BN

سہیل اقبال بھٹی


ایک اور مہنگا سودا؟


ماہرین نے 2002ء میں حکومت کو ایک رپورٹ پیش کی۔ رپورٹ کے مطابق آئند ہ چند سالوں کے دوران پاکستان کو توانائی کے سنگین بحرانوں سے دوچار ہونا پڑے گا۔مستقبل کی منصوبہ بندی کے فقدان کے باعث بجلی‘گیس اورپانی کی قلت ایک بڑا چیلنج بن جائے گی۔ حکومت نے انتہائی عجلت میں پالیسی تیار کرنے کا فیصلہ کیا۔ پاورپالیسی 2002تیار کی گئی مگر بدقسمتی کیساتھ قومی مفادکی بجائے پاور پلانٹس لگانے والے مالکان کو ناقابل یقین حد تک منافع دینے کی راہ ہموار کرد ی گئی۔ یہ پالیسی انہی لوگوں نے تیار کرواکر وزارت پانی وبجلی کو ارسال کی
جمعرات 15 جولائی 2021ء مزید پڑھیے

منصوبہ سازوں کی ’کاری ‘گری!

جمعرات 08 جولائی 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
ائیروائس مارشل محمد سلیم الدین نے 1963ء میں پاک فضائیہ میں شمولیت اختیار کی۔ یہ وہ دور تھا جب ازلی دشمن پاکستان پر قبضے کے ناپاک خواب دیکھنے میں مصروف تھا۔ محمد سلیم الدین کو ایف 16طیاروں کے سلسلے میں امریکامیں خصوصی ذمہ داریاں تفویض کی گئیں۔ پریسلر ترمیم کے بعد امریکا نے ایف 16طیارے فراہمی میں لیت ولعل سے کام لینا شروع کیا تو پاکستان نے چینی کمپنی CATIC کیساتھ مل کر جے ایف 17(جوائنٹ فائٹر)منصوبے پر کام شروع کردیا۔ ائیروائس مارشل محمد سلیم الدین کو 1985ء میں اس منصوبے کا ڈائریکٹر تعینات کیا گیا۔ 34سال ایئرفورس میں شاندار
مزید پڑھیے


نیا پاکستان اِک قدم کی دوری پر؟

جمعرات 01 جولائی 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داؤد نے 5مئی کو ایک ٹویٹ کے ذریعے اعلان کیا کہ ایک سال کی کاوشوں کے بعد بالآخر پاکستان کو ایمازون کی فروخت کنندہ لسٹ میں شامل کرنے کی راہ ہموار ہوچکی ہے۔ ایمازون کی جانب سے چند روز میں باضابطہ اعلان کردیا جائے گا۔ یہ پاکستان کے نوجوانوں‘چھوٹے اور بڑے پیمانے پر کاروبارکرنے والے افراد اور خواتین کیلئے ایک شاندار موقع ہوگا۔ سرکاری ٹیم نے ای کامرس پالیسی کے تحت یہ بڑا سنگ میل عبور کیا ہے۔21مئی کو ایمازون کی جانب سے باضابطہ اعلان ہوا ‘کاروباری طبقے میں امید اور خوشی کی
مزید پڑھیے


ہائے اس زود پشیماں کا پشیماں ہونا ؟

جمعرات 24 جون 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
گزشتہ تین ماہ سے معاشی سرگرمیوں میں بہتری کے باعث وزیراعظم اور انکی ٹیم خاصی مطمئن دکھائی دیتی ہے۔ اگرچہ عوام کو وعدوں کے مطابق تبدیلی میسرنہیں آسکی مگر آئندہ مالی سال کے بجٹ میںگرینڈ ریلیف کے حکومتی شادیانے بجانے کاسلسلہ جار ی ہے۔ معاشی ترقی کے اعداد وشمار پر معاشی ماہرین اور حکومت کے مابین اتفاق نہیں مگر عوام پھر بھی دل کو تسلی دئیے بیٹھے تھے کہ صورتحال اب بڑی تیز ی سے بہتر ہونے جارہی ہے۔ حکومت نے تین سال کے دوران عالمی مالیاتی اداروں کی شرائط کے پیش نظر تمام کڑے فیصلے کرلئے ہیں ۔ معاشی
مزید پڑھیے


Hit them hard

جمعرات 17 جون 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
نومبر 2018میں حکومتی عہدے پر فائز انتہائی ملنسار شخصیت نے ملاقات کیلئے مدعوکیا۔مجھ سے ملاقات کی وجہ انکے ماتحت سرکاری ادارے سے متعلق روزنامہ 92میں شائع ہونیوالی میر ی خبر تھی ۔ وہ اس خبر کی تردید کے بجائے متعلقہ اقدام کا پس منظر اور قومی مفادبیان کر نا چاہتے تھے۔ ملاقات کے دوران قومی مفاد اور وجوہات بیان کرنے کے بعد انہوں نے دستاویز اور خبرکے ’’سورس‘‘کا نام پوچھ لیا۔ نام ظاہر کرنے پر میری معذرت کے بعد انہوں نے ممکنہ ناخوشگوار نتائج پرروشنی ڈالتے ہوئے سورس کا نام ظاہر کرنے پر اصرار شروع کردیا۔ ملاقات چونکہ ابھی تک
مزید پڑھیے



