BN

اسداللہ خان



کیا پیپلز پارٹی کے ساتھ دھاندلی ہوئی؟


شور مچانے کا کیا ہے ، مچاتے جائیے، مگر ایک لمحے کو رک کر اعدادو شمار پر نظر ڈال لینے میں کیا ہرج ہے ؟پیپلز پارٹی نے سندھ میں 61 میں سے 38 سیٹیں حاصل کر رکھی ہیں ۔گویا سندھ کے نتائج پر پیپلز پارٹی کو اعتراض نہیں ، اصل مسئلہ باقی صوبوں بالخصوص پنجاب کا ہے جو سب سے بڑا صوبہ ہونے کے ناطے مجموعی نتائج پر اثر انداز ہوتا ہے، گویا پیپلز پارٹی کا اعتراض یہی ہے کہ پنجاب میں دھاندلی ہوئی۔تو آئیے پہلے پنجاب کے انتخابی نتائج کا ایک الگ انداز میں تجزیہ کر کے دیکھتے
هفته 09 نومبر 2019ء

ریلوے کے ساتھ کیا ہوا؟

هفته 02 نومبر 2019ء
اسداللہ خان
زیادہ ٹرینیں چلانے کا شوق شیخ رشید اور ریلوے کو لے ڈوبا۔ریل کے نظام کی بنیادی سمجھ رکھنے والے بھی جانتے ہیں کہ شیخ رشید ریلوے کے ساتھ کیا ظلم کر رہے ہیں۔شیخ رشید کے دل میں 136 ٹرینیں چلانے کا شوق پیدا ہوا۔نئی ٹرینیں چلانے کے لیے کوچز اور انجن دستیاب نہیں تھے مگر ریلوے کو ٹرینیں چلانی تھیں ۔ سٹاف نہیں تھا مگر ٹرینوں کی تعداد بڑھانا تھی۔ انفراسٹرکچر نہیں تھا۔ اب سمجھنے کی بات یہ ہے کہ 136 ٹرینیں چلانے کے لیے ریلوے نے کیا کیا اور اس سے ریلوے کا نظام کیسے تباہ ہوا۔ پہلے ہر ٹرین
مزید پڑھیے


مگرپھر کیا ہو گا حضور؟

هفته 26 اکتوبر 2019ء
اسداللہ خان
اکتیس اکتوبر تو چھ دن میں ہو گزرے گا، لانگ مارچ یا دھرنا اس حکومت سے استعفی لیے بغیر گھر کا ہو لے گا۔طوفان تھم جائے گا، گرد بیٹھ جائے گی۔ دعوے ، نعرے اور تقریریں دو دن میں بے اثر ہونے لگیں گی۔ مگر پھر کیا ہو گا، کیا دھرنے کی ناکامی کے ساتھ ہی حکومت کے اچھے دن شروع ہو جائیں گے؟ کیا اعتماد میں اضافے کے ساتھ ہی دیرینہ مسائل ازخود حل ہونے لگیں گے؟ کیا دھرنے کی ناکامی حکومت کی کامیابی سے تعبیر ہو پائے گی ؟نہیں جناب پانچ بڑے داخلی چیلنجز یکم نومبر کو سر
مزید پڑھیے


دھرنے کی کامیابی کو لاحق 10 خطرات

بدھ 16 اکتوبر 2019ء
اسداللہ خان
پہلے کھیل کے اصول طے کر لیجیے، اہداف واضح فرمادیجئے، کامیابی اور ناکامی کی تعریف بتادیجئے، باونڈری لائن پر چھکے کے نشانات کا تعین کر لیجے، بتا دیجئے کہ فاؤل پلے کیا ہو گا، کہہ دیجئے کہ جیت اور ہار کسے کہا جائے گا۔یہ سب بتا دیجئے تا کہ نتیجہ نکالنے والوں کو مشکل نہ ہو۔واضح کر دیجئے کہ طے شدہ اہداف کا حصول کامیابی اور مطلوبہ نتائج تک نہ پہنچنے کا عمل ناکامی کہلائے گا۔مان لیجئے کہ حکومت کو گھر بھیجنے کے عمل سے کم تر کسی بھی عمل کو کامیابی سے تعبیر نہیں کیا جائے گا۔یہ دعوی نہیں
مزید پڑھیے