BN

قدسیہ ممتاز



الفجیرہ پورٹ پہ حملہ۔ایک بڑی جنگ کا پیش خیمہ؟


کل رات موبائل پہ متحدہ عرب امارات کی الفجیرہ پورٹ کے ایک اہم ذمہ دار کی طرف سے مجھے ایک اہم پیغام وصول ہوا۔ پیغام کے مطابق پورٹ ال فجیرہ پہ نامعلوم سمت سے آنے والے میزائلوں نے پانچ تیل بردار ٹینکر تباہ کردیئے تھے جن میں سے دو امارات کے جبکہ دو سعودی عرب کے تھے اور پانچواں بھی ایک سعودی کمپنی کی ملکیت تھا۔ اس کا مطلب یہ تھا کہ تین ایسے آئل ٹینکروں کو نشانہ بنایا گیا تھا جن پہ سعودی عرب کا پرچم لہرا رہا تھا۔ایران امریکہ بڑھتی ہوئی کشیدگی کے تناظر میں یہ
منگل 14 مئی 2019ء

جھوٹ بولنے کی مشینیں

هفته 11 مئی 2019ء
قدسیہ ممتاز
اپوزیشن کی صفوں میں اچانک ہی قومی غیرت کا غلغلہ اٹھا ہے۔قوم کو بھی آج ہی علم ہوا ہے کہ اس پہ باری باری سواری گانٹھنے والی سیاسی اشرافیہ میں جن کے بینک اکاونٹ دنیا بھر میں پھیلے ہوئے ہیں، قومی غیرت کا مادہ کوٹ کوٹ کر بھرا ہوا ہے۔ یہ کیسا شور ہے جو مکمل ڈھٹائی کے ساتھ مچایا جارہا ہے۔ملک کو آئی ایم ایف کے ہاتھوں گروی رکھ دیا گیا ہے۔ قوم کو آئی ایم ایف کے کہنے پہ ٹیکسوں کے بوجھ تلے دبا دیا گیا ہے۔یہ حکومت آئی ہی اس لئے تھی کہ ملک کو عالمی مالیاتی
مزید پڑھیے


ایسے نہیں چلے گا

جمعرات 09 مئی 2019ء
قدسیہ ممتاز
بالآخر نواز شریف ایک بار پھر حوالہ زنداں ہوئے۔جس دھج سے کوئی زنداں میں گیا وہ شان سلامت رہی نہ رہی میڈیا ضرور خاصی دیر کے لئے مصروف ہوگیا ۔شام کے ٹاک شو بھی اسی موضوع پہ ہوتے رہے اور رپورٹنگ بھی۔ایک بات لیکن قابل غور رہی کہ نہ ٹاک شوز میں پہلے جیسا مزہ تھا نہ رپورٹنگ میں کوئی سنسنی۔ نہ لمحہ بہ لمحہ رپورٹنگ نہ چیختے دھاڑتے ایک دوسرے کو دھکے مارتے نمائندے ہی ایک دوسرے پہ سبقت لے جانے کی کوشش میں مصروف نظر آئے۔ سب کچھ پھیکا پھیکا سا تھا۔نون لیگی قیادت کی آواز و انداز
مزید پڑھیے


یعنی کہ۔۔۔

منگل 07 مئی 2019ء
قدسیہ ممتاز
دیکھا جائے تو نواز شریف کا اگر کوئی بیانیہ تھا تو وہ اسی دن اپنی موت آپ مرگیا تھا جب عدلیہ سے ناسازی طبع کی بنیاد پہ ضمانت لینے کی خاطر خواجہ حارث نے کہا تھا کہ نواز شریف نے تو کبھی پاکستان میں علاج کروایا ہی نہیں۔یہ کسی ایسے نو دولتیے کے وکیل کا بیان توہو سکتا ہے جس کا کوئی جیک پاٹ لگا ہو اور اب اسے پاکستان میں چھینکنا اور کھانسنا بھی عزت کے منافی معلوم ہوتا ہو یا پھر کسی ایسے بزنس مین کا جس کا آدھا کاروبار یورپ میںاور آدھا ملک میں ہو اور
مزید پڑھیے


اگر گھر میں کوئی مرد نہیں ہے

هفته 04 مئی 2019ء
قدسیہ ممتاز
پس ثابت ہوا کہ مرد بین السطور پیغامات کی گہرائی میں جانے کی زحمت گوارا نہیں کرتے ۔میں نے گھر منتقلی کے سلسلے میں کالم:کیونکہ گھر میں کوئی مرد نہیں: لکھا تو خیال تھا کہ حضرات اس پہ باقاعدہ برا مان جائیں گے اورخواتین کہیں گی کہ دیکھا ہم نہ کہتے تھے یہ مردوں کی دنیا ہے یہاں عورت کی زندگی مردکے بغیر بے ڈھب سی ہے۔ہوا لیکن اس کے برعکس۔مرد چونکہ خواتین کے مقابلے میںرجائیت پسند ہوتے ہیں یا ایسا ہونا کارزار حیات میں ان کی مجبوری ہے اس لئے انہوں نے اس تنقید نما شکوے کو بڑے
مزید پڑھیے




