Common frontend top

احسان الرحمٰن


’’کپتان سوچتا تو ہوگا!‘‘


انکشافات اور اعترافات کا موسم ہے اور اب یہ اس کثرت سے ہورہے ہیں کہ اگر اڈیالہ جیل کا کوئی قیدی بھی ’’میرے پاکستانیو‘‘ کے بعد توبہ کا اعلان کرے تو اچنبھا نہ ہو،فواد چوہدری سے آغاز کریں یا شیری مزاری سے کپتان کی کھلاڑیوں کی کارکردگی وہی رہی جو بابر اعظم کی ٹیم کی بھارت میں ہے زرا سا دباؤ پڑا نہیں اور ان کے ہاتھ پاؤں پھولے نہیں وکٹ انہیں بدمزاج سسرال معلوم ہونے لگتی ہے ،کسی کا ٹھہرنے کا جی نہیں چاہتا پلٹنے کی آخری کھیپ میں عثمان ڈار، صداقت عباسی ،فرخ حبیب، عمران خان کے وہ
اتوار 22 اکتوبر 2023ء مزید پڑھیے

’’شاہد خاقان عباسی ،جی کا جانا ٹھہر گیا ہے‘‘

اتوار 01 اکتوبر 2023ء
احسان الرحمٰن
ّایک طرف پینتیس برس کا ساتھ ہے، پہچان ہے احسانات ہیں اور دوسری طرف بے قدری کارِستا ہوا ، زخم نظر اندازکئے جانے کا دکھ اورمسدود راستہ ہے، شاہد خاقان عباسی آج کل کشمکش میں ہیںان کا مسلم لیگ ن کو چھوڑنا طے ہے یعنی جی کاجانا ٹھہرگیا ہے بس اعلان باقی ہے دراز قامت اعلیٰ تعلیم یافتہ شاہد خاقان عباسی آج کل نیوز شو کے میزبانوں کے پسندیدہ مہمان ہیں، شائد ہی کسی نیوز شو کا پروڈیوسربچا ہو،جس نے انہیں اپنے پروگرام میں مدعو کرنے کی تگ و دو نہ کی ہو،وہ جس پروگرام میں جاتے ہیں آغاز اسی
مزید پڑھیے


’’بھٹو شہید کا دکھ!‘‘

پیر 25  ستمبر 2023ء
احسان الرحمٰن
بڑے شہروں کے ریلوے اسٹیشنوں کو چھوڑ کر جب کسی بھولے بھٹکے مسافر کی طرح تھکی ماندی ریل گاڑی کسی چھوٹے شہر کے ’’ٹیشن ‘‘ کا رخ کرتی ہے تووہاں زندگی دوڑ جاتی ہے۔ چائے کے کھوکے کا چولہا جل اٹھتا ہے ،سامان ڈھونے والے قلی بھی لال قمیضیں پہنے آجاتے ہیں ،چھوٹی موٹی اشیاء بیچنے والے اپنے خوانچے لئے دکھائی دینے لگتے ہیں۔ اس چہل پہل سے سونا، ویران پڑا پلیٹ فارم کچھ دیر کے لئے ’’زندہ‘‘ ہوجاتا ہے ۔الیکشن سے پہلے کچھ ایسی ہی صورتحال اپنے وطن عزیز کی بھی تھی،چپ چپاتا،سن سناٹا سا تھا ،اب بھی
مزید پڑھیے


’’کابل اور اسلام آباد۔۔۔چاہ اور آہ‘‘

جمعرات 21  ستمبر 2023ء
احسان الرحمٰن
سیف اللہ خالد نے کرسی پر پہلو بدلا اور سوچنے لگے جیسے کچھ ایڈٹ کررہے ہوں، میری نظریں سیف اللہ کے چہرے پر جمی ہوئی تھیں اور خواہش اور کوشش تھی کہ سیف اللہ کھل کر بات کریں، جیسے وہ کرتے ہیں،سکوت کے یہ لمحات مختصر ہی رہے، سیف اللہ خالد نے ہنکارہ بھرا اور کہا ’’ عام افغان ہمارا احسان مند ہے وہ ہماری قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے نہیں ہچکچاتا ، مانتا ہے کہ روس کے ساتھ جنگ میں پاکستان ان کی پشت پر اور پاکستانی ان کے ساتھ محاذوں پرتھے، انہوں نے پاکستانی شہد اء کی لہو
مزید پڑھیے


’’ڈاکٹر انتھونی شکریہ…‘‘

اتوار 17  ستمبر 2023ء
احسان الرحمٰن
میں ڈاکٹرکے ہاتھ چومنا چاہتا ہوں منتظر ہوں کہ ملاقات ہو تو سینے پر ہاتھ رکھ کر تعظیم دوں حالانکہ میں کوئی خوش عقیدہ پیر پرست یا صوفی منش نہیں اور نہ ہی ڈاکٹر کا تعلق کسی روحانی سلسلے یا کسی خانقاہ سے ہے اسکے ہاتھ میں تسبیح ہوتی ہے نہ پیشانی سے سجدوں کی کثرت کی گواہی ملتی ہے اس نے تو شاید ہی زندگی میں کبھی سجدہ کیا ہولیکن اس کے باوجود میں اسکی تعظیم کرنا چاہتا ہوں میں اپنے پچیس سالہ صحافتی کیرئیر میں کبھی اشرافیہ کی گڈ بک میںنہیں رہا مجھے کبھی شاہوں کے محلات سے
مزید پڑھیے



