افتخار گیلانی


الوداع آغا اشرف علی: استادو ں کے استاد…(2)


تیس سال قبل آغا صاحب کے یہ الفاظ موجودہ حالات میں نیشنل کانفرنس اور پیلز ڈیموکریٹک پارٹی اور دیگر بھارت نوا ز پارٹیوں پر صادق آتے ہیں۔غیر معمولی دانش اور فراست سے بھرپور آغا اشرف علی کو جہاں قرآنی آیات ازبر تھیں، اقبال، رومی ،ابن خلدون، مارکس و اینجلز پر عبور حاصل تھا، وہیں ان کی یاداشت میں سنسکرت کے تمام اپنیشد بھی گردش کرتے رہتے تھے، جو وہ گفتگو میں استعمال کرتے تھے۔ کشمیر ی راہنماوں یسین ملک، سید علی گیلانی اور مرحوم عبدالغنی لون کو کئی بار میں نے ان کے دروازے پر دستک دیتے ہوئے دیکھا۔ ملک
بدھ 12  اگست 2020ء

الوداع آغا اشرف علی: استادو ں کے استاد

منگل 11  اگست 2020ء
افتخار گیلانی
پچھلی کئی صدیوں سے تاریخ کے بھنور میں پھنسے ہونے کے باوجود کشمیر نے کئی درخشندہ ستارے پیدا کئے، جنہوں نے چہار دانگ عالم میں اپنی قابلیت کا لوہا منوایا۔ باہر سے آئے کسی بھی نامہ نگار، دانشور یا اسکالر کا، دورہ جموں جس طرح کشمیر ٹائمز کے مدیر وید بھسین سے ملے بغیر مکمل نہیں ہوسکتا تھا، اسی طرح سرینگر میں یہ اعزاز آغا اشرف علی کے نام تھا۔ ایک چلتی پھرتی انسائیکلوپیڈیا 97برس کی عمر میں سرینگر میں پچھلے ہفتہ خاموش ہوگئی۔ جنوبی ایشیاء کے جید ماہرین تعلیم سروپلی رادھا کرشنن، ذاکر حسین، خواجہ غلام السیدین یا پاکستان
مزید پڑھیے


کشمیر کی افسر شاہی :مقامی آبادی اقلیت میں

بدھ 05  اگست 2020ء
افتخار گیلانی
ایک سال قبل پانچ اگست کو ریاست جموں و کشمیر کو تحلیل کرنے کے بعد بیشتر مبصرین خدشہ ظاہر کر رہے تھے کہ خطے کی مسلم اکثریتی آبادی کو اپنے ہی وطن میں اپنی ہی زمین پر ا قلیت میں تبدیل کیا جائیگا۔ گو کہ اس طرح کے قدم کو نافذ کرنے میں عملاً کئی سال درپیش ہونگے مگر سرکاری اعداد و شمار کے مطابق کشمیر کی افسر شاہی میں تناسب کے اعتبار سے مقامی مسلمان پہلے ہی اقلیت میں آچکے ہیں۔ فی الوقت خطے میں 24 سیکرٹریوں کی پوسٹوں پر صرف پانچ مسلمان فائز ہیں۔ اسی طرح 58اعلیٰ عہدیداران
مزید پڑھیے


کشمیرپر مودی حکومت کی آئینی سرجیکل اسٹرائیک کی برسی

منگل 04  اگست 2020ء
افتخار گیلانی
بتایا جاتا ہے کہ پاکستانی فوج کے سربرا ہ جنرل یحییٰ خان نے 1969 کو زمام اقتدار سنبھالنے کے بعدکر جب مارشل لانافذ کرکے آئین کی معطلی کا اعلان کیا، تو اس انتہائی قدم کی کوئی توجیح پیش نہیں کر پا رہے تھے۔ قدرت اللہ شہاب کے مطابق بیوروکریسی کے ساتھ ان کی پہلی میٹنگ میں جب ان سے استفسار کیا گیا تو انہوں نے اور ان کے دست راست میجر جنرل ایس جی ایم پیر زادہ نے مارشل لا کے کئی فوائد گنوائے، جن میں نالوں کی صفائی کا حکم جاری کرنا، فنائیل چھڑکنا، مکھی مارنے کی مہم کا
مزید پڑھیے


کشمیرپر مودی حکومت کی آئینی سرجیکل سٹرائیک کی برسی

منگل 28 جولائی 2020ء
افتخار گیلانی
بتایا جاتا ہے کہ پاکستانی فوج کے سربرا ہ جنرل یحییٰ خان نے 1969ء کو زمام اقتدار سنبھال کر جب مارشل لا نافذ کرکے آئین معطل کرنے کا اعلان کیا، تو اس انتہائی قدم کی کوئی توجیہہ پیش نہیں کر پا رہے تھے۔ قدرت اللہ شہاب کے مطابق بیوروکریسی کے ساتھ ان کی پہلی میٹنگ میں جب ان سے استفسار کیا گیا ، تو انہوں نے اور ان کے دست راست میجر جنرل ایس جی ایم پیر زادہ نے مارشل لا کے کئی فوائد گنوائے، جن میں نالوں کی صفائی کا حکم جاری کرنا، فنائیل چھڑکنا، مکھی مارنے کی مہم
مزید پڑھیے