عمران خان کی معاشی پالیسیوں کا رخ اور تنازعات

جمعرات 02 مئی 2019ء
قدسیہ ممتاز
ایران کے ساتھ ہم نے اپنے معاملات بیرونی دباؤ یا خوامخواہ کے اخلاقی دباؤ کے باعث خراب کئے ۔ اس سلسلے میں ایران نے بھی کوئی مروت دکھائی نہ لحاظ کیا۔خواہ وہ سرحدی تنازعات ہوں یا ہمارے جوہری پروگرام کا حساس معاملہ ہو۔ میں ایران کی مشرق وسطی کی پالیسیوں کی شدید ناقد ہوں لیکن پاکستان مشرق وسطی میں فریق نہیں ہے اور نہ ہی اسے ہونے کی ضرورت ہے۔ مشرق وسطی میں ہماری دلچسپی کا موضوع مسئلہ فلسطین ہے اور اس پہ پاکستان اب تک اصولی طور پہ ڈٹا ہوا ہے اور اس میں تبدیلی کے اب تک کوئی
مزید پڑھیے


عمران خان کی معاشی پالیسیوں کا رخ اور تنازعات

منگل 30 اپریل 2019ء
قدسیہ ممتاز
وزیر اعظم عمران خان کا دورہ چین اختتام کو پہنچا اس سے قبل وہ ایران کا کامیاب دورہ کرکے لوٹے ۔ دورہ ایران کے دوران ان کی زبان کی پھسلن موضوع بن گئی جب انہوں نے مبینہ طور پہ پاکستان میں دہشت گرد گروپوں کی موجودگی کا اعتراف کیا۔ ان کے اس بیان کو بلاول بھٹو لے اڑے اور جی بھر کے ہنگامہ مچایا۔ اسی راگ میں سر ملانے جماعت اسلامی اور نون لیگ بھی شامل ہوگئی۔ مزے کی بات تو یہ تھی کہ بلاول بھٹو خود پاکستان میں دہشت گردی کے محفوظ ٹھکانوںسے متعلق ایک سلگتا بیان دے
مزید پڑھیے


عمران خان ۔۔خاموش !!

هفته 27 اپریل 2019ء
قدسیہ ممتاز
یہ درست ہے کہ ایک غلط فعل کسی دوسرے غلط فعل کا جواز اور جواب نہیں ہوسکتا۔ یہ بھی درست ہے کہ انسان اپنی زبان سے پہچانا جاتا ہے۔کسی دانا کا یہ قول بھی سر آنکھوں پہ کہ بولو تاکہ پہچانے جائو۔ہم بولے اور پہچانے گئے۔ہم اہل کرانچی البتہ کسی اور مٹی سے بنے ہیں۔ہماری اپنی لفظیات ہیں۔مرشدیوسفی یاد آگئے اور وہ بھولتے ہی کب ہیں۔ اپنے حقیقی یا فرضی دوست بشارت فاروقی کے خسر الحذر کے حوالے سے لکھتے ہیں۔ انہوں نے کراچی کو اور کراچی نے ان کو ایک نگاہ میں مسترد کردیا۔کہتے تھے عجیب شہر ہے جب
مزید پڑھیے


یہ چیخ پکار بلا وجہ نہیں

جمعرات 25 اپریل 2019ء
قدسیہ ممتاز
تحریک انصاف بالخصوص وزیراعظم عمران خان ہر طرف سے نشانے پہ ہیں۔کیا میڈیا میں بیٹھے بزرجمہر اور کیا اپوزیشن میں بیٹھے ارسطو اور بقراط۔ یہ آموختہ جتنی بار دہرایا جائے کم ہے کہ ملک کو اس حال میں پہنچانے والے یہی لوگ ہیں جو آج گلا پھاڑ پھاڑ کر شور مچا رہے ہیں۔ ایسا ورنہ کیا ہوگیا ہے جو پہلے کبھی نہیں ہوا۔ کابینہ میں ردو بدل وزیر اعظم کا اختیار ہے جس کا نہ کوئی بھائی پنجاب کا وزیر اعلیٰ ہے نہ بھتیجا پنجاب کی پی اے سی کا چئیرمین بننے کے لئے بلیک میلنگ پہ اتر آیا
مزید پڑھیے


عمران خان کا دورہ ایران اور امکانات

منگل 23 اپریل 2019ء
قدسیہ ممتاز
وزیر اعظم عمران خان اپنی کابینہ میں اکھاڑ پچھاڑ کے بعد اپنے پیچھے شکست خوردہ ٹولے کی چیخ پکار چھوڑ کر اطمینان سے ایران کے دورے پہ روانہ ہوگئے۔اس طے شدہ دورہ ایران سے، جس کی دعوت انتخابات میں کامیابی کے فورا بعد ایرانی صدر روحانی نے عمران خان کو دی تھی، چند روز قبل ہزار گنجی سبزی منڈی میں ایک بار پھر ہزارہ برادری کے افراد دہشت گردی کا نشانہ بنے۔ متاثرین کے لواحقین کوئٹہ میں احتجاج میں مصروف تھے اور وہ اس بات کی ضمانت چاہتے تھے کہ آئندہ ان کے ساتھ ایسا کوئی سانحہ
مزید پڑھیے