عدنان عادل



پن بجلی کی ضرورت


توانائی کا بحران پاکستان کی معیشت کو دیمک کی طرح چاٹ رہا ہے۔ ایک تو ضرورت کے مطابق بجلی دستیاب نہیں ۔ملک میں پانچ کروڑ لوگ بجلی سے محروم ہیں۔ دوسرے‘اسکی قیمت اتنی زیادہ ہے کہ عوام کا بھرکس نکل گیا ہے‘ صنعتکاروں کے لیے کارخانے چلانا مشکل ہوگیا ہے۔ صنعتی پیداوار میں اضافہ ُرک گیا ہے‘برآمدات میں اضافہ نہیں ہورہا۔جب تک سستی بجلی دستیاب نہیں ہوتی‘ پاکستان کی معیشت ہچکولے کھاتی رہے گی۔ آج ہمارا ملک بجلی کے معاملہ پر جس پریشانی کا شکار ہے یہ گزشتہ چار عشروں کی غفلت اور غلط ترجیحات کا نتیجہ ہے۔اسوقت پاکستان اپنی توانائی
بدھ 26 فروری 2020ء

سری لنکاپر امریکی دباؤ

اتوار 23 فروری 2020ء
عدنان عادل
سری لنکا میں عالمی سیاست کی شطرنج چل رہی ہے۔ کولمبو پر امریکی دباؤ بڑھتا جارہا ہے کہ وہ چین کے ساتھ اپنے تعلقات میں کمی لائے اور اپنی سرزمین پر امریکی فوجی اڈّے بنانے کی اجازت دے۔سری لنکا کی موجودہ حکومت امریکی مطالبات ماننے سے گریزاں ہے۔دوسری طرف‘ چین اور روس کوشش کررہے ہیں کہ بحر ِہند کے تجارتی راستے پر واقع یہ چھوٹا سا لیکن اہم ملک امریکہ کے تسلط سے بچا رہے۔ گزشتہ دنوں امریکہ نے سری لنکا کے آرمی چیف لیفٹیننٹ جنرل شوندر سلوا اور ان کے قریبی اہل خانہ پر پابندی عائد کردی کہ وہ امریکہ
مزید پڑھیے


پاکستان میں توانائی کا بحران

بدھ 19 فروری 2020ء
عدنان عادل
پاکستان کی کمزور معاشی صورتحال کی ایک بڑی وجہ توانائی کی قلت ہے۔ قدرت نے ہمیں کوئلہ اور پانی کی مدد سے بجلی بنانے کے بیش بہا وسائل دیے ہوئے ہیں لیکن ہم ان کامناسب استعمال نہیں کرسکے۔دنیا میں سورج اور ہوا سے بجلی بنانے کا رواج بڑھ گیا ہے لیکن ہمارا ملک اس میدان میں بھی سست روی کا شکارہے۔ وطن ِعزیز کا سارا زور تیل اورقدرتی گیس پر ہے جنہیں بیرونِ ملک سے درآمدکرنے پر قیمتی زرِمبادلہ خرچ ہوتا ہے۔ اسی وجہ سے ہر تھوڑے عرصہ بعد حکومت کو زرِمبادلہ کے بحران کاسامنا کرنا پڑتا ہے۔ملک
مزید پڑھیے


لبنان میں بدامنی

اتوار 16 فروری 2020ء
عدنان عادل
گزشتہ سال اکتوبر سے لبنان میں بدامنی ہے‘ حکومتی اشرافیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرے ہورہے ہیں‘وقفہ وقفہ سے ہنگامے پھوٹتے رہتے ہیں۔ گیارہ فروری کو نئی کابینہ نے پارلیمان سے ا عتماد کا ووٹ لینا تھا تو مظاہرین اور سیکیورٹی عملہ کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔مشتعل ہجوم نے ارکان اسمبلی کی گاڑیوں پر انڈے مارے‘ پارلیمان جانے والی سڑکیں بلاک کیے رکھیں۔ پولیس کو کئی جگہ آنسو گیس پھینک کر احتجاج کرنے والوں کو منتشر کرنا پڑا۔تین ماہ پہلے ایسے ہی ہنگاموں کے باعث لبنان کے وزیراعظم سعد الحریری کو اقتدار چھوڑناپڑا تھا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ احتجاج شروع
مزید پڑھیے


مزدوروں کوحقوق کون دے گا!

بدھ 12 فروری 2020ء
عدنان عادل
پاکستان میں مزدوروں کی اکثریت ٹشوپیپر کی طرح ہے جن سے یہ معاشرہ اپنا کام لیکر کوڑے دان میں پھینک دیتا ہے۔ رسول ِاکر م حضرت محمد صلی اللہ علیہ وآلہ ِوسلم کی حدیث ہے کہ محنت کرنے والا اللہ کا دوست ہے۔یہ تعلیم ہماری اخلاقیات کاحصّہ ہوتی توہم اللہ کے دوستوں سے وہ سلوک نہ کرتے جو اس وقت کیا جارہا ہے۔محنت کشوںکی اکثریت کووہ حقوق بھی حاصل نہیں جوملکی قانون کے تحت انہیں ملنے چاہئیں۔ دوتہائی سے زیادہ مزدوروںکو حکومت کی مقرر کردہ اُجرت سے کم معاوضہ دیا جاتا ہے۔ زیادہ تر مزدور ٹھیکہ پر کام کرتے ہیں
مزید پڑھیے




