BN

سعدیہ قریشی


کامیاب لوگ اور وقت کااستعمال


برسوں بعد ایک پرانی سہیلی سے رابطہ ہوا تو اس نے کہا کہ میں ملنے آؤں گی، دن طے ہوگیا تو آمد کا وقت پوچھا کہنے لگی ہم کسی بھی وقت آجائیں گے۔ مجھے اس جواب پہ حیرت ہوئی۔خیر سردیوں کے دن تھے شام چار بجے کا وقت طے ہوا۔میں نے شام کی چائے کی تیاری کرلی۔ پونے 4 چار مکمل تیاری کے ساتھ مہمانوں کے انتظار میں تھی ساڑھے چار ہو گئے مگر مہمان ندارد۔فون کیا تو میرے بے تابانہ پوچھے گئے سوال پر جو بے نیازانہ ردعمل اس نے دیا مجھے لگا کہ اسے تو یاد ہی
بدھ 23 جون 2021ء مزید پڑھیے

کیا ہم سب ایک ریپلیکا ہیں ؟؟

اتوار 20 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
ہم اپنی تخلیقی تنہائی سے دستبردار ہوکر اتنے سوشل ہوئے کہ ایک ریپلیکا میں ڈھلتے جا رہے ہیں۔ آج کل اوریجنل کا نہیں ریپلیکا کا دور ہے۔ پہننے اوڑھنے سے لے کر گھر کی سجاوٹ تک سب کاپی ہے بلکہ اب تو نظریات تک کی ماسٹر کاپی مارکیٹ میں دستیاب ہے۔ بال بنانے سے لے کر میک اپ کرنے کے انداز تک، پھر سیلفی لیتے وقت گردن کو ٹیڑھا کرنے، پاوٹ pout بنانے کے رجحان تک ہم سوچے سمجھے بغیر ہر شے سٹائل کے نام پرکاپی کررہے ہیں۔پہلے ہم اسے فیشن کانام دیتے تھے اب یہ ٹرینڈز کہلاتے ہیں۔ یوں
مزید پڑھیے


کتاب کیچڑ میں گر پڑی تھی!!!

جمعه 18 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
خدا کے لیے ان بدکلامی کرنے والے گالیاں دینے والے اور کتاب کوایک دوسرے پر جوتوں کی طرح برسانے والے سیاسی جماعتوں کے ارکان کے ساتھ رہنما کے سابقے لاحقے استعمال کرنا بند کر دیں۔مجھے یقین ہے کہ رہنما لفظ ایسا نہیں جس کے معنی آپ کو فیروز اللغت میں ڈھونڈنا پڑیں۔تو چلئے اپنے دل کے آئینے میں جھانک کر پوچھیں کہ کیا رہنما " ا یسے ہوتے ہیں۔جو طیش میں آکر اپنے اندر کی خباثت کو برداشت کی لگامیں ڈالنے سے قاصر ہوں۔ پھر جو ان کے کے منہ میں آئے بولتے چلے جائیں ان کا بس نہیں چلتا کہ
مزید پڑھیے


ڈہرکی کا ادا علی نواز اور حبیبہ مائی

بدھ 16 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
ممکن ہوتا تو میں ڈہرکی کے اس درد مند اور ایثار کیش خاندان کے گھر جاتی۔ ادا علی نواز اور اس کی اہلیہ حبیبہ مائی کے گھر کی روشن دہلیز دیکھتی جس نے سات جون کو نصف شب کی تاریکی میں ہونے والے ہولناک حادثے میں مصیبت زدہ مسافروں کے لیے احساس اور دردمندی کے دیئے روشن کئے۔ تمام وقت خود کو تکلیف میں ڈال کر جتنا ممکن ہوسکا مصیبت زدہ مسافروں کی مدد کی۔ ممکن ہوتا تو میں سندھ کے اس غریب مگر کشادہ دل خاندان کے گھر اظہار عقیدت کے ایسے آنسو لے کر جاتی جیسے کسی مقدس درگاہ
مزید پڑھیے


’’عبدالکریم کا بجٹ‘‘

پیر 14 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
پرسوں محترم سجاد میر نے اپنے کالم کے آغاز میں ایک فقرہ لکھا ’’آج اگر میں بجٹ پر لکھوں تو یہ میرا پچاسواں بجٹ ہو گا‘‘کچھ برسوںکی جمع تفریق کے بعد میں بھی کہہ سکتی ہوں کہ یہ میرا تیرہواں بجٹ ہے جس پر خامہ فرسائی کرنے جا رہی ہوں لیکن اب بجٹ سال میں ایک بار نہیں‘ کئی بار آتا ہے۔ برینڈ ڈ لان کے جوڑوں کی طرح والیم ون، والیم ٹو۔ پھر پری سمر کولیکشن اور سمر کولیکشن کی طرح بجٹ کے بھی سارا سال ان گنت والیم آتے رہتے ہیں۔ اب تو یہ بھی یاد نہیں کہ
مزید پڑھیے



