BN

عارف نظامی

جمہوریت کے نام پر ہی جمہوریت کمزور

بدھ 27 جون 2018ء
تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان داد کے مستحق ہیں کہ کم از کم وہ لگی لپٹی رکھے بغیر صاف گوئی سے کام لیتے ہیں ۔انھوں نے پی ٹی آئی کے کھلاڑیوں کے اس اعتراض کہ نظریاتی کارکنوں کو جنہوں نے پارٹی کی نشوونما کے لیے جدوجہد کی اور قربانیاں دیں ٹکٹوں سے کیونکر محروم رکھا گیا؟ ۔ عمران خان برملا طور پرفرماتے ہیں کہ الیکٹ ایبلز کو ٹکٹ دینا نئے پاکستان کی تشکیل کے لیے ناگزیر ہے ۔ دوسری طرف ان کا یہ بھی اصرار ہے کہ ٹکٹ میرٹ پر دیئے جارہے ہیں لیکن میرٹ سے غالبا ًان کی
مزید پڑھیے


مونچھ نیچے کون کرے؟

پیر 25 جون 2018ء
جناب شیخ کا قدم یوں بھی ہے اور یوں بھی ؟۔چودھری نثار علی خان کومیڈیا پر تڑیاں لگانے کے بجائے یہ فیصلہ کر لینا چاہیے کہ آخر وہ چاہتے کیا ہیں ؟۔ میڈیا کے رپورٹر خواتین وحضرات بڑے شوق اور تجسس سے ان کی پریس کانفرنسوں میں جاتے ہیں کہ چکری کے چودھری حسب وعدہ میاں برادران سے اپنے اختلافات پر سے بالآخر پردہ اٹھا دیں گے لیکن ہر بار چودھری نثار انھیں چکر ہی دے دیتے ہیں۔ اب تک صرف یہ بات واضح ہے کہ چودھری نثار ٹیکسلا اور چکری سے چار نشستوں پر بطور آزاد امیدوار الیکشن لڑیں
مزید پڑھیے


افراتفری

هفته 23 جون 2018ء
تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی فرمائش پر پنجاب، سند ھ اور بلوچستان کی بیورو کریسی میں وسیع پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ حیران کن نہیں ہے۔ اس وقت تو لگتا ہے کہ پی ٹی آئی کا فرمائشی پروگرام پورا کیا جا رہا ہے۔ تبادلوں کے اس جھکڑ میں پنجاب میں 34 سیکرٹریز، 9کمشنرز، 35 ڈپٹی کمشنر، 10آر پی اوز، 4 سی پی اوز، سمیت 113 ایس ایس پیز تبدیل ہو گئے ہیں جبکہ سندھ کے14سیکرٹریز، 6کمشنر، 33 ڈپٹی کمشنر، 2 اے آئی جیز، 14 ڈی آئی جیزاور بلوچستان میں 3سیکرٹریز، 6کمشنر، 33 ڈپٹی کمشنر تبدیل کیے گئے ہیں۔
مزید پڑھیے


محض الزام تراشی یا ہوم ورک بھی!

بدھ 20 جون 2018ء
اس کے باوجود کہ وفاق اور پنجاب میں عمران خان کی رضا،منشا اور ڈھب کی نگران حکومتیں آئی ہیں،تحریک انصاف ان کی کارکردگی سے ناخوش ہے حالانکہ نگران حکومت ان کے آگے کورنش بجا لا رہی ہے جس انداز سے عمران خان کے دست راست اور فنانسر زلفی بخاری کو ای سی ایل پر نام ہونے کے باوجود ہنگامی طور پر خصوصی اجازت لیکر عمرہ پر ساتھ لے جایا گیا وہ اپنی مثال آپ ہے۔اس کا مطلب تو یہ ہوا کہ میٹھا میٹھا ہپ اور کڑوا کڑوا تھو کے مترادف قانون کا اطلاق دوسرے لوگوں پر ہوتا ہے ان پر
مزید پڑھیے


دگرگوں اقتصادی صورتحال ۔۔۔۔۔۔۔عید مبارک

هفته 16 جون 2018ء

مسلم لیگ (ن)کی حکومت جس میں میاں نوازشریف چار برس تک براہ راست اورآخر ی برس بالواسطہ حکمران رہے ،اپنی مدت پوری کر کے گھر چلی گئی لیکن پیچھے مسائل کا انبار چھوڑ گئی ہے ۔ سابق حکومت کا بزعم خود سب سے بڑا طرہ امتیاز یہ تھا کہ ہم نے کئی دہائیوں پرانا پاور شارٹ فال کا مسئلہ حل کر دیا ہے ۔اس ضمن میں برادر خورد میاں شہبازشریف خاص طور پر فعال تھے۔ اپنی سبکدوشی سے چند روز قبل مجھے ان کے ہمراہ حویلی بہادر شاہ جانے کا موقع ملا جہاں وفاقی حکومت کا ایل این جی سے
مزید پڑھیے


