Common frontend top

محمد عامر خاکوانی


’’کنگ رچرڈ‘‘


یہ نام ہے ایک مشہور ہالی وڈ بائیوپک فلم کا۔ بائیوپک فلم وہ ہوتی ہے جس میں کسی حقیقی شخصیت کی زندگی کے واقعات بیان کئے جائیں۔ اس فلم میں ایک ایسے سیاہ فام یا افریقن امریکن شخص کی عزم وہمت سے معمور داستان بیان کی گئی جس سے بہت لوگ انسپائریشن لے سکتے ہیں۔ یہ شخص رچرڈ ولیمزRichard Williams ہے جس کی دو بیٹوں نے ویمن ٹینس کی دنیا میں اپنا سکہ چلایا۔ وینس ولیمز اور سرینا ولیمز۔ ٹینس کی جدید تاریخ میں شائد ان سے بہترخواتین کھلاڑی نہیں آئیںگی۔ رچرڈ نے یہ
اتوار 16 جون 2024ء مزید پڑھیے

قومی کرکٹ ٹیم میں سرجری ضروری ہے مگر کہاں ؟

منگل 11 جون 2024ء
محمد عامر خاکوانی
پاکستان کی انڈیا سے بدترین شکست کے بعد اس میں تو کوئی شک نہیں کہ قومی کرکٹ ٹیم میں سب ٹھیک نہیں۔ کئی مسائل نظر آ رہے ہیں، کہیں صلاحیت اور تکنیک کی کمی اور خودغرضی جھلکتی ہے جبکہ گروپنگ کا اندازہ بھی ہو رہا ہے، کپتانی کمزور ہے، دیگر ایشوز بھی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ امریکہ جیسی نوزائیدہ ٹیم سے بھی شکست ہوگئی ، حالانکہ وہ میچ آرام سے جیت لینا چاہیے تھا، بھارت سے بھی جیتا ہوا میچ ہم ہار گئے۔ اس میں بھارتی ٹیم کی اعلیٰ کارکردگی سے زیادہ ہماری کمزور اور
مزید پڑھیے


بھارتی الیکشن: تین اہم مفروضے اور ان کا جائزہ

جمعه 07 جون 2024ء
محمد عامر خاکوانی
گزشتہ روز بعض واٹس ایپ گروپوں میں صحافی دوستوں کے ساتھ اس بحث میں خاصا وقت صرف ہوا کہ بھارت میں مودی جی کی شکست(یا معمولی برتری) کے پیچھے اصل فیکٹرز کیا ہیں؟ ان احباب کا خیال تھا کہ بھارتی اسٹیبلشمنٹ نے وزیراعظم نریندرمودی کو دھچکا پہنچایا ہے ، ورنہ بی جے پی کو یوپی، مقبوضہ کشمیر اور ایودھیا وغیرہ میں اپ سیٹ شکست نہ ہوتی۔ آج کے کالم میں انہی دو تین مفروضوں پر بات ہوگی۔ اصل صورتحال سمجھنے کے لئے اپنے روٹین کے ریسرچ ورک، بھارتی اخبارات اور جرائد کے سکیننگ کے
مزید پڑھیے


بھارتی انتخابات :کس نے کیا کھویا، کیا پایا؟

جمعرات 06 جون 2024ء
محمد عامر خاکوانی
بھارتی پارلیمانی انتخابات کے نتائج آپ لوگوں کے سامنے آ ہی چکے ہیں۔ بی جے پی کے نریندرمودی تیسری بار وزیراعظم تو بننے جا رہے ہیں،مگر انہیں انتخابات میں کئی غیر متوقع بڑے شدید دھچکے لگے ہیں۔ ایک لحاظ سے یہ مودی جی اور ان کی طلسماتی شخصیت کی شکست ہے ۔ بی جے پی اپنے طور پر سادہ اکثریت نہیں لے پائی اورحکومت سازی کے لئے وہ اپنے بڑے اتحادیوں خاص کر بہار کے نتیش کمار(بارہ نشستیں) ، تلنگانہ کے این سی نائیڈو(سولہ نشستیں)، شیو سینا (سات نشستیں)اورچراگ پاسوان کی لوک جن
مزید پڑھیے


’’ قصہ سیفل ملوک ‘‘

بدھ 22 مئی 2024ء
محمد عامر خاکوانی
تین چار دن پہلے سرائیکی کے نامور شاعر مولوی لطف علی بہاولپور ی کے منظوم قصہ’’ سیفل نامہ‘‘ کا ذکر آیا۔ مولوی صاحب نے لگ بھگ ڈھائی سو سال قبل یہ قصہ لکھا تھا۔ سرائیکی زبان کا یہ کلاسیک قصہ مختلف صورتوں میں شائع ہوتا رہا، مگر اس میں بہت سی اغلاط تھیں، کئی الحاقی مصرعے بھی تھے، چھپائی بھی ناقص۔ معروف سرائیکی قوم پرست دانشور،مصنف ، محقق مجاہد جتوئی نے سالہا سال کی محنت شاقہ کے بعد ’’سیفل نامہ بالتحقیق ‘‘ شائع کیا ہے۔ عکس پبلی کیشنز لاہور نے بڑے سائز میں یہ اہم کتاب حسین
مزید پڑھیے



