Common frontend top

امتیاز احمد تارڑ


لمحوں کی خطا!


دنیائے علم و فضل میں ایسے ایسے بافیض لوگ پیدا ہوئے ، جنہوں نے اپنے علم و عمل اور فکر و فہم کی بناء پر ناموری کی بلندیوں کو چھوا اور دنیا نے ان کے علم و کمال کا اعتراف کیا ، زندگی میں بھی اور بعد از مرگ بھی وہ اپنی خوبیوں کی بنا پر اہل علم کے یہاں تذکروں، تبصروں اور قلم و قرطاس کی زینت بنے ۔ میرے مربی اور شیخ حضرت مولانامشرف علی تھانوی ؒ مدفون جنت البقیع کی عظیم و ادبی شخصیت گوناں گوں کمالات و صفات سے مزین تھی ۔ ان کا ہر لفظ
اتوار 22 اکتوبر 2023ء مزید پڑھیے

فلاحی ریاست!

اتوار 08 اکتوبر 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
خلافت راشدہ کے تیس سالہ دور کا مجموعی حیثیت سے جائزہ لیا جائے تو وہ چودہ سو برس کی طویل ترین تاریخ کا ایک روشن باب ہے، ہر دور اپنے مقاصد واہداف میں ، اور اپنے معالم ونقوش میں دور نبوت کے انتہائی قریب تھا اور یہ وہ خصوصیت ہے، جو اسے مستقبل کی تمام خلافتوں سے ممتاز ومنفرد بناتی ہے، بعد والوں نے خلافت کے اس اعلی دور تک پہنچے کی کوشش نہیں کی، اس سلسلے میں صرف ایک نام اموی خلیفہ حضرت عمربن عبدالعزیز ؓ کا لیا جاسکتاہے، جن کی مدت خلافت صرف دو برس ہے، لیکن ان
مزید پڑھیے


آسٹریلیا مسجد کی تاریخی حیثیت!

اتوار 01 اکتوبر 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
لاہور ریلوے اسٹیشن پر آسٹریلیا مسجد قائم ہے ، جو ایک صدی کی تاریخ رکھتی ہے ۔26 اکتوبر 1925کو خواجہ محمد بخشؒ نے ا س کی بنیاد رکھی ۔ برادرم مفتی محمد عبد اللہ کے ہمراہ آسٹریلیا مسجد کی سیڑھیاں چڑھا، تو تاریخ کاایک باب کھل گیا۔ ایک صدی سامنے کھڑی دکھائی دی ۔ مولنا ڈاکٹر حافظ محمد سلیم سے مل کر کئی عقدے کھلے‘در وا ہوئے ۔ بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح ؒ نے 1941کو آسٹریلیا مسجد میں مغرب کی نماز ادا کی ۔شاعر مشرق علامہ محمد اقبال ؒ نے کئی سجدے اسی مسجد میں کیے۔آسٹریلیا مسجد1947ء
مزید پڑھیے


مرقد پہ نور برستا رہے گا!

اتوار 24  ستمبر 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
سلطان منصور اصغر راجہ کی مرقد پہ نور برستا ہے، تاابدبرستا رہے گا ۔وجیہہ،فیاض،مہمان نوازاور لطیف المزاج دوست وہاں چلا گیا،جہاں سے واپسی ناممکن۔پروردگار نے زندگی آزمائش کے لیے بنائی ہے۔صحافت میں ان سے تعلق قائم ہوا،جو یارانے میں تبدیل ہو گیا ۔ان کے ساتھ شب روز بیتے ۔محفلیں جمیں۔بڑے ہی صاحب مطالعہ تھے ۔ افغانستان ، عراق،شام و حجاز پر گہری نظر رکھتے تھے۔دین کی بڑی غیرت رکھتے،دین پر کسی جانب سے بھی حملہ ہوتا تو یہ بپھر جاتے ،مگر تکفیر میں عجلت نہ کرتے ۔حاکمانہ رعب دبدبے سے کورے تھے ،نیک نامی سے رہے ،دوستوں میںبھی ،عوام میں
مزید پڑھیے


گائوں چمکنا شروع!!

اتوار 17  ستمبر 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
ربع صدی ہوتی ہے۔ گائوں کو خیر آباد کہے ہوئے ،مگر دل ابھی تک وہی دھڑکتا ہے ،اس وجہ سے نہیں کہ وہاںزندگی سستی ہے بلکہ اس وجہ سے کہ میرا خمیر اسی مٹی سے اٹھا ہے ۔ خوبصورت پگڈنڈیاں، سہانی گلیاں، کشادہ سڑکیں اور بازاروں کے درودیوار میری پہلی محبت ہیں ۔ چند روز قبل گائوں گیا ،تو پرائمری سکول ڈیرہ ہاشم کے گیٹ پر کھڑا ہو کر کچھ دیر ماضی کی یادوں میں گم ہو گیا۔ اچانک ذہن میں پنجابی کا جملہ آیا ۔ ’’کتھے جا وسیوں وے لوکا‘‘ یہ درد وہی محسوس کر سکتے ہیں ،جو پردیس میں جا بسے
مزید پڑھیے



