اشرف شریف



گھاٹے کا سودا کیوں؟


وپرو گروپ اپنے کاروباری حجم میں کافی بڑا ہے۔یہ خالص کاروباری لوگ ہیں، سرمایہ کاری کرتے ہیں، منافع لیتے ہیں، اچھی زندگی گزارتے ہیں۔ اپنے اردگرد کو صاف، صحتمند اور آسودہ رکھنے کیلئے خاصا خرچ کرتے ہیں۔ اس گروپ کے چیئرمین عظیم پریم جی نے کرونا سے مقابلے کے لئے بھارتی حکومت کو 50ہزار کروڑ روپے عطیہ کیے ہیں۔ اس رقم کو اربوں روپے میں پڑھنے کی قابلیت مجھ میں نہیں ۔ اپنے کیلکولیٹر پر ضربیں دیں، رقم پڑھ سکیں تو پڑھ لیں۔ عظیم پریم جی کمپنی میں اپنے 34فیصد حصص پہلے ہی عطیہ کر چکے ہیں۔ یہ 34فیصد حصص
پیر 30 مارچ 2020ء

کرونا سیاست

هفته 28 مارچ 2020ء
اشرف شریف
کرونا ایک سیاسی بیماری ہوتی تو آل پارٹیز کانفرنس میں بیٹھے مستند ڈاکٹر صاحبان کی مہارت سے ضرور فائدہ اٹھایا جاتا۔ یہ ایک مرض‘ ایک وبا ہے‘ جس سے تین فریقوں نے لڑنا ہے۔ حکومت نے وسائل فراہم کرنا ہیں‘ ڈاکٹروں نے علاج کرنا ہے اور عوام نے حکومت اور ڈاکٹروں کی ہدایات پر عمل کر کے خود کو محفوظ بنانا ہے۔ وزیر اعظم ‘ وزراء اور مشیر اپنا کام کر رہے ہیں۔ آئسولیشن وارڈ بن رہے ہیں‘ سکریننگ ہو رہی ہے‘ متاثرہ افراد کو گھروں سے منتقل کرنے کا نظام فعال ہو چکا ہے‘ عوام کے لئے 1000ارب روپے
مزید پڑھیے


درد ناک انجام سے بچیں!

بدھ 25 مارچ 2020ء
اشرف شریف
الحمدللہ میرے گھرانے کے افراد صحت مند ہیں۔ ہائی سکول میں تھے جب نانی کی والدہ کا انتقال ہوا۔ دادا، دادی اور نانا نانی کی وفات کو چند سال ہوئے ہیں۔ سب نے اپنے حصے کی سانسیں اس گل رنگ زمین پر لیں۔ ان بزرگوں نے زندگی کو کسی بڑی بیماری سے پاک جیا مگر اس وقت شدت سے دکھ کا احساس ہوا جب چھوٹا بھائی 33سال کی عمر میں خالق حقیقی کے حضور پیش ہو گیا۔ پھر کچھ سال ہوئے، امی دو دن سے بے ہوش تھیں۔ میں ان کے قدموں کی طرف کھڑا تھا ، ہسپتال کے بستر
مزید پڑھیے


کالی موت سے کرونا تک

پیر 23 مارچ 2020ء
اشرف شریف
اُس وقت کی دستاویزات بتاتی ہیں کہ چودھویں صدی میں وبا پھوٹی‘ معلوم نہیں وبا کہاں سے شروع ہوئی مگر یہ قدیم سلک روڈ کے ساتھ ساتھ سفر کرتی 1343ء میں کریمیا پہنچ گئی‘ چار سال بعد1347ء میں یہ وبا بحری جہازوں کے مسافروں کے ساتھ سسلی کی بندرگاہ پر آ گئی‘ الیگزنڈریا میں بھی اس نے پنجے گاڑنے شروع کر دیے۔ سسلی سے وینس پھر پیسا‘ فلورنس اور روم۔ اس دوران 1348ء میں متاثرہ افراد کا پہلا جہاز مار سیلیز آیا۔ یہاں سے دریائی اور زمینی شاہراہوں کے ساتھ ساتھ وباپھیلنے لگی۔ پیرس اس کی لپیٹ میں آ
مزید پڑھیے


مشکل وقت میں قوم کا نفسیاتی تجزیہ

هفته 21 مارچ 2020ء
اشرف شریف
1974ء میں یوگو سلاویہ کی ایک پرفارمنگ آرٹسٹ مارینہ ایبرا مووک نے سماج میں کرپشن کے حوالے سے رجحانات اور مواقع کا نفسیاتی تجزیہ کرنے کے لئے ایک منفرد تجربہ کیا۔ مارینہ ایک بڑے سے کمرے میں کھڑی ہو گئی۔ اس کے سامنے میز پر چٹکی‘ چھڑی‘ چاقو‘ بلیڈ‘ لپ اسٹک‘ قینچی ‘بندوق‘ سپرے گن‘ رنگ اور برش سمیت 72چیزیں رکھ دی گئیں۔ ساتھ ایک بورڈ پر اس نے ہدایات لکھ دیں کہ اس میز پر وہ بہتر چیزیں موجود ہیں جو آپ مجھ پر استعمال کر سکتے ہیں۔ مجھے جیتی جاگتی عورت نہیں فقط ایک شے خیال کریں۔ چھ
مزید پڑھیے




