Common frontend top

اقتدارجاوید


اپنی بابت سوچیے، بچوں سے باتیں کیجئے


پاکستان کے زیادہ تر جرائد کاغذ کی گرانی کے شکوے اور اس کے ہوشربا اضافوں کے ڈراوے سے اپنے پرچوں کا پیٹ بھرتے ہیں۔ادب کی ناگفتہ بہ صورت حال کا رونا روتے ہیں اور تان پرچے کی سالانہ خریداری پر توڑتے ہیں۔شاید یہ رسم ایک تاریخ ساز پرچے سے چلی تھی۔فنون کے اداریے میں مدیر جنہیں" امام ِمدیران" کہنا روا ہے، قیمتوں کے اضافے کا رونا ضرور روتے تھے۔یہ رسم اب تک چلی آ رہی ہے۔جرائد کی ایک اور اعلیٰ قسم ہے جہاں اول درجے کے لکھاری ادیب موجود نہیں ہوتے اور پرچے کا پیٹ بھرنے کے لیے ہم
بدھ 01 مئی 2024ء مزید پڑھیے

قصہ ریٹائرڈ چہار درویش

جمعه 26 اپریل 2024ء
اقتدارجاوید
آج ہماری چوتھی میٹنگ تھی اجلاس وقت ِمعینہ سے دو گھنٹے پہلے ہی شروع ہوا۔صاحب ِصدر نے پہلے وقت کی اہمیت پر گفتگو کی اور قوموں کی ترقی میں وقت کی قدر جاننے پر زور دیا۔انہوں نے کہا اگر آپ حاضرین ِمحفل نے زندگی کی دوڑ میں آگے نکلنا ہے اور ترقی یافتہ قوموں کی صف میں شامل ہونا ہے یا ان کو روند کر آگے نکلنا ہے تو وقت کی قدر پہلی شرط ہے۔انہوں نے حاضرین یعنی ہم ممبران پر ایک گہری نظر ڈالی اور اپنے شدید اطمینان کا اظہار کیا۔ضروری ہے کہ صاحب ِصدر کی گفتگو اور
مزید پڑھیے


برسبیل ِتذکرہ

جمعه 19 اپریل 2024ء
اقتدارجاوید
" برسبیل ِتذکرہ" کے عنوان تلے سابق وفاقی سیکرٹری حکومت پاکستان توقیر احمد فائق کی خود نوشت حال ہی منصہ ِشہود پر آئی ہے۔آپ بیتی یا سوانح عمری پڑھتے ہوئے مجھے دو لوگ ہمیشہ یاد آتے ہیں ایک مرزا اسداللہ خان یعنی غالب اور دوسرے ابوالمنصور تیمور یعنی تیمور گورگانی۔ غالب نے اپنی سرگزشت کے بارے میں کہا کہ زیست بسر کرنے کو تھوڑی راحت درکار ہے اور باقی حکمت اور سلطنت اور شاعری اور ساحری سب خرافات ہے۔ تیمور فاتح ِ عالم بھی تھا اور سلطنتوں کو تہ وبالا کرنے کا عاشق بھی۔ اس نے بارہ گروہوں سے اپنی سلطنت کو
مزید پڑھیے


ہمارے علاقے کا گورنر

پیر 15 اپریل 2024ء
اقتدارجاوید
ہمارا " وطن" دریائے جہلم کے دائیں کنارے پر واقع ہے اور سعدی کا رکناباد یعنی ہمارا بادشاہ پور عین دریا پر آباد ہے۔کبھی ہمارا وطن ضلع شاہ پور کی حدود میں آتا تھا۔ بچپن میں ہمارے گھر کے سامنے نصب سنگ ِمیل پر " شاہ پور 58 میل" لکھا ہوا تھا۔اب وہ سنگ ِمیل بھی نہیں رہا اور ہمارا بادشاہ پور بھی ضلع شاہ پور اور ضلع گجرات سے ہوتا ہوا ضلع منڈی بہاؤالدین کی حدود میں آ گیا اور سابق ڈپٹی کمشنر سید افسر ساجد اور بابائے سیاست حاجی محمد افضل چن کی مہربانی سے ماڈل
مزید پڑھیے


مرشد پاگل ہے

هفته 30 مارچ 2024ء
اقتدارجاوید
مرشد کا کہنا ہے کہ دوستی ہمیشہ پاگلوں سے کرو۔مرشد کی تمام باتیں اقوال ایسے ہوتے ہیں جو پہلی نظر میں سر سے گزر جاتے ہیں اور جب ان کے مفہوم کا پتہ چلتا ہے تو سیدھا دل میں جا کرتی ہیں۔اب یہی قول لیں اور سوچیں بھلا کوئی پاگلوں سے بھی دوستی کرتا ہے۔مرشد کا اسی قول سے متعلق ایک اور قول ہے کہ سمجھدار آدمی کو دوست نہ بنائیں۔اب یہ دونوں باتیں ایسی ہیں جو ہماری زندگی کے اصول و ضوابط کی ضد لگتی ہیں۔مرشد کے مریدان میں میری طرح کے بہت سارے " خلیفے" ہوتے ہیں وہ
مزید پڑھیے



