BN

ڈاکٹر طاہر اشرف


پاکستان اور ازبکستان کے بڑھتے باہمی تعلقات


جیو اسٹراٹیجک سے جیو اکنامکس کی طرف جانے والا پاکستان دنیا بھر میں اپنے تجارتی اور معاشی تعلقات کو مستحکم کرنا چاہتا ہے۔ پاکستان کی یہ خواہش ، کہ ازبکستان کے ساتھ مضبوط تجارتی تعلقات قائم کریں ، جو وسطی ایشیا کا ایک بڑا ملک ہے ، اسی سمت میں ایک قدم ہے اور یہ دونوں ممالک کے لئے ایک جیت تصور ہوگی۔ وزیر اعظم عمران خان کا ازبکستان کا حالیہ دورہ کا مقصد ازبکستان کے ساتھ تجارتی اور اقتصادی تعلقات کو بڑھانے کے امکانات سے فائدہ اٹھانا ہے۔ اب تک کے سب سے بڑے تجارتی وفد کا دورہ
پیر 19 جولائی 2021ء مزید پڑھیے

خارجہ پالیسی میں موجودہ حکومت کا دانشمندانہ انتخاب

پیر 05 جولائی 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
کسی بھی ملک کی خارجہ پالیسی اسکے مفادات کے حصول کے تابع ہوتی ہے۔مفادات کی تبدیلی خارجہ پالیسی کی سمت میں تبدیلی کا سبب بنتی ہے۔ اس ضمن میں پاکستان کی خارجہ پالیسی کو کوئی استثنیٰ حاصل نہیں ہے بلکہ پاکستان بھی عالمی سیاست کے مروجہ اصولوں کے مطابق اپنی خارجہ پالیسی کا جائزہ لیتا رہتا ہے تاکہ اپنے قومی مفادات کا تحفظ یقینی بنا سکے۔بین الاقوامی سیاست میں تقریباً ایک دہائی کی ہلچل کے بعد نئی صف بندی ہو رہی ہے اور ماضی کی پیشین گوئی کے مطابق عالمی سیاست میں براعظم ایشیا کو خصوصی اہمیت حاصل ہوچکی ہے اور ایشیا عالمی سیاست کا محور بن چکا ہے۔ ان جغرافیائی سیاسی پیشرفتوں پر غور کرتے ہوئے ، وزیر
مزید پڑھیے


مودی ،کشمیری قیادت ملاقات: پس پردہ مقاصد؟

پیر 28 جون 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
جمعرات24 جون کو ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی نے مقبوضہ کشمیر سے تعلق رکھنے والے سیاستدانوں کے ساتھ پہلی بار ایک اہم ملاقات کی ہے جو کہ5 اگست 2019میں کشمیر کی نیم خودمختاری ختم کرنے کے بعد ہندوستان کی حکومتی قیادت کا کشمیری قیادت سے براہ راست ہونے والا پہلا رابطہ ہے حالانکہ انہی کشمیری رہنماؤں میں سے بہت سے افراد کو کریک ڈاون میں جیل بھیج دیا گیا تھا۔ تاہم اس ملاقات میں میرواعظ عمر فاروق سمیت کشمیر کی آزادی کا مطالبہ کرنے والے رہنماؤں بالخصوص آل پارٹیز حریت کانفرنس میں سے کسی کو بھی نہیں
مزید پڑھیے


ایران کے نئے صدر کی ممکنہ خارجہ پالیسی

پیر 21 جون 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
ایران میں گزشتہ جمعہ کو ہونے والے تیرہویں صدارتی انتخابات میں ابراہیم رئیسی کو کامیابی حاصل ہوئی ہے، سرکاری حتمی نتائج کے اعلان سے قبل ہی ان کے حریفوں نے شکست تسلیم کرتے ہوئے ہا ر مان لی ہے۔ انتخابات کی دوڑ میں شامل دیگر تین امیدواروں نے ابراہیم رئیسی کو اس جیت کے لئے مبارکباد پیش کی ہے،جس کی بہت توقع کی جارہی تھی کیونکہ بڑے سیاسی قد و کاٹھ رکھنے والے امیدواروں کو انتخابی مہم چلانے سے روک دیا گیا تھا۔ انتخابات میں حصہ لینے والے واحد اصلاح پسند امیدوار، مرکزی بینک کے سابق گورنر عبد الناصرہمتی سمیت
مزید پڑھیے


امریکہ چین مخاصمت: پاکستان کے لئے مضمرات

بدھ 16 جون 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
سابق سوویت یونین کے ٹوٹنے اور اس کے نتیجے میں سرد جنگ کے اختتام کے بعد ، عالمی سیاست کے ممکنہ ڈھانچے اور اس میں امریکہ کے کردار کے بارے میں بین الاقوامی تعلقات کے اسکالرز کے مابین ایک بحث شروع ہوئی۔ فرانسس فوکویاما کا "End of History" اور ہنٹنگٹن کا Civilizations of Clash ایسے نظریات نے بین الاقوامی سیاست کے ممکنہ وجود اور ڈھانچہ کی وضاحتیں پیش کیں۔ اکیسویں صدی کے پہلے عشرے نے عراق اور افغانستان کے خلاف امریکہ کے یکطرفہ اقدامات کی شکل میں بین الاقوامی سیاست میں امریکی تسلط
مزید پڑھیے



امریکی افوا ج کا انخلا اور افغانستان میں قیام امن!

