BN

ارشاد احمد عارف



یہیں پہ روز حساب ہو گا


مریم نواز شریف کی گرفتاری پر پیپلز پارٹی کی چیخ و پکار فطری ہے‘ بلاول بھٹو سب سے زیادہ پریشان ہیں‘ اپنے والد آصف علی زرداری اور پھوپھی فریال تالپور سے زیادہ‘ بلکہ کہیں زیادہ غصہ انہیں مریم نواز کی گرفتاری پر آیا ہوش اڑا دینے والا غصہ‘ یار لوگ اس کی توجیح اپنے اپنے انداز میں کر رہے ہیں‘ کسی کا خیال ہے کہ پیپلز پارٹی کے نوجوان قائد کو اپنی گرفتاری کا دھڑکا ہے۔ بعض تجزیہ کاروں کے نزدیک پیپلز پارٹی کی قیادت مریم نواز کی باغیانہ تقریروں کو غنیمت سمجھ رہی تھی کہ حکومت اور فوج کے
اتوار 11  اگست 2019ء

یہ گھڑی محشر کی ہے

جمعه 09  اگست 2019ء
ارشاد احمد عارف
بھارت نے اپنے پائوں پر کلہاڑی مار دی ہے‘ بھارت سیاسی محاذ پر جتنا آج منقسم ہے‘ صرف اندرا گاندھی کی طرف سے ایمرجنسی کے نفاذ کے موقع پر تھا‘ اس سے کبھی پہلے نہ بعد۔ کانگریس نے مودی کے اقدامات کو یکسر مسترد کیا۔ اس منافق جماعت کو مسلمانوں سے کوئی ہمدردی نہیں‘ وہ بھارتی سیکولرازم کو خطرے میں محسوس کر رہی ہے جو ہندو توا کاپُر فریب چہرہ ہے۔ جموں و کشمیر پر فوجی قبضہ کانگریسی وزیر اعظم جواہر لال نہرو کے دور میں ہوا اور سب سے زیادہ ہندو مسلم فسادات بھی نہرو اور ان کی پتری
مزید پڑھیے


عصا اٹھائو کہ فرعون اسی سے جائیگا

جمعرات 08  اگست 2019ء
ارشاد احمد عارف
تقریر عمران خان کی بھی جامع اور مدلل تھی مگر قوم کا دل فواد حسین چودھری نے خوش کر دیا۔ کہا اور کیا خوب کہا’’جنگ عزت کے لیے لڑی جاتی ہے معیشت کے بل بوتے پر نہیں‘‘ افغانستان میں طالبان کی کامرانی اور دنیا کی واحد سپر پاور امریکہ کی شرمناک ناکامی میں یہی سبق پوشیدہ ہے ؎ فضائے بدر پیدا کر، فرشتے تیری نصرت کو اُتر سکتے ہیں گردوں سے قطار اندر قطار اب بھی آزاد، جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کو ڈوگرہ راج سے مضبوط معیشت کی خوشحال ریاست اور جدید اسلحہ سے لیس لڑاکا فوج نے
مزید پڑھیے


مودی چال قیامت کی چل گیا

منگل 06  اگست 2019ء
ارشاد احمد عارف
مقبوضہ جموں و کشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کا ٹویٹ پڑھ کر بے ساختہ زبان سے نکلا ؎ کی میرے قتل کے بعد اس نے جفا سے توبہ ہائے اس زود پشیماں کا پشیماں ہونا محبوبہ مفتی نے لکھا ’’جموں و کشمیر کی قیادت کا 1947ء میں دو قومی نظریہ کو مسترد اور بھارت سے الحاق قبول کرنا آج الٹا پڑ گیا‘‘ مگر محبوبہ مفتی‘ عمر فاروق عبداللہ اور دیگر بھارت نواز لیڈروں کو یہ بات آج یاد آئی‘ جب نریندر مودی نے ہندو توا اوراکھنڈ بھارت کے فلسفے کو مجبور و محکوم کشمیریوں پر بزور طاقت لاگو
مزید پڑھیے


حسرت ان غنچوں پہ ہے جو بن کھلے مرجھا گئے

اتوار 04  اگست 2019ء
ارشاد احمد عارف
خیال زلف دوتامیں ‘نصیر پیٹا کر گیا ہے سانپ نکل‘ اب لکیر ہٹا کر صادق سنجرانی کی شکست کا جن سیانوں کو یقین تھا‘ وہ اپنی عقل کا ماتم کرنے کے بجائے ہارس ٹریڈنگ‘ جمہوری اقدار کی پامالی اورضمیر فروشی کی لکیر پیٹ رہے ہیں۔ جس روز اپوزیشن نے میاں نواز شریف کے مشورے پر حاصل بزنجو کو چیئرمین سینٹ بنانے کا فیصلہ کیا ‘پاکستانی سیاست کے مدوجزر اور فیصلہ سازی کے مراکز کی سوچ سے تھوڑی بہت واقفیت رکھنے والے ہر ذی شعور کو اندازہ ہو گیا کہ صادق سنجرانی قائم و دائم ہیں۔ ویسے تو میاں نواز شریف کی شہرت
مزید پڑھیے




