BN

سعدیہ قریشی



کرونا ٹائیگرز، عافیہ صدیقی اور ہیلو گاڈ!


سوشل میڈیا کی پوسٹوں سے اندازہ ہوتا ہے کہ احباب لاک ڈائون کا وقت نت نئے پکوان پکانے، ان کی تصاویر لینے اور پھر ان کو سوشل میڈیا پر تشہیر کرنے کی مصروفیت میں گزار رہے ہیں۔ ایک ایسے وقت میں جب ملک کے 3کروڑ غریبوں کے گھروں پر فاقوں کے زر دسائے لہرا رہے ہوں، اس قسم کے مرغ مسلم، بریانی اورقورموں کی سوشل میڈیا پر تشہیر مجھے تو بے حسی کی دلیل لگتی ہے۔ کل ایک شاعرہ دوست کا بھی فون آیا تو کہنے لگی کہ اور سنائو کیا حال ہے، تم کوئی کھانے وانے نہیں بنا رہی۔ آج
بدھ 01 اپریل 2020ء

افتاد کے بطن سے پھوٹتے خیر کے کچھ پہلو

اتوار 29 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
ہر مصیبت اپنے اندر خیر کا پہلو بھی رکھتی ہے۔ ہر تخریب کے اندر تعمیر کا پہلو مضمر ہے۔ کرونا وائرس کی افتاد غیر معمولی ہے۔ اس نے انسان اور انسان سے وابستہ زندگی کے ہزار رنگوں کو ہزار زاویوں سے متاثر کیا ہے۔ اتنے ہی ان گنت خیر کے پہلو بھی اس افتاد کے بطن سے پھوٹ رہے ہیں۔ اس بات پر شاید آپ کو حیرانی ہو لیکن ذرا سا زاویہ نگاہ بدلنے اور مشاہدہ کرنے کی بات ہے اور سب سے بڑھ کر محسوس کرنے کی ضرورت ہے۔ کیا کبھی اس سے پہلے اذان کے الفاظ سنتے ہوئے آپ کی
مزید پڑھیے


سفید کوٹوں والی آرمی کی سپہ سالار

جمعه 27 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
دنیا پر کرونا وائرس کی تباہی کی صورت تیسری جنگ عظیم مسلط ہو چکی اور دشمن کو مات دینے میں ڈاکٹروں کا کردار کلیدی ہے۔ یہ ایک غیر معمولی جنگ ہے جو جنگی محاذ تک محدود نہیں بلکہ ایک پراسرار نادیدہ دشمن ہر شخص کی تاک میں ہے، ہر شخص خوف اور سہم سے دوچار ہے۔محاذ جنگ کا سب سے حساس اور خطرناک علاقہ ہسپتال اور قرنطینہ مراکز ہیں جہاں کرونا کے تشخیص شدہ مریضوں کا علاج کیا جا رہا ہے اور اس محاذ پر بہادری سے اپنے فرائض انجام دینے والے مجاہد‘ سفید کوٹ والے ڈاکٹرز‘ نرسیں اور نیپرا
مزید پڑھیے


73برسوں سے واجب الادا قرض!

بدھ 25 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
اس ملک کا غریب 73برسوں سے غربت کا قرنطینہ کاٹ رہا ہے۔ 73سالوں سے اس ملک کے وسائل اور اس کے خزانے، یہاں کی کرپٹ اشرافیہ کی چراگاہ بنے رہے ہیں۔اسلامی جمہوریہ پاکستان کے 73سالوں کی تاریخ،دراصل قومی خزانے پر اربوں، کھربوں کے وائٹ کالر ڈاکوئوں کی سفاک داستان ہے۔ یہاں کے غریبوں کے منہ سے نوالے چھین کر، دولت بیرون ملک محفوظ بنکوں میں رکھی جاتی رہی۔ منی لانڈرنگ، بے نامی اثاثے، پانامہ، سرے محل، سوئس بنک تو…یہاں کے نامی گرامی حکمرانوں کی کرپشن کی سپرہٹ کہانیاں ہیں۔ لیکن بات یہیں ختم نہیں ہوتی۔ اس ملک کے خزانوں اور وسائل
مزید پڑھیے


وبا کے موسموں میں بھی محبت کر رہے ہیں

اتوار 22 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
جب دنیا پر وبا کے موسم کی حکمرانی تھی۔ گلیوں‘ کوچوں‘ بازاروں اورشاہراہوں پر خوف کے زرد موسم تنے ہوئے تھے۔ ایک پراسرار آسیب سے شہر کے شہر اجڑ رہے تھے۔ ہاں اسی موسم میں ننانوے برس کے یاور عباس اور ستر برس کی نور ظہیر نے اپنے دل کے شہر کو بسانے کی سعی کی اور دنیا کو حیران کر دیا۔ معروف روایتوں میں تو عمر کے اس پہر میں جب شام ہونے لگتی ہیں، زندگی واپسی کے سفر کا سامان باندھ رہی ہوتی ہے مگر محبت کرنے والوں نے عمر کے اس پہر میں ایک حیران کن امید کے ساتھ
مزید پڑھیے




