Common frontend top

سعد الله شاہ


پوٹھوہار خطئہ دلربا


واسطہ یوں رہا سرابوں سے آنکھ نکلی نہیں عذابوں سے میں نے انسان سے رابطہ رکھا میں نے سیکھا نہیں نصابوں سے ویسے نصاب اور کتاب میں بہت فرق ہے کہ خوں جلایا ہے رات بھر میں نے۔ لفظ بولے ہیں تب کتابوں سے۔ اصل میں میرے سامنے ایک کتاب ہے۔ پوٹھوہار خطہ دلربا۔ یہ شاہد صدیقی ہی کا کارطلسم ہے کہ پوٹھوہار کو دلربائی دے کر شاعرانہ اور ساحرانہ بنا دیا۔ یہ کیسی کتاب ہے کہ آپ پڑھتے چلے جائیں تو آپ کوفراز کا شعر یاد آ جائے کو ڈھونڈ اجڑے ہوئے لوگوں میں وفا کے موتی۔ یہ خزانے تجھے ممکن ہیں خرابوں
بدھ 09  اگست 2023ء مزید پڑھیے

ایک غائب ہوا تو سارے زیرو ہو گئے

منگل 08  اگست 2023ء
سعد الله شاہ
کیا سروکار ہمیں رونق بازار کے ساتھ ہم الگ بیٹھے ہیں دست ہنر آثار کے ساتھ نہ کوئی خندہ بالب ہے نہ کوئی گریہ کناں تیرا دیوانہ پڑا ہے تری دیوار کے ساتھ ایک شعر اور کہ میرے موضوع سے علاقہ رکھتا ہے ’’چشم نمناک لئے سینہ صدچاک لیے۔دور تک ہم بھی گئے اپنے خریدار کے ساتھ اور پھر رنجش کار زیاں دربدری تنہائی اور دنیا بھی خفا تیرے گنہگار کے ساتھ۔ میرے سامنے اخبار پر آٹھ کالمی شہ سرخی لگی ہے کہ چیئرمین پی ٹی آئی کو 3سال قید، 5سال کے لئے نااہل قرار، گرفتار، یہ ہوتی ہے پذیرائی لیکن کمال یہ کہ
مزید پڑھیے


دل کی دو داستانیں

هفته 05  اگست 2023ء
سعد الله شاہ
کوئی پلکوں پہ لے کے وفا کے دیے دیکھ بیٹھا ہے رستے میں تیرے لئے زخم اپنے بھی دل پر لگے تھے بہت خود ہی بھرتے گئے جب نہ تم نے سیے اور ایسے میں ایک اور خیال عود کر آیا کہ کتنی تیزی سے سب کا بڑھنے لگے وقت، گھٹتا گیا ہر کسی کے لئے۔ اپنی مٹھی میں کوئی بھی لمحہ نہیں اور کہنے کو ہم کتنے برسوں جیئے۔ نہایت دلچسپ سی باتیں میرے پاس ہیں اور ہیں بھی دل سے متعلق کہ شاعر کے پاس دل ہی تو ہوتا ہے جو اکثر چوری ہو جاتا ہے یا پھر خود شاعر کسی نہ
مزید پڑھیے


وقت کی ضرورت: مکالمہ اور یکجہتی

بدھ 02  اگست 2023ء
سعد الله شاہ
فکر انجام کر انجام سے پہلے پہلے دن تو تیرا ہے مگر شام سے پہلے پہلے کیسے دم توڑ گئیں سینے میں رفتہ رفتہ حسرتیں حسرت ناکام سے پہلے پہلے میں کئی دنوں سے ایک موضوع پر بات کرنا چاہتا تھا مگر خیالات مجتمع نہیں ہورہے تھے۔ اصل میں اس وقت اس بات کا تذکرہ از حد ضروری ہے کہ امت کی یکجہتی کی بات ہی نہیںبلکہ اس کے لیے قابل عمل حل بھی ڈھونڈنا ضروری ہے۔ ظاہر ہے اس وقت ملک کی صورتحال مخدوش ہے۔ کوئی بھی سمت درست نہیںبلکہ حقیقت کو مسخ کرنے کی کوشش ہورہی ہے کہ مدعا ہی غائب کردیا
مزید پڑھیے


اقبال نے کربلا کو علامت و استعارا بنایا!

هفته 29 جولائی 2023ء
سعد الله شاہ
بات ساری یہ سعادت کی ہے میں نے اس گھر سے محبت کی ہے میں کہاں اور کہاں مدح حسینؓ یوں سمجھ لو کہ جسارت کی ہے اور پھر گھر کا گھر اور شہادت کی نماز۔ اس طرح کس نے امامت کی ہے، یہ جزن و ملال سے لبریز فضا محرم کی اور پھر اس میں ایک شاعر کا خیال سب کچھ ہی خوں آشام ہے ۔غالب کو نیرہ نور کی آواز میں سن رہا تھا اور پھر سنتا ہی گیا دل میں آیا کہ آپ کے ساتھ شیئر کروں۔ دوسرا خیال مجھے اس وقت آیا کہ جب ڈاکٹر شاہد مسعود ہاشمی نے اقبال کا
مزید پڑھیے



