BN

عبداللہ طارق سہیل

ملفوظات عمرانی کی سنہری تعلیمات

بدھ 18 جولائی 2018ء
’’ملفوظات عمرانی‘‘ کی ایک سنہری تعلیم یوں ہے کہ انہیں ایسا پھینٹا لگائو کہ عمر بھر یاد رکھیں ’’انہیں‘‘ سے مراد مخالفین ہیں۔ مریدین گاہے بہ گاہے اس سنہری تعلیم پر عمل کرتے رہتے ہیں لیکن گزشتہ روز کراچی میں ایک گدھا بھی اس عملدرآمد کی لپیٹ میں آ گیا۔ مریدین نے اس گدھے کو پکڑ کر اس پر نواز شریف کا نام لکھا اور پھر پھینٹا لگانا شروع کر دیا۔ ڈنڈوں سے اتنا مارا کہ اس کا خون بہہ نکلا۔ آنکھ زخمی ہو گئی مریدین نے اس بے زبان کی دونوں ٹانگیں توڑ دیں۔ قریب تھا کہ وہ ملک
مزید پڑھیے


قصر سلطانی میں بسیرے کی پیشکش

منگل 17 جولائی 2018ء
مجلس عمل کے رہنمائوں نے پنڈی کے جلسے میں کہا ہے کہ جو سیاستدان 70 سال سے حکومت کرتے آ رہے ہیں‘ انہوں نے عوام کے مسائل حل نہیں کئے‘ انہیں حکومت کرنے کا کوئی حق نہیں۔ سچ کہا جی! لیکن یہ کون سے سیاستدان ہیں جو ستر سال سے حکومت کرتے آ رہے ہیں‘ اس کی وضاحت ہو جاتی تو اچھا تھا۔ اس لیے کہ مختصر سی تاریخ پاکستان میں ایسے ستر برس تو کبھی آئے ہی نہیں جن میں سیاستدانوں نے حکومت کی ہو۔ پہلے دوسرے سال تو ایسے تھے جن میں ملک پر قائداعظم اور لیاقت علی خان
مزید پڑھیے


غیر مسلم گدھے

پیر 16 جولائی 2018ء
بلوچ رہنما لشکر رئیسانی نے مطالبہ کیا ہے کہ سانحہ مستونگ پر سچائی کمشن بنایا جائے جو ضیاء الحق دور سے لے کر آج تک کی پالیسیوں کا جائزہ لے۔ سانحہ مستونگ پر ہر شہری دکھی ہے لیکن ان سب کا دکھ ان لوگوں کے دکھ جیسا کبھی نہیں ہو سکتا جن کے پیارے اس قتل عام میں مارے گئے۔ دوسو کے لگ بھگ تو شہید ہوئے اور اتنے ہی زخمی جن میں سے کئی تو باقی عمر کے لیے معذور ہو گئے۔ لشکری رئیسانی کا بھائی سراج رئیسانی بھی شہدا میں شامل ہے جس کے انتخابی جلسے پر بم حملہ
مزید پڑھیے


زرداری جی کے پاس ہے ہر تالے کی چابی

جمعه 13 جولائی 2018ء
کئی دنوں سے ہر روز ایسا ہو رہا ہے کہ راتوں رات مسلم لیگ کے بینر اور پینا فلیکس وغیرہ غائب ہو جاتے ہیں۔ کس برمودا ٹرائنگل میں چلے جاتے ہیں‘ کچھ پتہ نہیں گزشتہ روز سابق وزیر اعظم اور لیگ کے رہنما شاہد خاقان عباسی اس پر بول اٹھے۔ کہا پتہ نہیں، ہمارے بینر اور فلیکس وغیرہ کیوں اتارے جا رہے ہیں، کون اتار رہا ہے۔ تحریک انصاف کے بینر اور فلیکس چونکہ ماحول دوست اور حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق ہیں وہ بدستور لگے رہتے ہیں۔ لیگ کے بینرز ’’عوام‘‘ کے لیے مضر صحت ہیں چنانچہ حفظان صحت
مزید پڑھیے


خود لکھی تقدیر

جمعرات 12 جولائی 2018ء
پشاور دھماکہ پھر ایک بڑا سانحہ ہے‘ سخت افسوسناک اور دوگونہ تشویش کا باعث بھی۔ ایک تو یہ کہ دہشت گرد ابھی ختم نہیں ہوئے۔ جیسے کے تیسے طاقتور ہیں بس لگتا ہے کہ ریموٹ کنٹرول سے کنٹرول ہوتے ہیں‘ اب وقفہ کرنا ہے، اب پھر شروع ہو جانا ہے۔ دوسرا کہ یہ دھماکہ کہیں انتخابات ملتوی کرانے کے منصوبے کا حصہ تو نہیں۔ یہ بات بہت سے لوگ پوچھ رہے ہیں۔ یہ غلط فہمی تو خیر کبھی باخبر لوگوں کو رہی ہی نہیں کہ دہشت گردی ختم ہو گئی ہے، کچھ فسانے بنائے جاتے ہیں کچھ سنائے جاتے ہیں‘
مزید پڑھیے