پیر 07 جون 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
افغانستان میں امریکی افواج کے انخلا کے بعد پائیدارامن کا قیام کیا ممکن ہو سکے گا؟ یہ آجکل کا انتہائی اہم اور مشکل سوال ہے اور جسکا جواب تلاش کرنا بھی خاصا پیچیدہ ہے۔ افغان طالبان کے استنبول کانفرنس میں شرکت سے انکار کے بعد سے افغانستان میں امن کی صورتحال پیچیدہ ہوتی دکھائی دے رہی ہے۔ افغان مسئلے کا سیاسی حل ایک پیچیدہ مسئلہ ہے۔ سب گروہ، جنکے مفادات داؤ پر لگے ہوئے ہیں ،اپنے زیادہ سے زیادہ فائدے کے لیے ا پنے آپشنز کو غور سے جانچ رہے ہیں۔ خیال کیا جاتا ہے کہ امریکہ نے انخلا کا عمل
مزید پڑھیے


پاک امریکہ تعلقات کا نیا آغاز؟

پیر 31 مئی 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
گزشتہ ایک دہائی سے خاص طور پرصدرڈونالڈ ٹرمپ کے دورمیں پاکستان اور امریکہ کے باہمی تعلقات محدود گنجائش کے ساتھ ٹرانزیکشنل رہے ہیں۔ صدر بائیڈن کے امریکی صدر کے طور پر اقتدار میں آ نے کے بعد، امریکہ اور پاکستان کے درمیان دو طرفہ تعلقات کی نوعیت اور مستقبل کے بارے میں مختلف تشریحات پیش کی گئیں۔ تاہم، دونوں ممالک کے درمیان موجودہ تعلقات افغانستان، بھارت اورچین جیسے عناصر کے گرد گھومتے ہیں۔اِس وقت پاکستان دنیا اور خصوصا امریکہ سے توقع رکھتا ہے کہ وہ پاکستان کو بڑی طاقتوں کے مقابلہ کی ایک جگہ کی بجائے پاکستان کے جیو-اقتصادی مقام
مزید پڑھیے


اسرائیلی جنگ بندی اور مسلم دنیا

منگل 25 مئی 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ بندی کا بین الاقوامی سطح پر خیرمقدم کیا گیا ہے، اسرائیل کی طرف سے کیے گئے غزہ کی پٹی کے محا صرہ اور گیارہ دن تک جاری رہنے والی مسلسل بمباری کے بعد مصر کی سفارتی کوششوں کے زریعے جمعہ کے دن کے اوائل وقت میں جنگ بندی ہوئی ہے۔اسرائیلی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو کے دفتر نے جنگ بندی کا اعلان کیا۔ ایک بیان میں کہا گیا کہ ان کی سکیورٹی کابینہ نے یکطرفہ طور پر مصری ثالثی کی تجویز کو منظوری دے دی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ، دونوں فریقوں کے اتفاق
مزید پڑھیے


اسرائیل کی تازہ جارحیت اور مسلم دنیا کی ذمہ داری

پیر 17 مئی 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
فلسطین اسرائیل تنازع ایک بار پھر اٹھ کھڑا ہوا ہے اور دنیا کے ضمیر کو جھنجھوڑ کر انصاف کا طلبگار ہے۔ رمضان المبارک کے آخری ایام میں شیخ جراح جیسے پرانے شہر جو مشرقی یروشلم کے پڑوس میں ہے جہاں یہودی آباد کار تنظیموں کے کہنے پر دیرینہ فلسطینی باشندوں کے قانونی طور پر اپنے گھروں سے بے دخلی کی منظوری کے انکشاف کے نتیجے میں یروشلم میں تشدد کی نئی لہر پیدا ہوئی ہے۔ اس واقعے نے 1948 کے نکبہ کے واقعہ کو پھر سے یاد دلا دیا ہے جس کے نتیجے میں لاکھوں فلسطینی مسلمانوں کو فلسطین میں
مزید پڑھیے


عمران خان کا دورہ سعودی عرب

پیر 10 مئی 2021ء
ڈاکٹر طاہر اشرف
وزیر اعظم عمران خان نے ایک اعلی سطحی وفد کے ہمراہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی دعوت پر جمعہ سے اتوار تک تین روزہ سعودی عرب کا دورہ کیا ہے۔ باقاعدگی سے اعلی سطح کے دوطرفہ دورے، پاکستان اور سعودی عرب کے مابین برادرانہ تعلقات اور قریبی تعاون کو فروغ دینے میں اہم کردار ادا کرتے رہے ہیں۔ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تاریخی برادرانہ تعلقات ہیں، جس کی جڑیں مشترکہ عقیدے ، مشترکہ تاریخ اور باہمی حمایت پر مبنی ہیں۔ تاہم 2015سے دونوں ممالک کے تعلقات میں روایتی گرم جوشی نہیں رہی ہے۔ پاکستانی
مزید پڑھیے








اہم خبریں