BN

اداریہ



نیب ترمیمی آرڈی ننس


صدر مملکت کے دستخط کے بعد نیب کا ترمیمی آرڈی ننس ملک میں نافذ ہو گیا ہے۔ اس آرڈی ننس کے متعلق عوامی سطح پر پہلا تاثر یہ ہے کہ حکومت نے تاجروں اور بیورو کریٹس کو نیب کے دائرہ کار سے الگ کر کے اپنے اصولوں پر بہت بڑا سمجھوتہ کیا ہے۔ نیب ترمیمی آرڈی ننس کے مطابق نیب 50کروڑ روپے سے زاید کی بدعنوانی پر کارروائی کر سکے گا‘ سرکاری ملازمین کے خلاف کارروائی کو کافی محدود کر دیا گیا ہے۔ نیب کو ٹیکس‘ سٹاک ایکسچینج ‘آئی پی اوز سے متعلق معاملات میں حاصل اختیار ختم کر دیا
اتوار 29 دسمبر 2019ء

بجلی کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ اور حکومتی بے بسی

هفته 28 دسمبر 2019ء
اداریہ
حکومت نے سال کے آخر میں فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں 1روپے 56پیسے فی یونٹ اضافہ کر کے صارفین پر 14ارب روپے کا اضافی بوجھ ڈالنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اقتدار میں آنے کے بعد حکومت مشکل فیصلوں پر عوام نے بخوشی قربانیاں دی ہیں مگر بجلی گیس کے نرخوں اور بے روزگاری میں مسلسل اضافے نے اب عوام کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے اور مایوسی بڑھتی جا رہی ہے، جس کا اندازہ گزشتہ دنوں کابینہ کے اجلاس میں کابینہ اراکین کے بجلی اور گیس کے نرخوں میں مسلسل اضافہ پر تحفظات کا
مزید پڑھیے


121سال پرانے جلال پور کینال منصوبے کا آغاز

هفته 28 دسمبر 2019ء
اداریہ
وزیر اعظم پاکستان نے گزشتہ روز جلال پور نہر کا سنگ بنیاد رکھا، اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے پنڈدادنخان میں جلسہ عام سے خطاب میں کہا اس منصوبے سے پنڈدادنخان اور خوشاب کے لوگوں کی تقدیر بدل جائے گی‘ حکومت اسے تین مراحل میں مکمل کرے گی۔ بلا شبہ اگر یہ منصوبہ اپنی مقررہ مدت میں پایہ تکمیل کو پہنچ جاتا ہے تو یہ پی ٹی آئی حکومت کا بہت بڑا کارنامہ ہو گا کیونکہ جلال پور کینال منصوبہ 1897ء میں برٹش حکومت کے زمانے میں اس وقت تیار کیا گیا جب انگریزوں نے برصغیر
مزید پڑھیے


ایل او سی پر بھارتی جارحیت

هفته 28 دسمبر 2019ء
اداریہ
لائن آف کنٹرول پر بھارتی فورسز کی بلا اشتعال فائرنگ سے پاک فوج کے 2جوان شہید ہو گئے۔ پاکستان کی بھر پور جوابی کارروائی میں 3بھارتی فوجی ہلاک اور کئی زخمی ہو ئے ہیں۔ بھارت عالمی برادری کی توجہ اندرونی حالات سے ہٹانے کے لئے لائن آف کنٹرول اور ورکنگ بائونڈری پر آئے روز بلا اشتعال اندھا دھند فائرنگ کر کے خطے کے حالات خراب کررہاہے۔ اس وقت بھارت میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں عروج پر ہیں۔ جس کے خلاف نہ صرف مسلمان بلکہ ہندو‘ سکھ ‘ عیسائی اور دیگر اقلیتوں سے تعلق رکھنے والے افراد بھی سراپا احتجاج
مزید پڑھیے


محکمہ صحت شدید مسائل کا شکار کیوں!

جمعه 27 دسمبر 2019ء
اداریہ
روزنامہ 92 نیوز کی رپورٹ کے مطابق رواں برس محکمہ صحت پنجاب حکومتی عدم توجہی اور ناقص پالیسیوں کے باعث شدید مسائل کی وجہ سے بحرانی کیفیت کا شکار رہا۔ تحریک انصاف ریاستی وسائل سڑکوں اور پلوں کی بجائے انسانوں پر خرچ کرنے کے وعدوں پر اقتدار میں آئی تھی۔ بلاشبہ حکومت نے کچھ شعبوں بالخصوص تعلیم میں کچھ حد تک لائق تحسین اقدامات بھی کئے ہیں مگر بدقسمتی سے روزگار اور صحت کے شعبے تحریک انصاف کے اقتدار کے 17 ماہ کے دوران مسلسل انحطاط اور تنزلی کا شکار رہے ہیں۔ تحریک انصاف کے ایم ٹی آئی ایکٹ 2019ء
مزید پڑھیے




