ایک دِن پہلے 4 جولائی کو سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے ’’شریک چیئرمین ‘‘جناب آصف زرداری نے جیل سے اپنے پیغام میں کہا کہ ’’ اُن کی پارٹی 5 جولائی کو مرحوم صدر جنرل ضیاء اُلحق کی طرف سے مارشل لا کے نفاذ کے خلاف ’’ یوم سیاہ‘‘ منائے گی۔ یہ اُن کا اپنا معاملہ ہے لیکن، 4 جولائی 2019ء کو راولپنڈی میں ’’ سرسیّد ایکسپریس‘‘ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہُوئے وزیراعظم عمران خان نے شریفین ؔ اور زردارینؔ ( میاں نواز شریف اور جناب آصف علی
مزید پڑھیے


رنجیت سِنگھ نہیں ، احمد خان کھرؔل ؒشیرِ پنجاب!

بدھ 03 جولائی 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ دو قومی نظریہ کی بنیاد پر 1947ء میں پاکستان قائم ہُوا۔ صوبہ پنجاب ( مشرقی اور مغربی پنجاب ) بھی ’’ پاک پنجاب اور ’’ بھارتی پنجاب‘‘ کہلایا لیکن، بھارت سمیت کئی دوسرے ملکوں میں آباد سِکھ قوم اور پاک پنجاب میں آباد، سِکھوں کے ہمنوا شاعر، ادیب، صحافی اور دانشور ( علاّمہ اقبالؒ اور قائداعظمؒ کے نظریۂ پاکستان کے خلاف) ’’ سانجھا پنجاب‘‘ کا راگ الاپنے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے؟۔ جون کو پنجاب کے سِکھ حکمران مہاراجا رنجیت سِنگھ کی لاہور میں برسی کی تقریبات میں حِصّہ لینے کے لئے بھارت سمیت
مزید پڑھیے


’’انکل ہمارا سامؔ ،بجٹ ہے عوام دوؔست!‘‘

پیر 01 جولائی 2019ء
اثر چوہان
معزز قارئین!۔ مَیں 1973ء سے کئی سال تک قومی اسمبلی کی پریس گیلری میں بیٹھ کر اور پھر اپنے گھر میں بیٹھ کر کسی نہ کسی نیوز چینل پر وزیر / مشیر خزانہ کی بجٹ تقریر سننے کا تجربہ ہے۔ 11 جون 2019ء کو مَیں نے اپنے گھر میں بیٹھ کر خوبصورت نام والے جواں سال اور خوبرو وزیر مملکت برائے ریونیو جناب حمّاد اظہر کی بجٹ تقریر سُنی تو میرے تصّور میں ماضی کے کسی نہ کسی وزیر/ مشیر خزانہ کا چہرہ اور خدّوخال‘‘ آگئے ۔ پھر صِرف حکومتی پارٹی اور اُس کے اتحادیوں اور حزبِ اختلاف کی
مزید پڑھیے