BN

عدنان عادل


تما ش بینی کب تک؟


سیاست کے بکھیڑوں سے جان چھڑوائیں تو ہم قومی تعمیر کے معاملات پر بات چیت کریں‘ ملک کو درپیش چیلنجوں کے بارے میں سوچیںاور انکے حل پر گفتگو کریں کہ ہمیں بحیثیت قوم کس طرح آگے بڑھنا ہے‘ ہماری ترجیحات کیا ہونی چاہئیں‘ طریقہ کار کیا ہونا چاہیے۔ ماضی میں ملک کو صرف حکومت میں شامل لوگوںکی کرپشن سے ہی نقصان نہیں پہنچا بلکہ غلط ترجیحات نے بھی شدید بحران پیدا کیے۔ پاکستان اسوقت جن معاشی ‘ سماجی مسائل کا شکار ہے وہ راتوں رات پیدا نہیں ہوئے۔ دہائیوں کی غفلت‘ غلط ترجیحات اور پا لیسیوں کے باعث ہم اس مقام
بدھ 23  ستمبر 2020ء

عُمان کی عملیت پسندی

اتوار 20  ستمبر 2020ء
عدنان عادل
مسلمانوں کا ایک فرقہ خوارج یا خارجی کے نام سے جانا جاتا ہے۔ایک عرب ملک ایسا ہے جہاں اس فرقہ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی اکثریت ہے۔ یہ سینتالیس لاکھ آبادی کا ملک عمان ہے جہاں معتدل قسم کے خارجی مسلک سے تعلق رکھنے والے عربوں کی اکثریت ہے۔ انہیںعبادی بھی کہا جاتا ہے۔ عمان ہمارے ہمسایہ میں واقع ہے کیونکہ بحیرۂ عرب کے مشرق میں پاکستا ن واقع ہے اور مغرب میں عمان،سمندر کے اس حصہ کو بحیرۂ عمان بھی کہتے ہیں۔ ہمارے ساحلی شہرگوادرسے عمان کے دارلحکومت مسقط کی بندرگاہ تقریباً چار سو کلومیٹر کے فاصلہ پرہے۔
مزید پڑھیے


سنگین جرائم کی جڑیں

بدھ 16  ستمبر 2020ء
عدنان عادل
معاملہ مجرموں کو سخت سزا دینے کا نہیں بلکہ پولیس ’ قانونی نظام اور مجموعی سیاسی‘معاشرتی کلچرکی کمزوری کا ہے جن سے جرائم پیشہ افراد کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے۔ مجرم تقویت پاتے ہیں‘ دیدہ دلیر ہوجاتے ہیں۔ جب سے لاہور سیالکوٹ موٹر وے پرخاتون کے ساتھ گھناؤناجرم ہوا ہے ہر طرف سے یہ مطالبہ بلند کیا جارہا ہے کہ مجرموں کو سرِ عام پھانسی دیکر سخت ترین سزا دی جائے تاکہ وہ دوسروں کے لیے عبرت بنیں۔ اس دل دہلادینے والے ‘ سخت دکھی کردینے والے واقعہ پر ایسا ردّعمل فطری بات ہے۔ تاہم یہ بات بھی مدّ نظر رہے
مزید پڑھیے


بحرین‘ اسرائیل دوستی

اتوار 13  ستمبر 2020ء
عدنان عادل
عرب دنیا میںفلسطینی مزید تنہا اور بے یار و مددگار ہوگئے ہیں۔ متحدہ عرب امارات کے بعد بحرین نے بھی گزشتہ جمعہ کے روز صیہونی ریاست اسرائیل کو تسلیم کرکے اس سے سفارتی تعلقات قائم کرنے کا باقاعدہ اعلان کردیا۔ بحرین اور اسرائیل کے درمیان انیس سو نوے کی دہائی سے خفیہ تعلقات قائم تھے ۔ گزشتہ چند برسوں میں ان میں خاصی گرمجوشی آگئی تھی ۔ اب انہیں باقاعدہ رسمی شکل دے گئی ہے۔اردن‘ مصر‘ متحدہ عرب امارات کے بعد بحرین چوتھا عرب ملک بن گیاہے۔ جس نے اسرائیل کے ساتھ ناطہ جوڑ ا ہے۔سولہ لاکھ آبادی پر مشتمل
مزید پڑھیے


چوتھا صنعتی انقلاب

بدھ 09  ستمبر 2020ء
عدنان عادل
دنیا سائنس اور ٹیکنالوجی میں ترقی کے سفر پر بگٹٹ دوڑ رہی ہے۔کئی ملکوں میں کمپیوٹر اور ڈجیٹل انقلاب کے بعد مصنوعی ذہانت‘ روبوٹس اور مائیکرو الیکٹرانکس پر مبنی چوتھے صنعتی انقلاب کازبردست آغاز ہوچکا ہے۔اس کے برعکس ہم پاکستان میں ابھی تک اپنی پُوری آبادی کو بجلی تک مہیّا نہیں کرسکے جس سے ترقی یافتہ دنیا ایک سو سال سے پہلے فیض یاب ہوچکی تھی۔ہم قبائلی عہد کے تعصبات اور رسم و رواج میں جکڑے ہوئے ایسے مہمل کاموں میں مشغول ہیں جنکا نتیجہ پسماندگی اور غربت کے سوا کچھ نہیں۔دنیا جدید ترین ٹیکنالوجی کی مدد سے ہر سال
مزید پڑھیے



