BN

ریاض مسن


عالمی سیاست :افغانستان کا کیا بنے گا؟


کابل سے عالمی سیاست میں اٹھنے والا طوفان ابھی تھما نہیں کہ امریکہ نے یورپ پر بھی بجلی گرادی ہے ۔ بدھ کے روز اس نے برطانیہ اور آسٹریلیا کے ساتھ مل ایشیا پیسفک میں ' آکس ' کے نام سے ایک نیا فوجی اتحاد تشکیل دینے کا اعلان کیا ہے۔ اگرچہ ان ممالک کی قیادت نے چین کا نام نہیں لیا تاہم سمجھا یہی جارہا ہے کہ انگلش بولنے والی جمہوریتوں کا اتحاد ، امریکہ کی اس ابھرتی ایشیائی طاقت کا گھیرائو کرنے کی طویل المدتی حکمت عملی کا حصہ ہے۔ جو بات البتہ واضح ہے وہ یہ ہے
اتوار 19  ستمبر 2021ء مزید پڑھیے

بلاول کا دورہ جنوبی پنجاب

اتوار 12  ستمبر 2021ء
ریاض مسن
ِ بلاول بھٹو زرداری کے دورہ پنجاب کے بعد پاکستانی سیاست پر چھایا سکوت ختم ہوگیا ہے۔ جہاں ملک کی دوسری بڑی پارٹی اس سال کے آخر میں ہونے والے مقامی حکومتوں کے انتخابات کے لیے بیانہ از سر نو ترتیب دے رہی ہے وہیں پر پاکستان پیپلز پارٹی کو وہ مطلوبہ زمین مل گئی ہے جہاں کھڑے ہوکر وہ نواز لیگ مخالف نوے کی دہائی کے بیانیے پر واپس جاسکتی ہے۔ یہ جنوبی پنجاب کے جیالوں کی امنگوں اور خواہشات کا جزیرہ ہے جو اسے پنجاب کی سیاست میں حصہ دار بناتا ہے۔سرائیکی صوبے کے وعدے پر وہ تھل
مزید پڑھیے


افغانستان کا مستقبل اور خدشات!!

اتوار 05  ستمبر 2021ء
ریاض مسن
طالبان نے افغانستان ، جس کے وہ اب بلا شرکت غیر مالک و مختار ہیں، کے لیے حکمرانی کے ڈھانچے کا خاکہ پیش کیا ہے۔ یہ ڈھانچہ ایران کے طرز پر ہوگا۔ یعنی ایک منتخب سربراہ مملکت بھی ہوگا اور اس کی سرپرستی کے لیے رہبر بھی۔ انتخابات ہو ںگے لیکن کون ان میں حصہ لے سکتا ہے اور کون نہیں، اس کا فیصلہ رہبر کی سرکرکردگی میں قائم سپریم کونسل کرے گی۔ جمہوریت ہوگی لیکن اس میں مذہب کا ذائقہ بھی شامل ہوگا۔ ملک کی باگ ڈور کسی کے ہاتھ میں دینے سے پہلے اس کی حکمران پارٹی کی
مزید پڑھیے


نَجیب

اتوار 29  اگست 2021ء
ریاض مسن
کابل پر طالبان کے قبضے کے واقعے کی نوعیت پر میرے ذہن جو پہلا خیال آیا وہ یہ تھا کہ طالبان 'نجیب' ہوگئے ہیں ۔ افغانستان پر بغیر خون کا ایک قطرہ بہائے تسلط نے انکی' نجابت' پر مہر لگادی ہے۔ جو راندہ درگا ہ تھے وہ معزز و مکرم ٹھہرے ہیں۔ ا س ممکنات کی دنیا میں بہت کچھ عجیب وغریب تو ہوتا ہے لیکن 'نجیب 'نہیں ہوتا۔کون سوچ سکتا تھا کہ جنہیں ایوان اقتدار سے دربدر ہوئے زمانے بیت گئے وہ بغیر گولی چلائے واپس ایوان میں اقتدار میں پوری آب وتاب کے ساتھ واپس آجائیں گے۔
مزید پڑھیے


سراب

اتوار 22  اگست 2021ء
ریاض مسن
سیاست اگر ریاست کو منظم اور متحد رکھنے کے نقطہ نظر سے کی جانی ہے تو اس کا مرکز و محور عدل (حقدار کو اسکا حق ملے یوں کہ حق مارنے والے کے ساتھ بھی زیادتی نہ ہو )کے سو ا کچھ نہیں ہو سکتا۔ عوام کو بنیادی ضروریات زندگی (معیاری خوراک، صاف پانی ، صحت ، تعلیم اور روزگار ) کی فراہمی سے لے کر ٹیکسوں کے نظام (ترقی پسندانہ ہے یا پھر استحصالی ؟کس سے اور کہا ں سے ٹیکس لیا جاتا ہے اور اور کن مدات میں یہ خرچ کیا جاتا ہے؟ ) تک سب عدل کے
مزید پڑھیے



افغان امن: ایک طویل راستہ!

