Common frontend top

ذوالفقار چوہدری


ماورائے عدالت قتل، پولیس اور ہمارا نظام انصاف


سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری کی معزولی کے بعد وکلاء تحریک کے دوران اعتزاز احسن بڑے زور و شور سے اپنی ایک نظم پڑھا کرتے تھے جس کے چند اشعار کچھ یوں ہیں دنیا کی تاریخ گواہ ہے عدل بنا جمہور نہ ہو گا آخری شعر تھا ریاست ہو گی ماں کے جیسی ہر شہری سے پیار کرے گی ماں جیسی ریاست کے خواب نے اس نظم کے ہر شعر میںایک نئی امید کا پیغام رکھا دیا تھا ۔ وکلا تحریک میں عوام کی شمولیت اور قربانیوں کے پیچھے یہی امید اورخواب کا پیغام تھا کہ ملک و قوم کی ترقی عدلیہ
جمعه 17 مئی 2024ء مزید پڑھیے

غیر ممکن ہے حالات کی گتھی سلجھے!

جمعرات 09 مئی 2024ء
ذوالفقار چوہدری
دوسری جنگ عظیم میں جب جرمنی کے حملوں سے برطانیہ کے بڑے شہر تباہ ہو رہے تھے کسی نے چرچل سے سوال کیا کہ برطانیہ یہ جنگ ہار جائے گا؟ چرچل نے پوچھا کیا برطانیہ کی عدالتوں میں انصاف ہو رہا ہے؟ جواب ملا برطانیہ کی عدالتیں مبنی بر انصاف فیصلے کر رہی ہیں۔ چرچل نے کہا اگر برطانیہ کی عدالتیں انصاف کر رہی ہیں تو برطانیہ کو دنیا کی کوئی طاقت شکست نہیں دے سکتی۔ چرچل کا برطانیہ میںانصاف پر یقین اپنی جگہ مگر تاج برطانیہ کے محکوم ہندوستان کے سیاسی لیڈرمولانا ابو الکلام آزاد کا کہنا
مزید پڑھیے


ایرانی صدر کا دورہ اور اقبال کا خواب!

جمعرات 25 اپریل 2024ء
ذوالفقار چوہدری
ایرانی صدر ڈاکٹر ابراہیم رئیسی دورہ پاکستان مکمل کرکے واپس روانہ ہو گئے۔ اس دورے کی اہمیت کا اندازہ ایرانی صدر کے پاکستان میں قیام کے دوران امریکہ عہدیداروں کے پیٹ میں اٹھتے مروڑوں سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے ۔ دو برادر اسلامی ممالک کے تعلقات کے بارے میں امریکہ کے پیچ وتاب کو علامہ اقبال کے دو اشعار سے سمجھا جا سکتا ہے۔ پانی بھی مسخرّ ہے، ہوا بھی ہے مسخرّ کیا ہو جو نگاہِ فلکِ پِیر بدل جائے جب اقبال نے یہ اشعار کہے تھے اس وقت پہلی جنگ عظیم میں سلطنت عثمانیہ کی شکست کے بعد
مزید پڑھیے


نواز شریف کی ریلیف دینے کی خواہش اور بیوروکریسی

جمعرات 18 اپریل 2024ء
ذوالفقار چوہدری
لیزا کیش ہینس نے کہا ہے کہ قیادت کا کام دوسروں کی کسی خاص فیصلے کی طرف رہنمائی کرنا ہے جس سے وہ خود کو بااختیار اور مکمل محسوس کریں ایسا کیونکر ممکن ہو سکتا ہے یہ اوپر نفری نے بتایا۔’’قیادت ایسا صرف اپنے نیچے کام کرنے والوں کو ہمدردی کا احساس دلا کر اور ان سے غیر مشروط تعلق بنا کر ہی کر سکتی ہے‘‘۔ بدقسمتی سے پاکستانیوں کو قیام پاکستان کے بعد کالونیل سسٹم کی تربیت یافتہ بیورو کریسی ملی جس کی ٹریننگ عوام کی خدمت نہیں بلکہ ایک غلام قوم کو زیر نگین رکھنے کی تھی اور
مزید پڑھیے


ملک صرف ایٹم بم سے ہی تباہ نہیں ہوتے!!

جمعرات 04 اپریل 2024ء
ذوالفقار چوہدری
گھانا کے عالمی شہرت یافتہ دانشور اور درجنوں کتب کے مصنف اسرائیل مزیدآیبور نے کہا ہے ’’ملک صرف ایٹم بم سے ہی تباہ نہیں ہوتے بلکہ جس ملک کے حکمرانوں کو اپنی جیب عوام کی زندگیوں اور بہبود سے زیادہ عزیز ہو ان کی کرپشن سے بھی ملک تباہ ہو جاتے ہیں۔ کرپشن کے حوالے سے یہ بات تسلیم شدہ ہے کہ یہ شروع بھی اوپر سے ہوتی ہے اورختم بھی طاقتوروں کے احتساب سے ہو سکتی ہے۔ ہمارے اہل اقتدار ملک میں کرپشن کے خاتمے کے دعویدار ہیں اور انسداد بدعنوانی کے لیے ایک نہیں، تین
مزید پڑھیے



پیرا میڈیکس ملازمین کی پنشن اور اے جی آفس کا رویہ!