زرداری صاحب اور ولی حضرات

بدھ 11 جولائی 2018ء
مسلم لیگ ن کی انتخابی مہم پر پابندی لگنے والی ہے اور کیا پتہ، یہ سطریں چھپتے چھپتے لگ بھی چکی ہو۔ وجہ اس یقین کی یہ ہے کہ اس کا مطالبہ خان صاحب نے کیا ہے اور پچھلے کئی برسوں کا ریکارڈ بالعموم، سال گزشتہ کا بالخصوص اور چند ماہ کا بہت ہی بالخصوص یہ بتلاتا ہے کہ خان صاحب کا کوئی مطالبہ نامنظور نہیں ہوتا۔ باب الحوائج میں ان کی مقبولیت بے مثال ہے، ادھر مطالبہ دائر فرماتے ہیں ادھر منظور فرما لیا جاتا ہے۔ سو پابندی تو لگ کر رہے گی۔ خان صاحب کا کہنا ہے کہ مسلم
مزید پڑھیے


زرداری کی آزمائش۔ ایک فرمائش

منگل 10 جولائی 2018ء

ہر طرف ان خبروں کی دھوم ہے کہ زرداری کا گھیرا پھر تنگ ہو رہا ہے۔ معروف کاروباری شخصیت حسین لوائی اور دیگر زرنوازوں کی گرفتاری کا حوالہ دیا جا رہا ہے۔ ایک ٹی وی پر کہا جا رہا تھا ‘ حسین لوائی فر فر بولے گا۔ راز کھولے گا یہ تو پہلے بھی سنا تھا جب ڈاکٹر عاصم کو پکڑا تھا۔ سال بھر ٹی وی والے خوشخبریاں سناتے رہے کہ بڑے بڑے راز کھول دیے ہیں‘ سینکڑوں خزانوں کا پتہ بتا دیا ہے اب کوئی نہیں بچے گا۔ قومی خزانے میں کھربوں آنے والے ہیں۔ پھر پتہ نہیں کیا
مزید پڑھیے


اصحاب الجیپ کا ا صل ہدف

پیر 09 جولائی 2018ء
نوازشریف اس لحاظ سے تاریخی رہنما بن گئے ہیں کہ جتنے تاریخی فیصلے ان کے خلاف آئے، کسی اور کے خلاف نہیں آئے۔ قریب دو عشرے پہلے پرویز مشرف نے بھی ایک بڑا تاریخی فیصلہ ان کے خلاف دیا تھا۔ نوازشریف نے ایک طیارہ ہائی جیک کرلیا تھا، بطور وزیراعظم، مشرف نے انہیں لگ بھگ عمر قید کی سزا سنائی۔ اس فیصلے میں بھی انصاف کے تقاضے پوری طرح پورے کئے گئے تھے اورقانون کی بالادستی کو یقینی بنایا گیا تھا۔ قانون اور انصاف چند حلقوں نے اس منصفانہ فیصلے کا تب بھی بھرپور خیر مقدم کیا تھا۔ البتہ سنا
مزید پڑھیے


جنوبی پنجاب کی ٹیڑھی کھیر

جمعه 06 جولائی 2018ء
پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری انتخابی دورے پر ہیں سندھ میں تو ہر جگہ ان کے استقبال اور جلسوں نے بے نظیر شہید بلکہ بھٹو کی یاد تازہ کر دی ہے۔2013ء کے الیکشن میں پیپلز پارٹی سندھ میں اتنے بڑے بڑے جلسے نہیں کر سکی تھی ان حالیہ جلسوں میں بعض تو بے مثال تھے عمران خان کراچی کے دورے پر ہیں اور ان کے استقبالی جلوس اور جلسے دیکھ کر ع دشت کو دیکھ کر گھر یاد آیا کی منظر نگاری سمجھ میں آ گئی۔ بعض مقامات پر تو ان کا استقبال ایسا ہوا
مزید پڑھیے


لہجے کی چہک کیا ہوئی صاحب!

جمعرات 05 جولائی 2018ء
پیپلز پارٹی کے رہنما آصف زرداری نے اطلاع دی ہے کہ پنجاب سے اس بار زیادہ تر امیدوار ’’آزاد‘‘ ہی جیتیں گے۔ کیا آزاد امیدواروں کی مقبولیت اتنی زیادہ بڑھ گئی کہ وہ جوق در جوق کامیاب ہوں گے؟ کوئی تبدیلی تو آنی ہے۔ زرداری صاحب گفتگو میں مخصوص اسلوب کے مالک بلکہ بانی بھی ہیں۔ شاید وہ کہنا چاہتے ہوں گے کہ اس بار زیادہ تر آزاد امیدواروں کو کامیاب کروایا جائے گا۔ جس انٹرویو میں زرداری صاحب نے یہ اطلاع دی اس میں ان کی مایوسی ’’بین السطور‘‘ جھلک رہی تھی۔ مایوسی کے معاملے میں زرداری صاحب اپنے
مزید پڑھیے