محمد حسین ہنزل



کوئٹہ، ژوب شاہراہ پر المناک حادثات۔ذمہ دار کون ؟


کوئٹہ تا ژوب۔ڈی آئی خان شاہراہN50 پر گزشتہ اتوار کو ہونے والا حادثہ اپنی نوعیت کا دل ہلانے والا حادثہ تھا۔عید الفطر اپنے گھروںپر منانے کے متمنی مسافروں کو کیا خبر تھی کہ افطار کے بعد ژوب کی طرف نکلنے والی ویگن درحقیقت ان کی غیر طبعی موت کامژدہ سنارہی ہے ۔رات ایک بجے ضلع قلعہ سیف اللہ سے آگے جونہی یہ مسافر بردار ویگن علی خیل کے علاقے میں پہنچی تو مخالف سمت سے نمودار ہونے والا ٹرک اس کو کریش کرگیا- ژوب ہی سے تعلق رکھنے والے ان مسافروں میں سے چودہ موقع پرہی جاں بحق ہو
پیر 10 جون 2019ء

رویت ہلا ل ۔ مسئلہ کیا ہے ؟

منگل 04 جون 2019ء
محمد حسین ہنز ل
رویت ہلا ل یا چاند دیکھنے کے مسئلے کو ہمارے ہاں اتنا اختلافی بنادیاگیا ہے کہ بدقسمتی سے بہتوں کواب شرعی احکامات اور نصوص پربھی انگشت نمائی کا موقع مل گیاہے۔رویت ہلال کے معاملے میںہر سال رمضان المبارک اور عیدالفطرکے موقع پر قوم تقسیم کے عمل سے دوچارہوکررہ جاتی ہے ۔ دودو عیدیں منانے کی رَیت تو اس ملک میں 1958 ء سے چل پڑی بلکہ بسا اوقات ملک میں تین عیدیں منائی گئیں ہیں جس کی پہلی مثال ہمیں1961ء میں مرحوم ایوب خان صاحب کی حکومت میں ملتی ہے ۔کہا جاتاہے کہ ا
مزید پڑھیے


فرشتہ مہمند کا بہیمانہ قتل اور شیاطین

جمعرات 23 مئی 2019ء
محمد حسین ہنز ل
گل نبی مہمند کا تعلق خیبرپختونخوا کے ضلع مہمندسے ہے ۔یہ شریف النفس اور غریب سبزی فروش ایک عرصے سے اپنے اہل و عیال سمیت اسلام آبادمیں کرائے کے گھرمیں رہائش پذیر ہیں۔دس سالہ فرشتہ مہمندجوکہ دوسری جماعت کی طالبہ تھیں، گل نبی مہمند کی ایک ننھی گڑیا تھی۔ پندرہ مئی کوجب یہ گڑیا کھیلنے کیلئے گھر سے نکلی تو پھربدقسمتی سے پھر واپس کبھی نہیں آئی ۔پوچھ گچھ اوربھاگ دوڑ کے بعد گل نبی جب اپنی گڑیا کوپانے میں ناکام ہوئے توانہوں نے اس واقعے کی ایف آئی آر درج کروانے کیلئے مقامی پولیس تھانے کارخ کیا ۔گل نبی
مزید پڑھیے


یہ منفعت بخش تجارتیں،یہ رنگین دکانداریاں

پیر 20 مئی 2019ء
محمد حسین ہنز ل
خدمت کے نام پر یار لوگوں کی دکانداریاں خوب چلتی ہیں یوںبے روزگاری کے اس موسم میں آج کل ہرایک کاکسی نہ کسی نام پر دکان لگانے کودل کرتاہے۔ آج کل ہم اگر اپنے شہروں بالخصوص مضافاتی علاقوں میں جائیں توآپ کو تعویذ کرانے، جن اوربھوت نکالنے والوںکی دکانداریاںبہت مزے میں ملیں گی ۔بلکہ یوں کہیے کہ اس نوع کی تجارت ہرحوالے سے سدابہارتجارت ہوتی ہے۔ ان لوگوں نے چونکہ اپنی دانست کے مطابق (نعوذبااللہ) انسانوںکی تقدیربدلنے جیسے اہم کام کا بیڑہ اٹھا رکھا ہوتا ہے ،سُو ان کی دکانوں پر گاہک زیادہ بھی آتے ہیں اور تاش کے پتوں
مزید پڑھیے


بلوچستان۔ پبلک سروس کمیشن اورطلباء کی مایوسی

منگل 30 اپریل 2019ء
محمد حسین ہنز ل
پبلک سروس کمیشن کا ادارہ طلباء کے درمیان مقابلے کے امتحانات منعقد کروانے والا ٹرانسپیرنٹ ادارہ سمجھا جاتاہے ۔ میرٹ پر اعلیٰ سرکاری ملازمتوں پر تعیناتیاں کرنا اس ادارے کی اولین ترجیح ہوتی ہے ۔ دوہزاربارہ میں کمیشن کے اسی وقت کے چیئرمین جناب اشرف مگسی نے اپنے ناجائز اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے سیکشن آفیسرکی آسامیوں پر اپنی تین قریبی خواتین رشتہ داروں اور کئی اہم پوسٹوں پر بہت سے نااہل لوگوں کو بھرتی کیا۔غالباً یہ خبر پہلے ایک ٹی وی چینل پر بریک ہوئی اور پھرحرکت میں آکر نیب نے کوئٹہ میں کمیشن کے دفترپر چھاپہ مار
مزید پڑھیے