Robber Barons

جمعرات 10 جون 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
بجلی بحران نے2007ء میں سر اٹھانا شروع کیا۔ پاکستان پیپلز پارٹی نے اقتدار سنبھالا تو پانچ سالوں کے دوران سب سے بڑا مسئلہ بجلی کی بدترین لوڈشیدنگ رہی ۔ پیپلزپارٹی بجلی بحران تو حل نہ کرسکی مگر رینٹل پاور اسکینڈل کے باعث وزراء اور افسران کے خلاف نیب کی عدالتوں میں آج ریفرنس ضرور بھگت رہی ہے۔ پاکستان مسلم لیگ نے بجلی کی قلت کو ملکی معاشی ترقی کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ سمجھتے ہوئے اقتدار کے دوسرے مہینے میں پاورپالیسی منظور کی۔ ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ فاسٹ ٹریک پر ڈیڑھ سال میں نئے پاور پلانٹس
مزید پڑھیے


آخر کب تک؟

جمعرات 03 جون 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
راولپنڈی رنگ روڈ اسکینڈل کی دُھول ابھی چھٹی نہیں کہ وفاقی دارالحکومت میں ایک نئے اسکینڈل نے جنم لے لیا ہے۔کیپٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے دونئے سیکٹرز تعمیر کرنے کیلئے 1985میں ایف 12اور جی 12سیکٹر کیلئے اراضی ایکوائر کی۔ اس اراضی پر مقدمات شروع ہونے اور سی ڈی اے کی ترجیحات بدلنے کے باعث سیکٹرز کی تعمیر لٹک گئی۔ وفاقی حکومت نے یہ دونوں سیکٹر فیڈرل گورنمنٹ ایمپلائز ہاوسنگ اتھارٹی کے حوالے کردئیے تاکہ سرکاری افسران اور ملازمین کی رہائشی ضرورت پوری کرنے کیساتھ عام شہریوں کو بھی رہائش کی بہتری سہولیات مسیر آسکیںمگر ایف جی ای ایچ اے کے افسران
مزید پڑھیے


کرالنگ ریس

جمعرات 27 مئی 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
بُل فائٹنگ کا شمار دنیا کے خطرناک ترین کھیلوں میں کیا جاتا ہے۔سپین میں یہ کھیل کئی صدیوں سے جاری ہے۔ سپین میں بُل فائٹنگ کا سیزن اپریل سے ستمبر تک جاری رہتا ہے۔وقت گزرنے کیساتھ اس کھیل میں جدت اور ورائٹی شامل ہوتی گئی۔ گلیڈی ایٹرز کے کھیلوں کے طرز پراسٹیڈیم میں بُل فائٹنگ کیساتھ بُل رننگ کے کھیل میںبھی عوام گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔سپین میں بپھر ے بیلوں کا سامنا موت سے ٹکرانے سے کم نہیں۔ چندسال قبل ان بپھرے ہوئے بیلوں کیساتھ انوکھا کھیل پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس کھیل کو کرالنگ ریس کا نام
مزید پڑھیے


پائیداری کا پائیدان ؟

جمعرات 20 مئی 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
وفاقی حکومت کو درپیش مسائل تھمنے کا نام نہیںلے رہے۔ سیاسی چیلنجزہر دن نیا رُخ اختیار کرلیتے ہیں۔مہنگائی‘توانائی اور گڈ گورننس کے مسائل حکومت کی بقا کیلئے سنگین چیلنج ہیں۔وزیراعظم عمران خان کے حالیہ دورہ سعودی عرب کے بعد نئے اورمضبوط پاکستان کی نویدسنائی گئی مگرلاہور میںمنعقدہ سیاسی عشائیے اور آزاد گروپ کے قیام نے حکومتی صفوں میں پھر ارتعاش پیدا کردیا ہے۔ وزیراعظم کو اس بات کا مکمل احساس ہوچکا کہ مہنگائی کے طوفان کے سامنے بند باندھنے ‘پاور سیکٹر میں گردشی قرضے کو نکیل ڈالنے اورگڈگورننس کو فروغ دیئے بغیر ڈوبتی نیا پار لے جانا مشکل ہے۔ ان
مزید پڑھیے


آؤٹ آف دی باکس سلوشن

جمعرات 13 مئی 2021ء
سہیل اقبال بھٹی
2018میںکئی ا نقلابی تبدیلیوں کے دعوؤں کیساتھ خسارے سے دوچار سرکاری اداروں میں جامع اصلاحات کا اعلان کیا گیا تھا۔وزیراعظم عمران خان نے اس مقصد کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے ڈاکٹر عشرت حسین کو مشیربرائے ادارہ جاتی اصلاحات وکفایت شعاری تعینات کیا۔ کابینہ کمیٹی برائے ادارہ جاتی اصلاحات قائم کرتے ہوئے وزارتوں اور سرکاری اداروں میں اصلاحات کاعمل شروع کردیا گیا۔ ڈاکٹر عشرت حسین نے اعلیٰ سطح اجلاس کے شرکاء کو پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائن سے متعلق بریفنگ میں انکشاف کیاکہ 2010سے 2019 کے دوران پی آئی اے کو 405ارب روپے کے نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔نقصان کی بنیادی وجوہات
مزید پڑھیے








اہم خبریں