جمعرات 28 مارچ 2024ء
ذوالفقار چوہدری
معروف امریکی مصنف سوسان ملیر نے ریٹائرمنٹ کا مطلب بہت ہی کم وسائل میں خوشیاں تلاش کرنا بتایا ہے۔ ویسے تو دنیا بھر بالخصوص ترقی پذیر ممالک میں پبلک سیکٹرمیں تنخواہیں پرائیویٹ سیکٹر کے آٹے میں نمک کے مترادف ہوتی ہیں مگر اس کے باوجود نوجوانوں کی پہلی ترجیح خاص طور پر پاکستانیوں کی سرکاری نوکری ہوتی ہے اور اس کی وجہ سرکار کا اپنے ملازمین کو نجی شعبہ سے قدر بہتر سماجی تحفظ فراہم کرنا ہے۔ سرکاری نوکری میں کم ہی سہی مگر ہر ماہ تنخواہ برابر ملتی ہے ہر سال انکریمنٹ بھی اور تعلقات کے حساب سے ترقی
مزید پڑھیے


اختیارات وقانون کے غلط استعمال کاوتیرہ!

جمعرات 21 مارچ 2024ء
ذوالفقار چوہدری
امریکہ کی معروف کریمنل سائیکالوجسٹ پیٹریشیا کارویل نے کہاہے کہ طاقت اور اختیارات کا غلط استعمال تمام برائیوں کی جڑ ہے کس طرح! اس کا جواب ٹیڈ نوجینٹ نے یوں دیا ہے کہ جب ریاست کی رٹ نہ ہو، قانون طاقتور کو نکیل ڈالنے میں بے بس ہو تو ریاست بدعنوانی دھوکہ دہی اور کرپشن کے سمندر میں پھولی ہوئی لاش کی مانند رہ جاتی ہے۔ پاکستان میں پھر بھی ایک بھرم تھا کہ اشرافیہ کی اقتدار اور مفادات کی جنگ میں بھلے ہی جس کی لاٹھی اس کی بھینس والا معاملہ ہو مگر غریب کو تاخیر سے ہی
مزید پڑھیے


قرض کی مے ،مگر کب تک

جمعه 15 مارچ 2024ء
ذوالفقار چوہدری
لی ایچ ہیملٹن نے کہا تھا امداد وہاں کام کر سکتی ہے جہاں گڈ گورننس ہو، جہاں حکومتوں کی اپنے لوگوں کی زندگیوں کو بہتر بنانے میں دلچسپی ہی نہ ہو وہاں امداد کرپشن کے فروغ کا ذریعہ ہی بنتی ہے۔وزارت خزانہ نے اپنی تازہ ترین رپورٹ میں پاکستان کی معیشت کو درپیش 8 بڑے خطرات کی نشاندہی کی ہے،جس میں میکرو اکنامک عدم توازن،بڑھتے ہوئے قرضے،سرکاری اداروں کے خسارے، ماحولیاتی تنزلی،پبلک پرائیویٹ شراکت داری کو لاحق خطرات، صوبائی مالیاتی نظم وضبط اور گورننس کے مسائل شامل ہیں۔وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کردہ رواں سال کے حوالے سے
مزید پڑھیے


’’جمال فرش و فلک‘‘

جمعرات 07 مارچ 2024ء
ذوالفقار چوہدری
گزشتہ دنوں برادرم اقبال حسین اقبال لاہور تشریف لائے تو حیدر خان حیدر کی کتاب ’’جمال فرش و فلک‘‘ بچوں اور نوجوانوں کے لئے ماحولیاتی شعری کا گلدستہ ہدیہ کی۔ جمال فرش و فلک کے نام سے پہلا تاثر یہی تھا کہ گلگت بلتستان کی فطری حسن اور سحر انگیزی کا تذکرہ ہو گا کیونکہ جمالیات کا تعلق حسن اور اس کیفیات و مظاہر سے ہے۔ حسن اور فن کو مجموعی طور پر جمالیات کا نام دیا گیا ہے۔ اگرچہ بات بہت سادہ سی دکھائی دیتی ہے لیکن اس سادگی کے بھی ہزار پہلو ہیں۔ جمالیات زمین سے عرش
مزید پڑھیے


مریم نواز کا اسمبلی میں افتتاحی خطاب اور معذور افرد کی امیدیں!

جمعرات 29 فروری 2024ء
ذوالفقار چوہدری
وعدوں کی کوکھ سے امیدیں جنم لیتی ہیں۔پاکستان میں انتخابات دعووں اور وعدوں کا موسم ہوتا ہے۔ الیکشن کے بعد پاکستانی وعدے وفا ہونیکا انتظار کرنے لگتے ہیں یہاں تک کے پھر الیکشن آجاتے ہیں اور پاکستانی پھر وعدوں کے سیراب کی طرف بھاگنے لگتے ہیں۔ پاکستان کے انتخابات کے بارے میں ہی شایدالطاف حسین حالی نے کہا ہے۔ وہ امید کیا جس کی ہو انتہا /وہ وعدہ نہیں جو وفا ہو گیا پنجاب میں پہلی خاتوں وزیراعلیٰ مریم نواز کے اسمبلی میں خطاب اور عوام کو ریلیف دینے کے اقدامات کے عزم پر امجد صدیقی نے ایک کھلا
مزید پڑھیے








اہم خبریں