صاف چھپتے بھی نہیں سامنے آتے بھی نہیں

اتوار 28 اپریل 2019ء
محمد حسین ہنز ل
روز پینترے بدلنے والے سیاستدانوں کی باتوں پر بھروسہ مزید وہی لوگ کرینگے جومحض اندھی تقلیدکے خبط میں مبتلا ہوتے ہیں۔ورنہ صاحب ِ موقف اور صاحب ِ رائے لوگ اب جان گئے ہیں کہ مملکت خداداد کے سیاسی طائفے کا نہ توکوئی قبلہ معلوم ہے نہ ہی کوئی دوٹوک موقف ۔یہ گویا ہر وقت چلمن سے لگے بیٹھے رہتے ہیں اور صبح وشام گرگٹ کی طرح رنگ بدلتے رہتے ہیں،بقول داغ دہلوی
مزید پڑھیے


غنی خان کی دنیا

اتوار 21 اپریل 2019ء
محمد حسین ہنز ل
غنی خان کی شاعری کے بارے میں کچھ کہنا یا لکھنا ایک مشکل کام ہے ۔ کئی دفعہ اس مشکل کام کو کرنے کا ارادہ کرلیتاہوں لیکن پھر ہچکچاجاتاہوں کہ ایک ایسے شاعر کے بارے میں آخر کیا لکھوں جوکسی کے ہاں فلسفی اورکسی کے نزدیک وہ ایک فلسفی شاعرتھے جبکہ خود انہوں نے اپنے آپ کوہمیشہ لیونے فلسفی کہاتھا۔جہاں تک میں نے ان کو پڑھا یا سنا ہے تو میں سمجھتا ہوں کہ مرحوم غنی خان مذکورہ تینوں صفات کے حامل شاعر تھے۔ان کی لازوال شاعری میں تصوف کے جلوے بھی ملتے ہیں اور فلسفیانہ پیچیدگیاں بھی ۔
مزید پڑھیے


’’تکبر اور فساد یا ام الخبائث‘‘

اتوار 14 اپریل 2019ء
محمد حسین ہنز ل
کیا ہم نے کبھی غور کیا ہے کہ " تکبر " کیا ہوتا ہے ۔ اسی طرح ہم میں سے بے شمار لوگ " لفظ فساد " کا استعمال تو کرتے ہیں لیکن اکثریت کو اس لفظ کا مفہوم یا تو سرے سے معلوم نہیں ہے یا پھر اس کو روایتی انداز میں لیتے ہیں ۔ مثال کے طور پر ہمارے معاشرے میں بہت سے لوگ کسی کی پرآئش زندگی، خوش پوشی اور نظافت کو بھی تکبر کے کھاتے میں ڈال دیتے ہیں ۔ اس بارے میں راقم نے بذات خود بے شمار لوگوں کو یہ کہتے سنا
مزید پڑھیے


دینی مدرسوں میں کیا پڑھایا جاتاہے ؟ گزشتہ سے پیوستہ

بدھ 10 اپریل 2019ء
محمد حسین ہنز ل
اسی طرح معقولات میںقطب الدین رازی ؒکی قطبی ،قاضی محب اللہ بہاری(1707ء ) کا سلم العلوم، میرسیدشریف جرجانیؒ کی کتابیںمیر قطبی اور صغریٰ کبریٰ جبکہ اثیرالدین ابہریؒ( 1344ء )کی ایساغوجی ،علامہ تفتازانی ہی کی تہذیب اور عبداللہ یزدیؒ(1575 ء )کی شرح تہذیب جیسی کتابیں درس نظامی کے تحت پڑھانے کا معمول تھا۔ درس نظامی کا دوسرا دور1866میںدارالعلوم دیوبند کے قیام کے بعد شروع ہوتاہے۔ دارالعلوم دیوبند میں بھی مولانا نظام الدین سہالویؒکے مذکورہ نصاب درس نظامی کو اپنایاگیاتاہم اس میں کچھ ترمیمات کی گئیں ۔مثلاً تفسیر میں دارالعلوم دیوبند والوں نے دور اول کے درس نظامی کی نہج پرطلباء کو
مزید پڑھیے


دینی مدارس میں کیا پڑھایا جاتاہے ؟

بدھ 03 اپریل 2019ء
محمد حسین ہنز ل
اہل مدارس کے حوالے سے بات کرنا ہمارے ہاں ہرکوئی اپنا استحقاق سمجھتاہے لیکن اس طبقے کے حق میںکلمہ ِ خیر نہ کہنے پرگویاسب نے اجماع کیاہے۔ باالخصوص نائن الیون ڈرامے کے بعدنہ صرف یہ طبقہ ہرطرف سے زیادہ زیرعتاب رہا بلکہ ان اداروں کے تعلیمی نصاب میں بھی کیڑے نکالنے کی رَیت چل پڑی ۔ سب سے بڑھ کر ستم ظریفی یہ ہے کہ مدارس کے نصاب سے ہر وہ شخص زیادہ الرجک نظرآتاہے جن کومذکورہ نصاب کے بارے میں کچھ بھی پتہ نہیں۔ موجودہ حکومت میں ایک اہم عہدے پر براجمان وزیرصاحب نے تو گزشتہ دنوںیہ دعویٰ کرلیاکہ
مزید پڑھیے