طالبان بدک گئے تو

منگل 30 جولائی 2019ء
ارشاد احمد عارف
امریکہ اور طالبان کو مذاکرات کی میز پر بٹھانے کا کٹھن مرحلہ طے کرنے کے بعد پاکستان کو ایک اور مشکل ٹاسک ملا ہے ؎ اک اور دریا کا سامنا تھا منیرؔ مجھ کو میں ایک دریا کے پار اترا تو میں نے دیکھا برسوں تک امریکہ بھارتی پروپیگنڈے کے سحر میں گرفتار رہا کہ افغانستان میں اس کی ہزیمت اور ناکامی کا ذمہ دار پاکستان ہے۔ بش سے لے کر بارک حسین اوبامہ تک پاکستان کو مورد الزام ٹھہراتے اور ڈومور کا مطالبہ کرتے رہے۔ کوئی یہ سمجھنے کو تیار نہ تھا کہ پاکستان کے قیام سے
مزید پڑھیے


نادان دوستوں سے ہوشیار

جمعه 26 جولائی 2019ء
ارشاد احمد عارف
حضرت بابا فرید الدین گنج شکر رحمتہ اللہ علیہ سے کسی نے پوچھا حضرت! اسلام کے ارکان کتنے ہیں؟ فرمایا’’چھ‘‘ معتقد حیران ہوا ‘عرض کیا حضور علماء تو اسلام کے پانچ ارکان بتاتے ہیں یہ چھٹا رکن کونسا ہے؟ فرمایا ’’روٹی‘‘ واقعی پانچ ارکان اسلام کی ادائیگی خوش دلی اور خوش اسلوبی سے اس وقت ممکن ہے جب پیٹ میں چوہے نہ دوڑ رہے ہوں اور دل و دماغ پر یکسوئی کا غلبہ ہو۔ حکم یہ ہے کہ نماز کا وقت ہو اور کھانا موجود توپہلے شکم پُری کریں پھر قبلہ رخ ہوں۔ تحریک انصاف کی حکومت کے ایک سالہ
مزید پڑھیے


تو جھکا جب غیر کے آگے

جمعرات 25 جولائی 2019ء
ارشاد احمد عارف
بھارت کا واویلا اگر عمران خان کے دورہ امریکہ کی کامیابی کا ثبوت نہیں تو کوئی اور دلیل بے کار ہے‘ بھینس کے آگے بین بجانے کے مترادف۔ عربی میں کہتے ہیں الفضل ماشہدت بہ الاعدئ‘ برتری اور کامرانی وہ ہے جس کی دشمن گواہی دیں۔ عمران خان کی کامیاب سفارت کاری پر بھارت میں صف ماتم بچھی ہے اور کشمیری قیادت خورسند۔ امریکہ نے پاکستان کو پرویز مشرف کے دور میں دیوار سے لگانا شروع کیا‘ الزام لگا کہ پاکستان ڈبل گیم کا مرتکب ہے‘امریکہ کے ساتھ مل کر افغان طالبان کا خاتمہ کرنے میں سنجیدہ نہیں۔ محترمہ بے
مزید پڑھیے


مادر پدر آزادی

منگل 23 جولائی 2019ء
ارشاد احمد عارف
آئیڈیا جس کا بھی تھا زبردست تھا۔ واشنگٹن میں جلسہ عام اور ہزاروں افراد کی شرکت، ہال میں لگی کرسیوں کی وجہ سے گنتی آسان اور مبالغہ مشکل بلکہ نا ممکن۔ 2011ء میں عمران خان نے مینار پاکستان کے زیر سایہ جلسہ کیا تو ہر تجزیہ کار اور کالم نگار نے اجتماع کے سامعین کی تعداد الگ الگ بتائی، ایک تجزیہ نگار نے کمال کر دیا بتایا کہ جلسہ گاہ میں بیک وقت ایک لاکھ افراد سما سکتے ہیںلہٰذا تحریک انصاف کے جلسے میں سامعین ایک لاکھ تھے کم نہ زیادہ۔پوچھا گیا کہ آپ اس اجتماع کا موازنہ 10اپریل 1986ء
مزید پڑھیے


ماں

جمعه 19 جولائی 2019ء
ارشاد احمد عارف
ماں واقعی ماں ہے‘ محبت کا بحر بے کراںاور شفقت کا آسماں۔ پاکستان میں پہلے ایسے واقعات عشروں بعد ظہور پذیر ہوتے اور لوک داستانوں کا موضوع بنتے ‘مگر جہالت‘ پسماندگی‘ اقدار شکنی‘ بے رحمی اور مادہ پرستی کا سونامی معاشرے میں رشتوں کے تقدس اور اہمیت کو پامال کر رہا ہے اور مکروہ واقعات ‘ تواتر سے ہونے لگے ہیں۔گزشتہ روز لاہور شہر میں ایک بدبخت نوجوان نے ماں کو کلہاڑی مار کر زخمی کر دیا مگر ماں پھرماں ہے‘ محلے داروں نے پولیس بلا کر ماں کو بدبخت بیٹے کے ظلم سے نجات دلائی اور پولیس نے وحشی درندے
مزید پڑھیے