پاکستان سے افغانستان آٹا سمگلنگ کی روک تھام ضروری

جمعه 27 دسمبر 2019ء
اداریہ
پشاور سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق محکمہ کسٹمز طورخم بارڈر پر 150ٹن سے زائد آٹا افغانستان سمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی۔ اگرچہ محکمہ کسٹم نے آٹا سمگل کرنے کی واردات ناکام بنا دی ہے تاہم یہ اس بات کا ثبوت بھی ہے کہ پاکستان سے سرحد پار آٹا سمگل کرنے کی وارداتیں بہت پہلے سے ہو رہی ہیں جن کافوری تدارک ضروری ہے۔ رواں سال اکتوبر میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ نے آٹا‘ گندم اور اس سے جڑی دوسری تمام تر مصنوعات کو افغانستان لے جانے پر مکمل پابندی عائد کی تھی اور اس سے صوبہ میں
مزید پڑھیے


دو قومی نظریے کو مزید اجاگر کرنے کی ضرورت

جمعه 27 دسمبر 2019ء
اداریہ
آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستان بنانے کے لئے قائد اعظمؒ کا جتنا شکر ادا کریں کم ہے۔ بابائے قوم نے یہ ملک دو قومی نظریے پر بنایا‘ آج دو قومی نظریے کا سب اعتراف کر رہے ہیں۔ جو لوگ قیام پاکستان کی مخالفت کر رہے تھے انہیں بھی آج احساس ہو رہا ہے۔ مخالفت کرنے والوں کے لئے یہ نئی شروعات ہیں۔ بانی پاکستان قائد اعظمؒ نے آج سے71برس قبل برملا کہا تھا کہ ہندو اور مسلمان دو علیحدہ علیحدہ قومیں ہیں جو مذہبی فلسفوں اور معاشرتی روایات سے تعلق رکھتی ہیں۔ اس لیے
مزید پڑھیے


اورنج لائن منصوبے میں ناقص میٹریل کا انکشاف

جمعرات 26 دسمبر 2019ء
اداریہ
اورنج لائن میٹرو ٹرین کے پیکج ٹو کی تعمیر میں ایل ڈی اے کے انجینئرنگ ونگ نے 19 نقائص کی نشاندہی کرتے ہوئے ناقص میٹریل استعمال کرنے پر کنٹریکٹر کو معیاری اور بروقت کام کی تکمیل کے لئے 15 روز کا وقت دیا ہے۔ سابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے اکتوبر 2015 ء میں لاہور شہر کے اس مہنگے ترین منصوبے کی بنیاد رکھی تو اس وقت بھی یہ منصوبہ تنقید کی زد میں رہا یہاں تک کہ سپریم کور ٹ نے اس منصوبے پر اٹھنے والے اخراجات کو مدنظر رکھتے ہوئے اس کو مکمل کرنے کی مشروط اجازت
مزید پڑھیے


پنجاب کابینہ کا خوش آئند فیصلہ

جمعرات 26 دسمبر 2019ء
اداریہ
وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت پنجاب کابینہ نے محکمہ سکولز ایجوکیشن پنجاب کی اسسمنٹ پالیسی فریم ورک 2019 ء کی منظوری دے دی جس کے تحت پنجاب میں پانچویں اور آٹھویں جماعت کے امتحانات مرحلہ وار ختم کرنے اور صوبہ کے سرکاری سکولوں میں طلبہ کے لئے اردو میڈیم کتابوں کی فراہمی کی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ پنجاب میں پہلی کلاس سے پانچویں جماعت تک اردو میں تعلیم دی جائے گی اور انگریزی بطور مضمون پڑھایا جائے گا۔ اردو زبان کو پرائمری کی سطح سے ذریعہ تعلیم بنانے کے حوالے سے پنجاب کابینہ
مزید پڑھیے


وفاقی کابینہ کے اہم فیصلے

جمعرات 26 دسمبر 2019ء
اداریہ
وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی زیر صدارت ہوا ،جس میں2018ء کی پالیسی کے تحت 89ادویات کی قیمتوں میں 15فیصد کمی کی منظوری دی گئی جبکہ ایل او سی پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے متاثرہ افراد کی مدد و بحالی کا پیکیج بھی منظور کیا گیا۔ جس میں ایل او سی پر بسنے والے 3982گھرانوں میں 67کروڑ روپے کی امداد تقسیم کی جائے گی۔ اس کے علاوہ احساس کفالت پروگرام کے تحت وظیفہ کی رقم پانچ ہزار سے بڑھا کر ساڑھے پانچ ہزار کرنے اور بینظیر سپورٹ پروگرام میں شامل غیر مستحق افراد کو خارج
مزید پڑھیے