BN

محمد عامر خاکوانی


کرونا: گھروں میں مقید افراد کیا کریں؟


کرونا وائرس کی وبا ایسی خوفناک ہے کہ اس نے محاورتاً نہیں بلکہ عملی طور پر زندگی کا پہیہ جام کر دیا ہے۔ یکا یک لاکھوں ، کروڑوں لوگ اگلے دو ہفتے تک گھروں تک محدود ہوگئے۔ مجھے یاد نہیں پڑتا کہ میری شعور کی زندگی میں ملک گیر سطح پر کبھی ایسا ہوا ہو۔بہت لوگوں کے لئے یہ بالکل ہی نیا تجربہ ہے۔ چھوٹے شہروں اور قصبات میں بھی لاک ڈائون کی پابندی کرائی جا رہی ہے،۔وہاں کی زندگی پہلے ہی کسی حد تک محدود ہوتی ہے، اب محدود تر ہوگئی۔سوال یہ ہے کہ کیا ہم نے
بدھ 25 مارچ 2020ء

گھر پر رہتے ہوئے کیا کیا جائے؟

اتوار 22 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
کورونا وائرس ایسی وبا کے تناظر میں ملی تعطیلات کو والدین کس طرح بچوں کے لئے مفید بنائیں، یہ اہم سوال ہے۔ میں چھٹیوںمیں بچوں کو انجوائے کرنے دینے کے حق میں ہوں، مگر تفریح ہی میں اگر کچھ تربیت ہوجائے تو کیا ہی بات ہے۔ بچوں کی زندگی کو متنوع طریقوں سے متحرّک رکھنے کو ایسا کیا کِیا جائے کہ وقت مثبت اور زیادہ تر مفید انداز میں گذرے؟اس حوالے سے مختلف ماہرین سے بات چیت کرتا رہا۔ ہمایوں تارڑ معروف سوشل میڈیا ایکٹوسٹ، بلاگر، استاد ، موٹیویشنل سپیکر اور ٹرینر ہیں۔ برسوں وہ بچوں کی تدریس سے
مزید پڑھیے


وبا کے دنوں میں عہد

جمعه 20 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
کوروناوائرس جس بڑے پیمانے پر خطرناک وبا کی صورت اختیار کر چکی ہے، اسے کنٹرول کرنے کے لئے صرف حکومت یا انتظامیہ کی کوشش کافی نہیں، سماجی تنظیموں اور خدمت خلق کا جذبہ رکھنے والوں کو بھی ہاتھ بٹانا ہوگا۔ یہ وقت ایک دوسرے پر تنقید کا نہیں۔ یہ بات البتہ ماننا پڑے گی کہ پاکستان کی چاروں صوبائی حکومتوں اور وفاقی حکومت میں سے سندھ حکومت کی کارکردگی سب سے بہتر رہی۔ ان بحرانی لمحات میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور ان کی ٹیم نے غیرمعمولی فعالیت اور مستعدی کا مظاہرہ کیا۔ بلوچستان سے آنے والے زائرین کو
مزید پڑھیے


آزمائش کے دنوں کا نصاب

بدھ 18 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
شہرکی بارونق سڑک پر ٹریفک رواں دواں تھی،اشارہ سرخ ہوا توگاڑیاں رک گئیں۔ چند لمحات کے بعد اشارہ سبز ہونے پر گاڑیاں چل پڑیں مگر ایک کار حرکت میں نہ آئی۔ تھوڑے انتظار کے بعد پیچھے والوں نے ہارن بجانے شروع کر دئیے۔ اس کار کا ڈرائیور پریشانی کے عالم میں سٹیرنگ ہاتھوں میں تھامے بیٹھا رہا۔ آخر دائیں بائیں سے چند نوجوان اترے اور اس جانب لپکے، یہ سوچ کر کہ اگر گاڑی خراب ہوگئی ہے تو اسے دھکا لگا کر سائیڈ میں کر دیں ۔شیشہ کھٹکھٹایا گیا تو ڈرائیور حواس باختہ باہر نکلا۔ بے بسی سے اس نے
مزید پڑھیے


نئے صوبوں کی بحث، چند اہم پہلو

منگل 17 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
نئے صوبے بنانے کی جب بھی بات کی جاتی ہے، تین چار قسم کے ردعمل سامنے آتے ہیں۔ بعض لوگ تو نیا صوبہ بنانے کے سوال پریوں مضطرب، پریشان اوراَن ایزی ہوجاتے ہیں کہ صوبہ بنانے کے بجائے ان کے رہائشی پلاٹ یا زرعی زمین پر قبضے کی پلاننگ ہو رہی ہے۔ بھائی لوگو! دنیا بھر میں نئے صوبے بنتے رہتے ہیں۔، یہ ایک فطری عمل ہے،جسے کوئی نہیں روکتا۔ روک بھی نہیں سکتا۔ نئی تحصیلیں، نئے ضلعے، نئے ڈویژن بنتے رہتے ہیں، حتیٰ کہ ان میں سے بعض ڈویژنز کو اکٹھا کر کے الگ صوبہ بنا دیا جاتا ہے۔
مزید پڑھیے