روس‘ چین کا اتحاد

اتوار 06  ستمبر 2020ء
عدنان عادل
امریکہ کے ہاتھ سے دنیا اِسطرح نکل رہی ہے جسطرح مٹھی سے ریت۔ کورونا وبا کے بعد عالمی سیاست میں اہم تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں۔ امریکہ اپنی کم ہوتی ہوئی معاشی اور عسکری اہمیت سے پریشان ہوکر دو اُبھرتی ہوئی بڑی طاقتوں چین اور رُوس کے خلاف بیک وقت کئی محاذوں پر کام کررہا ہے۔اس نے پہلے چین کے خلاف ہانگ کانگ میں ہنگامے کروائے جن پر چین نے کامیابی سے قابو پالیا۔ اب چین کے خلاف تائیوان اور جنوبی بحیرہ چین میں امریکی سرگرمیاں‘ اشتعال انگیزیاں بڑھتی جارہی ہیں۔ دوسری طرف‘ روس کے گرد گھیرا تنگ کرنے کے لیے
مزید پڑھیے


کراچی کا ڈُوبنا

بدھ 02  ستمبر 2020ء
عدنان عادل
کراچی ملک کا ایک یتیم اور لاوارث شہر ہے۔گزشتہ ہفتہ چند دنوں کی تیز بارش سے شہرمیںجوبربادی ہوئی ٹیلی ویژن چینل صبح شام دکھاتے رہے۔ سوشل میڈیا پر بھی لوگ اپنی حالت ِزار کی ویڈیوز نشر کرتے رہے۔ یہ اس شہر کا حال ہے جو وفاقی حکومت کی آمدن کا تقریباً نصف مہیا کرتا ہے اور سندھ حکومت کے محصولات کا نوّے فیصدلیکن بارش کی صورت میں نکاسئی آب کے انتظام سے محروم ہے۔ کراچی کے محنت کش عوام کماتے ہیں جس پر جاگیردار‘ وڈیر ے عیش کررہے ہیں لیکن شہر کے باشندوں کو بنیادی سہولیات تک میسر نہیں۔ نہ
مزید پڑھیے


کربلا کا سفر

اتوار 30  اگست 2020ء
عدنان عادل
نواسۂ رسولؐ ‘امام عالی مقام حضرت حسین علیہ السلام نے مدینہ چھوڑ کر کربلا کی جانب جو سفر کیا اسکا مقصد نہ تو یزید کا تختہ ُالٹنا تھا نہ اسکی حکومت سے جنگ کرنا تھا بلکہ اما م حسینؑ کسی صورت یزید کی حکومت کی اخلاقی‘ سیاسی تائید نہیں کرنا چاہتے تھے اور کسی ایسی جگہ جا کر مقیم ہونا چاہتے تھے جہاں شام کی حکومت انہیں یزید کی بیعت کے لیے مجبور نہ کرسکے۔آئیے کربلاکے واقعہ کو امام ِعالی مقام ؑکے مختلف تواریخ میں درج اُن کے الفاظ سے ہی سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں۔ رجب 61 ہجری میںجب حاکمِ
مزید پڑھیے


چھوٹے صوبوں کا مقدمہ

بدھ 26  اگست 2020ء
عدنان عادل
موجودہ پارلیمانی‘ جمہوری نظام میں عوام کے مسائل کم ہونے کی بجائے بڑھ گئے ہیں۔حکومت کی عملداری کمزور ہوچکی ہے۔ کوئی حکومتی ادارہ اپنا کا م ٹھیک طریقہ سے انجام نہیں دے رہا۔ لاقانونیت‘بدانتظامی اورکرپشن کا دور دورہ ہے۔ ملک میں گورننس کا بریک ڈاؤن اس حد تک ہوگیا ہے کہ کراچی میں گندے نالے صاف کرانے کے خاطر بھی وفاقی اداروں اور فوج کی نگرانی درکار ہے۔جس خرابی پر نظر ڈالیںاس کے پیچھے خراب گورننس کارفرما نظر آتی ہے۔بڑا چیلنج یہ ہے کہ اس صورتحال سے باہرکیسے نکلا جائے۔ ایک نقطہ نظر ہے کہ ضلعی اور تحصیل کی سطح
مزید پڑھیے


امارات کا بڑھتا ہوا کردار

اتوار 23  اگست 2020ء
عدنان عادل
ایک کروڑ آبادی پر مشتمل اور سوا چار سو ارب ڈالرمجموعی دولت کا حامل ملک متحدہ عرب امارات مشرق وسطیٰ کی ایک تیزی سے اُبھرتی ہوئی طاقت ہے جسکا علاقائی سیاست میں کردار بڑھتا جارہا ہے۔ حالیہ برسوں میں سعودی عرب کے ساتھ ساتھ امارات کا شاہی خاندان عرب دنیا میں امریکہ کے بڑے اتحادی اور کھلاڑی کے طور پر ابھرا ہے۔ عرب عوام خواہ کچھ بھی سوچیں ‘ فلسطینیوں کو جو بھی نقصان ہو لیکن اسرائیل کو تسلیم کرکے امارات نے امریکہ کے حکمران طبقہ خاص طور سے انتہائی دولت مند اور سیاسی طور پر طاقتور یہودی لابی میں
مزید پڑھیے