معیشت

اتوار 10  ستمبر 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
شہر شہر عوامی ہجوم فریاد کناں ہے،چیخ چیخ کر پوچھ رہاہے: مٹ جائے گی مخلوق تو انصاف کرو گے؟ منصف ہو تو اب حشر اٹھا کیوں نہیں دیتے؟ ایسے میں سرمایہ دار کیا کرے گا؟تاجر کب تک پیسہ ڈوبتا دیکھتے رہیں گے؟مزدوراپنے آنگن میں بھوک سے بلکتے بچوں کی آہ زاری پر کب تک خاموشی اختیار کرے گا؟ آخر انسان ہیں،صبرکی بھی ایک حد ہوتی ہے۔ لہذا سپہ سالار اب مزید انتظار مت کریں ۔ عدلیہ بھی عرصہ امتحان میں ہے ۔کیا کوئی ڈوبنے والا بھی بوجھ اٹھایا کرتا ہے؟نہیں ،ہرگز نہیں۔سپہ سالار کے سر پر ہی دستار رکھی ہے
مزید پڑھیے


عالمی تصوف کانفرنس!

اتوار 03  ستمبر 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
حضرت خواجہ فرید الدین گنج شکر ؒ،فرمایا :صوفی وہ ہے جو میلے کچیلوں کو صاف کرے اور خود ان سے گدلا یا میلا نہ ہو۔ برصغیر میں قافلہ تصوف اور شریعت وطریقت کے امام الاولیاء الشیخ السید علی بن عثمان الہجویری المعروف حضرت داتا گنج بخشؒ کا آستانہ سب سے بڑا روحانی مرکز ہے ۔سید ہجویر ؒکے علمی اور روحانی فیوض و برکات کی ترویج وتبلیغ کے لیے محکمہ اوقاف پنجاب ہمہ وقت کوشاں رہتا ہے ۔اس برس بھی عالمی تصوف کانفرنس کے انعقاد کا بنیادی مقصد یہی ہے کہ مصائب ومشکلات اور تذبذب و تشکیک کی شکار امت مسئلہ
مزید پڑھیے


بجلی بلوں پرعوامی احتجاج!

اتوار 27  اگست 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
ارباب اقتدار کو سمجھ نہیں آرہی کہ مہنگائی کتنی بڑھ چکی ؟ایسی تاریک زندگی کبھی پہلے نہ تھی،لوگ بجلی کے بل ادا کرنے کے لیے گھریلوسامان فروخت کر رہے ہیں،کئی تو بچے بھی۔اے ارباب اقتدار !ظلم و ستم تابکے؟لوٹ مارتاچند؟کب تک پاک سرزمین کو اپنے حیوانی غرور سے ناپاک رکھو گے ؟کب تک انصاف ظلم اور روشنی تاریکی سے مغلوب رہے گی ؟ارباب ِ اقتدار نے خلق خدا پر بڑے ظلم کیے ۔عوام پر ظلم کرنے میں ایک دوسرے پر بازی لینے کی دوڑ لگی ہوئی ۔دست بدستہ گزارش ہے، بوٹیاں اس طرح نوچی جائیں کہ ہر سیاسی بھیڑیئے
مزید پڑھیے


14اگست پرانہیں بھی یاد رکھیں

اتوار 13  اگست 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
مولانا آزادؔ کے سیاسی نظریے سے اختلاف کیا جا سکتا ہے مگر ان کے علمی قد سے انکار ممکن نہیں ۔ مدلل انداز میں فصاحت و بلاغت کے ساتھ اپنا نقطہ نظر بیان کرنا مولانا آزادؔ کا خاصہ تھا۔پاکستان اور ہندوستان بننے کے بعد مولانا آزادؔ نے کہا تھا: ہندوستان نے اگرچہ آزادی حاصل کر لی لیکن اس کا اتحاد باقی نہیں رہا۔ پاکستان کے نام سے جو نئی ریاست وجود میں آئی ہے، اس میں برسراقتدار طبقہ وہ ہے، جو برطانوی حکومت کا پروردہ رہا ہے۔ اس کے طرز عمل میں خدمت خلق اور قربانی کا کبھی کوئی
مزید پڑھیے


محبت اور نفرت

اتوار 06  اگست 2023ء
امتیاز احمد تارڑ
عصر حاضر کے عارف کا قول ہے: دنیاوی زندگی فانی ہے لہذا دنیا کی فانی زندگی کو آخرت کی دائمی زندگی پر ترجیح دینا حماقت کے سوا کچھ نہیں ۔انسانی فطرت ہے کہ انسان اپنی ذات اور وجود سے محبت رکھتا ہے۔ وہ چاہتا ہے کہ نمایاں ، طاقتور ، غالب اور اقتدار کا حامل ہو۔بہت سی آسائشیں اور بے شمار نعمتیں اپنے دامن میں سمیٹنے۔ لمبی عمر پانے اور تمام کائنات کا محور و مرکز بننے کا آرزومند بھی ۔ اسی بنا پر اس میں بیک وقت محبت اور نفرت دو ایسی خصوصیات پائی جاتی ہیں، جو انسانی نفس اور
مزید پڑھیے








اہم خبریں