BN

احسان الرحمٰن


’’آئیڈیاز کی دنیا‘‘


دنیا کی ترقی کے پیچھے دو ہی چیزیں ہیں، ایک آئیڈیاز اور دوسری ضرورت،ضرورت کے ہاتھ آئیڈیاز تراشتے ہیںاور ریسرچ، تحقیق، ان آئیڈیاز کو خیال کی دنیاسے کھینچ کر سچائی کی صورت میں ہمارے سامنے رکھ دیتی ہے ،اس ترقی کا کھرا کھوجنا شروع کریں، تو آپ سیدھا آئیڈیا ز تک جاپہنچیں گے ،دور نہیں جاتے، اپنے پڑوس ہی میں جھانک لیتے ہیں ،بڑی بڑی ایجادات کو جانے دیجئے ۔ہمارے گھروں کی خواتین پھول جھاڑو سے بخوبی واقف ہوں گی، یہ ایک طرح کی گھاس کے نرم نرم پھول یا بور ہوتے ہیں،اس جھاڑو کا کمال یہ ہے کہ یہ
جمعه 26 فروری 2021ء

’’دہلی پروڈکشن کی تیسری قسط‘‘

پیر 22 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
’’پاکستان سے غلطی ہوئی ہے تو مان لینا چاہئے ،ماننا مناسب نہیں ہے تو غیر محسوس طریقے سے ہی اصلاح کرلینی چاہئے ‘‘۔استنبول کی سرد شام میں سمندر کنارے بزرگ وکیل نے ترکش چائے کی تلخ چسکی لیتے ہوئے نرمی سے کہا او رخاموش ہوگئے وہ چھوٹے چھوٹے جملوں میں بات کرنے کے عادی لگتے تھے۔ خواجہ سلامت تیس برسوں سے آئرلینڈ میں ہیں ان کا تعلق سری نگر سے ہے چھوٹے سے تھے تو ہجرت کرکے پاکستان آگئے اور جب بڑے ہوئے تو غم روزگار انہیں ملکوں ملکوں لے کر گھومتا رہا پھربلاخر آئرلینڈ میں قرار آیاا ور وہ
مزید پڑھیے


’’ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی میٹھی نیند‘‘

بدھ 17 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
زیادہ پرانی بات نہیں پاکستان میں جنوبی کوریا کا واحد تعارف اسکی وہ کمزور سی ہاکی ٹیم ہوتی تھی جس کے مچی ہوئی آنکھوں والے کھلاڑی میدان میں یہاں سے وہاں بھاگتے پھرتے دکھائی دیتے تھے مجھے کورین کھلاڑیوں پر ترس آتا تھا ان دنوں کوریا کا پاکستان آسٹریلیا یاہالینڈ جیسی کسی ٹیم سے میچ پڑجاتا تو شائقین کی دلچسپی کوریا پر ہونے والے گولوں کی تعداد تک ہی ہوتی کہ اس بار کتنے گول پڑے ۔ہاکی میں کمزور ترین سمجھے جانے والے کورین کا معاشی حال بھی ایسا ہی تھا ایک طرف چار دہائیوں پہلے کا کوریا رکھیں
مزید پڑھیے


’’مہرے ‘‘

پیر 15 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
میرے وہ دوست اب بھی حیات ہیں اور کراچی میں ہیں اللہ انہیں صحت اور ایمان والی لمبی زندگی دے جب میں کراچی میں ہوتا تھا تو وہ مجھے میرے دفتر سے لیتے اور کلفٹن کے ساحل کے ساتھ ساتھ بچھی سڑک پرآجاتے ،کار کے شیشے گرا دیئے جاتے، رفتار بالکل کم کردی جاتی اور اسکے بعد وہ بولنا شروع ہوجاتے۔وہ جہاندیدہ آدمی ہیں۔حالات واقعات کے تجزیئے میں انہیں کمال حاصل ہے۔ سیدزادے مہاجرین وطن کی اس پیڑھی سے ہیںجن کے پرکھوں نے پاکستان کے لئے بھرے پرے گھرچھوڑے اور گود کے بچے لے کر چلے آئے،ان سے زیادہ محب
مزید پڑھیے


’’تارا سنگھ کی پوتی اور شیخ فاروق کا سانجھا دکھ‘‘

بدھ 10 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
پینسٹھ سالہ بھارتی صحافی کرن تھاپر بھارت میں خاصے جانے مانے جاتے ہیں انہیں بات سے بات نکالنے میں ملکہ حاصل ہے اسی لئے وہ جب بھی کسی کا انٹرویو کرتے ہیں تووہ زرا ہٹ کر ہوتا ہے ،تھاپر سی این این اور آئی بی این جیسے بڑے اداروں کے ساتھ منسلک رہے ہیںانکے پروگرام ’’کورٹ مارشل ‘‘ اور’’فیس ٹو ٖفیس‘‘ خاصے مشہور رہے ہیں ان کے کئے گئے انٹرویوز دیر تک موضوع بحث رہتے ہیں۔ انہوں نے نومبر 2020ء میں بھارتی نیوز ویب سائیٹ دی وائیر کے لئے فاروق عبداللہ کا انٹرویو کیا تھا ،جس میں قائد اعظم کا
مزید پڑھیے



