BN

شیراز خان


سیلاب زدگان کی امداد اور جیب کْترے!!


وطن عزیز میں سیلاب نے جو بڑے پیمانے پر تباہی مچائی ہے اور غریب لوگوں کا جس طرح جانی و مالی جو نقصان ہوا ہے اس پر ہر درد دل رکھنے والے انسان کو رونا آتا ہے۔ سیلاب سے تباہی کے مناظر دیکھنے کے بعد اپنے ملک کا انفراسٹرکچر دیکھ کر اور بھی زیادہ دکھ ہوتا ہے کہ ہم ایک ایٹمی قوت ہیں جس کی اتنی خستہ حالت ہے کہ ہمارے پاس ان آفات سے نمٹنے کیلئے کچھ نہیں ہے۔ سیلاب کی تباہ کاریوں کے لئے بیرونی ممالک سے انسان دوست ملکوں،حکومتوں،سماجی تنظیموں اور مخیر حضرات کی جانب سے فراخدلانہ
منگل 13  ستمبر 2022ء مزید پڑھیے

’’ بلوچستان سے ملنے والا مراسلہ اور شہادتیں‘‘

هفته 06  اگست 2022ء
شیراز خان
ہیلی کاپٹر حادثے میں ملک کے محافظوں اور پاسبانِ وطن کی شہادتیں ہوئی ہیں جس سے ملک کے طول و عرض اور دنیا بھر میں مقیم پاکستانی غم سے نڈھال ہیں۔سانحہ لسبیلہ ہیلی کاپٹر میں شہداء میں کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل سرفراز علی،ڈی جی کوسٹ گارڈ میجر جنرل امجد حنیف،بریگیڈیئر محمد خالد۔میجر پائلٹ سعید احمد،میجر معاون پائلٹ طلحہ منان، اورنائیک مدثر فیاض ہمارے وہ ہیروز ہیں جو اپنی قومی و ملی ذمہ داریاں سر انجام دیتے ہوئے شہید ہوئے ہیں۔ شہید مرتے نہیں زندہ ہوتے ہیں ۔ انسانی جذبات و احساسات اپنی جگہ لیکن پاک فوج کے گوشت پوست
مزید پڑھیے


پاکستان کی مسلّح افواج کی قربانیاں

منگل 02  اگست 2022ء
شیراز خان
سیاسی نعرہ بازی یا نعرہ فروشی کے اس موجودہ دور میں اپنے محسنوں کی قربانیوں اور وطن کے لیے لہو دینیوالے وفا پیکروں کی خدمات کو فراموش نہیں کرنا چاہئے۔ سرحدوں کی حفاظت ہو یا دہشت گردوں کا اندرونی خلفشار ، سیلاب کی تباہ کاری سے قیامت صغریٰ برپا ہو یا زلزلوں کی آفت یا برف پوش پہاڑوں میں پھنسے ہوئے کوہ پیماؤں کو ایمرجنسی میں بچانے کا مشن ہمارے یہ جان نثار جان ہتھیلی پر رکھ کر اس مشن کی تکمیل میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑتے۔ میں جب اپنی مسلح افواج کے کردار پر نظر دوڑاتا ہوں تو
مزید پڑھیے


کیا کھویا کیا پایا!!

جمعه 15 جولائی 2022ء
شیراز خان
14 اگست 1947ء سے اب تک ہم غیر جانبداری, ایمان داری اور جراتمندی سے جائزہ لیں تو ہمارے ریکارڈ میں آ گئے بڑھنے اور عالمی برادری میں اپنا مقام بلند کرنے کا کوئی قابلِ فخر کام نظر نہیں آتا۔ جمہوریت مذاق بنکر رہ گئی ہے ۔ سیاست بدنام ہے تو معیشت میں ناکام اخلاقیات زوال پذیر ہے۔جمہوریت کے جذبے کے بْلبْلے سے ہماری ہوا نکل چکی ہے۔ قومی یکجہتی دور دور تک نظر نہیں آ رہی ہے یوں ہم ہماری بیلنس شیٹ میں نفح و نقصان کے گوشوارے میں کوئی بھی فائدے کی
مزید پڑھیے


ہندوستانی عزائم اور پاکستان

پیر 20 جون 2022ء
شیراز خان
بھارت سرکاری طور پر شان مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم میں گستاخیوں کی مذموم کوششوں کا مرتکب ہو رہا ہے اور پوری دنیا کے مسلمانوں کے جذبات واحساسات کو ٹیسٹ کررہا ہے وہاں اسلام کی بنیاد پر قائم ہونے والے اپنے پڑوسی ملک پاکستان اور اہل پاکستان کی بے بسی کا بھی فائدہ اٹھا رہا ہے ۔ بھارت مسلمانوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑ رہا ہے۔ مسلمانوں کو مذہب تبدیل کرنے اور جسمانی تشدد سمیت انکے گھر مسمار کررہا ہے جس کا ایک پورا تاریخی پس منظر ہے۔ لیکن اس کی تفصیلات میں جانے سے پہلے میں
مزید پڑھیے



