BN

مجاہد بریلوی


یہ کشمیر کمیٹیاں


اس سے پہلے کئی بار لکھ چکاہوں کہ کسی بھی ملکی یا غیر ملکی مسئلے پر بھارت کا حوالہ دیتے ہوئے بڑی تکلیف ہوتی ہے۔ اُس وقت کے وزیر اعظم جواہر لال نہرو نے پچاس کی دہائی میں پاکستان کے وزرائے اعظم کی ہر چند ماہ میں تبدیلی پر پھبتی کستے ہوئے کہا تھا کہ اتنی میں شیروانیاں تبدیل نہیں کرتا اُس سے کم وقت میں پاکستان کا وزیر اعظم تبدیل ہوجاتا ہے ۔ ۔ ۔ جی ہاں ، 1951سے 1958کے دوران سات سال میں آٹھ وزرائے اعظم ۔ ۔۔ کپتان وزیر اعظم ان دنوں اپنے وزیروں
بدھ 27 مئی 2020ء

نور جہاں،سرور جہاں…(2)

هفته 23 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
نور جہاں سرور جہاں کورونا وائرس کے بیچ ہنگام اس لئے کھینچ مارا تھا کہ کورونا کے خوف و دہشت کے باعث اسکرینوں پر جو شور و غوغا ہورہا ہے ۔ ۔ ۔ اُس سے پہلے ہی سے ذہنی بلکہ نفسیاتی طور پر پریشانی میں مبتلا گھروں میں مہینوں سے نظر بندوں کے منہ کا ذائقہ بدلا جائے۔ ۔ ۔ مگر حسب ِ روایت ٹوئٹر اور فیس بُک پر ہا ہا کار مچی ہے کہ ایک تو ہمارے ہاں ’’ہیرو‘‘ خال خال ہوتے ہیں،اُن کے بھی آپ گڑھے مردے اکھیڑ نے لگتے ہیں۔ ۔۔ ۔ چلیں،معذرت ۔
مزید پڑھیے


نور جہاں…سرور جہاں

بدھ 20 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
کورونا کی جبری گھر بندی نے یہ ضرور کردیا ہے کہ برسوں سے گرد پڑی کتابوں کی نہ صرف صفائی ہوگئی بلکہ یہ روح کی غذا بھی بنی ہوئی ہیں۔ساتھ ہی یہ بھی طے کرلیا ہے کہ صرف ’’نرم گرم‘‘ پڑھا جائے۔ فراق ؔگورکھپوری یاد آگئے۔کراچی کے ایک مشاعرے میںپچاس کی دہائی میںآئے تو سامعین پر نظر ڈالی اور اوراق پلٹتے جاتے ،ساتھ ہی کہتے جاتے:’’یہ ذرا سخت رہے گا،یہ بھی گراں رہے گا،ہاں،یہ چل جائے گا۔‘‘اور پھر یہ شعر پڑھا: ذراوصال کے بعد آئینہ تو دیکھ اے دوست تیرے جمال کی دوشیزگی نکھر آئی سو ہم
مزید پڑھیے


اور اب 18ویں ترمیم

هفته 16 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
پیپلز پارٹی اور ن لیگی قیادت نے 18ویں ترمیم کو جمہوریت کے مستقبل کے لئے زندگی اور موت کا مسئلہ بنوایا ہے۔چلیں تسلیم کہ 1973ء کے متفقہ آئین پر دستخط کرنے کے بعد کم و بیش تین دہائی بعد پیپلز پارٹی اور ہاں،اُس کے ساتھ اُس وقت کی سب سے بڑی مخالف ن لیگ ہی نہیں۔ ۔ ۔ ولی خان کی اے این پی ،مولانا فضل الرحمان کی جمعیت ،بزنجو کی نیشنل پارٹی ،جماعت اسلامی اور ق لیگ سمیت تمام جماعتوں کو اس بات کو کریڈٹ دینا چاہئے کہ انہوں نے ماضی میں خاص طور پر فوجی ڈکٹیٹر جنرل ضیاء
مزید پڑھیے


اور اب۔ ۔ ۔ 18ویں ترمیم…(2)

بدھ 13 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
اپوزیشن جماعتیں۔ ۔ ۔ جو مرکز اورصوبوں میں ایک سے کئی بار حکومتیں کر چکی ہیں۔ ۔ ۔ اور جنہوں نے اپنے اپنے دور حکومت میں ، اپنے اپنے سیاسی اور ذاتی مفادات کے تحت 1973ء کے آئین میں ایسی ایسی ترامیم کیں کہ قیام ِ پاکستان کے 26سال بعد تمام سیاسی جماعتوں نے جس آئین پر متفقہ طور پردستخط کئے۔ ۔ ۔ بازاری زبان میں اُس کا جلو س ہی نکل گیا۔ ہئے ،ہئے۔۔ ۔ ایک عرصے بعد یہ اصطلاح یا محاورہ زبان پر آیا ہے کہ جسے شاعر ِ عوام حبیب جالبؔ نے
مزید پڑھیے



