BN

عبدالرفع رسول



سری نگرمیں رمضان کی رونقیں


رمضان المبارک بے شمار فضیلتوں ،رحمتوں ،عظمتوں اور برکتوں کا مہینہ ہے جس میں ایک نیکی کیلئے بے حدوحساب ثواب مل جاتاہے۔اس مقدس مہینے میں ہم جس اخلاقی ا و روحانی تربیت کے سانچے میں ڈھل جاتے ہیں وہ ہمیں اخلاق وکردارکی معراج تک پہنچاسکتاہے۔گویا رب تعالیٰ نے ماہ رمضان کی صورت میں اپنے بندوں کو ایک عظیم تحفہ عنایت فرمایا ہے۔ ہم چاہیں تواس میں صدق دلی سے اپنے گناہوں سے توبہ کرلیں اور اپنے اعمال کو نیک کریں تاکہ اپنے رب سے یہ پکاعہدکرکے کہ اب ہم تیری نافرمانی نہیں کریںگے، تواس مہینے میں اپنے گناہ معاف کرواسکتے
جمعه 24 مئی 2019ء

بھدرواہ ،غلامی اورگائے

پیر 20 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
تین عشرے قبل جب عظیم مقاصدکے حصول کے لئے جہادکشمیرکا آغازہواتوقابض بھارت کی طرف سے ملت اسلامیہ کشمیرپرقہرناک مظالم کاسلسلہ شروع ہوالیکن عظیم جدوجہدکے طفیل اسلامیان مقبوضہ کشمیرکوکچھ اہم بندشوں اورقدغنوں سے نجات مل گئی جن میں سے ایک یہ کہ آج بلاروک ٹوک وہ گائے ذبح کرتے ہیںجبکہ کئی مقامات پرانہوں نے ان شرین چشموں کے پانیوں پرکلی طورکنٹرول پالیاہے جومندروں کے زیر تسلط اپنی شفافیت کھوچکے تھے۔ 1990ء سے قبل مقبوضہ کشمیرمیں کیفیت یہ تھی کہ چوری چھپے گائے کوذبح کیاجاتاتھاکہ کسی کشمیری ہندو’’کشمیری پنڈتوں ‘‘کوکانوں کان خبرنہ لگ سکے۔ہمارے گائوں میں چارہزارنفوس پرمشتمل آبادی ہے جن
مزید پڑھیے


بھارت میں مسلمانوں کومعدوم کرنے کی سازشیں

هفته 18 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
’’ہندوستانی مسلمانوںکا صفایا کیسے کیا جائے‘‘ یہ ہفت روزہ دلت وائس بنگلور21مئی1999ء کے اداریے کا عنوان تھا جو اس کے ایڈیٹر وی ٹی راج شیکھرنے لکھا تھا ۔دلتوں سمیت محروم و مقہور ہندستانیوں کی طاقت ور آواز شمار کیا جانے والا یہ ہفت روزہ میگزین 2011ء میں بند ہو چکا ہے مگر وی ٹی راج شیکھر ابھی بقید حیات ہیں ۔بیس برس قبل دلت صحافی وی ٹی راج شیکھرلکھتے ہیںکہ’’مسلمانوں نے اندلس موجودہ( اسپین)میں712عیسوی سے1492ء تک سات سو اسی برس حکمرانی کی ۔اس کے باوجود آج اسپین میں مسلمان نہیں ہیں ۔تاہم اسپینی زندگی کے ہر پہلو پر
مزید پڑھیے


