BN

مجاہد بریلوی


5جولائی1977ئ……(2)


وقفہ آگیا…خدا کا شکر ہے اس کا سبب کورونانہیں بنا… مگر اپنے ارد گرد عزیز اور احباب اتنے متاثر ہوئے کہ قلم پکڑ ا نہیں جارہا تھا… دعویٰ تو کیا جارہا ہے کہ ایکٹو کیسز کی تعداد میں43فیصد کمی ہوئی ہے۔مگر کورونا کے خوف اور خطرے نے ہر گھر میں ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں۔ ہفتہ گزشتہ میں 5جولائی 1977میںجنرل ضیاء الحق کے ہاتھوں بھٹو حکومت کے خاتمے ،اور پھر بھٹو کے پھانسی لگنے کی تمہید باندھتے ہوئے ،سندھ اور پنجاب کے سابق آئی جی حاجی حبیب الرحمان کی خود نوشت ’’کیا کیا نہ دیکھا تھا ‘‘کا سِرا ہی پکڑا تھا
هفته 11 جولائی 2020ء

5جولائی1977

هفته 04 جولائی 2020ء
مجاہد بریلوی
قیام پاکستان کے بعد بانیٔ پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کوصرف 11ماہ ملے۔اُس میں بیشتر وقت بیماری اور زیارت جیسے دور افتادہ مقام پر تقریباً یک و تنہا ،ایک ڈاکٹر ،دوسر ی بہن اور تیسرا ایک اے ڈی سی ۔ 15 اگست کے بعد جب اور جہاں جتنی بھی تقاریر قائد نے کیں ،اُس میں چندا ایسی اصولی باتوں کی ضرور نشاندہی کرتے کہ جو مستقبل کے خوشحال ،ترقی پسند پاکستان کی اساس نہیں۔مگر بانی ٔ پاکستان کی آنکھیںموندتے ہی اُن کے کھوٹے سکّوں نے محلاتی سازشوں کا آغاز کردیا۔مسلم لیگ حکومت میں تھی اور قائد اعظم کے نامزد
مزید پڑھیے


سید منور حسن

بدھ 01 جولائی 2020ء
مجاہد بریلوی
یہ لیجئے، ہمارے شہر کے سابق امیر جماعت اسلامی سید منور حسن کی بھی شنوائی آگئی ۔ ۔ ۔ ادھر مہینے دو سے اُن کی علالت کی خبریں مل رہی تھیں۔ سید صاحب کے نائب اور قریبی ساتھی اسامہ بن رضی سے اکثر رابطہ بھی ہوتا کہ اُن سے ملاجائے ۔ میراخیال تھا کہ تحریک ِ آزادی ٔ کشمیر اور افغان جہاد کے حوالے سے اُن سے تفصیلی مکالمہ ہو۔مگر اس شہرِ ناپرساں میں کورونا تو خیر اب آیا ہے،اسکرین سے لگے پیٹ کے سبب قریبی ،عزیزوں سے بھی برسوں ملاقات کی نوبت نہیں آتی۔ حسب ِ روایت پہلے پہر
مزید پڑھیے


شیخ صاحب ، یہ آپ نہیں کر سکتے ؟ …(2)

هفته 27 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
وفاقی وزیر ریلوے محترم شیخ رشید کے نام پاکستان کے سب سے بڑے پبلک سیکٹر کے ادارے کے سُدھارکے لئے ایک محبت نامہ لکھا تھا۔ اور اس میں ممتاز بیورو کریٹ نے اپنی کتاب ’’دو مینار‘‘ میں ریلوے کے سنہری دور کے بارے میں جو ارشادات لکھے تھے ،وہ بھی شیخ صاحب کی خدمت میں پیش کردئیے تھے۔ایک زمانہ تھا کہ وزیر ،مشیر ،سرکاری افسروں کی میز پر اخباروں کامینار اُن کے سامنے ناشتے کی میز پر ہوتا ۔ اب سوشل میڈیا کا دور ہے۔ اخبارات اگر آتے بھی ہیں تو سیدھے ردّی کی ٹوکری یا میز پر دھرے رہتے
مزید پڑھیے


شیخ صاحب ،یہ آپ کرسکتے ہیں

بدھ 24 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
سب سے پہلے تو خدا ئے بابرکت سے یہ دعا کہ۔ ۔ ۔ ہماری سیاست کے سب سے colourful۔ ۔ ۔ انگریزی لفظ اس لئے استعمال کیا کہ رنگین مزاج کا لفظ استعمال کرتا تو بات دوسری طرف نکل جاتی۔شیخ صاحب ماشاء اللہ کنوارے ہیں۔ ادھر ادھر سے چھینٹے بھی اڑتے رہے ،خاص طور پر جب ایک دور میں اُن کی منسٹری میں فلم انڈسٹری بھی آگئی ۔ ۔ ۔ اگر میری یادداشت درست ہے ،جس پر اب اس عمر میں کبھی کبھی شک ہونے لگا ہے۔ ۔ ۔ کہ سوائے ایک الیکشن کے 1985ء کے
مزید پڑھیے



