Common frontend top

افتخار گیلانی


بمباری کے سائے میںغزہ کا دن اور عارضی جنگ بندی


اسرائیل کی وحشت ناک بمباری ، جس نے 49دنوں میں تقریباً15ہزار افراد کوشہید کردیا ، جس میں چھ ہزار بچے اور چار ہزار خواتین شامل ہیں۔اب ایک عارضی جنگ بندی نے فلسطینی خطہ غز ہ کے مکینوں کو سانس لینے کا موقعہ فراہم کردیا ہے۔ اس خطہ میں موت کے رقص کے دوران ، لوگ کس طرح زندگی گذار رہے تھے، فری لانس خاتون صحافی صفاء الحسنات کا کہنا ہے کہ بس ادھار کی زندگی جی رہے تھے اور یہ پتہ نہیں تھا کہ اگلے ایک منٹ کے بعد زندہ ہونگے یا نہیں۔ جنگ بندی کے اگلے د ن صفاء
بدھ 29 نومبر 2023ء مزید پڑھیے

ویوین سلور۔اسرائیل میں فلسطینیوں کی آواز خاموش ہوگئی

بدھ 22 نومبر 2023ء
افتخار گیلانی

ایک دہائی قبل ، جب میں بھارتی صحافیوں کے ایک وفد کے ساتھ اسرائیل اور فلسطین کے دورہ پر تھا کہ غزہ کی سرحد سے ملحق اسرائیل کے شہر نگار سدیرات میں فلم اسٹوڈیوز کو دیکھنے کے بعدہماری گائیڈ سڑک اور گلیوں کے کنارے غزہ سے آنے والے راکٹوں سے بچاوٰ کیلئے بنائے گئے حفاظتی بینکر دکھا رہی تھی، اتنے میں پولیس اہلکاروں کے حلقہ میں ایک معمر اسرائیلی خاتون پر ہماری نظر پڑگئی جو عبرانی زبان میں خطاب کررہی تھی۔ چند گز کی دوری پر ایک گروہ اس معمر خاتون کی طرف اشارہ کرکے، فقرہ کس کے اس کو
مزید پڑھیے


ایک اسرائیلی جنرل سے ملاقات

بدھ 15 نومبر 2023ء
افتخار گیلانی
جس طرح عیسائیوں کے کیتھولک فرقہ کا اعلیٰ ترین مذہبی پیشوا پوپ ہوتا ہے، جس کا مسکن ویٹیکن میں ہے، اسی طرح یہودیوں کی مذہبی پیشوائی ایک ربائیت کونسل کرتی ہے، جس کے صدر دو چیف ربائی ہوتے ہیں۔یہ دس سالہ مدت کیلئے منتخب ہوتے ہیں ۔ ان میں ایک اشکنازی فرقہ ، دوسر ا سیفاردی فرقہ کی نمائندگی کرتا ہے۔ چند سال قبل جب بھارتی صحافیوں کے ایک وفد کے ہمراہ میں اسرائیل اور فلسطین کے دورہ پر تھا، تو پیغمبر حضرت الیاس ؑ کے شہر حیفہ میں ہماری ملاقات اشکنازی چیف ربی کے ساتھ طے تھی۔ میں
مزید پڑھیے


فلسطینی لیڈر حنان الشراوی سے بات چیت

بدھ 08 نومبر 2023ء
افتخار گیلانی
فلسطینی لیڈروں میں یاسر عرفات کے بعد جس چہرہ کو دنیا میں سب سے زیادہ مقبولیت ملی وہ حنان الشراوی ہیں، جنہوں نے نازک وقت میں فلسطین لبریشن آرگنائزیشن (PLO) کے سرکاری ترجمان کے طور پر خدمات انجام دیں اور اس حیثیت سے نوے کی دہائی میں پوری دنیا کے ٹی وی چینلوں اور میڈیا کی زینت بنتی تھی۔ الشراوی ایک فلسطینی عیسائی ہیں اور دوبار یعنی 1996 اور 2006 میںانہوں نے فلسطینی قانون ساز اسمبلی میں مقدس شہر یروشلم یا القدس کی نمائندگی کی۔ 2020میں صدر محمود عباس کے ساتھ اختلافات کے وجہ سے انہوں نے پی ایل
مزید پڑھیے


حماس کے نائب سربراہ موسیٰ ابو مرزوق سے بات چیت……(2)

جمعرات 02 نومبر 2023ء
افتخار گیلانی
ان ممالک کو بھی معلوم ہے کہ اس کے جواب میں ان کو کچھ بھی حاصل نہیں ہوا۔ اس لئے ہم اس ابراہمی معاہدہ سے خوف زدہ نہیں ہیں۔ وہ خود اپنی موت آپ مریں گے۔ میں ابو مرزوق کی توجہ دلائی کہ دنیا بھر میں مسلح مزاحمتی تحریکوں کی اب شاید ہی کوئی گنجائش باقی رہ گئی ہے۔ ان گروپوں کو اب دہشت گروں کے زمرے میں رکھا جاتا ہے۔ جیسا آپ نے خود ہی دیکھا ، پورا مغرب اسرائیل کے پیچھے کھڑا ہو گیا ہے۔ کیا اس نئے ماحول میں آپ پر امن تحریک کی گنجائش نہیں نکال
مزید پڑھیے



