BN

اوریا مقبول جان


امریکی حکمرانوں کی گوہر افشانیاں


امریکی صدر جان ایف کینڈی قتل ہوا تو امریکہ میں اس کے چاہنے والے دبی ہوئی زبان میں یہ گفتگو کرتے ہوئے نظر آتے تھے کہ اسے امریکی سی آئی اے نے مروایا ہے۔ جان ایف کینڈی چونکہ اپنی خوبصورتی کی وجہ سے عوام میں بہت مقبول تھا اور اسے الیکشنوں میں ہروانا ممکن نہیں تھا، اس لئے اسے راستے سے ہٹا دیا گیا۔ مقبول لیڈر کا معاملہ یہ ہوتا ہے کہ وہ اگر مار بھی دیا جائے تو پھر بھی اپنی ایک وراثت چھوڑ جاتا ہے۔ کینڈی کی اس وراثت سے سی آئی اے اس قدر خوفزدہ تھی کہ
جمعه 22 اپریل 2022ء مزید پڑھیے

امریکی سازش… امریکی گواہی

جمعرات 21 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
امریکہ میں بہت کم ایسے سیاست دان ہیں جو اسرائیل کے ناجائز قیام، صہیونیت (Zionism) کے عزائم، امریکی خارجہ پالیسی پر اسرائیلی لابی کا قبضہ اور فلسطینیوں کے حق میں آواز بلند کرتے ہوں۔ جس کسی نے بھی امریکہ میں ایسا کرنے کی کبھی ہمت کی، اسے نشانِ عبرت بنا دیا گیا۔ امریکی سیاست میں ایک حقیقت، قول ِ فیصل کی طرح بیان کی جاتی ہے کہ "No one can become US President without Jew media and Jew Money" ’’کوئی شخص بھی یہودی سرمائے اور یہودی میڈیا کے بغیر امریکی صدر نہیں بن سکتا‘‘۔ میڈیا ہر ایسے شخص کی کردار
مزید پڑھیے


کشمکشِ اقتدار میں سلطنت کا خاتمہ ……(2)

بدھ 20 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
کھڑک سنگھ کی زہر خورانی کے بعد طویل بیماری، اس کے وزیر اعظم چیت سنگھ باجوہ کا سرِ دربار قتل اور اس کی بیوی اِندر کور باجوہ کو زندہ جلانے کے بعد خالصہ فوج برصغیر پاک و ہند کی تاریخ میں ایسی پہلی فوج بن گئی جس نے دو اختیارات اپنے ہاتھ میں لے لئے، پہلا یہ کہ اب ہم فیصلہ کریں گے کہ مسندِ اقتدار پر کس کو بٹھانا ہے اور دوسرا یہ فیصلہ بھی ہمارے ہی فہم و فراست سے ہو گا کہ غدار کون اور محب ِ وطن کون ہے۔ کھڑک سنگھ کا واحد بیٹا نونہال سنگھ
مزید پڑھیے


کشمکشِ اقتدار میں سلطنت کا خاتمہ

منگل 19 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
شالا مار باغ سے گڑھی شاہو کی طرف آئیں تو جہاں آپ کو مغل دَور کے کئی باغات کے آثار ملیں گے وہیں ایک گنبد نما عمارت بھی نظر آئے گی جسے بدھو کا آوا کہتے ہیں۔ یہ دراصل اینٹوں کا ایک بھٹہ تھا جس میں شاہی تعمیرات کے لئے پختہ اینٹیں تیار ہوتی تھیں۔ اس مقصد کے لئے مٹی کے حصول کو یقینی بنانے کے لئے اردگرد کی بیشمار زمین خالی رکھی گئی تھی۔ یہ وہی جگہ ہے جہاں ان دنوں لاہور کی انجینئرنگ یونیورسٹی واقع ہے۔ رنجیت سنگھ برصغیر کی ریاستوں کا پہلا حکمران تھا جسے یورپی طرز
مزید پڑھیے


عمران خان کا اصل جرم

جمعه 15 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
ایسے شخص کو کبھی معاف نہیں کیا گیا جس نے عالمی سُودی مالیاتی نظام اور جعلی کاغذی کرنسی کے عالمی شرح متبادل سے نکلنے کی تھوڑی سی بھی جنبش کی، ذرا سی دیر کو بھی آنکھیں دکھائیں یا ان معاشی غنڈوں کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر گفتگو کی۔ اس حرکت کے بعد بے شک وہ واپس پلٹ بھی گیا ہو، ’’اچھا بچہ‘‘ بننے کی بھی پوری کوشش کرے، لیکن عالمی شکنجے سے آزادی کی یہ چھوٹی سی کوشش بھی معاف نہیں کی جاتی اور اسے نشانِ عبرت بنا دیا جاتا ہے۔ عمران خان کی اس معاملے میں مماثلت نہ
مزید پڑھیے



