ظہور دھریجہ


2جون ۔نواب مظفر خان کا یوم شہادت


2 جون 1818ء کو نواب مظفر خان نے رنجیت سنگھ کی سکھا فوج سے جنگ کرتے ہوئے جام شہادت نوش کیا ٗسکھا فوج نے قلعہ ملتان پر قبضہ کر لیا ٗ نواب کی آل میں سے دو بیٹے اور چند سپاہی جو زندہ بچے قیدی کر لئے گئے اور انہیں لاہور بھیج دیا گیا۔ سقوط ملتان کے بعد سکھا فوج نے لوٹ مار شروع کر دی ٗ سرکاری خزانہ لوٹنے کے بعد سکھا فوج گھروں میں داخل ہوئی ٗ وہاں بربریت کی انتہاء ہوئی ٗ وہاں لوٹ مار کے علاوہ انسانوں کو تہ تیغ کیا گیا ٗ بچوں کو سانگوں
منگل 02 جون 2020ء

وسیب اور اعلیٰ تعلیم

پیر 01 جون 2020ء
ظہور دھریجہ
گورنر چوہدری محمد سرور کا تعلق ایک لحاظ سے وسیب سے بھی ہے کہ ملتان میں ان کی پراپرٹی ہے اور وسیب کے بہت سے لوگوں سے ان کے ذاتی تعلقات ہیں ۔ وسیب کے بہت سے لوگ بتاتے ہیں کہ ہم انگلینڈ میں چوہدری محمد سرور کی مہمان نوازی سے لطف اندوز ہوتے رہے ہیں ۔ چوہدری محمد سرور کا اول آخر حوالہ پاکستان اور پاکستان سے محبت ہے ۔اسی بناء پر میں وسیب کے مسائل کے حوالے سے گزارشات پیش کرنا چاہتا ہوں اور گزارشات کا تعلق تعلیم کے شعبے، خصوصاً ہائیر ایجوکیشن سے ہے کہ وسیب میں
مزید پڑھیے


ظلم کے خلاف مزاحمت کا استعارہ

اتوار 31 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
مشاہیر اسلام میں سید احمد شہید ایک بہت بڑا نام ہے ، وہ بہادر اور غیر مند مسلمان تھے ، اسلام اور مسلمانوں کے خلاف کوئی بات برداشت نہ کرتے تھے ۔ آپ رائے بریلی میں 1786ء میں پیدا ہوئے۔ سترہ برس کی عمر میں دہلی گئے اور شاہ عبدالعزیز کی خدمت میں حاضر ہوئے ۔شاہ عبدالقادر سے آپ نے فارسی اور عربی کی کتابیں پڑھیں ۔ 1810ء میں نواب امیر خان کی رفاقت میں شامل ہو گئے۔سات برس تک نواب کے ساتھ عسکری زندگی بسر کی ۔ جب نواب نے انگریزوں سے صلح کی ، آپ کو یہ
مزید پڑھیے


مسند تدریس کی آبرو

هفته 30 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
وسیب کی مردم خیز دھرتی میں بڑے بڑے علماء اور صلحاء پیدا ہوئے۔ ان میں ایک نام عاشق رسولؐ حضرت مولانا مفتی عبدالواحد کا ہے۔ وہ نہایت سادہ مزاج، عاجزی و انکساری کے پیکر اور علم کے سمندر تھے۔ آپ کے ہزاروں شاگرد پورے ملک میں علمی خدمات سر انجام دے رہے ہیں۔ مفتی عبدالواحد جام پور (خان پور) میں میاں محمد کے ہاں 1910ء میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم وہیں سے حاصل کی۔ خان پور کے نواحی قصبہ مکھن بیلہ میں سراج الفقہا کا پورے ہندوستان میں شہرہ تھا۔ آپ نے اُن کی شاگردی اختیار فرمائی اور سراج الفقہا
مزید پڑھیے


عوام دوست سابق ایم پی اے کا قتل

جمعه 29 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
راجن پور سے سابق رکن صوبائی اسمبلی سردار عاطف خان مزاری کو اُن کے اپنے حقیقی بیٹے نے قتل کر دیا ہے۔ نہ صرف ضلع راجن پور بلکہ پورا وسیب سوگوار ہے۔ یہ ٹھیک ہے کہ عاطف خان مزاری کا تعلق جاگیردار گھرانے سے تھا مگر وہ عوامی آدمی تھے، عوام دوست تھے، غریب پرور تھے اور غریبوں کے ساتھ ہی ان کا اٹھنا بیٹھنا تھا۔ یہی وجہ ہے کہ قتل کا سنتے ہی ہزاروں افراد اُن کی رہائش گاہ روجھان مزاری پہنچے ہیں اور اُن کا راجن پور کی تاریخ میں سب سے بڑا جنازہ ہوا ہے۔ سردار عاطف
مزید پڑھیے



