Common frontend top

فیصل مسعود


یوکرین پر روسی حملہ اوراپوزیشن کی پر اعتمادی!


دوسری جنگِ عظیم کے بعدعالمی سیاست میںتاجِ برطانیہ کا کردار سمٹنا شروع ہو اتو ریاست ہائے امریکہ کو مغربی دنیا کی قیاد ت حاصل ہو گئی۔ سرد جنگ کے اعصاب شکن دَور کا آغاز ہوا ۔ کئی سال بعد افغانستان سے روسی فوجوں کے انخلاء اورسوویت یونین کی تحلیل کے بعد آنجہانی کمیونسٹ یونین کی جانشینی روس کے ہاتھ میں آئی۔سوویت تسلط سے نجات پانے والی وسط ایشیائی ریاستوں میں مسلمان اکثریت میں تھے ۔چنانچہ ان افلاس کی ماری ریاستوں میں آمریت کا راج ہو یا آئے روز روسی مداخلت جاری رہے ، مغرب کو اس پرکبھی اعتراض نہیںرہا۔
اتوار 27 فروری 2022ء مزید پڑھیے

اشوکا کے بدھ بھکشئوں سے مغل جانشینوں تک!

اتوار 20 فروری 2022ء
فیصل مسعود
مذہب کے نام پرانتہا پسندی جیسے ہندوستان کی قدیم مٹی میں گندھ سی گئی ہے۔چندر گپت نے موریہ سلطنت کی بنیاد رکھی تو اس کے پوتے اشوکا نے راجدھانی کو بنگال کے ساحلوں سے لے کر دورِ حاضر کے افغانستان تک پھیلا دیا۔اس عظیم ہندوستانی سلطنت کے قیام کے لئے اشوکا نے بے شمار جنگیں لڑیں۔ اپنی 16 مائوں کے بطن سے جنم لینے والے ایک سو کے لگ بھگ بھائیوں کو قتل کیا۔ کلنگا کی جنگ میں انسانی خون کچھ اس قدر بہا کہ عظیم بادشاہ کا دل ٹوٹ گیا۔ بادشاہ نے قتل و غارت سے دل برداشتہ
مزید پڑھیے


قومی مستقبل پر سوالیہ نشان !

اتوار 30 جنوری 2022ء
فیصل مسعود
آغا خان یونیورسٹی کے زیراہتمام انسٹیٹیوٹ فار ایجوکیشنل ڈویلپمنٹ نے حال ہی میں جدید سائنسی بنیادوں پر ایک سٹڈی کا اہتمام کیا ہے۔ سٹڈی کابنیادی مقصدمڈل جماعتوں (Lower Secondary Classes)کے طالب علموں کی تعلیمی استعداد کا اندازہ کرنا تھا۔ملک بھر میںواقع 153 سرکاری اور پرائیویٹ سکولوں سے پانچویں، چھٹی اور آٹھویں جماعتوں کے 15,000 طالب علموں کو بلا تخصیص علاقائی، نسلی یا سیاسی تعصب وتفریق کے اُٹھا کر ان کے تعلیمی سال کے مطابق خصوصی طور پر ترتیب دیئے گئے امتحانات سے گزارا گیا۔ سٹڈی کے نتائج ہمارے لئے ہر گز حیران کن نہیں ہونے چاہئیں کہ تعلیم کا شعبہ
مزید پڑھیے


تنظیموں اور اداروں سے وابستہ توقعات !

اتوار 09 جنوری 2022ء
فیصل مسعود
وطن عزیز کے معروضی حالات ، بالخصوص معاشرے میں پائے جانے والے چڑچڑے پن کی شدت عشروں پہلے پڑھے اَرل تھامپسن کے ناول ’A Garden of Sand ‘ کے ایک کردار مسٹر میک ڈرمڈکی یاد دلا تی ہے۔ میک ڈرمڈ ایک امریکی کسان ہے جو بیسویں صدی کے Great Depression کے دوران مالی عسرت کے ہاتھوں مجبور ہو کراپنی زرعی اراضی بیچ کر شہری علاقوں کی طرف نقل مکانی پر خود کو مجبور پاتا ہے۔ایک عام کسان کی حیثیت سے مسٹر میک ڈرمڈ اپنی تمام تر مشکلات کا ذمہ دار اس وقت کے امریکی صدر کو قرار دیتا ہے،چنانچہ
مزید پڑھیے


پریڈ لین کے شہیدوں کی یاد میں!

اتوار 02 جنوری 2022ء
فیصل مسعود
پریڈ لین راولپنڈی کی مسجد میں4 دسمبر 2009ء کی نمازِ جمعہ سے پہلے امام صاحب کی تقریرکے بعد نمازی سنتیں ادا کر رہے تھے۔پریڈ لین کے رہائشی کرنل غلام رسول قیصر اس روز کچھ تاخیر سے گھر پہنچے تھے۔دو بہنوں کا اکلوتا بھائی، میٹرک کا طالبعلم محمد علی مسجد جانے کے لئے ان کا منتظر بیٹھا تھا۔ باپ بیٹا مسجد پہنچے تو خود کُش حملہ آور مسجد کے دروازے پر پہلے سے موجود تھا۔بیٹے کو اتار کر کرنل قیصر گاڑی پارک کررہے تھے کہ پہلا خود کش دھماکہ ہو گیا۔ کرنل قیصر پہنچے تو بیٹے کو مسجد کے دروازے کے
مزید پڑھیے



وعدوں کے ایفا کا نہیں ،اب بقا کا سوال ہے !