مودی بھارت کا گورباچوف

بدھ 15 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
معروف امریکی جریدے ٹائم میگزین نے اپنے مئی کے تازہ ترین شمارے کے سرورق پر نریندر مودی کو جگہ دی ہے اور ان کی تصویر کے ساتھ(India's Divider in Chief)یعنی انڈیا کو منقسم کرنے والا سربراہ لکھا ہے۔یہ شمارہ ابھی بازار میں دستیاب نہیں ہے اور 20مئی2019ء کو جاری کیا جائے گا۔خیال رہے کہ انڈیا میں فی الحال پارلیمانی انتخابات جاری ہیں اور آخری مرحلے کی ووٹنگ 19مئی کو ہوگی جبکہ 23مئی کو انتخابات کے نتائج کا اعلان ہوگا۔ٹائم میگزین نے اپنے سرورق کو ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا: 'ٹائمز کا نیا بین الاقوامی سرورق: کیا دنیا کی سب سے بڑی
مزید پڑھیے


’’ایک فالج زدہ فورم‘‘

هفته 11 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
وسائل سے مالا مال عالم اسلام جس کے پاس تیل اور معدنیات کے اہم ذخائر موجود ہیں جس کے پاس دولت اور ثروت کی کوئی کمی نہیں ہے جس کے پاس با صلاحیت، ہنر مند اورتعلیم یافتہ لوگ موجود ہیں جس کے پاس دنیا کی کل آبادی کاسب سے بڑا حصہ موجود ہے سب سے استفادہ کیا جاتا تا ہم ستم ظریفی یہ ہے کہ عالم اسلام کا مشترکہ فورم او آئی سی جو جان بوجھ کرفالج زدہ بنا دیا گیا ہے اور اسکے حواس خمسہ مفلوج کر دئیے گئے۔جس کے باعث یہ فورم عالم اسلام کے وسائل ،دولت و
مزید پڑھیے




غزہ پراسرائیلی بمباری

بدھ 08 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
گذشتہ چنددنوں میں غزہ پراسرائیلی جنگی طیاروں کی بمباری سے تادم تحریر35فلسطینی شہیدجبکہ سینکڑوں زخمی ہو گئے ۔فلسطین اورکشمیر کے تنازعات میں کافی مماثلت ہے دونوںعلاقے جبر و استبداد اور انسانی حقوق کی پامالیوں کا شکار ہیں۔ دونوںکی نسل کشی ہورہی ہے کشمیرمیں بھارت جبکہ فلسطین میں اسرائیل نسل کشی کررہاہے ۔اغیاردونوں کی زمینوں پربالجبراورفوجی قوت کی بنیادپرقابض ہیں اسرائیل ایک ناجائزاورجبری ریاست ہے جو فلسطینیوں کی زمین ہتھیا کر ایک سازش کے تحت وجود میں لائی گئی ہے اورجوطاقتیں اسرائیل کی سرپرستی کر رہی ہیںوہی بھارت کوبھی اپنے سایہ عطوفیت میں لیکر مقبوضہ ریاست جموںو کشمیر پرجبری طوراورفوجی طاقت
مزید پڑھیے


مولانامسعوداظہر۔۔۔کیا اقوام متحدہ کاکوئی معیارہے؟

پیر 06 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
72برسوں سے تنازع کشمیرچلاآرہاہے اس کے حل کے حوالے سے اقوام متحدہ میں کئی قراردادیں موجودہیں لیکن شومئی قسمت یہ عالمی ادارہ آج تک اپنی قرارداوں پہ عمل درآمد نہیں کر سکا جس کے باعث کشمیرمقتل بناہواہے ۔شرم آنی چاہئے اس عالمی فورم کوکہ جو کشمیریوں کے سفاک قاتل نریندرمودی کے بجائے مولانامسعوداظہرکوعالمی دہشت گرد قرار دیتاہے۔ کشمیرمیں ایک لاکھ سے زائدمسلمانوں کو تہہ وتیغ کرنے اور تاحدنظرقبرستان آبادکرانے والے بھارت کے خلاف یہ عالمی فورم کوئی اقدام اٹھارہااورنہ کشمیری مسلمانوں کوحق خودارادیت دلانے کے لئے سامنے آکراپنی ذمہ داریاں پوری کررہاہے ۔ کشمیرہی کی طرح اقوامِ متحدہ فلسطینی مسلمانوں
مزید پڑھیے


