Common frontend top

سہیل دانش


سیاسی تاریخ کا سبق


ڈیرہ بگٹی کے دور دراز علاقے کے مضبوط حفاظتی حصار میں واقع وسیع و عریض رہائش گاہ کے ملاقاتی کمرے کی فرشی نشست کے دوران نواب اکبر بگٹی سے طویل انٹرویو کے وہ لمحات مجھے آج بھی یاد ہیں جب بگتی قبیلے کے نواب ہمارے دو ٹوک ‘تلخ و شیریں سوالات کے انتہائی غیر جذباتی اور سبک انداز میں جواب دے رہے تھے۔پاکستان سے اپنی محبت‘ نشیب و فراز سے بھر پور سیاسی کیریئر بلوچستان کی احساس محرومی اور پاکستان کے سیاسی حالات کے اتار چڑھائو اور چلنے والی تحریکوں ان کے متعلق مختلف حکمرانوں اور حکومتوں کے ردعمل اور
جمعه 25  اگست 2023ء مزید پڑھیے

ہماری کہانی سسپنس اور ناکامیوں سے عبارت ہے

جمعه 18  اگست 2023ء
سہیل دانش
میں نے انہیں اسلام آباد میں منعقدہ ایک سیمینار میں پہلی بار دیکھا اور سنا تھا۔وہم و گمان میں بھی نہیں تھا کہ محکم دلائل سے موضوع گفتگو کو ہر زاویہ نگاہ سے عقلی و فکری انداز سے بیان کرنے والا یہ شخص ایک دن ملک کے اس عہدہ جلیلہ پر فائز ہو سکتا ہے۔وہ ملکی صورتحال پر محض الفاظ کی تگڑم بازی سے اپنا نقطہ نظر پیش کرنے کی بجائے پختون لہجے میں صاف اور شستہ اردو میں کچھ باریک اور بنیادی نکات بیان کر رہے تھے۔تقریب کے بعد جیسے ہی موقع ملا میں نے اس خوش پوش جوان
مزید پڑھیے


یہاں کچھ بہتر ہونے والا نہیں!

جمعه 11  اگست 2023ء
سہیل دانش
شہباز شریف کی حکومت کا وقت تمام ہوا ۔جاتے جاتے قومی اسمبلی کے فلور پر ہمارے منتخب نمائندوں نے دھواں دھار تقریریں کیں ۔اس میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے چند دل کی باتیں بھی کہہ ڈالیں۔ سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی گفتگو بھی قابل غور تھی ۔یہ سب ارکان چند ماہ بعد جب الیکشن میںاگر ہوئے تو پھر عوامی جلسوں میں یہی وعدے اور دعوے کرتے نظر آئیں گے کہ پاکستان کے عوام نے اگر ان پر اعتماد کیا تو وہ اس قوم کی تقدیر بدل دیں گے۔لیکن یقین مانیں ایسے سب وعدے وہ پہلے
مزید پڑھیے


سب آزما لئے گئے کچھ نیا کریں

جمعرات 10  اگست 2023ء
سہیل دانش
میں سوچ رہا ہوں۔76ویں یوم آزادی پر ہم کہاں کھڑے ہیں۔ناامیدی کے سائے چاروں طرف پھیلے ہوئے ہیں۔جن لوگوں نے ہماری قیادت کی اور آنے والے دنوں میں جن کے کندھوں پر یہ ذمہ داریاں آئیں گی۔ان کا نہ کوئی ویژن ہے۔ نہ ان کے پاس کوئی پلان ہے نہ انہوں نے پولیٹیکل کلچر اور کریکٹر میں کوئی قابل تقلید مثالیں قائم کی ہیں، سب آزما لئے گئے۔ہمارے سیاسی نظام کا یہ دیوالیہ پن ہے کہ نہ جانے ہر دور میں غیر جمہوری بیساکھیوں کے بغیر اپنے اندر اتنی توانائی پیدا نہ کر سکا کہ اپنی جرات فراست اور دانائی
مزید پڑھیے


ہم حقائق تسلیم کرنے کو تیار نہیں

جمعه 04  اگست 2023ء
سہیل دانش
پاکستان میں اس وقت سیاست کا وجود دہل رہاہے۔ تحریک انصاف 9مئی کے قابل مذمت واقعات تلے آ کر چُور چُور ہوتی دکھائی دے رہی ہے ۔ پاکستانی سیاست کے تمام کردار جھوٹے پروپیگنڈے کی کشتی میں سوار ایک دوسرے پر بے رحمانہ تنقید کے تیر چلا رہے ہیں ،جھوٹ کو سچ اور سچ کو جھوٹ بنانے والے سیاست کے تمام کردار شش و پنج کے مرض میں مبتلا ہو چکے ہیں۔ سوشل میڈیا پرعمران خان کے حمایتی نئی نئی ٹیکنیک ایجاد کرنے کی مشق کر رہے ہیں ۔پی ٹی آئی کے چیئرمین نت نئی جدتوں کے ساتھ
مزید پڑھیے