مرشد ہمارے واسطے بس ایک شخص تھا: ڈاکٹر مبشر حسن

پیر 16 مارچ 2020ء
اشرف شریف
غالباً 2004ء کا وفاقی بجٹ پیش کیا گیا تو استاد مکرم اطہر ندیم مرحوم نے ڈاکٹر صاحب سے مضمون لکھوانے کی ہدایت کی۔ ڈاکٹر صاحب کے گھر میں پی ٹی سی ایل کا فون تھا۔ ان کے تمام ملنے والے جانتے تھے کہ وہ دن کے مخصوص اوقات میں دو تین گھنٹوں کے دوران آنے والے فون سنتے ہیں۔ اس کے بعد کسی کا فون اٹینڈ نہیں ہوتا۔گلبرگ مین بلیوارڈ پر جہاں ایک سڑک منی مارکیٹ کو مڑتی ہے وہاں نکر پر وہ کشادہ یک منزلہ سادہ سا گھر ہے۔ اسی گھر میں پاکستان کی سب سے بڑی سیاسی جماعت
مزید پڑھیے


پنجابی ثقافت کا تحفظ

هفته 14 مارچ 2020ء
اشرف شریف
حمیرا چنا نے تو کچھ برس پہلے گایا: چیت چڑھیا تے تینوں اساں تکیا شاہ حسین صدیوں پہلے چیتر کے رنگوں کے مداح ہوئے۔ اردو میں چیت اور پنجابی میں چیتر کا مہینہ کیا ہے؟ چیت پاکستان اور بھارت کے باشندوں کے دیسی کیلنڈر کا پہلا مہینہ ہے۔ لگ بھگ چار ہزار برس ہوتے ہیں راجا بکرما جیت نے یہ کیلنڈر تیار کروایا اسی لئے اسے بکرمی کیلنڈر کہتے ہیں۔ چیت کی آج پہلی تاریخ ہے۔ کیا اعلیٰ دماغ لوگ تھے جنہوں نے ہزاروں برس قبل ایسا کیلنڈر تیار کیا جس کی موسمی پیشگوئی آج بھی درست ہے۔ اس کیلنڈر میں پوہ ماگھ
مزید پڑھیے


ٹڈی دل پر بات کیوں نہیں کرتے

پیر 09 مارچ 2020ء
اشرف شریف
ہمارا مسئلہ یہی ہے کہ ہم بہت جلد کسی کی باتوں میں آ جاتے ہیں‘ اپنا وقت بے کار میں ضائع کرتے ہیں۔ یہی دیکھ لیں ان دنوں گندم اور چنے کی فصل پر ٹڈی دل کا حملہ ہوا۔ حرام ہے جو کسی کو توفیق ہوئی ہو کہ اس معاملے پر لکھے!۔ مستنصر حسین تارڑ صاحب کہتے ہیں:’’لکھنے کا حق اسے ہے جسے اپنے اردگرد کے ماحول کا علم ہو‘ جسے یہاں تک معلوم ہو کہ اس کے علاقے میں پانی کے جوہڑ میں مینڈک کی کون کون سی قسم پائی جاتی ہے‘‘۔ افسوس ہم لکھنے والوں کو یہ علم
مزید پڑھیے


خواتین حقوق۔صنفی نہیں طبقاتی معاملہ

هفته 07 مارچ 2020ء
اشرف شریف
سادہ زمانوں میں ایسے لوگ مل جاتے جنہیں لڑکے بالے چھیڑتے اور جواب میں گالیاں لیتے۔ ایسی عورتیں بھی دکھائی دے جاتیں جنہیں لوگ تنگ کرتے اور جواب میں ننگی گالیاں کھاتے۔ الیکٹرانک میڈیا آج ایسے لوگوں کو ڈھونڈ کر لے آتا ہے۔ ان کو دانشور بنا کر شو میں بٹھاتا ہے اور پھر ان کی دکھتی رگ کو چھیڑ دیتا ہے۔ دیوانے ایک دوسرے کو گالیاں دیتے ہیں۔ پتھر مارتے ہیں۔ ان کے ویڈیو سوشل میڈیا پر مقبولیت پاتے ہیں۔ غیر معروف اینکر راتوں رات معروف ہو جاتا ہے‘ تیسرے درجے کا چینل صف اول میں آ جاتا ہے‘
مزید پڑھیے


اثاثے

پیر 02 مارچ 2020ء
اشرف شریف
افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد ہماری توقعات سے کہیں بڑھ کر معاملہ شناس نکلے۔ برادرم شاہد خان نے مترجم کے فرائض ادا نہ کئے ہوتے تو ہم پشتو میں ان کے جوابات کا مطلب سمجھ نہ پاتے۔ ذبیح اللہ مجاہد امن معاہدے کے سلسلے میں خاصے مصروف تھے بعد میں لیکن ارشاد احمد عارف صاحب اور اسد اللہ کے شو ’’کراس ٹاک ‘‘میں بھی فون پر بات کرتے رہے ان سے جو سوال ہوئے ان کے جواب میں بہت کچھ کہا لیکن دو باتیں خاص طور پر یاد رکھنے کے لائق ہیں۔ پہلی بات یہ کہ اگر امریکہ
مزید پڑھیے