’’ماتم سرا‘‘

منگل 09 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
یہ1989ء کی بات ہے جب مقبوضہ وادی کے پرجوش نوجوانوں نے بھارتی فوج کے جبر و تشدد سے تنگ آکر کلاشنکوف اٹھا لی او ر مسلح جدوجہد کا اعلان کردیا،وہ وادی جہاں پہلے صرف آزادی کے نعرے لگتے تھے اب کلاشنکوف کی برسٹ بھی چلنے لگے ،بھارتی فوجیوں پر شب خون مارا جانے لگا،حریت کے متوالے بھارتیوں پر قہر بن کر ٹوٹنے لگے ،وادی میں تحریک حریت نے ایک نئی کروٹ لی یہ عسکری تحریک نوجوانوں میں تیزی سے مقبول ہونے لگی جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر اس عسکری تحریک کی پشتیبان بن کر کھڑی ہوگئی نوجوانوں نے گوریلا جنگ کا
مزید پڑھیے


’’کہ بات بڑھ چکی ہے‘‘

جمعرات 04 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
یہ موبائل فون سے بنی ہوئی چھوٹی سی فوٹیج ہے جو پڑوس میں بڑی تبدیلی کا پتہ دے رہی ہے ،ایک منٹ پینتس سیکنڈ کی فوٹیج میں نیلگوں آسماں پر اڑتی رنگ برنگی پتنگیںموبائل فون سے شوٹ کی گئی ہیں ،میرے لئے ابتدائی طور پر اس وڈیو کلپ میں کوئی دلچسپی کی بات نہ تھی ،زندگی میں پتنگوں کی ڈور تھامنے کا موقع کم ہی ملا ہے شوق تھا اور اب بھی نہیں ہے اس لئے اس وڈیو سے مجھے کیا دلچسپی ہونی تھی لیکن جس دوست نے یہ بھیجی تھی وہ بھی اچھا خاصا سنجیدہ مزاج ہے پھر اسکی
مزید پڑھیے


کورونا ویکسین کی پاکستان آمد

منگل 02 فروری 2021ء
احسان الرحمٰن
کورونا کے دکھوں کے مارے پاکستان کو دوست ملک چین نے ویکسین بھیج دی ہے۔ ہوئی تاخیر تو کچھ باعث تاخیر بھی تھا۔ ایسے لوگ کیا کم ہیں جو دودھ میں مینگنیاں اس لئے ڈال دیتے ہیں کہ قوم کو بھکاری‘ پسماندہ اور بے سہارا ہونے کی گالی دلوا سکیں۔ اس میں کیا شک ہے کہ بھلے وقتوں میں راشن ڈپو بنے تو ہر خاندان کو افراد کی تعداد کے لحاظ سے چینی آٹا دیا جاتا۔ جو صاحب رسوخ تھے وہ راستے نکال لیتے ان کی خوشی غمی پر چینی کوٹے سے کہیں زیادہ خرچ ہوتی کورونا نے قوم کو ایک
مزید پڑھیے


’’اردو پر اعتماد تو کریں‘‘

منگل 26 جنوری 2021ء
احسان الرحمٰن
غلط کیا ہوا ہے ؟ ببول بو کر گلابوں کی امید رکھنا چاہتے ہیں تو شوق سے رکھیں۔۔۔لالہ موسیٰ جانے کے لئے تیزگام کا ٹکٹ لے کر مال گاڑی میں اپنی نشست تلاش کرنی ہے تو کر لیجئے ۔۔۔گھر بسانے کے لئے خالہ کے گھر رشتہ بھیج کر منہ اٹھا کر بارات ماموں کے گھر لے جانا چاہتے ہیں تو ضرور جایئے لیکن نتائج کیا ہوں گے اسکے لئے دانشوروں کی کسی بیٹھک کی ضرورت نہیں ہے ،اسلام آباد کے متمول علاقے میں ریستوران کی رئیس زادی مالکن نے سہیلی کے ساتھ مل کر اپنے منیجر کے ساتھ جو کیا
مزید پڑھیے


’’شیروں کا انتظار‘‘

پیر 18 جنوری 2021ء
احسان الرحمٰن
اگرکوئی ہمیں کرپٹ سوسائٹی کا فرد کہے تو کم از کم میرے پاس اس پھبتی کا کوئی جواب نہیں جہاں سبزی منڈی سے آپ تازہ اور معیاری سبزی نہ خرید سکتے ہوں مہنگے داموں مالٹوں کی پیٹی لے کر گھر پہنچیں تو پہلی دو قطاروں کے بعد تیسری میں دوسرے درجے کے چھوٹے چھوٹے مالٹے باغ کے ٹھیکے دار کے لالچ کی گواہی دیتے ملیں جہاں گوشت کا وزن بڑھانے کے لئے جانور ذبح کر کے اس کی شہ رگ میں پانی کا پائپ لگا دیا جائے ،جہاں سرخ مرچ میں سرخ اینٹیں پیس کر ملاکر وزن بڑھایا جائے،جہاں اوجڑی
مزید پڑھیے