اب صاحب ِ انصاف ہے خود طالبِ انصاف……(2)

هفته 20 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
اب صاحب ِ انصاف ہے خود طالب ِ انصاف مہر اُس کی ہے میزاں بدستِ دگراں ہے شاعر ِ بے مثال فیض احمد فیض ؔ نے یقینا یہ شعر اپنی اسیری کے دوران لکھا ہوگا۔ ۔ ۔ کہ جب وہ اپنے اوپر عائد مقدمے کی سماعت کے دوران فیصلے کے منتظر ہوں گے۔ آفاقی شاعر زماں و مکاں سے آگے ،مستقبل میں برسوں نہیں ،صدیوں بعد کی پیشن گوئی کررہے ہوتے ہیں۔ ۔۔ گزشتہ کالم میں جب فیضؔ صاحب کے اس مصرعے کو محترم جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے حوالے سے موضوع بنا رہا تھا تو اس بات کی قطعی امید اور
مزید پڑھیے


اب صاحبِ انصاف ہے خود طالبِ انصاف

بدھ 17 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
سیاسی جماعتوں اور جمہوری اداروں پر کرپشن سمیت نا اہلی اور اقرباء پروری کے کتنے ہی الزامات لگائے جائیں، خوش آئند بات ایک تو یہ ہے کہ 2008ء اور 2013ء کی پی پی -ن لیگ کی حکومتوں نے اپنی اپنی مدتیں پوری کرلیں۔تبدیلی سرکار یعنی تحریک انصاف کی حکومت بھی اپنی کمزوریوں اورخامیوں کے باوجود اپنی مدت پوری کرتی ہی نظر آتی ہے کہ اول تو اپوزیشن جماعتیں اُس اسٹریٹ پاور سے محروم ہوگئی ہیں جس پر ’’امپائر‘‘ کی خواہش اقتدار پر چھلکنے لگتی تھی۔اُس سے بھی اہم تبدیلی یہ کہ اب وہ ’’مقدس گائے ‘‘ نہیں ہیں۔ ۔ ۔
مزید پڑھیے


دال میں کالا۔۔۔

هفته 13 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
ایک ایسے وقت میں جب ساری قوم کورونا سے دہلی ہوئی ہے ،ہلاکتیںہزاروں ،متاثرین لاکھوں کو چھو رہے ہیں۔ ۔ ۔ دو کروڑ گھروں میں فاقوں کی نوبت آئی ہوئی ہے،کورونا متاثرین ہسپتال کے دروازوں پر ایڑیاں رگڑ رہے ہیں۔۔۔ اور اِدھر اسلام آباد کے سابقہ اور موجودہ حکمرانوں کو ایک امریکی خاتون نے دہلایا ہوا ہے۔ اخباروں کی شہ سرخیوں اور اسکرینوں کی بریکنگ نیوز بننے والی یہ امریکی خاتون سنتھیا رچی کون ہے؟ گیارہ سال سے وہ اسلام آباد میں کس قانون کے تحت مقیم ہے اور ایوان ِ صدر اور وزیر اعظم ہاؤس میں وہ نقب
مزید پڑھیے


پاکستان اسٹیل ملز،ایک المیہ ……(2 )

بدھ 10 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
پاکستان اسٹیل ملز جس کے 10ہزار ملازمین کو 140ارب کے لگ بھگ گولڈن ہنڈ شیک دے کر رخصت کیا جارہا ہے ۔ ایک بار پھر ایک بڑے تنازعہ کا شکا ر ہوگئی ہے۔نکالے جانے والے ملازمین کو تو خیر سڑکوں پر آناہی تھا جنہیں گزشتہ پانچ سال یعنی 2015ئسے گھر بیٹھے کبھی مہینے ،دو کی تاخیراور کبھی کٹوتی کر کے تنخواہیں دی جارہی تھیں ۔مگر سب سے زیادہ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر اپوزیشن جماعتوں ،خاص طور پر پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے رہنماؤں نے شور ڈالا ہے۔احتساب کا شکار پیپلز پارٹی اور ن لیگ کا یوں
مزید پڑھیے


پاکستان اسٹیل ملز۔۔۔ایک المیہ ۔ ۔ ۔ 1

هفته 06 جون 2020ء
مجاہد بریلوی
پاکستان اسٹیل ملز کی بندش یقینا پاکستانی معیشت کے مستقبل کے لئے ایک بہت بڑا دھچکہ ہے کہ ۔ ۔ ۔ اسٹیل مل ،کسی بھی ملکی صنعت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔یہ درست ہے کہ پاکستانی معیشت کی بنیاد زراعت پر تھی اور ہے۔ ۔ ۔ مگر زرعی ملک کی حیثیت سے کیوں کہ ساری زمینیں جاگریداروں اور زمینداروں کی ملکیت میں رہیں۔جس سے ہاریوں اور عام کسانوں کو بس اتنا ملتا کہ گھر کا چولہا جل جائے۔اسی فیوڈلزلم کے سبب آج پاکستان میں غربت سے نیچے کی لکیر یعنی ایک ڈالر (160روپے) یومیہ کمانے والوں کی
مزید پڑھیے