Common frontend top

آغرندیم سحر


ظفر اقبال،فیصل عجمی اور آثار ایوارڈ!


فیصل عجمی ۷ اپریل ۱۹۵۴ء کو ملتان میں پیدا ہوئے‘انجینئرنگ یونیورسٹی لاہور سے گریجویشن کی اور ایک طویل عرصے سے ذاتی کاروبار کے سلسلے میں تھائی لینڈ میں مقیم ہیں۔فیصل عجمی نظم و غزل کے بہترین شاعر اور اردو کے اہم ترین جریدے ’’آثار‘‘کے مدیر اعلیٰ ہیں۔آپ کی تصانیف میں ’’شام‘‘، ’’مراسم‘‘، ’’خواب‘‘، ’’سمندر‘‘ ’’سونامی‘‘ اور ’’درویش‘‘شامل ہی۔حال ہی میں آپ کا شعری کلیات بھی ’’سخن آباد‘‘کے نام سے آثار اکادمی سے شائع ہوا۔۱۹۹۸ء میں فیصل عجمی نے ایک بین الاقوامی معیار کے ادبی جریدے ’’آثار‘‘کا اجراء کیا تھا جس کی مدیر شاعرہ ایڈیٹر اور مترجم ثمینہ راجہ
پیر 08 مئی 2023ء مزید پڑھیے

یکم مئی کو بھی مزدوروں نے مزدوری کی!!

پیر 01 مئی 2023ء
آغرندیم سحر
یکم مئی مزدوروں کا عالمی دن ہے‘پوری دنیا میں ہر سال یہ دن امریکہ کے شہر شکاگو کے محنت کشوں کو یاد کرتے ہوئے منایا جاتا ہے۔شکاگو کے محنت کشوں اور مزدوروں نے اپنے حقوق کی خاطر اپنی جان کی بھی پروا نہ کی‘ہر طرح کی بربریت اور ظلم و ستم برداشت کیا مگر اپنے مطالبات سے پیچھے نہ ہٹے۔یہ دن دنیا بھر کے ان مزدوروں کے نام جنھوں نے اپنے حق کے لیے صدائے احتجاج بلند کی اور دنیا کو یہ پیغام دیا کہ آزادی اور اپنا حق حاصل کرنے کے لیے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں
مزید پڑھیے


عید الفطر اور سیاسی گہما گہمی

جمعرات 27 اپریل 2023ء
آغرندیم سحر
عید کی چھٹیاں گائوں میں گزارتا ہوں‘اپنے پیاروں کے ساتھ عید منانے کا لطف ہی اور ہے ‘گائوں کی صاف شفاف فضا اور زندہ دل لوگوں کے ساتھ وقت بتانا کسی بھی نعمت سے کم نہیں۔عید کے لیے گائوں پہنچا تو افطاریوں کا سلسلہ شروع ہو گیا‘رمضان ختم ہوا تو عید کی دعوتیں شروع ہو گئیں اوریوں ایک مختصر وقفے کے بعد کالم بھیج رہا ہوں۔عید کے دوران بھی سیاسی گہما گہمی عروج پر رہی‘ایک طرف پی ڈی ایم مذاکرات کی حمایت کر رہی تھی اور دوسری جانب پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن اس بات پر بضد
مزید پڑھیے


غریب کا پاکستان کہاں ہے؟

منگل 18 اپریل 2023ء
آغرندیم سحر
پاکستان کے موجودہ حالات اس قدر تکلیف دہ اور قابلِ رحم ہو چکے ہیں کہ کالم لکھتے وقت یہ فیصلہ کرنا مشکل ہو جاتا ہے کہ کس موضوع پر بات کی جائے اور کسے نظر انداز کیا جائے۔ایک طرف عدلیہ اور پارلیمان کی محاذ آرائی اور دوسری جانب زمان پارک جوملکی و غیر ملکی میڈیا کی توجہ کا مرکز بنا ہوا ہے‘توہین ِ عدالت کا مرتکب کون اور حقیقی غدار کون ‘یہ فیصلہ کرنا بھی مشکل نہیں رہا۔آئین بنانے والے آئین سے کھلواڑ کر رہے ہیںمگر کوئی ان سے پوچھنے والا نہیں‘عدلیہ پر دن دیہاڑے شب خون مارا جا رہا
مزید پڑھیے


المصطفیٰ ویلفیئر ٹرسٹ

جمعرات 13 اپریل 2023ء
آغرندیم سحر
المصطفیٰ ٹرسٹ کی بنیاد 1983میں کراچی میں سابق وفاقی وزیر محمد حنیف طیب نے رکھی تھی‘اس مقصد صرف اور صرف انسانی خدمت تھی‘اس ٹرسٹ کے بینر تلے دکھی‘لاچار اور بے بس لوگوں کو سہارا دیا گیا‘انھیں اندھیروں کی دنیا سے نکال کر ’’روشنی‘‘کی دنیا میں لایا گیا ہے۔ ٹرسٹ نے بیک وقت کے زندگی کے کئی شعبوں میں کام کیا اور ہر شعبے میں دکھی انسانیت کا سہارا بنا،خیر اور بھلائی یہی ہے کہ بغیر کسی لالچ اور طمع کے لوگوں کے لیے نفع سوچیں‘ان کے لیے سیدھے اور سچے راستوں کا تعین کریں‘ایسے لوگوں کی آواز سنیں‘جن کی
مزید پڑھیے