اتوار 15  اگست 2021ء
ریاض مسن
امریکی اور نیٹو افواج کے ہاتھوں اپنی شکست کے بیس سال بعد طالبان اب دوبارہ اپنے قدموں پر اٹھ کھڑے ہوگئے ہیں۔ غیر ملکی افواج کے یکم مئی سے شروع ہوئے انخلا کے ساتھ ہی ان کی طرف سے افغان حکومت کے خلاف اٹھائے گئے اقدامات کا تنیجہ طالبان کے 19صوبائی دارلحکومتوں اور ملکی رقبے کے دو تہائی حصے پر قبضے کی صورت میں نکلا ہے۔ اس وقت جبکہ قطر میں طالبان اور افغان حکومت کے درمیان تعطل ہے، طالبان کی طرف سے پیش قدمی جاری ہے۔ کابل تقریباً محصور ہوچکا ہے اور اس کی قسمت کا فیصلہ طالبان کے
مزید پڑھیے


افغانستان کا بحران

اتوار 08  اگست 2021ء
ریاض مسن
امریکہ اور نیٹو افواج کے انخلاء سے پیدا ہونے والی افغانستان میں افراتفری ملک میں ایسا انسانی بحران جنم دے رہی ہے جس کے اثرات افغانستان پر ہی نہیں بلکہ پورے خطے پر پڑیں گے۔ امریکی اور نیٹو افواج کے انخلا ء کے عمل کے ساتھ ہی خانہ جنگی کے حالات پیدا ہونے شروع ہوگئے ہیں جو معصوم لوگوں کی ہلاکتوں اور جنگ سے بھاگ نکلنے والے خاندانوں کے آلام و مصائب پر منتج ہورہے ہیں ۔ جمعہ کو وقوع پذیر ہونے والے حالات نے اقوام متحدہ تک کو تشویش میں مبتلا کردیا ہے اور اسے سلامتی کونسل کا ہنگامی
مزید پڑھیے


سیاسی طالبان!

اتوار 01  اگست 2021ء
ریاض مسن
افغانستان سے بیرونی افواج کے انخلا کو طالبان نے اپنی فتح کہا ہے تو کچھ غلط بھی نہیں کہا ہے۔ پورے بیس سال وہ بے سروسامانی میں ڈٹے رہے اور وقت کے ساتھ ساتھ انہوں نے دشمن سے علاقے واپس لیے۔ امریکہ، نے یہ جنگ شروع کی تھی کسی اور نے نہیں۔ طالبان نے تو اسے اپنی افواج اور اثاثے نکالنے کا راستہ دیا۔ انہوں نے ہمسایہ ممالک سے کچھ وعدے ضرور کیے ہیں لیکن ابھی تک یہ ثابت نہیں ہے کہ انہوں نے اپنی نسلی و قبائلی عصبیت رویوں پر بھی قابو پالیا ہے۔ طالبان کی اصل جنگ کسی
مزید پڑھیے


یہ دھواں سا کہاں سے اٹھتا ہے!

پیر 26 جولائی 2021ء
ریاض مسن
دو ہزار تیرہ کے انتخابات کی آمد آمد تھی۔ پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے علاوہ مذہبی اور صوبائیت پرست جماعتوں نے پچھلے پانچ سالوں میں ، سوائے چند جھٹکوں کے ، پورے پاکستان میں مل جل کر حکومت کی تھی۔ دوہزار چھ میں محترمہ بینظیر بھٹو اور میاں نواز شریف کے دستخط سے طے پانے والے میثاق جمہوریت سے شروع ہونے والا یہ سیاسی بھائی چارہ آئین کی شق وار اصلاح سے ہوتا ہوا صوبائی خود مختاری تک پہنچا تھا۔ یہ اتحاد و اتفاق ویسا ہی تھا جیسا انیس سو تہتر کے آئین بنانے کے وقت تھا۔ اس وقت
مزید پڑھیے


چوراہا

اتوار 18 جولائی 2021ء
ریاض مسن
ہمارے فیصلہ ساز پاکستان کی جغرافیائی حیثیت ، جو اسے ایشیائی خطوںکا چوراہا بناتی ہے،کا فائدہ سوویت یونین کے افغانستان سے انخلا کے وقت سے ہی اٹھانے کا سوچ رہے ہیں لیکن اس کے تقاضے ہی ایسے ہیں جو پورے نہیں ہو پارہے۔ اس سے بڑا اور اہم سوال جس کا ہمارے پالیسی ساز جواب نہیں دے پارہے وہ یہ ہے کہ آیا ہم ایک 'نظریاتی' قوم ہیں یا 'حقیقی'۔ یعنی ہم اپنی سرحدیں وہیں پر دیکھتے ہیں جہاں وہ واقعی ہیں یا پھر ہم نے نیل کے ساحلوں اور خاکِ کاشغر کو سپنوں میں سجالیا ہے۔ قومیت کا
مزید پڑھیے








اہم خبریں