BN

عارف نظامی



نوشتہ دیوار پڑھنے سے انکار؟


رمضان ویسے توسکون کا مہینہ ہوتا ہے لیکن اس بار سیاسی ارتعاش بڑھتا ہی جارہا ہے ۔چندروز قبل جب میاں نوازشریف نے اپنی پارٹی کے عمائدین کو ہدایت کی کہ فعال ہو جائیں توبلاول بھٹو نے بھی اتوار کو افطارپارٹی کا علان کر دیا جس میں لیگی قیادت کو بھی مدعو کر لیا۔ افطار میں صاحبزادی مریم نواز کی شرکت کے فیصلے سے تحریک انصاف کی صفوں میں ہاہا کارمچ گئی۔وزیراعظم عمران خان سے لے کر معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عا شق اعوان تک پوری پارٹی پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) پر طعن کے تیر چلا نے لگی
هفته 25 مئی 2019ء

سٹنٹ بازی نہیں میرٹ!

بدھ 22 مئی 2019ء
عا رف نظا می
دیکھنے ہم بھی گئے تھے پر تماشہ نہ ہوا،اس بات کابہت ڈھنڈورا پیٹا گیا کہ کر اچی کے قریب سمندر میں تیل اور گیس کا اتنا بڑ اذخیر ہ نکلنے والا ہے جوپاکستان کی آئند ہ پچا س سال کی انرجی کی ضروریا ت سے بھی زیا دہ ہو گا ۔ وزیر اعظم عمران خان نے یہ خوشخبری مارچ کے چوتھے ہفتے میں ایک انٹرویو میں سنائی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی آئندہ چند ہفتوں میں تیل اور گیس کے ذخائر کی دریافت کی صورت میں لاٹری نکلنے والی ہے اوراگر ایسا ہوگیا تو پاکستان کے حالات
مزید پڑھیے


اقتصادی بحران اور اپوزیشن؟

پیر 20 مئی 2019ء
عا رف نظا می
پاکستان کی تاریخ میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی بلند ترین اڑان اور اس پر مستزاد سٹاک مارکیٹ کی تاریخی گراوٹ اس تلخ حقیقت کی عکاسی کرتی ہے کہ حالا ت دگرگوں ہیں ۔حکومت کی مشکلات میں بھی مزیداضافہ ہو رہا ہے۔ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) کے درمیان بڑھتا ہو ا تال میل بالخصوص بلاول بھٹو کا مریم نواز سمیت سیاسی قیادت کو افطار پر مدعو کرنا، اپوزیشن کو احتجاجی تحریک پر متحد کر سکتا ہے؟۔بلاول بھٹو تو پہلے ہی فرنٹ فٹ پر کھیل رہے ہیں اور ان کے والد آصف زرداری نیب کے تابڑ توڑ کیسوں، پیشیوں
مزید پڑھیے


سیاسی درجہ حرارت۔۔۔

هفته 18 مئی 2019ء
عا رف نظا می
13 مئی کو قومی اسمبلی میں’’معجزہ ‘‘ ہو گیا ، شور شرابے ،ہلے گلے اور نعرے بازی کے بغیر ہی قبائلی علاقوں کو قومی اسمبلی اور خیبر پختونخوا اسمبلی میں بہتر نمائندگی دینے کابل متفقہ طور پر منظور ہو گیا اور 282 ارکان نے اسے منظور کیا،اس بل کے منظور ہونے کے بعد قبائلی اضلاع میں قومی اسمبلی کی 12 اور صوبائی کی 24 نشستیں ہوگئی ہیں۔الیکشن کمیشن 6 مئی کو قبائلی علاقوں کی 16 صوبائی نشستوں کے لئے انتخابات کا شیڈول جاری کر چکا ہے، جس کے مطابق انتخابات 2 جولائی کو ہوں گے۔بل کی منظوری کے موقع پر
مزید پڑھیے


بڑھتا اقتصادی بحران؟

پیر 13 مئی 2019ء
عا رف نظا می
اس میں ذرہ برابر شک نہیں ہے کہ وطن عزیز اقتصادی طور پر قلاش ہو چکا ہے اورہماری سیاسی قیادت جو عام انتخابات سے قبل یہ کہتی تھی کہ خود کشی کر لیں گے لیکن قرضے نہیں لیں گے ،آئی ایم ایف کے آگے طوعاًوکرہاً دو زانو بیٹھی ہے۔پہلے نو ماہ میں پی ٹی آئی کی حکومت نے جس ملک نے بھی مال دیا بخوشی لے لیا۔وزیر اعظم عمران خان آج اپنی کابینہ کو آئی ایم ایف کے سات ارب ڈالر سے زائد کے پیکج کے حوالے سے بریف کر رہے ہیں۔ یقینا وہ یہ بتائیں گے کہ پچھلی حکومت
مزید پڑھیے