اتوار 26 دسمبر 2021ء
فیصل مسعود
پاکستان کی پہلی قانون ساز اسمبلی سے قائدِ اعظم کے 11اگست1947ء والے خطاب میں ابتدائی کلمات کے بعد جس پہلے موضوع کی طرف قائد نے حاضرین کی توجہ مبذول کروائی وہ عام تاثر کے برعکس مذہبی رواداری نہیں بلکہ معاشرے کو لاحق مالی بدعنوانی اور اقرباء پروری کے امراض تھے۔تہتر سال گزر گئے۔آج پاکستانی معاشرے میںمالی بد عنوانی کوبرائی نہیں سمجھا جاتا ۔ ملک پر طاقتور طبقات(Elitists) کی حکمرانی ہے۔ اقربا پروری، خاندانی سیاست اور ادارہ جاتی عصبیت قبول عام پا چکے ہیں۔ایک وزیرِ اعظم یا پارٹی سربراہ کے بعد اس کے بیٹے، بیٹی یا بھائی کا اس کی جگہ
مزید پڑھیے


پاکستان کو بنگلہ دیش سے سیکھنے کی ضرورت ہے !

اتوار 19 دسمبر 2021ء
فیصل مسعود
بنگلہ دیش ہماری طرح ایک نو عمر ملک ہے۔ تاہم بنگالی صدیوں پرانی قدیم قوم ہیں۔ایک زبان بولتے ہیں، اپنے کلچر پر جو فخر کرتے ہیں۔ عام خیال یہی ہے کہ متحدہ پاکستان سے علیحدہ ہونے سے پہلے بھی بنگالی سیاسی طور پر نسبتاََ بالغ نظر تھے۔ اپنے ابتدائی پر آشوب بیس سال کے بعداس قوم نے جو معاشی اشاریوں میں خطے کے دیگر ممالک کو کہیں پیچھے چھوڑ دیا ہے تو کیا اس کا مطلق سبب وہی ہے جو آجکل نئے نئے’ نظریاتی‘ ہونے والے سیاستدان بتاتے ہیں؟ بنگالی مسلح مزاحمت اور سیاسی جدو جہد کی صدیوں پر محیط اپنی
مزید پڑھیے


امریکہ چین تنائو اور پاکستان کا امتحان!

اتوار 12 دسمبر 2021ء
فیصل مسعود
کمیونزم کی پسپائی اور سوویت خطرہ تحلیل ہو جانے کے باوجودنیٹو اتحاد قائم اور150,000امریکی فوجیوں کی یورپ میں تعیناتی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔تیسری عالمی جنگ کے بادل چھٹنے اور سرد جنگ کے خاتمے کے بعدامریکہ کی جانب سے روس سمیت سوویت یونین سے آزادی پانے والی ریاستوں کے لئے مختص امریکی امداد کو ان ممالک میں مغربی جمہوری اقدار اور انسانی حقوق کے فروغ سے منسلک کر دیا گیا۔ نوّے کے عشرے کے دوران ریاست ہائے امریکہ نے دنیا کو اپنے طرز کی’ جمہوریت‘ کے ذریعے بدلنے کا باقاعدہ فیصلہ کر لیا۔ دیکھنا یہ ہے کہ امریکہ نے
مزید پڑھیے


انتشار نہیں، آئین و قانون میں بقا ہے!

اتوار 05 دسمبر 2021ء
فیصل مسعود
یہ نہیں کہ ہم جیسوں کو جمہوریت، سویلین بالادستی، آئین و قانون کی حکمرانی ، آزادی اظہار رائے اور انسانی حقوق سے متعلق ’مغرب زدہ لبرلز‘ کے افکارو مطالبات سے اختلاف ہے ۔ تاہم فکر میںخیانت اور رویوں میںتضاد پانیوں کو گدلا دیتے ہیں۔ مغرب زدہ لبرلز میں اب وہ بھی شامل ہیں جو کسی زمانے میںرومان پسنداشتراکی تھے۔ چڑیا والے صاحب بھی کسی زمانے میں اِسی فکر کے مالک تھے ۔لگ بھگ پچاس برس قبل بلوچستان کے پہاڑوں پر ’پراریوں ‘ سے جا ملے تھے ۔ جنگ تو کیا خاک لڑتے، البتہ سخت کوشوں کی تفریح طبع کا سامان بن
مزید پڑھیے


ریاست کو ایک’ سسٹم ‘کا سامنا ہے!

هفته 27 نومبر 2021ء
فیصل مسعود
ہم میں سے کتنے ہیں جنہوں نے بیانِ حلفی سامنے آنے سے پہلے ساہیوال سے اٹھنے والے ایک عام وکیل کی گلگت بلتستان کے چیف جج کے عہدے پر تعیناتی کا سُن رکھا تھا۔ بتایا جا رہا ہے کہ وکیل صاحب سیاسی جماعت کے عہدیدار بھی رہے ہیں۔ماریو پوزو کے شہرہ آفاق ناول کا حوالہ جسٹس کھوسہ نے پاناما کیس کے فیصلے میں دیا تھا ۔ڈان کارلیان جب کسی پر احسان کرتا تو بدلے میں فوراََ کچھ طلب نہیں کرتا تھا۔زیرِ بار گردن پر کچھ ادھار آنے والے دنوں میں چکتانے کے لئے اُ ٹھا دیا جاتا۔ پاناما کیس کی
مزید پڑھیے








اہم خبریں