BN

ارشاد احمد عارف


جس کا کام اُسی کو ساجھے


یک نہ شد دو شد‘ عید کی خوشیوں میں کھنڈت ڈالنے کے لئے پشاور کے مفتی شہاب الدین پوپلزئی کافی نہ تھے کہ وفاقی وزیر سائنس فواد چودھری بھی آ نکلے۔ عید محض ایک تہوار نہیں‘ نماز عید کی ادائیگی مذہبی فریضہ ہے کلمہ گو رمضان المبارک کے اختتام پر اظہار تشکر کے لئے جس کا اہتمام کرتے ہیں‘ رمضان ختم ہونے سے قبل عید کا انعقاد اور یکم شوال کے دن روزہ رکھنا شرعاً ممنوع ہے۔ اسی باعث نماز روزے کے پابند مسلمان عیدالفطر کی ادائیگی کے لئے رویت ہلال کو یقینی بناتے ہیں کہ اپنے مہینے بھر کی
جمعه 22 مئی 2020ء

ایک ڈرامے کی مار

جمعرات 21 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
رمضان المبارک اس بار معمول کے مطابق پاکستانی عوام کی اکثریت کے لئے خیرو برکت اور دائمی مسرّت کا پیغام لایا‘ کورونا کی وجہ سے کلمہ گو مسلمان ویسے بھی توبہ و استغفار میں مشغول تھے‘ بیت اللہ اور مسجد نبوی کے علاوہ عالم اسلام میں مساجد کی بندش سے افسردہ لوگوں کو یہ پریشانی لاحق تھی کہ اللہ تعالیٰ نے معلوم نہیں کن گناہوں اور خطائوں کی پاداش میں ہم پر اپنی رحمت کے دروازے بند کر دیے‘ یہ اللہ تعالیٰ کے ذکر سے مُنہ موڑنے کا نتیجہ ہے ناشکری کا عذاب یا اس کے محبوب ﷺ کی تعلیمات
مزید پڑھیے


دنیا بدلی، دنیا کا مزاج بدلا

منگل 19 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
بالآخر سپریم کورٹ آف پاکستان نے عوام،کاروباری برادری اور حکومت کی مشکل آسان کر دی، ’’جان ہے تو جہان ہے‘‘ کے بجائے ’’چمڑی جائے پر دمڑی نہ جائے‘‘ کے محاورے پر یقین رکھنے والے ’’باشعور‘‘ عوام اور تاجر کاروبار کی بندش سے تنگ تھے، بجا کہ طویل عرصہ تک کاروبار بند رکھا جا سکتا ہے نہ معمولات زندگی منجمد، مگر پاکستان میں لاک ڈائون ہوا کب؟ تین دن تک لوگ خوف کا شکار رہے اور گھروں سے باہر نکلتے ہچکچائے، بقیہ ڈیڑھ دو ماہ کے دوران معمولات زندگی کم و بیش بحال ہو گئے۔ سماجی فاصلے اور سینیٹائزر، فیس ماسک،
مزید پڑھیے


بحران سے موقع پیدا کرنا

جمعه 15 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
گاہے پریشان ہوتی ہے‘ یوں لگتا ہے ریاست کرپٹ‘ بلیک میلر اور عوام دشمن مافیا کے سامنے گھٹنے ٹیک رہی ہے‘ منی لانڈرنگ اور قومی خزانے کی لوٹ کھسوٹ کے مرتکب افراد کو سزا ملی نہ اب تک کسی سزا یافتہ مجرم سے لوٹی دولت اگلوائی گئی لیکن جب تک جنگ جاری ہے‘ نیب کا ادارہ اور عمران خان کا عزم برقرار ہے‘ کسی ملزم اور مجرم کے خلاف آخری اور حتمی فیصلہ نہیں آتا‘ پہلے کی طرح وہ باعزت بری ہو کر عوام کے سامنے فتح کا نشان نہیں بناتا مایوسی کی گنجائش نہیں‘ مایوسی ویسے بھی گناہ ہے
مزید پڑھیے


کچھ سانوں مرن دا شوق وی سی

جمعرات 14 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
لاہور کی مصروف بازاروں میں خریداروں کا ہجوم ہے اور حکومت کے طے کردہ ایس او پیز کی مٹی پلید ہو رہی ہے۔ یہ خلاف توقع ہے نہ غیر معمولی واقعہ! مایوسی صرف ان خوش فہموں کو ہوئی جن کا خیال تھا کہ کاروباراور بازار کھلے کے بعد دکاندار اور خریدار احتیاطی تدابیر کو ملحوظ رکھیں گے صرف نوجوان اور ادھیڑ عمر کے دستانے اور ماسک پہنے‘ سینائٹزر کی شیشیاں ہاتھ میں پکڑے مرد و خواتین بازاروں کا رخ کریں گے‘ عجلت میں انتہائی ضرورت کی اشیا خرید کر گھروں کو لوٹ جائیں گے ‘کوئی بزرگ ان کے ساتھ ہو
مزید پڑھیے