’’انگریز سمجھتا ہے مسلماں ہے گداگر‘‘

جمعرات 14 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
پوری دُنیا کو معاشی غلامی کی جکڑ بندیوں میں گرفتار کرنے کے لئے امریکی شہر بریٹن ورڈ میں نئے عالمی مالیاتی نظام کے تحت آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کی بنیاد رکھی گئی تھی۔ اس دن یعنی 22 جولائی 1944ء سے لے کر آج تک اٹھہتر (78) سال گزر چکے ہیں۔ اس نظام کے تحت دُنیا بھر کی اقوام کو سُود دَر سُود قرضوں میں جکڑا گیا، ان کا مسلسل استحصال کیا گیا اور وہ بیچاری دن بدن اس سُودی دلدل میں دھنستی چلی گئیں۔ لیکن ایسی تمام اقوام کے ہاں غلامانہ سے غلامانہ سوچ رکھنے والے بے شمار
مزید پڑھیے


سی آئی اے: اب کیا کر سکتی ہے

بدھ 13 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
بر اعظم افریقہ کی بدقسمتی اس کی غربت و افلاس نہیں بلکہ اس کا دُنیا بھر میں معدنیاتی اور زرعی دولت سے مالا مال ہونا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ چھوٹے سے چھوٹے ملک نے بھی افریقہ کے علاقوں پر قبضہ کیا، وہاں سے لوگوں کو پکڑ کر غلام بنایا اور ان کی معدنی و زرعی دولت لوٹ کر خود کو خوشحال بنایا۔ دوسری جنگِ عظیم کے بعد یورپ کی اس ظالمانہ نشست پر امریکہ آ کر بیٹھ گیا۔ پہلے یورپی ممالک افواج کے ذریعے کالونیاں بناتے تھے، اب امریکہ نے اپنی فوجی طاقت کو پسِ پردہ رکھ کر معاشی
مزید پڑھیے


بھوک برداشت۔ توہین نہیں

منگل 12 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
تاریخ اس بات پر شاہد ہے کہ انقلابِ فرانس کے دس سالوں کے دوران، فرانس میں غربت اور بے روزگاری اپنے عروج پر تھی۔ صرف پیرس شہر میں چھ لاکھ سے زیادہ فقیر تھے، جو ہر راہ چلتے ہوئے صاحبِ حیثیت شخص کا ملبوس پکڑ لیتے تھے۔ اسی لئے فرانس میں بھیک مانگنے کے ’’آداب‘‘ کے حوالے سے ایک ایسا قانون نافذ کیا گیا، جس کے تحت کوئی بھکاری صرف آواز لگا کر، گا کر یا ہاتھ پھیلا کر مانگ سکتا تھا لیکن اگر وہ کسی ’’شریف‘‘ شخص کے دامن کو تھامے گا تو یہ ایک قابلِ دست اندازی پولیس
مزید پڑھیے


’’سر ترے زانو پہ تھا اور مجھ کو یاد آیا کوئی‘‘

جمعه 08 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
اقتدار کی خصلت میں آمریت رکھی ہوئی ہے۔ خواہ کوئی بادشاہ یا آمر فوج کے ذریعے علاقوں کو فتح کرے، اپنے ہی ملک پر قبضہ کرے، یا پھر جمہوری انداز میں لوگوں کے ووٹوں سے منتخب ہو کر مسندِ اقتدار پر قابض ہو جائے۔ گذشتہ صدی کے مشہور برطانوی فلاسفر اور ادیب برٹینڈ رُسل (Bertrand Russell)کی ایک کتاب ہے جس کا نام "Power" ہے۔ انگریزی اور اُردو دونوں میں اس لفظ کے معانی اور مطالب کے اعتبار سے لاتعداد مترادفات ہیں۔ جن میں قوت، طاقت، برتری، غلبہ اور حاکمیت وغیرہ شامل ہیں۔ رُسل کی کتاب اس فلسفے کے گرد گھومتی
مزید پڑھیے


سپریم کورٹ: ایک اور بغاوت کیس کی گونج…… (2)

جمعرات 07 اپریل 2022ء
اوریا مقبول جان
میمو گیٹ سکینڈل کیس سپریم کورٹ کی تاریخ کا ایسا کیس تھا جس کے مدعیان میں حکومت نہیں بلکہ اہم سیاسی رہنما، نواز شریف، اسحاق ڈار، اقبال ظفر جھگڑا، جنرل عبدالقادر بلوچ اور غوث علی شاہ شامل تھے۔ مسلم لیگ (ن) کے ہاتھ میں میمو گیٹ کی صورت ایک ایسا ہتھیار آ چکا تھا جس کے ذریعے وہ پیپلز پارٹی کے آصف زرداری کی سیاسی دُکان بند کروانا چاہتے تھے۔ چند سال پہلے ہونے والا ’’میثاقِ جمہوریت‘‘ دفن ہو چکا تھا۔ پاکستانی عدلیہ کی تاریخ میں پہلی دفعہ تین ہائی کورٹوں کے چیف جسٹس صاحبان، جسٹس مشیر عالم (سندھ)، جسٹس
مزید پڑھیے








اہم خبریں