پاکستان میں کیا ہونے والا ہے

منگل 14 جون 2022ء
شیراز خان
لندن سے پاکستان اور پھر کشمیر کی لائن آف کنٹرول تک کا سفر کرکے تقریباً تین ہفتوں کے بعد واپس برطانیہ پہنچا ہوں اسی لئے کالم لکھنے میں تاخیر ہوئی ہے ایک طرح کی افراتفری ہی رہی ہے۔ مملکت خداداد پاکستان کا کیا حال سْنائوں موجودہ حالات کے پیشِ نظر اس کے مستقبل کی کیا بات لکھوں حالات و واقعات کو دیکھ کر مشاہدات اور تجربات کی روشنی میں اپنے دوست احباب اور عوام الناس سے ملنے کے بعد جو کچھ لکھنے لگا ہوں اس پر میرا ضمیر سو فیصد مطمئن ہے اگرچہ میں ایک سال کے بعد پاکستان گیا
مزید پڑھیے


حقیقی پاکستان

هفته 30 اپریل 2022ء
شیراز خان
برصغیر کے مسلمانوں کی تاریخ اور جدوجہد کا نتیجہ تخلیق پاکستان تھا جس کے پیچھے برصغیر کے کروڑوں مسلمانوں کی قربانیاں, محبتیں اور دعائیں شامل تھیں۔ بالٓاخر اتنی قربانیوں اور دعائوں کے نتیجے میں اسلام کی حقیقی تعلیم کے پس منظر میں ایک نظریاتی اسلامی ریاست کا قیام ممکن ہوا ۔جس کا مطلب و مقصد توحید و رسالت کی عظمت بحال کرنا تھا۔ بدقسمتی سے چونکہ قیام پاکستان کے وقت جو فعال اور مقتدر قوتیں تھیں وہ اسلام کی حقیقی تعلیم سے ناواقف تھیں۔ نتیجتاً عامتہ المسلمین کے جذبات اور ایثار کے نتیجے میں پاکستان تو قائم
مزید پڑھیے


’’ سازش نہیں۔۔ تو پھر کیا ہوا‘‘

اتوار 24 اپریل 2022ء
شیراز خان
جب کوئی کسی کے معاملات میں مداخلت کرتا ہے تو پہلے اس کے بارے میں سوچ کر سیکم یا پلان بناتا ہے اور بعد میں اس پر عمل کرتا ہے پہلے سوچنا یا پلان بنانا اور پھر عمل کرنا مداخلت ہے لہذا سازش اور مداخلت بیک وقت لازم و ملزوم ہوتے ہیں۔ مجھے اپنے استاد محترم پروفیسر محمد رفیق بھٹی کا ایک شعر یاد آیا : میرے کھوجی کا اندازہ نہائت معتبر نکلا کْھرا چوری کا جاکے چوہدری صاحب کے گھر نکلا قومی سلامتی کمیٹی کے اس بیانیے سے تین سچائیاں سامنے آتی ہیں : 1۔عمران خان حکومت کو گرانے کے
مزید پڑھیے


"کرپٹ نظام سے آغاز انقلاب تک"

منگل 19 اپریل 2022ء
شیراز خان
پاکستان سے باہر رہ کر جب اپنے ملک کے مستقبل, اداروں اور جمہوریت, عدلیہ, سیاست,معیشت, عسکری اور سول لیڈرشپ کا دوسرے ملکوں سے موازنہ کریں تو مایوسی, ناامیدی اور تاریکی نظر آتی ہے۔ عمران خان فیکٹر کے پاکستان میں داخل ہونے کے بعد تو یہ حقیقت اور بھی اجاگر ہوگئی ہے۔ پاکستان کی موجودہ عدلیہ, مقننہ, عسکری لیڈرشپ, میڈیا اور کرپٹ ترین سسٹم کی موجودگی میں کسی کا احتساب نہیں ہوسکتا نہ ہی پارلیمانی نظام اور جمہوریت مضبوط ہوسکتی ہے۔ افسوس ناک پہلو یہ بھی ہے کہ نظریہ ضرورت اور انتقام کے تحت فیصلے ہورہے ہیں
مزید پڑھیے


’’ واپسی کا سفر پرانے پاکستان میں‘‘

پیر 11 اپریل 2022ء
شیراز خان
جب یہ کالم شائع ہوگا تو پاکستان کے اقتدار پر پرانے جانے پہچانے بلکہ آزمودہ چہرے دوبارہ براجمان ہو چکے ہونگے میری طرح کے تارکین وطن جن کی اکثریت پچھلے تین چار سال سے کچھ زیادہ ہی پاکستان کے بارے میں پْر امید تھی اسکی بڑی وجہ ایک ہی شخص تھا پھر اس کے ساتھ جو کچھ ہوا سب کے سامنے ہے۔ پاکستان میں عوامی وزیر اعظم عمران خان جدید پاکستان کے ایک معمار کی حیثیت سے تاریخ کے صفحات میں اپنا نام اور مقام رقم کرواچکا ہے۔ علی سردار جعفری نے آج سے 50 سال پہلے ایک طویل نظم
مزید پڑھیے








اہم خبریں