کشمیری نوجوانوں کا عزم

جمعه 03 مئی 2019ء
عبدالرفع رسول
جب جذبہ آزادی سینے میں گدازبن کراترتاہے ،توحرمان زدہ انسانوںکے جذبات برانگیختہ ہوجاتے ہیں ۔ان میںشعور بیدارہوجاتا ہے اوروسعتِ فکر و خیال کے ساتھ ساتھ ان میں افکاروخیالات کی پاکیزگی عطاہوتی ہے ۔ جس قوم کے نوجوان سینہ سپر ہوکر ظالم اور جابر کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہوں دنیا کی کوئی طاقت اسے زیر نہیں کرسکتی۔’’حوصلہ ہے تو ہر اک راہ گزر روشن ہے‘‘۔ حضرت علامہ نے کیاخوب فرمایا ؎ لاالہ گوئی بگوازروئے جاں تاز اندام توآیدبوئے جاں ترجمہ!اے بیٹے جب تولاالہ الا اللہ کہتاہے توصرف زبان سے نہیںبلکہ دل کی گہرائیوںسے کہواورخودی یاضمیرکی طرف سے کہوتاکہ تیرے وجودسے
مزید پڑھیے


بیٹے کے جنازے سے ماں کاخطاب

پیر 29 اپریل 2019ء
عبدالرفع رسول
26اپریل جمعرات کو مقبوضہ کشمیرکے ضلع اسلام آبادکے قصبہ بجبہاڑہ میں قابض بھارتی فوج کے ساتھ ہوئے ایک خونریزمعرکے میںدوکشمیری مجاہدین جام شہادت نوش کرگئے جن میں ایک کانام ڈاکٹربرہان تھا۔ڈاکٹربرہان کا نمازجنازہ اداکرنے کے لئے ہزاروں لوگ امڈآئے اس موقع پرشہیدکی ساٹھ سالہ والدہ نے شرکائے جنازہ سے خطاب کرتے ہوئے فرمایاکہ میں نے اپنے لخت جگرکوجہادکشمیرمیں قربان ہونے کے لئے پالاتھا،آج جب میرے بیٹے کاجنازہ ہمارے روبروہے میں اسکی شہادت پراپنے رب کاشکراداکرتی ہوں کہ جس نے ہمیں اس انعام سے نوازاہے۔ میںآج بہت زیادہ فخرمحسوس کرتی ہوں کہ میںنے جس طرح اپنے بیٹے کی تربیت کی اس
مزید پڑھیے


جلیانوالہ باغ کے سوسال اورکشمیرکے سانحات

اتوار 28 اپریل 2019ء
عبدالرفع رسول
آج سے ایک سوسال قبل برصغیر کی جدوجہد آزادی کے دوران برطانوی سامراج کی بربریت ،درندگی کے وحشیانہ مظالم کی داستان میںسانحہ جلیانوالہ باغ ایک ناقابل فرامو ش باب ہے۔ انگریزشاہی نے براہ ِراست تسلط وغلبہ کے دوران برصغیر میں جن گھنائو نے جرائم کاارتکاب کیا،آج ہندوستان کشمیری مسلمانوںپراسے کہیں زیادہ مظالم ڈھارہاہے جس کی گواہی ایک لاکھ سے زائدکشمیری شہداء کالہو دے رہاہے۔ ہندوافواج نے کشمیری مسلمانوںکوکشمیرکے چپے چپے پرگولیوں کانشانہ بناکرایک نہیں بلکہ بے شمارجلیانوالہ باغ ایسے سانحے عمل میں لائے۔اس میں کوئی دورائے نہیں کہ جلیانوالہ باغ کاواقعہ انگریز سامراجی بربریت کی خونی یادگار ہے، مگر1990ء
مزید پڑھیے