آیا صوفیہ بنام بابری مسجد…(2)

جمعه 24 جولائی 2020ء
افتخار گیلانی
تعجب کی بات ہے کہ چھ صدیوں تک مسجد کا کار منصبی انجام دینے اور نمازیوں کی میزبانی کرنے کے باوجود ان تصاویر کو چھیڑا نہیں گیا ہے۔ورنہ کسی مسجد میں تصویر کی کوئی گنجائش نہیں ہوتی ہے۔ اگرچہ استنبول میں اس انوکھے ڈھانچے نے پوری تاریخ میں بہت سی آفات دیکھی ہیں ۔ حیرت کی بات ہے کہ آیا صوفیہ کی تباہی یا لوٹ ماردوسرے مذاہب نے نہیں بلکہ خود عیسائیوں نے انجام دی۔فاتح سلطان محمد نے استنبول کو فتح کرکے اسکو مسلمانوں کے لئے عبادت گاہ کے طور پرمختص کیا۔ اس نے عمارت میں ایک مینار کو
مزید پڑھیے


آیا صوفیہ بنام بابری مسجد

منگل 21 جولائی 2020ء
افتخار گیلانی
لیجئے فرزندان اسلام کیلئے ایک اور مسجد تیار ہو گئی ہے، جہاں و ہ اپنے رب کے حضور سر بسجود ہو سکیں گے۔ ترکی کے افسانوی شہر استنبول کے وسط میں تاریخی عمارت آیا صوفیہ 85 برسوں بعد عبادت کے لیے کھولی جا رہی ہے، جبکہ اس کے بغل ہی میں آسمانی رنگ کی 17ویں صدی کی تعمیر شدہ خوبصورت اوروسیع و عریض سلطان احمد جامع واقع ہے، جہاں کے میناروں سے دن میں پانچ وقت تکبیریں گونجتی رہتی ہیں اور اسکی صفیں نمازیوں سے پر ہونے کا انتظار ہی کرتی رہتی ہیں۔برسوں کی عدالتی کارروائی کے بعد اسی
مزید پڑھیے


13جولائی: پیرس کے باسطل سے سرینگر کے سینٹرل جیل تک…(2)

بدھ 15 جولائی 2020ء
افتخار گیلانی

ان حالات کے پیش نظر مہاراجہ ہری سنگھ نے سیاسی مشیر ای سی ویکفیلڈکے مشورہ پر ریاستی مسلمانوں کا ایک نمائندہ وفد طلب کیا، جو اپنی شکایات اور مطالبات پیش کرے۔ جموں سے مستری یعقوب علی، سردار گوہر رحمان، چودھری غلام عباس اور شیخ عبدالحمید کو نامزد کیا گیا۔ کشمیر سے نمائندوں کو طے کرنے کیلئے سرینگر میں میر سید علی ہمدانی کی درگاہ یعنی خانقاہ معلی کے صحن میں ایک جلسہ منعقد کیا گیا۔ جس میں سات افراد میر واعظ یوسف شاہ، میر واعظ احمداللہ ہمدانی، آغا سید حسن جلالی، خواجہ غلام احمد عشائی، منشی شہاب الدین ، خواجہ
مزید پڑھیے


13جولائی : پیرس کے باسطل سے سرینگر کے سینٹرل جیل تک

منگل 14 جولائی 2020ء
افتخار گیلانی
کیا عجب اتفاق ہے کہ 13جولائی 1779ء کو فرانس کے دارلحکومت پیرس کے باشندوں نے باسطل کے زندان پر دھاوا بھول کر عوامی انقلاب کی جس طرح ابتدا کر دی، بالکل اسی طرح 152سال بعدیعنی 1931ء میں اسی دن سرینگر کی سینٹرل جیل کے باہر دبے کچلے کشمیری عوام نے آزادی کا الائو روشن کردیا ۔ کشمیر کی تاریخ میںیہ ایک انتہائی غیر معمولی اور اہم دن ہے اور پچھلے 89سالوں سے کشمیر کے سبھی طبقے چاہے بھارت نواز ہوں یا آزادی پسند ، اس کو ایک قومی دن کے بطور مناتے آئے ہیں۔ جس طرح ہندوستانی عوام 1857ء کی
مزید پڑھیے


فلسطین کو ضم کرنے کا اسرائیلی پلان اور کشمیر

بدھ 08 جولائی 2020ء
افتخار گیلانی
حال ہی میں امریکہ کی طاقتور یہودی لابی نے کورونا وائرس کی وبا کے دوران ہی اپنا ایک اعلیٰ سطحٰ وفد ان ممالک کے دورہ پر بھیجا تھا، جہاں ان کو واضح طور پر بتایا گیا کہ مغربی کنارہ کو ضم کرنے کے پلان کے بعد وہ ٹرمپ کے پلان کو حمایت نہیں دے پائیں گے۔ اردن نے بھی خبردار کر دیا کہ نیتن یاہو کے منصوبہ سے خطے میں حالات انتہائی خراب ہوسکتے ہیں۔ ان ذرائع نے راقم کو بتایا کہ کوشنر فی الحال خلیجی ممالک کی ناراضگی مول لینے کی پوزیشن میں نہیں ہے، کیونکہ ان ممالک میں
مزید پڑھیے