حماس کے نائب سربراہ موسیٰ ابو مرزوق سے بات چیت

بدھ 01 نومبر 2023ء
افتخار گیلانی
7اکتوبر کو فلسطینی مزاحمتی تنظیم حماس کے حملہ کے جواب میں، جس طرح اسرائیل غزہ کی پٹی پر قہر برسا رہا ہے، ذہن میں سوال اٹھتا ہے کہ کیا حماس کی کارروائی واقعی اس قدر ضروری یا اتنی مستحق تھی کہ اتنی ہلاکتوں کا بار اٹھا سکے؟ غزہ میں بچوں اور خواتین کی لاشیں دیکھ کر ،ان مظلوم عوام کے نالے سن کر تو آسمان شق ہو جاتا ہے۔ایسے سوالات کا جواب ڈھونڈنے کیلئے میں نے حماس کے کئی چوٹی کے راہنماوں ،تنظیم کے بین الاقوامی امور کے سربراہ موسیٰ ابو مرزوق اور پولٹ بیورو کے رکن اسامہ
مزید پڑھیے


دو کشتیوں میں سوار بھارت کی سفارت کاری

بدھ 25 اکتوبر 2023ء
افتخار گیلانی
بھارت کی 1971کی پاکستان کے خلاف، بنگلہ دیش جنگ جیتنے کا کریڈٹ تو آنجہانی وزیر اعظم اندرا گاندھی کے علاوہ فوج کے پارسی سربراہ جنرل سام مانک شاہ اور مشرقی کمانڈ کے سکھ سربراہ لیفٹنٹ جنرل جگجیت سنگھ اروڑہ کو دیا جاتا ہے، مگر شاید کم ہی افراد کو علم ہوگاکہ اس جنگ کی عملی پلاننگ اور اسکو روبہ عمل لانے میں ایک یہودی فوجی افسر لیفٹنٹ جنرل جے ایف آر جیکب کا نہایت ہی اہم رول تھا۔ جنرل جیکب نے ہی پاکستانی فوج کی مشرقی کمانڈ کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل اے اے کے نیازی کو ایک عوامی تقریب کے
مزید پڑھیے


حماس کی کارروائی اور مسئلہ فلسطین کی بحالی

بدھ 11 اکتوبر 2023ء
افتخار گیلانی
اسرائیلی اخبار یروشلم پوسٹ کے امریکی نژاد ایڈیٹر یاکوف کاٹزنے 22ستمبر کے اپنے ادارتی نوٹ میں جب سوال کیا کہ کیا اسرائیل کو دوبارہ 1973کی یوم کپورجنگ جیسی صورت حال کا سامنا کرپڑسکتا ہے، تو ان کے وہم و گمان میں بھی نہیں ہوگا ، کہ اسرائیلی خفیہ ایجنسیوں کی ناک کے نیچے ایسی ہی کارروائی کی منصوبہ بندی کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔اکتوبر 1973 کومصر ی افواج نے اچانک حملہ کرکے نہر سویز اور صحرائے سینا کو اسرائیلی قبضہ سے آزاد کرواکر اسرائیل کے ناقابل تسخیر ہونے کے بت کوپاش پاش کر دیا تھا۔ پچھلے 50سالوں میں
مزید پڑھیے


رازو ں سے پردہ اٹھاتی رائے ریاض کی کتاب……(3)

هفته 07 اکتوبر 2023ء
افتخار گیلانی
رائے ریاض صاحب نے کتاب میں پاکستانی پارلیمنٹ کی کشمیر کمیٹی کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا بھی ذکر کیا ہے، جوویسے تو اکثر دہلی وارد ہو تے تھے۔ جمعیتہ العلماء ہند ان کی میزبانی کرتے تھے۔ میرا بھی ان سے واسط پہلی بار 1995میں ہی پڑا ہے۔ 4 جولائی 1995 کو کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں پہلگام کے لدروت علاقے سے چھ مغربی سیاحوں اور ان کے دو گائیڈز کو ایک غیر معروف تنظیم الفاران نے اغوا کر لیا۔ 22 یا 23جولائی کے آس پاس حریت لیڈر مرحوم سید علی گیلانی دہلی آئے ہوئے تھے
مزید پڑھیے


رازو ں سے پردہ اٹھاتی رائے ریاض کی کتاب……(2)

جمعرات 05 اکتوبر 2023ء
افتخار گیلانی
مفتی صاحب کے بعد شاہ زمان خان اور کامران خان بھی اس عہدہ پر برا جمان ہوئے۔ مگر رائے ریاض جب وارد دہلی ہوئے، تو بھارت اور پاکستان کے درمیان امن مساعی بھی عروج پر تھی۔ دونوں طرف وفود کا تانتا لگا رہتا تھا۔ پاکستان سے کبھی ایم کیو ایم کے فاروق ستار صاحب وفد لیکر آپہنچے ہیں،، تو کبھی پیپلز پارٹی سے مخدو م امین فہیم، تو کبھی پاکستانی خواتین ، ججوں، کھلاڑیوں، میڈیا یا اسکول کے بچوں کا گروپ وارد ہوا ہے۔ رائے ریاض پاکستانی میڈیا کیلئے کام کرنے والے ہم چھ صحافیوں کو کسی بھی وفد
مزید پڑھیے








اہم خبریں