چھیڑیاچِڑ

بدھ 13 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
ارطغرل ڈرامہ پاکستان میں بعض لوگوں کی ویسی ہی چڑ بنتا جا رہا ہے جیسی چین امریکی صدر ٹرمپ کے لیے، ٹرمپ کا معاملہ یہ ہے کہ جب ووہان میں کورونا وائرس نے سر اُٹھایا اور ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے اس موذی مرض کے عالمی وبا میں بدلنے کا اندیشہ ظاہر کیا تو امریکی صدر نے عوامی جمہوریہ چین کا مذاق اڑانا شروع کر دیا، ڈاکٹر فاوچی نے جو ان دنوں امریکی صدر کے مشیر تھے، ڈبلیو ایچ او کے مؤقف کی تائید کی تو امریکی صدر اس پر بھی چڑھ دوڑے، اسے چین سے مرعوب اور امریکی ریاست و
مزید پڑھیے


کورونا اورسازش کہانیاں؟

منگل 12 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
پہلے امریکی صدر ٹرمپ اور اب وزیر خارجہ پومپیو‘امریکی حکمران مسلسل کورونا کے پھیلائو کا الزام چین پر لگا رہے ہیں‘ دال میں کچھ نہ کچھ کالا ضرور ہے ‘کہا یہ جا رہا ہے کہ کورونا وائرس طبعی نہیں‘ لیبارٹری میں پیدا کردہ ہے‘ ایک چینی سائنس دان لی کی گرفتاری کو اس معاملے سے جوڑا جا رہا ہے اور یہ ثابت کرنے کے لئے امریکی حکومت ایڑی چوٹی کا زور لگا رہی ہے کہ چین نے دنیا میں تباہی پھیلائی۔ خدا کا شکر ہے ابھی تک امریکی سائنس دان اپنی حکومت کی تائید و حمائت پر آمادہ نہیں۔ ڈاکٹرفائوچی
مزید پڑھیے


اشرفیاں لٹیں‘کوئلوں پر مہر

جمعه 08 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
مکمل لاک ڈائون تو خیر پاکستان میں ہوا ہی نہیں‘ جزوی لاک ڈائون بھی اب صرف ٹرانسپورٹ ‘ تعلیمی اداروں‘ بڑے شاپنگ مالز ‘شادی ہالوں اور ریستورانوں کی حد تک برقرار ہے‘ میرا خیال ہے پیر کے روز سے ریستوران بھی کھل جائیں گے اور کھلنے کا کوئی جواز بھی انہیں مل جائے گا‘ ڈیڑھ ماہ کے لاک ڈائون میں عمران خان کو اندازہ ہوا کہ یہ قوم ’’چمڑی جائے پر دمڑی نہ جائے‘‘ کے مقولے پر یقین رکھتی ہے اور ہمارے سیاستدانوں نے اس سوچ کا ہمیشہ فائدہ اٹھایا‘ روکڑا دے کر ووٹ بٹورو‘ چند ٹکے نقد ہتھیلی پر
مزید پڑھیے


لاعلمی یا شرارت؟

جمعرات 07 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
یہ لاعلمی ہے‘ جہالت یا سوچی سمجھی شرارت؟ قومی اقلیتی کمشن کی تشکیل کے لئے ایک سمری تیار ہوئی‘ وفاقی کابینہ کے ارکان کو مطالعہ‘ مشورے اور تجاویز کے لئے بھیجی گئی‘ وزارت انسانی حقوق نے کمشن میں قادیانیوں کی نمائندگی اور کمشن کا سربراہ کسی اقلیتی نمائندے کو مقرر کرنے کی تجویز پیش کی‘ جو منظورکر لی گئی۔ دونوں تجاویز حتمی سمری کا حصہ بن گئیں روزنامہ 92نیوز نے نمائندگی کی آڑ میں قادیانیوں کی اقلیتی کمشن میں شرکت اور قومی سطح پر پیدا ہونے والے ابہام کی طرف توجہ دلائی ‘ وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق
مزید پڑھیے


آبلے پڑ گئے زباں میں کیا

منگل 05 مئی 2020ء
ارشاد احمد عارف
دو نامور صحافی اب چپ کا روزہ توڑ دیں! میاں شہباز شریف کے بیان کی وضاحت کریں کہ وہ پیغام کہاں سے اور کیا لائے تھے؟ یہ دو صحافی بھی اگر سول بالادستی کے اس تصور کے علمبردار تھے جس کا بیڑا میاں نواز شریف اور محترمہ مریم نواز شریف نے اٹھائے رکھا تو دونوں محترم حضرات کو یہ بھی بتانا پڑے گا کہ سول بالادستی کے قیام کا یہ کون سا جمہوری طریقہ ہے؟ نیب کی بار بار طلبی سے بعض کمزور دل افراد میاں شہباز شریف کی دوبارہ گرفتاری کا اندیشہ محسوس کرتے ہیں‘ وہ نہیں چاہتے کہ دوبارہ
مزید پڑھیے