BN

اوریا مقبول جان


انسانی ارتقاء اور باحیاء تہذیب (1)


ہم نے یہ بستی بڑی محنت سے برباد کی ہے۔ صدیوں سے انسان نے اسے سنوارنے پر اپنے شب و روز صرف کئے، لیکن ہم نے اسے صرف ایک سو سال کے اندر اجاڑ کر رکھ دیا۔ انسان اور دنیا کا ہر جانور تین جبّلی خواہشات لیکر پیدا ہوتا ہے، کھانا، سونا اور جنس۔ تمام جاندار ان خواہشات کی تکمیل کیلئے کسی ماحول ، وقت اور علاقے کا انتخاب نہیں کرتے۔ جس طرح ، جس جگہ اور جیسی خوراک میسر آجائے، پیٹ بھرتے ہیں اور جہاں مناسب ٹھکانہ مل جائے، نیند پوری کرلیتے ہیں۔ اسی طرح جنسی خواہشات کی تکمیل
هفته 10 اپریل 2021ء

گرم پانیوں کی تلاش میں

جمعه 09 اپریل 2021ء
اوریا مقبول جان
قدرت نے اس قوم کوسرد موسموں کی شدت، شمال کی طرف برف سے ڈھکے ہوئے سمندروں اور باقی تین سمت دشمن اقوام کو آباد کرکے ایک بہت بڑی سرزمین پر یوں لگتا ہے مقید کردیا تھا۔ روس کے جغرافیے پر نظر ڈالیں تو آپ کو ایسے محسوس ہوگا جیسے اسے باقی دنیا سے کاٹ کر رکھ دیا گیا ہو۔اس کا جغرافیہ اس کے لیئے بہت ہی ظالم رہا ہے۔ دنیا میں پھیلنے، تجارت کرنے یا فتوحات کے لیئے ان کے پاس نزدیک ترین سمندر بحر اوقیانوس ہے جو مغرب میں واقع تھا۔ یہاں تک پہنچنے کے بعد وہ باقی
مزید پڑھیے


ظالم کی مدد کیسے؟

جمعرات 08 اپریل 2021ء
اوریا مقبول جان
کس قدر خوبصورت حدیث ہے جسے امام ترمذی نے ’’کتاب الفتن‘‘ یعنی اس زمانے کے بارے میں احادیث کے باب میں درج کیا ہے، جب قیامت سے قبل دنیا بھر میں فتنے پھیل جائیں گے۔ تقریباً تمام بڑی احادیث کی کتب میں اس دور کے حوالے سے علیحدہ باب باندھے گئے ہیں۔ امام بخاریؒ نے اس حدیث کو اپنی کتاب ’’صحیح بخاری‘‘ میں تین بار مختلف ابواب میں درج کیا ہے۔ یہ حدیث حضرت انس بن مالکؓ سے روایت ہے، جنہوں نے بچپن ہی سے رسول اکرم ﷺ کے گھر میں تربیت پائی۔ اسے اُم المومنین سیدہ عائشہؓ نے بھی
مزید پڑھیے


وہی قتل بھی کرے ہے، وہی لے ثواب الٹا

اتوار 04 اپریل 2021ء
اوریا مقبول جان
آج سے ٹھیک دو سال قبل 15مارچ 2019ء کو نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی مساجد پر ایک گورے نسل پرست جنونی نے اکیاون مسلمان نمازیوں کو شہید کیا تھا۔یہ قاتل اسقدر سفاک تھا کہ اپنے اس خونی کھیل کو انٹرنیٹ کے ذریعے براہ راست دنیا بھر میں دکھا رہا تھا۔ اس واقعہ کے چند لمحوں بعدمغرب پرست عالمی میڈیااپنے مخصوص ایجنڈے کے ساتھ سامنے آیا اور پھر اس سفاک قاتل کا چہرہ نظر آیااور نہ ہی اس کے متعصب نظریات پر مفصل تبصرہ کیا گیا۔ میڈیا اس سفاکی کے مقابل نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کا انسانی چہرہ لے
مزید پڑھیے


واہگہ سے ولنگٹن تک

هفته 03 اپریل 2021ء
اوریا مقبول جان
کیا خوبصورت ضرب المثل ہے ، کسی کو اس کی حیثیت یا اوقات یاددلانا ہو،تواس محاورے کا استعمال کیا جاتا ہے،’’تین میں نہ تیرہ میں،سُتلی کی گرہ میں‘‘۔ بے وقعتی اور کم حیثیتی کا احساس عموماًیہ محاورہ بول کر ایا جاتا ہے۔جیسے ہر ضرب المثل کے پس منظر میں ایک یا ایک سے زیادہ قصے مشہور ہیں ویسے ہی اس محاورے کی بنیاد بھی ایک قصے پر ہے۔ایک ’’زنِ بازاری‘‘ یعنی طوائف نے اپنے چاہنے والوں کو تین مختلف فہرستوں میں بانٹ رکھا تھا۔سب سے اہم ترین لوگ تین تھے ، دوسری فہرست تیرہ لوگوں کی تھی، جبکہ اس نے
مزید پڑھیے



