BN

ظہور دھریجہ


جس کھیت سے دہقاں کو میسر نہ ہو روزی


علامہ اقبال نے کہا تھا کہ ’’ جس کھیت سے دہقاں کو میسر نہ ہو روزی ‘ اس کھیت کے ہر خوشۂ گندم کو جلا دو ‘‘ ، آٹے کا بحران پورے ملک میں موجود ہے مگر زرعی ریجن سرائیکی وسیب میں اس کی موجودگی حیران کن ہے ۔ آٹے کے بحران کی وجوہات کیا ہیں ، اس سلسلے میں سب سے بڑی وجہ حکومت کی نا اہلی ہے ۔ حکومت نے 1400 روپے من کے حساب سے گندم خرید کر لی ہے‘ مگر فلور ملوں کو سپلائی ابھی تک شروع نہیں ہو سکی۔ اس مرتبہ حکومت کو گندم خرید
جمعه 26 جون 2020ء

دوبارہ کہتا ہوں ’’ عمرا ن خان کو چلنے دیں ‘‘

جمعرات 25 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
گزشتہ روز شائع ہونے والے میرے کالم ’’ عمران خان کو چلنے دیں ‘‘ کے جواب میں سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی نے فون کیا اور تفصیل سے بات کرتے ہوئے اپنے موقف کے بارے میں بتایا کہ دوسرے سلیکٹڈ کے بارے میں میرا اشارہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی طرف نہیں ۔ میں نے ایک جنرل بات کی کہ سسٹم کو چلنے دیا جائے ۔ نہ تو میری شاہ محمود قریشی سے ذاتی دشمنی ہے اور نہ ہی میری عمران خان سے کوئی ہمدردی پیدا ہوئی ہے ۔ ن لیگ چھوڑنے کی ایک وجہ یہ بھی تھی کہ میاں
مزید پڑھیے


’’ عمران خان کو چلنے دیں ‘‘

بدھ 24 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
سینئر سیاستدان اور مسلم لیگ ن کے رہنما مخدوم جاوید ہاشمی نے ملتان پریس کلب میں بھرپور پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’ ایک سلیکٹڈ کے بعد دوسرے سلیکٹڈ کو لانے کی تیاری ہو رہی ہے ۔ اسمبلی کو مدت پوری کرنے دی جائے ، ہاتھ جوڑ کر کہتا ہوں کہ عمران خان کو چلنے دیا جائے ۔‘‘ دوسرے سلیکٹڈ کے بارے میں مخدوم جاوید ہاشمی کا اشارہ مخدوم شاہ محمود قریشی کی طرف ہے ۔ یہ بھی مکافاتِ عمل ہے کہ مخدوم جاوید ہاشمی نے جب تحریک انصاف چھوڑی تو وہ وہ عمران خان کے بد
مزید پڑھیے


اختر مینگل کی حکومت سے علیحدگی

منگل 23 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
بلوچستان نیشنل پارٹی ( مینگل ) کے سربراہ سردار اختر جان مینگل نے تحریک انصاف حکومت سے اتحاد ختم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے وعدے پورے نہیں کئے ، بلوچستان کو برابر کا حصہ دینا ہوگا ، انہوں نے کہا کہ بجٹ میں بلوچستان کو نظر انداز کیا گیا ہے ، ہم حکومت سے حق تلفی کا حساب لیں گے ۔ دوسری طرف حکومت کی طرف سے سردار اختر مینگل کو منانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔یہ بات بھی قابلِ غور ہے کہ سردار اختر مینگل بظاہر بلوچستان کی محرومی کی بات کر رہے
مزید پڑھیے


طارق عزیز ملتان میں

هفته 20 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
معروف کمپیئر طارق عزیز ایک شخص نہیں ایک عہد کا نام ہے ، پی ٹی وی پر کم و بیش 40 سال راج کیا ۔ 1964 ء میں ایوب خان نے پی ٹی وی کا افتتاح کیا ، طارق عزیز پہلے اینکر تھے ، پہلے وقتوں میں صرف پی ٹی وی ہوتا تھا ، آج تو پرائیوٹ چینلوں کی بہار آئی ہوئی ہے اور ٹی وی اینکروں میں بڑے بڑے نام ہیں ، بھاری بھاری تنخواہیں بھی ہیں ، مگر طارق عزیز جیسی خوبی ، قابلیت اور صلاحیت کسی میں نظر نہیں آتی ۔ موجودہ اینکروں کو تہذیب، ثقافت اور
مزید پڑھیے



صوبائی بجٹ :پرانے منصوبے نیا وعدہ!