مثبت رویوّں کی پنیری لگائیں

جمعه 11 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
گزشتہ ہفتے‘لکھے جانے والے دو کالم ایک ہی موضوع کا تسلسل تھے۔خیال یہ تھا کہ بات دو کالموں میں پوری ہو جائے گی مگر ہوا یوں کہ موضوع کی جیسے شاخیں نکلتی آئیں اور وہ پھیلتا چلا گیا، جیسے پانی کا آدھا گلاس اگر پرات میں ڈال دیں تو وہی پانی پھیل جائے گا۔ ابھی بات مکمل ہونا رہتی تھی کہ ٹرین کا ہولناک حادثہ ہوا۔ اس حادثے نے میرے قلم کو پکڑا اور ان مسافروں کا نوحہ لکھوایا جو انتظامیہ کی لامحدود نااہلی اور ناقابل بیان بے حسی کی ریلوے لائن پر اپنی زندگی کی بازی ہار گئے اور درجنوں
مزید پڑھیے


ٹرین حادثے کب تک ہوتے رہیں گے؟

بدھ 09 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
خوشی سے ان کے ننھے وجود چہک رہے تھے‘ وہ تینوں ٹرین کی برتھ پر بیٹھے ایک خوشگوار سفر کے لیے تیار تھے۔ تین چھوٹے چھوٹے بہن بھائی سندھ سے پنجاب کی طرف سفر کا ارادہ کر کے اپنی ماں اور نانا کے ساتھ گھر سے نکلے تھے مگر ان کے وجود سے پھوٹتی خوشی کی یہ چہک، گھوٹکی کے ریلوے ٹریک پر اس وقت دم توڑ گئی‘ جب پہلے ان کی بوگی الگ ہو کر ریلوے لائن پر الٹ گئی۔ نیند میں گم بچے چیخیں مارتے ہوئے اٹھ گئے‘ ابھی ماں نے سنبھالا ہی نہیں تھا کہ دوسری طرف
مزید پڑھیے


روحانی اور جذباتی بانجھ پن

اتوار 06 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
سیون ڈیڈلی سنز (Seven deadly sins) کا تذکرہ گزشتہ کالم میں تھا اور ہم تین انسانی رویوں پر بات کرسکے۔ یا یوں کہہ لیں سات میں سے تین جہنمی گناہوں پر ہلکا پھلکا تبصرہ کرسکے تھے، ورنہ تو ان پر بہت تفصیل سے لکھا جا سکتا ہے کہ کیسے یہ صرف فرد کی انفرادی زندگی کو خزاں آلود نہیں کرتے بلکہ اس کے اثرات فرد سے خاندان اور خاندان سے معاشرے تک پھیل جاتے ہیں۔ ایک ایسی انسانی عادت ہی اس فہرست میں شامل ہے جسے ہم شاید کوئی ایسی جہنمی برائی تصور نہ کرتے ہوں۔ اس کا نام ہے gluttony
مزید پڑھیے


’’سیون ڈیڈلی سن‘‘

جمعه 04 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
ہر انسانی معاشرہ‘وہاں بسنے والے انسانوں کی عادات اور رویوں کا عکس ہوتا ہے۔ جہاں انسانوں میں اچھے رویے نیک عادات ہوں گی ۔وہ معاشرہ خوب صورت اور تہذیب یافتہ ہو گا۔وہاں بسنے والے انسان ایک دوسرے کے لئے زحمت نہیں رحمت اور باعث سہولت ہوں گے۔ اس کے برعکس اگر اکثریت کے رویے اور عادات بری ہوں گی تو وہ معاشرہ بدصورت اور بدبودار ہو گا۔ وہاں بسنے والے انسان ایک دوسرے کے لئے تکلیف کا باعث ہوں گے۔ سیون ڈیڈلی سن(seven deadly sin)سات جہنمی گناہ۔ ان کا تذکرہ میں نے پہلی بار کرسٹو فرمارلو کے پلے ڈاکٹر فاسٹس
مزید پڑھیے


نمودو نمائش نہیں،سادگی اور سہولت

بدھ 02 جون 2021ء
سعدیہ قریشی
رات سے موسم مینہ میں بھیگا ہوا ہے۔ صبح بھی ہلکی ہلکی بارش ہوتی رہی۔ سرمئی بادلوں کے دبیز ٹکڑے‘سورج کی کرنوں کو روکے کھڑے رہے۔ایسے میں بادلوں کی چھائوں آس پاس کے منظر کو اور بھی حسین بنا رہی تھی۔ صبح کی چائے پیتے ہوئے‘ اخبار پڑھنا پسندیدہ ترین کام ہے۔ کالم کے لئے حتمی موضوع کا انتخاب بھی صبح کے اخبارات پڑھ کر ہی ہوتا ہے ۔بھلے‘ سارا دن نیوز چینلز کے چیختے، دھاڑتے نیوز اینکرز خبروں کے ہتھوڑے سر پر مارتے رہیں، ہم تو حتی الوسع کوشش کرتے ہیں کہ بار بار کی دھرائی جانے والی خبروں
مزید پڑھیے








اہم خبریں