غریبوں کی عید

جمعرات 28 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
کورونا وائرس کے عذاب اور سانحہ کراچی کے غم میں یوم عید گزر گیا ، غریب طبقات کو عید کی خوشیاں نصیب نہ ہو سکیں ۔ کورونا لاک ڈاؤن کے بہت سے متاثرین کو امداد نہ مل سکی۔ صوبائی حکومت کی طرف سے فنکاروں کو عیدسے پہلے خصوصی پیکیج کا اعلان ہوا تھا ، بد قسمتی سے عمل درآمد نہ ہو سکا ۔ عید کے موقع پر حادثات اور لڑائی جھگڑوں میں بہت سی اموات نے اہل وطن کو رنجیدہ کیا ۔پسماندہ اور محروم طبقات کی عید بھی نہ ہوسکی ۔ محرومی حق تلفیوں اور بد عنوانیوں کے نتیجے میں
مزید پڑھیے


کورونا عذاب اور فضائی حادثہ

اتوار 24 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
میرے کالم کا موضوع وسیب کے مسائل کے حوالے سے ہے کہ کورونا عذاب کے بعد وسیب کے مسائل میں اضافہ ہو چکا ہے۔ دوسری طرف سانحہ کراچی نے پوری قوم کو نڈھال کرکے رکھ دیا ہے۔ عید کی خوشیاں غارت ہو کر رہ گئی ہیں۔ ہم سب کی دعا ہے کہ اللہ پاک کورونا اور اس طرح کے حادثات سے محفوظ رکھے۔ وسیب کے مسائل کے حوالے سے عرض کروں گا کہ وسائل کی کمی نہیں ہے صرف توجہ کی ضرورت ہے۔ زراعت کی زرخیزی میں سرائیکی وسیب اپنی مثال آپ ہے ، اس وقت ملک کی مجموعی زرعی
مزید پڑھیے


نواب صادق خان عباسی کی برسی

هفته 23 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
زندہ قومیں اپنے مشاہیر کے تہوار جوش و خروش سے مناتی ہیں ۔ 24مئی ، محسن پاکستان ، نواب آف بہاولپور صادق محمد خان عباسی کا یوم وفات ہے ۔ یہ حقیقت ہے کہ سابق ریاست بہاولپور کی قیام پاکستان اور استحکام پاکستان کیلئے خدمات ناقابل فراموش ہیں ۔پاکستان کیلئے خدمات کا تذکرہ کریں تو پتہ چلتا ہے کہ قیام پاکستان سے پہلے نواب آف بہاولپور نے ریاست کی طرف سے ایک ڈاک ٹکٹ جاری کیا جس پرایک طرف مملکت خداداد بہاولپور اور دوسری طرف پاکستان کا جھنڈا تھا ،پاکستان قائم ہو تو قائداعظم ریاست بہاولپور کی شاہی
مزید پڑھیے


بلوچستان میں دہشت گردی

جمعه 22 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
گزشتہ روز بلوچستان میں دہشت گردی کے دو مختلف واقعات میں 7 سکیورٹی اہلکار شہید ہو گئے ، بلوچستان میں دہشت گردی کا یہ پہلا واقعہ نہیں ، ایک عرصے سے پاکستان کے دشمن دہشت گردی کر رہے ہیں ۔ ان کے تانے بانے افغانستان سے ہوتے ہوئے بھارت سے جا ملتے ہیں ۔ ان حالات میں ملک کی سرحدوں کو مضبوط بنانے کی ضرورت ہے ۔ ایف سی کے ساتھ ساتھ بلوچستان حکومت کو بھی اپنا کردار ادا کرنا چاہئے ۔ ایک کورونا کا عذاب ہے ، دوسرا اس طرح کے واقعات نے پوری قوم کو مغموم کر کے
مزید پڑھیے


ثقافتی پالیسی کا احیا کیوں ضروری ہے ؟

بدھ 20 مئی 2020ء
ظہور دھریجہ
کسی بھی ملک کیلئے ثقافتی پالیسی کا احیا ضروری ہے کہ ثقافت زندگی کے تمام معاملات کا احاطہ کرتی ہے ۔ بد قسمتی سے قیام پاکستان کے بعد ثقافتی پالیسی نہیں بن سکی ۔ 1959ء میں فیض احمد فیض آرٹس کونسل کے سیکرٹری مقرر ہوئے تو انہوں نے کچھ کام کیا بعد میں کچھ کام ذوالفقار علی بھٹو کے دور میں ہوا ، اس کے بعد سے خاموشی ہے ۔ قومی ثقافتی پالیسی کا احیاء ہونا چاہئے، یہ کام وفاق کی طرف سے ہونا ہے۔ 18 ویں ترمیم کے بعد صوبوں کو صوبائی خود مختاری حاصل ہوئی ہے ، صوبوں
مزید پڑھیے