مزید حماقتیں اورنوشتہ دیوار

هفته 11 مئی 2019ء
عا رف نظا می
اردو کے مشہو ر مزاح نگارشفیق الرحمن نے افسانوں پر مبنی مجموعہ ’حماقتیں ‘تحریر کیا، اس کے تھوڑے عرصے بعد ’مزید حماقتیں ‘ بھی رقم کر دیا،اسی طرح موجودہ حکومت بھی حماقتیں اور مزید حماقتیں کئے جا رہی ہے۔وزیر اعظم عمران خان کا تازہ واکھیان ہے کہ اپوزیشن کی نسبت حکومت کرنا بہت آسان ہے لیکن اس وقت تو الٹی گنگا بہہ رہی ہے ۔نو ماہ گزرنے کے باوجود خان صاحب سے موثر حکومت ہو نہیں پا رہی ۔ زبان پھسل جانا تو کسی حد تک قابل معافی ہے لیکن حکومتی فیصلے پھسلنے کی بہت کم گنجائش ہوتی ہے۔اکانومی کو
مزید پڑھیے


ٹیکس کلچر بد لناپڑ ے گا!

بدھ 08 مئی 2019ء
عا رف نظا می
سٹیٹ بینک کے نئے گورنر ڈاکٹر رضا با قر کی تقر ری پر اپو زیشن انتہا ئی نا خوش ہے ۔ ڈاکٹر باقر آ ئی ایم ایف میں اعلیٰ عہد ید ار تھے اور اپنی نوکری چھو ڑ کر پاکستان آ ئے ہیں ۔پیپلز پا رٹی کے مطابق آ ئی ایم ایف ایک نئی ایسٹ انڈ یا کمپنی کی شکل ہے اور اس نے اپنے بند ے پاکستان میں لگا دیئے ہیں اور ایسا ہی ردعمل مسلم لیگ (ن ) کی تر جما ن مر یم اورنگزیب نے دیا ہے ۔ سٹیٹ بینک کے نئے گورنر معر وف وکیل جن
مزید پڑھیے


نئے حالات میں ٹوٹ پھوٹ؟

پیر 06 مئی 2019ء
عا رف نظا می
سپریم کورٹ سے میاں نواز شریف کی ضمانت میں توسیع کی درخواست مسترد ہونے اور برادر خورد میاں شہباز شریف کے عملی طور پر’’ عبوری جلاوطنی‘‘ میں جانے کے بعد سابق حکمران جماعت مسلم لیگ (ن)کے لیے بڑا سیاسی بحران کھڑا ہو گیا ہے۔اگرچہ شاہد خاقان عباسی صاحب کا دعویٰ ہے کہ مسلم لیگ ن کے صدر 10 روز میں وطن واپس لوٹ آئیں گے لیکن اس کی بہت کم امید ہے اور فی الحال ڈیل اور ڈھیل کی تمام قیاس آرائیاں دم توڑ گئی ہیں۔ادھر وزیراعظم عمران خان نے پھر واضح کر دیا ہے کہ کسی کو این آراو
مزید پڑھیے


بد گمانیاں۔۔۔

هفته 04 مئی 2019ء
عا رف نظا می
افغانستان ایسا ملک ہے جو مسلسل چالیس برس سے عملی طور پر حالت جنگ میں ہے اور گزشتہ سترہ برس سے تو امریکہ وہاں اپنی تاریخ کی طویل ترین جنگ لڑ رہا ہے۔ گزشتہ چار برس میں افغانستان کے معاملات کے حوالے سے پاکستان کا کلیدی کردار رہا ہے۔ دسمبر 1979 ء میں جب سوویت یونین کی فوج نے افغانستان پر یلغار کی تو پاکستان راتوں رات فرنٹ لائن سٹیٹ بن گیا۔ اس وقت فوجی آمر جنرل ضیاء الحق بلا شرکت غیرے پاکستان کے حکمران تھے۔ جنرل ضیاء الحق نے اپنے اقتدار کو دوام بخشنے کے لیے اس جنگ سے
مزید پڑھیے


بالآخر بیل آؤٹ پیکیج؟

بدھ 01 مئی 2019ء
عا رف نظا می
بالآخر پاکستان کو اقتصادی گرداب سے نکالنے کیلئے آئی ایم ایف کے مجوزہ تین سالہ بیل آؤٹ پیکیج پر اسلام آباد میں باقاعدہ مذاکرات شروع ہو گئے ہیں،عالمی مالیاتی ادارے کا سٹاف مشن پاکستانی اقتصادیات کی گھمبیر صورتحال کے حوالے سے مختلف اصلاحات پر بات چیت کرے گا۔مذاکرات سے قبل اسی ماہ آئی ایم ایف کے سامنے پاکستان کی اکانومی کی تشویشناک صورتحال رکھی گئی جس کے مطابق بجٹ کا خسارہ رواں مالی سال میں تقریباً8 فیصد ہو گا اور جی ڈی پی کے حوالے سے قرضوں کا تناسب آئندہ پانچ برس میں 86 فیصد تک پہنچنے کا امکان ہے۔اس
مزید پڑھیے