جمہوریت کا فریبِ نظر۔ اجتماعی ہپناٹزم

جمعه 02 اپریل 2021ء
اوریا مقبول جان
تماشہ ختم ہوا۔۔ابھی تو لوگ شوق سے دیکھنے جمع ہو ہی رہے تھے کہ خیمے کی طنابیں ٹوٹیں اور ایسی ٹوٹیں کہ ہر کوئی سٹیج سے اچھل کر ایک سمت ہو لیا۔ لوگ تو مشتاقِ دید تھے، تماشے میں گم تھے، ابھی ان کے سامنے منظر پوری طرح واضح ہی نہیں ہوا تھا، کہ سٹیج سے کودنے والے دونوں گروہ گرے ہوئے خیمے کے ساتھ کھڑے ایک دوسرے پر الزام لگا رہے تھے کہ طنابیں اس نے کاٹی ہیں۔ مگردیکھنے والوں کے لیئے یہ نظارہ بھی دلچسپ تھا، ایک دم ڈرامائی۔ شروع شروع میں تو انہیں یقین ہی نہیں
مزید پڑھیے


لاہور کی سیکولر پرائیویٹ یونیورسٹیاں اور پاکستان

جمعرات 01 اپریل 2021ء
اوریا مقبول جان
گزشتہ پندرہ دنوں سے پاکستان کے سیکولر لبرل دانشور طبقے کا ایک بڑا حصہ انگاروں پر لوٹ رہا ہے۔ایسے لگتا ہے کہ انہوں نے نفرت کے جس تناور درخت کو جھوٹ اور من گھڑت کہانیوں کے پانی سے سیراب کرکے پالا تھا،بنگلہ دیش میں بلند ہونے والے غزوۂ ہند کے نعروں نے اسے جڑ سے اکھاڑ دیا ہو۔ستر سالوں کی محنت پر پانی پھر جائے تو حالت دیدنی ہوتی ہے۔25مارچ کے دن کو پاکستان اور بنگلہ دیش کے سیکولر طبقات نے مشترکہ طور پر ایک علامت کے طور پر منانے کا اعلان کیا تھا۔ بنگلہ دیش کی سیکولر سرکار نے
مزید پڑھیے


آنکھ جھپکنے جتنی غلطی …اور…

اتوار 28 مارچ 2021ء
اوریا مقبول جان
چین کے اخبارات و رسائل اور الیکٹرانک میڈیا کے حالاتِ حاضرہ کے پروگراموں میں ان دنوں ان کی تاریخ کی مشہور ضیافت کا تذکرہ ملتا ہے جسے ’’ہانگ مین ضیافت‘‘ (Hongmen Banquet) کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ چینی تاریخ میں اس کا دوسرا نام ’’راج ہنس والے دروازے پر پُرتکلف دعوت ‘‘ (Feast at Swan Goose Gate) ہے۔ یہ دراصل 206قبل مسیح کا واقعہ ہے جب چین پر کوئن (Qin) خاندان کی حکومت تھی۔ اس خاندان کے اقتدار کے خلاف چین کے مختلف علاقوں میں بغاوتیں پھوٹ پڑیں اور بالآخر یہ دو بڑے گروہوں میں تقسیم ہوگئیں اور
مزید پڑھیے


پاکستان کا بدقسمت ترین دن

هفته 27 مارچ 2021ء
اوریا مقبول جان
جو لوگ آج اسے ایک سیاسی فتح قرار دیتے ہوئے خوشی اور مسرت کے شادیانے بجا رہے ہیں وہ دراصل آئندہ کے پاکستان میں جرم و سزا کے تمام معیارات کو سیاسی نعرہ بازی کے بدبودار گٹر میں غرق کر رہے ہیں۔ اگر لوگوں کا ہجوم نیب کی عمارت کو آگ بھی لگا دیتا ، وہاں پر موجود اہلکاروں کوقتل کر دیتا تو پھر بھی یہ سودا مہنگا نہیں تھا مگر فسادِ خلق سے ڈر کر مریم نواز کی پیشی ملتوی کی گئی۔ اس لیئے کہ جرم کی دنیا میں اگر لوگوں کے جم غفیر سے ڈر کر پسپائی اختیار
مزید پڑھیے


بنگلہ دیش میں غزوۂ ہند کے نعرے کی گونج

جمعه 26 مارچ 2021ء
اوریا مقبول جان
آج سے ٹھیک پچاس سال قبل 7مارچ 1971ء کو رمناریس کورس گراؤنڈ ڈھاکہ میں شیخ مجیب الرحمٰن نے 19منٹ طویل تقریرکے دوران سول نافرمانی کا اعلان کرتے ہوئے پانچ اعلانات کیئے۔(1)لوگ ٹیکس ادا نہ کریں، (2) سرکاری ملازمین شیخ مجیب الرحمٰن سے احکامات وصول کریں، (3) مشرقی پاکستان کی سیکرٹریٹ ، تمام سرکاری ادارے اور عدالتیں ہڑتال پر چلی جائیں، (4) ٹیلی فون صرف لوکل کالیں ملائیں اور(5) بندرگاہیں اور ریلوے کسی قانون نافذ کرنے والے ادارے سے تعاون نہ کریں۔تقریر کے آخر میں اس نے بنگلہ دیش کا پرچم لہراتے ہوئے کہا، اس دفعہ ہماری جدوجہد خودمختاری کے لیے
مزید پڑھیے