جمعه 19 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
پنجاب کے 22 کھرب 40 ارب روپے کے بجٹ میں پیش کر دیا گیا ہے ۔ البتہ اس بار یہ ضرور ہوا ہے کہ وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت اپنی تقریر میں جنوبی پنجاب کیلئے فنڈز کے اعلان کے ساتھ یہ بھی کہتے سنے گئے کہ مختص رقم وسیب پر ہی خرچ ہوگی ۔ یہ طفلِ تسلی در اصل میاں شہباز شریف کے دور سے شروع ہوئی کہ وسیب کی محرومی و پسماندگی کے چرچے ہر جگہ ہونے لگے تو ایک ترکیب نکالی گئی کہ بجٹ کے موقع پر اعلان کر دیا جاتا کہ35 فیصد بجٹ جنوبی پنجاب پر خرچ
مزید پڑھیے


صلائے آم

منگل 16 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
وسیب میں آم کا سیزن شروع ہو گیا ہے ۔ مگر کورونا کی وجہ سے ’’ صلائے آم ‘‘ کے حوالے سے تقریبات کا اہتمام نہیں ہو رہا مگر تحقیق سے یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ کورونا جیسی بیماریوں کے مقابلے کیلئے آم کا استعمال انسان کے مدافعاتی نظام کو طاقت ور بناتا ہے ۔وسیب میں عام کی ایک قسم کا نام ’’ ثمر بہشت ‘‘ ہے ، اس لئے اسے بہشتی پھل کا نام بھی دیا جاتا ہے ۔ وسیب میں آم کیلئے بہت سی روایات ہیں ۔ ایک کہانی یہ ہے کہ صدیوں پہلے ایک بادشاہ
مزید پڑھیے


مَوتُ العَالِم ۔۔۔۔۔ مَوتُ العَالَم

پیر 15 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
آستانہ سہروردیہ شاہ آباد شریف کے سجادہ نشین اور 92 نیوز چینل کے معروف اسکالر صاحبزادہ سید محمد فاروق القادری گزشتہ (13جون 2020ء ) روز انتقال کر گئے ۔ نماز جنازہ پیر آف بھرچونڈی شریف میاں عبدالمنان صاحب نے پڑھائی ۔ بعد میں آپ کو اپنے آبائی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا ۔ مرحوم بہت بڑے عالم تھے ۔ 40کے قریب کتابیں تصنیف کیں ۔ آپ کی کتاب ’’ اصل مسئلہ معاشی ہے ‘‘ کو نہ صرف پاکستان بلکہ دیگر ممالک میں بھی بہت مقبولیت حاصل ہوئی اور اس کتاب کے کئی ایڈیشن شائع ہوئے ۔ آپ کا
مزید پڑھیے


وفاقی بجٹ میں محروم طبقہ نظر انداز

اتوار 14 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
72 کھرب 95 ارب روپے کا وفاقی بجٹ صرف الفاظ کا گورکھ دھندہ ہے ، اس میں سرائیکی وسیب کا کوئی منصوبہ شامل نہیں ، نہ ہی غریبوں کی تنخواہ میں اضافہ ہوا ہے ۔ بجٹ میں بعض علاقوں کو پسماندہ قرار دیتے ہوئے ان کیلئے اربوں روپے رکھے گئے مگر سرائیکی خطہ جس کی پسماندگی کا ذکر عمران خان اپنی اکثر تقریروں میں کرتے تھے کیلئے ایک روپیہ بھی نہیں رکھا گیا ۔ بجٹ میں بلوچستان کی پسماندگی کے خاتمے کیلئے 10 ارب ، سندھ کیلئے 29 ارب ، کے پی کے میں ضم فاٹا اضلاع کیلئے 56 ارب
مزید پڑھیے


محبت کی زبان مشترک ہے

هفته 13 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
چرند ، پرند ، انسان سب کی اپنی اپنی زبانیں ہیں ، محبت کی زبان مشترکہ ہے ۔ کہتے ہیں کہ ہنر مند ، کاریگر اور فنکار نہیں بولتا ، اس کا فن بولتا ہے ۔ اس کے باوجود ہنر مندوں کاریگروں اور فنکاروں کی اپنی ایک زبان ہے ۔ سرائیکی زبان کے عظیم ماہر لسانیات پروفیسر شوکت مغل نے زبان پر کام کیا اور ان ہنر مندوں کی زبان کو بھی محفوظ کیا جو پیشے ہی معدوم ہو گئے ۔ پروفیسر شوکت مغل کا لسانیات پر تحقیقی کام ابھی جاری تھا کہ بے رحم موت نے مہلت نہ دی
مزید پڑھیے