فیضان گلوبل ریلیف فائونڈیشن

پیر 10 اپریل 2023ء
آغرندیم سحر
فیضان گلوبل ریلیف فائونڈیشن‘دعوتِ اسلامی کا ایک ذیلی فلاحی ادارہ ہے‘دعوتِ اسلامی 1981ء میں بنی‘یہ ایک عالم گیرغیر سیاسی مذہبی تنظیم ہے ‘اس کے بانی چیئرمین مولانا الیاس قادری ہیں اور اس تنظیم کا مرکز کراچی میں ہے۔ اس ادارے نے گزشتہ تیس سال میں دنیا کے 58 ممالک میں80 سے زائد شعبوں میں اسلامی کی ترویج و تبلیغ کے لیے بے تحاشا کام کیا‘اس ادارے سے وابستہ افراد نے ہمیشہ اپنی ذاتی نمود و نمائش کو پس ِ پشت رکھا اور دین و اسلام کی تبلیغ کے لیے ایک عالَم کو متاثر کیا‘ایک آدمی سے قافلہ کیسے بنتا ہے‘دعوت
مزید پڑھیے


الخدمت :خدمات کی قوس قزح

جمعرات 06 اپریل 2023ء
آغرندیم سحر
الخدمت فائونڈیشن پاکستان کی سب سے بڑی فلاحی تنظیم ہے جس کی خدمات کا جال دنیا کے دو درجن سے زائد ممالک میں پھیلا ہوا ہے‘دنیا میں جہاں بھی کوئی زمینی آفت آئے یا آسمانی‘الخدمت کے رضا کار رنگ و نسل اور مذہب و ملت کی تفریق کے بغیر خدمت میں لگ جاتے ہیں۔1990ء میں بطور این جی او اس فائونڈیشن کو رجسٹرڈ کیا گیا‘آغاز میں اس کا دائرہ کار صرف آفات میںمتاثرہ لوگوں کی مدد تک محدود تھا مگر وقت کے ساتھ اس کا دائرہ کار انتہائی وسعت اختیار کر چکا ہے‘ آفات سے بچائو،صحت،تعلیم،کفالت یتامیٰ، صاف پانی،مواخات پروگرام
مزید پڑھیے


گنگا چوٹی کی دکھ بھری کہانی

پیر 03 اپریل 2023ء
آغرندیم سحر
کشمیریوں کی مہمان نوازی کابہت مداح ہوں‘میں جب بھی کشمیر آیا یہاں کے لوگوں نے آنکھوں پر بٹھایا۔مجھے یادہے گیارہ سال قبل جب یہاں آیا تھا تو میرے اعزاز میں کئی تقریبات کا اہتمام کیا گیا تھا‘مختلف تعلیمی اداروں میں سمینارز اور ادبی نشستوں کا اہتمام تھا‘میری کتاب کی تقریب ِ پذیرائی کا بھی انتظام کیا گیا تھا‘وہ ایک یادگار وزٹ تھا۔اب جب کشمیر جائوں تو ادبی تقریبات میں شرکت سے گریز کرتا ہوں کیوں کہ وہاں جانے کا مقصد سیاحت ہوتی ہے‘کشمیر کی خوبصورت وادیوں ‘پہاڑوںاور آبشاروں کے ساتھ وقت بتانا ہوتا ہے لہٰذا اب جانے سے قبل صرف
مزید پڑھیے


جماعت اسلامی کے چودہ نکات

جمعه 31 مارچ 2023ء
آغرندیم سحر
جماعت اسلامی کے انتخابی منشور کی تقریب ِرونمائی میں شریک تھا‘امیر جماعت اسلامی مولانا سراج الحق کی صدارت میں منعقد ہونے والی یہ شاندار تقریب جس میں جماعت کے مرکزی قائدین کے علاوہ صوبائی اسمبلیوں کے امیدوار اور میڈیا نمائندگان موجود تھے،لاہور کے اہم نجی ہوٹل میں تین گھنٹے تک جاری رہی۔تقریب سے مرکزی قائدین اور امیر جماعت نے سیر حاصل خطاب کیا جو قابلِ توجہ بھی تھا اور قابلِ داد بھی۔میرے لیے یہ تقریب اس حوالے سے ضرور اہم تھی کہ جماعت اسلامی واحد جماعت ہے جس نے ضمنی انتخابات سے قبل ایک بھرپور پلان دیا ‘ عوام اور
مزید پڑھیے


باغ کا سفر

منگل 28 مارچ 2023ء
آغرندیم سحر
ڈاکٹر شرافت حسین خواتین یونیورسٹی باغ میں ریاضی کے استاد ہیں‘آپ نے قائد اعظم یونیورسٹی سے ایم ایس اور پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی‘ہائر ایجوکیشن کمیشن کے سکالرشپ پرریسرچ کے سلسلے میں کینیڈا بھی گئے‘آپ طویل عرصے سے شعبہ تدریس سے وابستہ ہیں۔وہ دنیا کی بڑی جامعات میں ہونے والی تحقیق و تدریس سے گہری واقفیت رکھتے ہیں‘دنیا بھر میں شائع ہونے والے اہم ریسرچ جنرلزاورریسرچ آرٹیکلز پڑھتے ہیں۔ ان کا میدان توریاضی ہے مگر شعروادب سے لگائو کے باعث اردو کے کئی اہم جریدے بھی پڑھتے ہیں۔اس بار بھی کشمیر سیر کے لیے جانا ایک بہانہ تھا‘اصل
مزید پڑھیے








اہم خبریں