وہ بازی جو ہار دی گئی

منگل 10 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
آٹھ مارچ کا دن گزر گیا، خواتین مارچ کا قضیہ بھی ایک طرح سے نمٹ گیا۔ اب اگلے سال مارچ کے ابتدائی دنوں میں پھر سے غلغلہ اٹھے گا، خواتین مارچ کے حامی اور مخالف اپنی تلواریں سونت کر میدان میں اتر آئیں گے،میڈیا اور سوشل میڈیا کا سب سے بڑا موضوع یہی ہوگا۔ کیا تب تک حالات پرسکون رہیں گے ؟جس نے جو کچھ کرنا تھا کر لیا، اب وہ آرام سے بیٹھ جائے؟ اصولی طور پر تو ایسا نہیں ہونا چاہیے ۔ خواتین مارچ بذات خود کوئی ایونٹ نہیں، بنیادی طور پر یہ خواتین کے مسائل کو نمایاں کرنے
مزید پڑھیے


عورت مارچ سے متعلق تنازعات کیوں؟

جمعه 06 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
آٹھ مارچ کو خواتین کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔ خاکسار کا تعلق چونکہ صحافت کی ایک شاخ میگزین جرنلزم سے ہے، صحافتی زندگی کے چوبیس میں سے اکیس سال میگزینوں کو سنوارتے، سجاتے گزرے۔ پچھلے اٹھارہ برس مسلسل مختلف اخبارات کے کلر ایڈیشن اور سنڈے میگزین کی ذمہ داری میں گزرے ۔میگزین والوں کو خاص دنوں کی مناسبت سے خصوصی ایڈیشن تیار کرنے ہوتے ہیں۔ قومی اہمیت کے دن جیسے چودہ اگست، تیئس مارچ، یوم اقبال، یوم قائداعظم ، چھ ستمبر وغیرہ ہوںیا خاص مذہبی دن جیسے عیدین، بارہ ربیع الاول ، شب برات، شب معراج، عاشورہ محرم،خلفا راشدین
مزید پڑھیے


افغان طالبان، چند مغالطے، مبالغے

جمعرات 05 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
افغان طالبان اور امریکہ کے مابین امن معاہدہ ہونے کے فوراً بعد ہی افغان صدر اشرف غنی کی جانب سے آنے والے منفی ردعمل نے کئی اہم سوالات پیدا کئے ہیں۔ یوں لگ رہا ہے کہ اس امن معاہدہ سے افغانستان میں امن پیدا ہونے کی جو خواہش پیدا ہوئی تھی، وہ اتنا جلد شائد پورا نہ ہو ، ابھی کچھ مراحل سے گزرنا پڑے گا۔یہ نکتہ بھی ذہن میں رکھنا چاہیے کہ معاہدہ بنیادی طور پر امریکہ اور افغان طالبان کے مابین ہوا اور طالبان صرف امریکی فوجوں پر حملہ نہ کرنے کے پابند ہیں، جبکہ افغان حکومت اور
مزید پڑھیے


طالبان امریکہ امن معاہدہ،کون فتح یاب ہوا؟

اتوار 01 مارچ 2020ء
محمد عامر خاکوانی
افغان طالبان اور امریکہ کے مابین امن معاہدہ ہوجانے کے بعد افغان مسئلے ختم نہیں ہوگئے، ابھی بہت کچھ ہونا باقی ہے۔ اس میں بہرحال کوئی شک نہیں کہ یہ معاہدہ اس اٹھارہ انیس سالہ جنگ کے خاتمے کے حوالے سے بہت اہم موڑ ہے۔ جس طرح ہر معاہدے میں ہوتا ہے، فطری طور پر اس بار بھی یہ سوال پیدا ہوا کہ کون سا فریق فاتح ہے ؟ کسے ایڈوانٹیج ملا اور کون گھاٹے میں رہا؟ نائن الیون کے بعد افغانستان کے تبدیل شدہ منظرنامے کے تین چار بنیادی فریق یا سٹیک ہولڈر ہیں اور ایک دو ضمنی مگر اہم
مزید پڑھیے


افغان طالبان، ایک بنیادی سوال کا جائزہ

بدھ 26 فروری 2020ء
محمد عامر خاکوانی
افغان طالبان اور پاکستانی ریاست کی افغان پالیسی کے حوالے سے گزشتہ کالم کو اپنی فیس بک وال پر شیئر کیا تو بعض دوستوں نے سوالات اٹھائے۔ افغان ایشو اب خاصا پیچیدہ ہوچکا ہے، اس کے کئی پہلوا ور پرتیں ہیں۔ اس سمجھنے کے لئے ضروری ہے کہ وسیع تناظر میں دیکھا جائے۔ایک اہم ترین سوال جو سامنے آیا ہے اس پر بات کرتے ہیں۔ پاکستان افغان طالبان کی حمایت کیوں کر رہا ہے ؟ یہ بڑا بنیادی نوعیت کا سوال ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ افغان طالبان نے اقتدار میں آنے کے بعد کئی غلطیاں کیں۔ ان کا فہم
مزید پڑھیے