’’قربانی کے بکرے۔۔۔ ‘‘

پیر 11  ستمبر 2023ء
احسان الرحمٰن
پوچھا’’کتنا آیا؟‘‘دوست نے جواب دیا ’’گیارہ ہزار !‘‘ میں نے حیران ہو کر پوچھا’’اور پچھلے مہینے ؟‘‘ ’’پندرہ ہزارآیا تھا‘ ‘میں چونک گیا،میرا چونکنا بنتا تھا کیوں کہ میرا دوست واپڈا یا بجلی کی کسی تقسیم کار کمپنی کا ملازم نہیں، وہ کسی منصف کی مسند پر نہیں بیٹھتا کہ ٹشو پیپر سے لے کر باغیچے کی صفائی تک سرکاردے وہ میری طرح ایک سڑک چھاپ صحافی ہے اور اس وقت کو کو ستا ہے جب اس نے روزی روزگار کے لئے میڈیا کا رخ کیا تھا، اس کا کوسنا بجا بھی ہے وہ ایک ایسے نیوز چینل میں ملازم
مزید پڑھیے


’’کاکڑ صاحب! یہ توزیادتی ہے۔۔۔‘‘

اتوار 03  ستمبر 2023ء
احسان الرحمٰن
مجھے نہیں معلوم جہانیاں کے چک 110آر کے مزدور پر کیا گزری ہوگی، چار سو روپے کے دیہاڑی دارنے جب کسی نیوز چینل پر سنا ہوگا یا کسی اخبار کی سرخی نے اسے حاکم وقت کا یہ فرمان پہنچایا ہوگا کہ بل تو دینا ہوگا ۔۔۔تو مدقوق چہرے والے قاسم کے دل پر کیا گزری ہوگی ،پتلا دبلا قاسم اپنے چار بچوں اور ادھڑے پلستر کی دیواروں کے گھر میں تنگ دستی ، بھوک،پریشانیوں اور سوالیہ نشان بنے مستقبل کے ساتھ جی رہا ہے۔ قاسم کے سب سے چھوٹے بیٹے کی عمر صرف دو ماہ ہے اور وہ بدقسمت
مزید پڑھیے


’’ایمان کی بات !‘‘

جمعرات 24  اگست 2023ء
احسان الرحمٰن
یہ پہلی جنگ عظیم کی بات ہے ترکوں کی خلافت عثمانیہ کی ہوا اکھڑ رہی تھی، ایک بڑی سپرپاور اپنی معاشی پالیسیوں اور اس وقت کے عالمی مالیاتی اداروں کے چنگل میں ایسا پھنسی تھی کہ نکلنے کی راہ نہ رہی تھی، معاشی خود مختاری ختم ہوئی توجغرافیائی خودمختاری ہدف بن گئی۔ نیلی آنکھوں اور گوری چمڑی والے انگریزوں نے مسلم علاقوں پر چڑھائی کردی، اس مہم کی کمان گھنی مونچھوں اور مضبوط بدن کا لیفٹننٹ جنرل اسٹینلے موڈے کر رہا تھا، یہ انہی دنوں کی بات ہے جنرل اپنی فوجوں کو آگے کی طرف بڑھا رہا تھا کہ اسے
مزید پڑھیے


’’کوئی ملک معراج خالد ہوتا ۔۔۔‘‘

هفته 19  اگست 2023ء
احسان الرحمٰن
نرم مزاج سمجھے جانے والے انوارالحق کاکڑ صاحب کا بطور نگراں وزیر اعظم انتخاب سب کے لئے حیران کن تھا۔ اسے صحیح معنوں میں سرپرائز کہا جاسکتا ہے اور انہوں نے بھی اس سرپرائز کی خوب حفاظت کی۔ کسی کو کانوں کان خبر نہ ہونے دی۔ پھر انہوں نے حلف اٹھاتے ہوئے بھی سرپرائز دیا ۔گمان تھا کہ بلوچستان کا یہ کاکڑزادہ شیروانی زیب تن کرکے حلف لے گا جو ہماری ثقافتی تہذیبی پہچان بھی ہے لیکن انہوں نے یہاں بھی کوٹ پتلون اور کالرتلے ریشمی ٹائی کی نفاست سے گر ہ لگا کر سرپرائز دیالیکن میں کسی اور سرپرائزکا
مزید پڑھیے


’’پاکستان بھی تو کچھ کہہ رہاہے ‘‘

پیر 14  اگست 2023ء
احسان الرحمٰن
یہ لگ بھگ سات برس پرانی بات ہے، مجھے کراچی میں ایک ایسی منقسم کشمیری فیملی کی تلاش تھی، جس کے کچھ افراد کراچی میں اور کچھ مقبوضہ کشمیرمیں آباد ہوں ان دنوں میں ایک نیوز چینل کی رپورٹنگ ٹیم کا حصہ تھا اور مجھے یہ کام دفتر کی طرف سے تفویض ہوا تھا کہ اس منقسم فیملی کے جذبات احساسات پر ایک رپورٹ تیار کرنی ہے کراچی میں کشمیری خاندان آباد تو ہیں لیکن اتنے نہیں جتنے راولپنڈی ، اسلام آباد یا لاہور میں ہیں اس لئے مجھے کسی ایسی فیملی تک پہنچنے میں خاصی مشکل ہو رہی تھی
مزید پڑھیے








اہم خبریں