غریبوں کے لئے سروائیول فنڈ قائم کیا جائے

جمعه 20 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
یہ غریبوں کی بستی ڈبن پورے کا ایک منظر ہے۔ چھوٹی چھوٹی گلیاں‘آمنے سامنے‘ ڈھائی ڈھائی مرلے کے گھروں کی قطاریں ‘ دروازوں پر لگے ہوئے۔ میلے پردے ‘ جو عموماً کھاد کی بوریوں کو آپس میں سی کر بنائے گئے ہیں۔ قطار اندر قطار یہاں بے شمار گھر ہیں اور ان گھروں کے آسائشوں سے خالی کمروں میں غریبوں کے کنبے آباد ہیں۔ ان گھروں میں رہنے والے مرد محنت مزدوری کرتے ہیں۔ کوئی رکشہ ڈرائیور ہے‘ کوئی مکینک ہے۔ کوئی کسی ہوٹل پر کام کرنے والا بیرا ہے‘ کوئی دھوبی ہے‘ کوئی چھابڑی لگتا ہے تو کوئی کسی بڑے سٹور
مزید پڑھیے


عجیب درد ہے جس کی دوا ہے تنہائی

بدھ 18 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
کل مریم ارشد کا فون آیا تو بہت اداس تھی کہ بیٹا اتنے عرصے کے بعد برطانیہ سے گھر آیا مگر کرونا وائرس کے حوالے سے حفاظتی تدابیر کے تحت سخت ہدایات تھیں کہ دور سے ہی ملنا ہے۔ ماں ظاہر ہے بیٹے کو اتنے عرصے کے بعد دیکھ کر گلے لگانا چاہتی تھی مگر وباء کے موسموں نے ماں کی محبت کے اس بے ساختہ اظہار پر پابندی لگا دی تھی۔ سو دور سے ہی بیٹے کو دیکھا اور اس کی بلائیں لیں۔ مریم ارشد، میری بہت عزیز دوست ہے۔ اس سے دوستی کا رشتہ اتنا ہی پرانا ہے
مزید پڑھیے


سوچ کا باریک مگر بنیادی فرق

اتوار 15 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
کرونا وائرس سے بچاءو کے حفاظتی اقدامات کے تحت سکول کالج‘ تعلیمی ادارے بند ہو گئے ہیں ۔ آج دانیال کے سکول میں والدین سے ملاقات کا دن تھا ۔ جسے پیرینٹ ٹیچرمیٹنگ کہتے ہیں ‘ کل تک تو خصوصی ہدایات تھیں کہ آنے والے ملاقاتی منہ پر ماسک چڑھا کر آئیں لیکن آج صبح معلوم ہوا کہ پی ٹی ایم‘ کو کینسل کر دیا گیا ہے یہ خبر تو رات ہی کو آ چکی تھی کہ تعلیمی ادارے 5اپریل تک بند رہیں گے ۔ ان حالات میں جب ہر طرف سے کرونا کے پھیلاءو کی خبریں آ رہی ہیں ۔
مزید پڑھیے


زندگیاں بدل دینے والی مائنڈ پاور

جمعه 13 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
پوری دنیا میں مائنڈ پاور ایک ایسا موضوع جس پر مسلسل تحقیق ہو رہی ہے۔تجربات سے اس کی سچائی اور اہمیت ثابت ہو رہی ہے‘ اس پر ریسرچ پیپرز لکھے جا رہے‘ سیمینارز ورکشاپس منعقد کی جاتی ہیں۔ لوگ مائنڈ پاور کا استعمال اور اس کی حیران کن طاقت کے استعمال کو سیکھ کر اپنی زندگیاں بدل رہے ہیں۔ پچھلے چند سالوں میں میری دلچسپی بھی اس موضوع میں بتدریج بڑھی۔ ظاہر ہے پھر اس حوالے سے میں نے پڑھنا شروع کیا۔ میرے قارئین یاد ہو گا کہ میں نے اس پر غالباً دو سال پیشتر کالم بھی لکھے۔ اب سوچا
مزید پڑھیے


ادھورے وجود میں اُمید کا مکمل چہرہ

بدھ 11 مارچ 2020ء
سعدیہ قریشی
پیاری کرن اشتیاق! میری شدید خواہش ہے کالم تم ضرور پڑھو کیونکہ یہ ایک لکھاری کی طرف سے تمہارے لیے چند لفظوں کی صورت ایک چھوٹا سا خراج ہے! میں اعتراف کرتی ہوں کہ میں نے جب سے تمہاری کہانی ’’اطراف‘‘ میں پڑھی، میں اپنی نظروں میں آپ ہی گر چکی ہوں۔ میں کیسی ناشکری، شکوے شکایت کرنے والی، ہربات پر ایک ہنگامہ کھڑا کر کے اس کا ایشو بنا لینے والی ہوں اور تم کیسی شکر گزار ہو کہ تخلیق کرنے والے نے تو تمہیں مکمل تخلیق بھی نہیں کیا اور تم اس ادھوری تخلیق کے ساتھ ہمہ وقت اس
مزید پڑھیے