ظلم کے خلاف ڈٹ جانے کا درس

جمعه 28 جولائی 2023ء
سہیل دانش
سید الشہدا حضرت امام حسینؓ کی حیات اور ذات والا صفات کے ان گنت پہلو اور رنگ ہیں، جن کا احاطہ مورخیں چودہ سو سال سے کر رہے ہیں لیکن حق تو یہ ہے کہ حق ادا نہیں ہو رہا۔آپ دس محرم کے دن کو ہی لے لیجیے، یہ دن آپ کی شہادت سے قبل مختلف حوالوں سے پہچانا جاتا تھا۔مثلاً اللہ تعالیٰ نے عرش‘ زمین‘ کرسی‘ سورج‘ چاند ستارے اور جنت دس محرم کو تخلیق کئے۔حضرت آدمؑ اور حضرت حوا نے بھی دس محرم کو آنکھ کھولی تھی۔دس محرم ہی وہ دن تھا ،جب اللہ تعالیٰ نے حضرت آدمؑ
مزید پڑھیے


اب بھی سنبھل جائیں!

بدھ 26 جولائی 2023ء
سہیل دانش
نوازشریف کو یہ احساس ضرور ہے کہ جب تک شطرنج کی بساط کے تمام مہرے ان کی منشا کے مطابق اپنی پوزیشنوں پر نہیں ہوں گے وہ لندن کے مورچے میں بیٹھ کر اپنی سیاسی جنگ لڑیں گے۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ نوازشریف کی سیاست اس وقت ضمانتوں اور یقین دہانیوں کے گرد گھوم رہی ہے لیکن یہ ماننا پڑے گا کہ انہوں نے لندن میں بیٹھ کر اپنی راہ کی بے شمار رکاوٹوں کو عبور کرلیا ہے۔ یہ الگ بات ہے کہ انہوں نے کافی فاصلے پر دیار غیر میں بیٹھ کر جو تیر چلائے اور وقت
مزید پڑھیے


یہ سب کیا ہوا؟

جمعه 21 جولائی 2023ء
سہیل دانش
عقل حیران ہے کہ اعلیٰ ترین عدالت میں کھینچا تانی کا فارمولا طوالت اختیار کرتا جا رہا ہے۔ خواجہ ناظم الدین کی برخاستگی کے بعد سے شہباز شریف کی تخت نشینی تک ایک وزیر اعظم کا استثنیٰ نہیں جو اسٹیبلشمنٹ کی مدد کے بغیر مسند اقتدار پر بیٹھا ہو یا پھر اسے مسند اقتدار سے الگ نہ کیا گیا ہو۔ سوال تو یہ بھی ہے کہ عمران خان کسی منصوبہ بندی‘ حکمت عملی اور سوجھ بوجھ کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں یا پھر وہ غلط سمت میں ایسے پر خطر راستے پر اپنی گاڑی کو لے آئے ہیں جہاں سے
مزید پڑھیے


صدقے جائیں ایسے نظام کے

جمعرات 20 جولائی 2023ء
سہیل دانش
صدقے جائیں ایسے نظام کے جس میں جتنے نگران وزیر اعظم مارکیٹ میں قسمت اور زور آزمائی کی کوشش کر رہے ہیں اتنے ہی وعدہ معاف گواہ ’’پسندیدہ اقبالی جرم‘‘ کا اعتراف کرنے کے لئے موجود ہیں۔صدقے جائیں ایسے نظام کے جس کے عدالتی نظام پر انگلیاں اٹھ رہی ہوں۔ حامد خان جیسا ممتاز وکیل یہ کہنے پر مجبور ہو کہ فیصلے کہیں اور ہوتے ہیں عدالتوں میں ان پر صرف مہر لگائی جاتی ہے۔’صدقے جائیں ایسے نظام کے‘جہاں پر ایک سابق وزیر اعظم 70سے زیادہ جلسوں میں یہ کہہ کر کہ اسے بیرونی طاقتوں نے اقتدار سے اتار
مزید پڑھیے


وہ آپکو ووٹ کیوں دیں؟

جمعه 07 جولائی 2023ء
سہیل دانش
میں یہاں سے وہاں تک ان محروم نادار اور مفلس لوگوں سے ملا۔کراچی کی ان بستیوں میں جہاں دکھوں کا ایک سمندر موجزن ہے۔ملتان‘ لاہور کی ان بستیوں میں جہاں جہاں مختلف زبان بولنے والوں کی خاموش اکثریت صرف سیاسی طور پر زندہ تصور کی جاتی ہے۔سماجی طور پر یہ مردہ بستیاں ہیں راولپنڈی سے پشاور تک ایسی آبادیاں ہیں جو سماجی اور معاشی طور پر سسک رہی ہیں صرف اس کا ووٹرز ہی ان کی پہچان ہیں۔کوئٹہ سے روجھان جمالی تک ایسے خاموش اور بے بس علاقے جن میں رہنے والے وقت کے ساتھ ساتھ آگے بڑھنے کے بجائے
مزید پڑھیے








اہم خبریں