کیفے ڈی کراؤن

منگل 26 مارچ 2024ء
اقتدارجاوید
محفل عدالتی فیصلوں کے جواز اور عدم جواز سے چلی اور حافظ عزیر کے فیصلے پر برخاست ہوئی۔وہی رام پور والے حافظ عزیر۔جب شعر کا تقاضا ہوا تو انجم خیالی کا شعر یاد کروا کے محفل لوٹ بھی لی۔ جب بھی اس کے پہلو میں آ بیٹھتا ہوں گھنٹوں مجھ سے دریا باتیں کرتا ہے اشعار کی قرات کے دوران اس ڈی کیفے کراؤن کا ذکر بھی ہوا اور گڑھی شاہو میں حافظ جوس کارنر کا بھی۔ یہ محفل عطاالحق قاسمی کے بارے میں سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے ایک فیصلے کو کالعدم قرار دینے کی خوشی میں منعقد ہوئی تھی۔سابق چیف جسٹس
مزید پڑھیے


بین السطور

پیر 18 مارچ 2024ء
اقتدارجاوید
ہمارے سیاسی محبوب عشقیہ محبوبوں کی طرح بدلتے رہتے ہیں۔لہذا فراز سے ہماری ادبی نہیں سیاسی چپکلش ہے کہ ہم محبت میں بھی توحید کے قائل ہیں فراز ایک ہی شخص کو محبوب بنائے رکھنا اسی سبب سے کبھی ہمارا عشق چوہدری شجاعت حسین سے تھا۔پھر تاریخی سنہری سولہ ماہا دور میں ہم شہباز شریف کے عشق میں مبتلا رہے کہ انوار الحق کاکڑ وزیر اعظم بن گئے اور ہمارے محبوب بھی۔عشق کیا بھی تو وزرائے اعظم کے لیول سے کیا اس سے نیچے کبھی کسی کو گھاس نہیں ڈالی۔ایک معاصر میں ان کے دلکشا خیالات شائع ہوئے تو سوچا کہ
مزید پڑھیے


مدینہ پاک میں ڈسپنسری

منگل 12 مارچ 2024ء
اقتدارجاوید
خیبر جانے کے لیے دوبارہ ٹور آپریٹر کو فون کیا تو معلوم ہوا کہ ایک گروپ صبح ہو آیا ہے اب اتنے لوگ جانے کے لیے تیار ہوں گے تو دوسرے گروپ کا سوچا جا سکتا ہے۔سوچا جب تک خیبر جانے کا پروگرام بنتا ہے پاکستانی ڈسپنسری سے ہو آئیں کہ ٹھنڈا پانی پینے سے ہمارا گلہ اکثر خراب ہو جاتا ہے یہی اب ہوا۔ادھر ٹھنڈا پانی پیا ادھر گلہ خراب اور ساتھ ہی بخار۔اب بھی وہی ہوا۔ہمیں حج تربیتی کورس میں مولانا یوسف خان نے کہا تھا کہ جہاں ٹھنڈے یخ آب زم زم کے کولر ہوتے ہیں وہیں
مزید پڑھیے


جمہوری کساد بازاری

بدھ 06 مارچ 2024ء
اقتدارجاوید
جیسے دانش کی بددیانتی ہوتی ہے ویسے ہی جمہوریت کی کساد بازاری بھی ہوتی ہے۔اس کساد بازاری میں ووٹ ووٹر اور انتخابات کی چنداں اہمیت نہیں ہوتی اور یقین سا ہو چلا ہے کہ اس کی چنداں ضرورت بھی نہیں۔جمہوریت ایک دھندا ہے بلکہ گورکھ دھندا ہے۔ووٹ ایک اوٹ ہے۔کم از کم تازہ انتخاب کے نتائج تو یہی ظاہر کرتے ہیں۔یہ اوٹ بھی مقتدرہ کا اختیار بن گیا ہے۔جمہوریت کو ساجھے کی ہنڈیا کہا جاتا ہے اسی لیے بیچ چوراہے کی پھوٹتی ہے۔سیاست جمہوریت کی جان ہے اور یہی سیاست جمہوریت کا گلہ گھونٹنے میں دیر نہیں لگاتی۔ہمارا ملک ملک
مزید پڑھیے


اک کتھا انوکھی

هفته 24 فروری 2024ء
اقتدارجاوید
جیسے عزیر علیہ السلام سو سال بعد دوبارہ زندہ ہوئے جیسے مرشلینا، مرنوش اور یملیخا (اصحاب ِکہف) تین صدیوں کے بعد نیند سے بیدار ہوئے ایسے ہی " اک کتھا انوکھی" میں اس تلمیح کی بازیافت کرتے ہوئے وقت کو نظر انداز کر کے نئے معانی کا در وا کیا گیا ہے۔عزیر علیہ السلام کے والد کا نام یرمیاہ ہے۔ساتویں صدی قبل مسیح عراق کے بخت نصر یروشلم سے سارے یہودیوں کو گرفتار کر کے بابل لے آیا تب اس کے ایک مصاحب نے بتایا کہ ایک قیدی یروشلم میں اب بھی قید میں ہے۔وہ قیدی بنو اسرائیل
مزید پڑھیے








اہم خبریں