حکومت کی کارکردگی اور بجلی کے جھٹکے

منگل 25 جولائی 2023ء
سعد الله شاہ
روئے سخن نہیں تو سخن کا جواز کیا بن تیرے زندگی کے نشیب و فراز کیا کتنی اداس شام ہے شام فراق یار جائے گا کوئی رنج ستم ہائے راز کیا اور وہ شعر جو میں لکھنا چاہتا ہوں یہ شہر سنگ ہے یہاں ٹوٹیں گے آئینے۔اب سوچتے ہیں بیٹھ کے آئینہ ساز کیا۔خالد احمد نے بھی ایک بات کی تھی کہ شہر جاگے تو ہمیں خون میں تر دیکھیں گے۔سنگ آنکھیں نہیں رکھتے ہیں کہ سر دیکھیں گے۔میں کوئی خون رنگ تحریر نہیں لکھنے جا رہا بلکہ دلچسپ سی باتیں کرنا چاہوں گا کہ جو مجھے خط اٹھانے پر مجبور کرتی ہیں۔ مثلاً
مزید پڑھیے


کیا بات کریں

جمعرات 20 جولائی 2023ء
سعد الله شاہ
مجھ سا کوئی جہاں میں نادان بھی نہ ہو کر کے جو عشق کہتا ہے نقصان بھی نہ ہو کچھ بھی نہیں ہوں میں مگر اتنا ضرور ہے بن میرے شاید آپ کی پہچان بھی نہ ہو مجھے ایک دوست نے کہا کہ یہ دوسرا شعر تو یقینا عمران خاں پر صادق آتا ہے۔بہرحال اس پر بات ضرور کریں گے مگر’ رونا یہی تو ہے کہ اسے چاہتے ہیں ہم۔اے سعدؔ جس کے ملنے کا امکان بھی نہ ہو۔ ایک بات کا اعتراف تو مجھے ہر حال میں کرنا ہے کہ حریفوں کی کوشش کے باوجود عمران خاں کی مقبولیت کا گراف اوپر
مزید پڑھیے


احمد ندیم قاسمی اور قتیل شفائی کی برسیاں

منگل 18 جولائی 2023ء
سعد الله شاہ
چند لمحے جو ملے مجھ کو ترے نام کے تھے سچ تو یہ ہے کہ یہی لمحے مرے کام کے تھے فیصلہ تونے کیا ہے سو اسے مانتے ہیں ورنہ حقدار تو ہم بھی کسی انعام کے تھے اور ایک سیاس گزاری کہ’’ دور ہیں حرص و ہوس سے تو کرم ہے اس کا دانہ رکھتے جو نظر میں تو کسی دام کے تھے‘‘ اور آخری بات یہ کہ سعد پڑھنا پڑی ہم کو یہ کتاب ہستی۔ باب آغاز کے تھے جس کے نہ انجام کے تھے۔ میں پیچھے مڑ کر دیکھتا ہوں تو یادیں بکھری پڑی ہیں سوچا کہ آپ کو شریک کروں
مزید پڑھیے


آقا ﷺ کی سیرت میں محبت کا پہلو

هفته 15 جولائی 2023ء
سعد الله شاہ
میں جاگنے لگا تو نیا خواب آ گیا پھر میری خواب گاہ میں سیلاب آ گیا پہنچا میں شہرِ علم میں عجز و غنا کے ساتھ جب ہاتھ ابو تراب کا اک باب آگیا کبھی کبھی میں ضرور سوچتا ہوں کہ آقائے نامدار ﷺ کی گفتگو کیسی ہو گی وہ مسکراتے کیسے ہونگے۔لب و لہجہ نرماہٹ‘ ملائمت اور آنکھوں کی روشنی آپؐ کے واقعات روشن منارے ہیں۔ڈاکٹر شاہد صدیقی نے ایک مختصر سی حدیث سنائی المحزن صدیقی یعنی حزن میرا دوست ہے حزن غم و درد و ملال کو کہتے ہیں اس اختصار و اعجاز پر کوئی کیوں نہ سر دھنے۔ دو الفاظ میں معنی
مزید پڑھیے


شاندار عید مشاعرہ

اتوار 09 جولائی 2023ء
سعد الله شاہ
اک سمندر ہو کوئی اور وہ لب جو آئے کیوں نہ اظہار کو ان آنکھوں میں آنسو آئے خوش گمانی نے عجب معجزہ سامانی کی اب ہمیں کاغذی پھولوں سے بھی خوشبو آئے اس موسم میں عید قربان کی خو بوہے تو سوچا کہ لمحات کو سہانا بنا دیا جائے۔رکھنے دیں گے نہ قدم تجھ کو زمیں پر کوئی۔اپنی پلکوں کو بچھا دیں گے اگر تو آئے۔اس کی آنکھوں کو جو دیکھا تو پکار اٹھا میں، کیا ضروری ہے کہ ہر شخص کو جادو آئے۔اصل میں عید قربان پر ایک شاندار مشاعرہ منعقد کیا گیا جس میں راقم میزبان تھا۔ کچھ اس قدر
مزید پڑھیے








اہم خبریں