’’سیفل نامہ بالتحقیق‘‘ از مولوی لطف علی بہاولپوری

هفته 18 مئی 2024ء
محمد عامر خاکوانی
قصہ سیف الملوک ایک بہت مشہور دیومالائی یا اساطیری داستان ہے، جسے دنیا کی بہت سی زبانوں میں بے شمار مرتبہ لکھا گیا ہے۔ یقین سے نہیں کہا جا سکتا کہ اس کی ابتدا کہاں سے ہوئی، مختلف روایات ہیں۔ ان میں سے ایک روایت کے مطابق یہ ہندوستان کی قدیم دیومالائی داستانوں میں سے ایک ہے جو مختلف ادوار اور زبانوں سے گزر کر عربی تک پہنچی، وہاں سے داستان الف لیلہ کا حصہ بنی اور پھر کئی مغربی زبانوں میں بھی ترجمہ ہوئی۔ اردو ، فارسی، سندھی، سرائیکی، پنجابی، پشتو، بنگلہ وغیرہ میں بھی یہ
مزید پڑھیے


بَن باس :ـ ریاست ہو ماں جیسی

جمعرات 16 مئی 2024ء
محمد عامر خاکوانی
بَن باس معروف مصنف، ادیب راجہ انور کے بیرون ملک اسفار کی روداد ہے۔ وہ جنرل ضیا کے مارشل لادور میں 1979 میں پاکستان سے جبری جلاوطنی پر گئے اور 1997میں واپس وطن لوٹے، بعد میں بھی وہ مختلف وزٹ کرتے رہے۔ بن باس کے اکثر ابواب اس عرصے میں مختلف ممالک کے سفر یا وہاں قیام کے دوران پیش آنے والے اہم ، دلچسپ واقعات کی تفصیل ہیں۔یہ کتاب بہت ہی دلچسپ ہے اور اسے پڑھتے ہوئے بار بار یہ خیال آتا ہے کہ کاش ایسا ہمارے اپنے ملک پاکستان میں بھی ہوجائے۔ راجہ انور صاحب
مزید پڑھیے


’’جھوٹے روپ کے درشن‘‘ سے’’ بَن باس تک ‘‘

جمعه 10 مئی 2024ء
محمد عامر خاکوانی
راجا انور ممتاز ادیب،دانشور اور سیاسی ورکر رہے ہیں، وہ ایک زمانے میں لیفٹ کی طلبہ سیاست کا ایک اہم کردار تھے۔ ستر کی دہائی کے اوائل میں پنجاب یونیورسٹی کے سالانہ یونین الیکشن میں رائیٹ اور لیفٹ کی کشمکش مشہور ہے ، اس زمانے کے طلبہ کردار بھی معروف ہوئے۔راجہ انور تب پنجاب یونیورسٹی سے فلسفہ میں ماسٹر کر رہے تھے۔بعد میں پیپلزپارٹی کا حصہ بنے۔1973-77 وہ وزیراعظم بھٹو کے مشیر برائے طلبہ رہے ۔جنرل ضیا نے بھٹو صاحب کی حکومت کا تختہ الٹا تو پیپلزپارٹی پر افتاد نازل ہوئی، رہنمائوں اور کارکنوں کے لئے زندگی دشوار
مزید پڑھیے


صادق خان کی تاریخی کامیابی

منگل 07 مئی 2024ء
محمد عامر خاکوانی
پاکستانی نژاد صادق خان نے لندن کے میئر کا الیکشن جیت لیا، وہ تیسری بار مئیر منتخب ہوئے ہیں۔ یہ اس اعتبار سے تاریخی کامیابی ہے کہ آج تک کوئی بھی شخص لندن کا دو بار سے زیادہ میئر نہیں بن سکا۔ برطانیہ کے سابق وزیراعظم بورس جانسن دو بار لندن کے میئر بنے تھے۔لبیر پارٹی سے تعلق رکھنے والے صادق خان نے اب تیسری بار میئر بن کر ایک نیا ریکارڈ قائم کیا ہے، ان کا پاکستانی نژاد اور مسلمان ہونا دیکھا جائے تو یہ کامیابی مزید بڑی اور حیران کن ہوجاتی ہے۔ بعض حلقے تو
مزید پڑھیے


جماعت اسلامی کیا سوچ رہی ہے؟

جمعه 03 مئی 2024ء
محمد عامر خاکوانی
امیر جماعت اسلامی حافظ نعیم الرحمن کی سینئر صحافیوں سے گفتگو کے حوالے سے پچھلی نشست میں بات ہوئی۔ حافظ نعیم صاحب کی گفتگو میں مجھے اندازہ ہوا کہ سردست جماعت اسلامی کی پالیسی میں کسی بنیادی نوعیت کی تبدیلی نہیں آ رہی یا کہہ لیں کہ سردست یہ ممکن نہیں۔ جماعت اسلامی کی یہ خوبی تو بہرحال ہے کہ ان کے فیصلے اجتماعی طور پر ہوتے ہیں۔ جماعت کے سیٹ اپ میں صرف مرکزی امیر جماعت اسلامی کو اراکین جماعت براہ راست منتخب کرتے ہیں یا مرکزی شوریٰ کا انتخاب
مزید پڑھیے








اہم خبریں