ترکی کا قائدانہ کردار

اتوار 09 فروری 2020ء
عدنان عادل
اگلے ہفتہ پاکستان کے قریبی دوست ملک ترکی کے صدر طیب اردوان پاکستان کا دورہ کرنے والے ہیں۔اُنکی آمد اِس اعتبار سے اہمیت کی حامل ہے کہ صرف ترکی اور ملائشیا ایسے دومسلمان ملک ہیں جنہوں نے سفارتی سطح پر بھارت کے زیر تسلط کشمیریوں کے حقوق کے لیے دلیری سے آواز بلند کی۔صدر اردوان نے کشمیر کے تنازعہ پر کھل کر پاکستان کا ساتھ دیا ‘ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے جارحانہ اقدامات کی مذمت کی۔عالمِ اسلام کے بیشتر مسائل پر ترکی نے بہادری کے ساتھ مظلوم مسلمانوں کا ساتھ دیا ہے۔برما کے روہنگیا مسلمانوں کے معاملہ پر
مزید پڑھیے


دولت مندوں پر ٹیکس لگائیں

بدھ 05 فروری 2020ء
عدنان عادل
گزشتہ سال جون میں جب وفاقی بجٹ پیش کیا گیا تو وفاقی حکومت نے ٹیکسوں کی وصولی کا ہدف ساڑھے پانچ ہزار ارب روپے سے زیادہ مقرر کیا تھا۔ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے سات ماہ میں جو ٹیکس اکٹھا ہوا ہے وہ ہدف کے مقابلہ میں تقریبا چار سو ارب روپے کم ہے۔ تخمینہ یہ ہے کہ سال کے اختتام پر مجموعی طور پر شائد پونے پانچ ہزار ارب روپے جمع ہوپائیں گے۔ افواہیں گردش کررہی ہیں کہ حکومت کچھ ٹیکسوں میں اضافہ کرنے والی ہے یا نئے ٹیکس لگانے والی ہے
مزید پڑھیے


یمن کا المیہ

اتوار 02 فروری 2020ء
عدنان عادل
یمن میں جو ظلم و بربریت مسلمان ایک دوسرے پر ڈھا رہے ہیں اسلام کی رُو سے ایسا سلوک تو غیرمسلموں کے ساتھ بھی نہیں کیا جاسکتا۔ اقوام متحدہ کے مطابق یمن دنیا کے سب سے بڑے انسانی بحران سے دوچار ہے۔ آٹھ سالہ خانہ جنگی اور بیرونی مداخلت کے باعث اس ملک میں اب تک ایک لاکھ سے زیادہ شہری اور فوجی جاں بحق ہوچکے ہیں۔سرحدوں کی ناکہ بندی کی وجہ سے ڈیڑھ کروڑ شہری بھوک ‘فاقہ کشی کے خطرہ سے دوچار ہیں۔ بار بار ہیضہ ایسی مہلک بیماریاں پھوٹتی رہتی ہیں۔ غذا کی بھی قلت ہے‘ پانی کی
مزید پڑھیے


سستے مکانوں کا وعدہ پُورا کریں

بدھ 29 جنوری 2020ء
عدنان عادل
پاکستان میں کم آمدن والے اور متوسط طبقہ کے لوگوں کی اکثریت دو وجوہ کی بنا پر مکانات نہیں بناپاتے۔ ایک تو شہری زمین کی قیمت بہت زیادہ ہے۔ دوسرے‘مکان بنانے کے لیے بینک آسانی سے قرض نہیں دیتے۔ پاکستان میں مکانوں کی بینک فنانسنگ نہ ہونے کے برابر ہے۔جب تک یہ دونوں مسئلے حل نہیں کیے جائیں گے ملک میں مکانوں کی قلّت دُور نہیں ہوسکتی۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ملک میں ایک کروڑ مکانات کی قلّت ہے۔ بڑے شہروں میں چالیس فیصد آبادی کرائے کے مکانوں میں رہتی ہے۔ ایک سال میں صر ف ساڑھے تین لاکھ
مزید پڑھیے


شام کی عبرت ناک تباہی

اتوار 26 جنوری 2020ء
عدنان عادل
شورش اوربغاوت کو ہوا دے کرکس طرح مغربی سامراج مسلمان ملکوں کو تباہ و برباد کرتا ہے اِس کی ایک بڑی مثال بحیرۂ روم کے مشرق اور عرب کے انتہائی شمال میں واقع ملک شام ہے۔سوا دو کروڑ آبادی کے اس ہنستے بستے ملک کو امریکہ اور یورپ نے جس بے دردی سے ملیا میٹ کیا‘ یہاں کے لوگوں کو خانماں برباد کیا وہ ایک عبرت ناک داستان ہے۔ آٹھ سالہ خانہ جنگی میں پانچ لاکھ سے زیادہ شامی جان کی بازی ہار چکے ‘ شام کی نصف سے زیادہ آبادی بے گھرہوچکی ہے۔ ساٹھ لاکھ سے زیادہ لوگ ملک
مزید پڑھیے