اور اب ،18 ویں ترمیم

هفته 09 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
کورونا وائرس کے بیچ ہنگام میں 18ویں ترمیم کا ’’شوشہ‘‘ کیوں چھوڑا گیا۔ ۔ ۔ اور اس پر خود حکمراں جماعت کی قیادت کیوں متضاد بیانات دے رہی ہے ۔ ۔ ۔ یہ اپنی جگہ خود ایک سوالیہ نشان ہے کہ کیا یہ بھی ایک حکمت عملی کے تحت ہے۔ ۔ ۔ یا واقعی تحریک انصاف کی حکومت ،اسٹیبلشمنٹ کی چھتر چھایہ میںیہ طے کر چکی ہے کہ 18ویں ترمیم میں سے ایسی ساری ترامیم نکال دی جائیں،جس سے صوبے ماشاء اللہ مکمل خود مختار بن چکے ہیں۔ 18ویں ترمیم 2010ء میں پاکستان پیپلز پارٹی کے دور میں
مزید پڑھیے


ڈاکٹر فرقان کی موت۔ ۔ ۔ ؟

جمعرات 07 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
اسکرین سے آنے والی روتی بلکتی ،سسکیوں کے درمیان بے حسی ،بے بسی کی موت مرنے والے ڈاکٹر فرقان کی بیوہ کی سسکتی ہوئی آواز سے قلم تھرا رہا ہے۔ ۔ ۔ وزیر اعظم عمران خان، صدر ِ پاکستان ڈاکٹر عارف علوی ،چاروں صوبوں کے گورنروں،وزرائے اعلیٰ،وزیروں ،مشیروں ،معاونین ِ صحت سے متعلق سرکاری اداروں ،فلاحی تنظیموں کے بیان ۔ ۔ ۔ سب بے معنی لگ رہے ہیں۔ڈاکٹر فرقان کی بیوہ اسکرین پر کہہ رہی تھیں میں چار لڑکیوں کی ماں اور بوڑھی والدہ کے ساتھ رہتی ہوں ۔گھر میں میرے شوہر کے علاوہ کوئی اور مرد نہیں
مزید پڑھیے


’’ آج مئی کا پہلا دن ہے‘‘

هفته 02 مئی 2020ء
مجاہد بریلوی
سرور ؔبارہ بنکوی یاد آرہے ہیں۔ تھے تو روایتی غزل کے شاعر مگر ستّر کی دہائی میں جب محنت کشوں کی تحریک تھی تو ہمارے مطالبے پر سرور ؔ صاحب نے یوم ِ مئی کے مشاعرے کے لئے ،جو نظم پڑھی وہ آج بھی مصرعہ بہ مصرعہ یاد ہے ۔ ۔ ۔ آج مئی کا پہلا دن ہے آج کا دن مزدور کا دن ہے سرور ؔ صاحب خوبصورت لہجے کے شاعر تو تھے ہی مگر فلم ڈائریکٹر اور اس سے بھی زیادہ نہایت نفیس انسان تھے ۔ڈھاکہ میں کئی یاد گار فلمیں بنائیں۔ممتاز افسانہ نگار ہاجرہ مسرور کے افسانے پر
مزید پڑھیے


کس سے منصفی چاہیں؟ (1)

بدھ 29 اپریل 2020ء
مجاہد بریلوی
معیشت کا آدمی نہیں ہوں ۔ ۔ ۔ پروفیشنلزم اور پرفیکٹزم کازمانہ ہے۔اعدادو شمار کے ہیر پھیر میںبڑک مار دی تو صحافت میںچار دہائی بِتانے کے بعد معافی کی بھی کوئی گنجائش نہیں۔اب یہی دیکھیںکہ ہمارے عالمی شہرت کے مالک مولانا طارق جمیل دعائے خیر کرتے کرتے ’’میڈیا‘‘ کی بات کر بیٹھے ۔ ۔ ۔ یقینا ،اُن کی بڑائی دیکھیں کہ اگلے ہی دن ہاتھ جوڑ کر اسکرینوں پر معافی مانگی۔ ۔ ۔ مگر اب ان کی نیک نیتی سے معافی کو بھی متنازعہ بنادیا گیاکہ خواتین سے بھی اسی طرح معافی مانگیں ۔ مگر اچھی بات
مزید پڑھیے


وزیر اعظم کی درخواست

هفته 25 اپریل 2020ء
مجاہد بریلوی
تحریک انصاف کے سربراہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کم و بیش تین گھنٹے درجن ایک چینلوں کے سینیئر اینکروں کے سامنے نہ صرف ان کے تیکھے سوالوں کے جوابات دیتے رہے، وہیں بڑے خلوص اور درد مندی سے اِن سے کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لئے تعاون کی درخواست بھی کرتے رہے۔ وزیر اعظم پاکستان کا زیادہ زور اپنے خطاب میں ہمارے محترم علمائے کرام سے تھا کہ وہ رمضان کے مبارک مہینے میں اول تو نماز اور تراویح گھر میں ادا کریں اور اگر یہ فریضہ انجام دینا بھی چاہتے ہیں تو حکومت کی جانب سے دی
مزید پڑھیے