غریبوں کے زخموں پر بھی مرہم

بدھ 13 جون 2018ء
سپریم کورٹ کی طرف سے شریف فیملی کے خلاف ریفرنس پر فیصلہ ایک ماہ میں کرنے کے احکامات پر ایک بحرانی سی کیفیت پیدا ہو گئی ہے ۔ میاںنوازشریف کے وکیل خواجہ حارث جو گزشتہ 9ماہ سے عدالت میں پیش ہو رہے تھے‘ انھوں نے نوازشریف کی مزید وکالت کرنے سے معذرت کر لی ہے اور وکالت نامہ واپس لینے کا عندیہ دیا ہے ۔ اتوار کو چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس اعجاز الاحسن پر مشتمل دو رکنی بینچ نے سماعت کی تھی جس میں دلچسپ مکالمہ بازی ہوئی۔بینچ نے خواجہ حارث کی چھ ہفتوں میں
مزید پڑھیے


ڈاکٹر حسن عسکری

پیر 11 جون 2018ء
جمعہ کو پنجاب کے نگران وزیراعلیٰ ڈاکٹر حسن عسکری رضوی نے حلف اٹھایا ۔گورنر ملک رفیق رجوانہ کی خواہش تھی کہ میں گورنر ہاؤس میں ہونے والی اس تقریب میں ضرور شریک ہوں ۔دوسرا میری بھی خواہش تھی کہ اپنے استاد محترم کی سب سے بڑے صوبے کے اعلیٰ ترین سیاسی منصب پر فائز ہو نے کی حلف برداری میںحاضر ہوں۔ ڈاکٹر حسن عسکری سے میرا تعلق بہت پرانا ہے، جب وہ گورنمنٹ کالج لاہور میں تدریس کے فرائض سرانجام دیتے تھے تو میں ان کے شاگردوں میں شامل تھا ۔جب وہ پنجاب یونیورسٹی کے پولیٹیکل سائنس ڈیپارٹمنٹ میں لیکچر
مزید پڑھیے


کتاب سے پہلے ’تہلکہ‘

هفته 09 جون 2018ء
عمران خان کی مطلقہ ریحام خان کی کتاب ابھی مارکیٹ میں آئی بھی نہیں کہ اس نے تہلکہ مچادیا ہے ۔تحریک انصاف کے ترجمان فواد چودھری سمیت پرائم ٹائم پر ٹی وی چینلز پر آنے والے پارٹی کے رہنما بس ریحام خان کی کتاب کی دہائی دے رہے ہیں ،کتاب میں سنسنی خیز انکشافات کے حوالے سے طرح طرح کے الزامات لگائے جا رہے ہیں جن کالب لباب یہ ہے کہ یہ مسلم لیگ(ن) کی سازش ہے۔ یہ دور کی کوڑی بھی لائی گئی ہے کہ حمزہ شہبا ز شریف جو خود عائشہ احد جو دعویٰ کرتی ہیں کہ وہ
مزید پڑھیے


جمہوریت کی دہائی

بدھ 06 جون 2018ء
پاکستان کے پہلے فوجی آمرجنرل ایوب خان نے بڑے دھوم دھام سےDecade of Development’ اصلاحات کی دہائی‘ کا جشن منایا جس پر اس وقت کے بی ڈی ممبروں اور پابندیوں میں جکڑے میڈیا نے خوب ڈونگرے برسائے کہ کمال ہو گیا ‘ دودھ کی نہریں بہنے لگی ہیں ۔لیکن ایوب خان کی صرف مغربی پاکستان میں اقتصادی ترقی سے مشرقی پاکستان میں احساس محرومی پیدا ہواجس نے وطن عزیز کو دولخت کرنے کی بنیاد رکھ دی ۔بعدازاں ہم نے جنر ل ضیاالحق کا گیارہ سالہ اقتدار دیکھا ۔اس دہائی میں اپنے اقتدار کو طول دینے کے لیے اسلام کا نام
مزید پڑھیے


الیکشن التوا سنگین غلطی

پیر 04 جون 2018ء
مسلم لیگ (ن) کی حکومت اپنے پانچ سال پورے کر کے رخصت ہو چکی ہے اور نگران وزیراعظم جسٹس (ر)ناصر الملک حلف اٹھا چکے ہیں ۔سندھ میں پیپلزپارٹی ،خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف اور بلوچستان میں حال ہی میں جنم لینے والی B.A.Pکی حکومتیں بھی رخصت ہو چکی ہیں ۔ خیال یہی تھا کہ حکومتوں کی مدت پوری ہونے تک وزرائے اعلیٰ کا بھی انتخاب ہو جائے گا لیکن سندھ کے سوا دیگر تینوں صوبوں میں تادم تحریر نگران وزرائے اعلیٰ پر اتفاق نہیں ہو سکا ۔ ایسا لگ رہا ہے کہ کچھ نادیدہ قوتیں اور سیاسی جماعتیں عام انتخابات
مزید پڑھیے