BN

پشاور



پنجاب : 27افراد ڈینگی کے شکار،کراچی میں11ہزارمتاثر

منگل 12 نومبر 2019ء
لاہور،کراچی،پشاور (جنرل رپورٹر،خبر نگار،نمائندہ 92نیوز)پنجاب کے تمام ہسپتالوں میں ڈینگی کل 152کنفرم مریض زیر علاج ہیں۔گزشتہ 24گھنٹوں میں پنجاب میں 27نئے مریض سامنے آئے جبکہ 19مریض ڈسچارج ہوئے ۔راولپنڈی 24،ملتان میں 2کیس سامنے آئے ۔صوبہ بھر میں زیر علاج مریضوں میں سے 3مریض انتہائی نگہداشت میں جبکہ باقی خطرے سے باہر ہیں۔گزشتہ روز محکمہ صحت کی ٹیموں نے پنجاب بھر میں 52046ان ڈور اور13248آؤٹ ڈور مقامات کوچیک کیا جبکہ258مقامات سے لاروا تلف کیا گیا۔گزشتہ روز صوبہ بھر سے ڈینگی لاروا کی موجودگی پر231افراد کو وارننگ جاری کی گئی جبکہ2مقامات کو سیل کیا گیا۔ادھر کراچی میں ڈینگی سے متاثرہ افراد کی
مزید پڑھیے


مذاکرات کامیاب،کے پی میں ڈاکٹروں کا ہڑتال ختم کرنیکااعلان

منگل 12 نومبر 2019ء
پشاور(خبرنگار)خیبر پختونخوا حکومت نے ڈاکٹروں سے مذاکرات کیلئے 4 رکنی کمیٹی تشکیل دے کر اعلامیہ جاری کردیا ،وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق کمیٹی میں صوبائی وزیر قانون سلطان محمد خان، صوبائی وزیر اکبر ایوب ، صوبائی وزیر خوراک قلندرلودھی اور سیکرٹری صحت یحییٰ اخونزادہ شامل ہیں ، ذرائع کے مطابق کمیٹی کی ڈاکٹروں کے ساتھ پہلی باضابطہ ملاقات آج ہوگی ، گرینڈ ہیلتھ الائنس نے بھی 5 ڈاکٹروں سمیت 12 افراد پر مشتمل کمیٹی تشکیل دیدی۔دریں اثناء ڈاکٹروں نے حکومت کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد احتجاج ختم کرنے کا اعلان کردیا ، ڈاکٹرز و دیگر
مزید پڑھیے


خیبرپختونخوا:اڑھائی ہزار ڈاکٹرز بغیر ریکوزیشن تعینات

منگل 12 نومبر 2019ء
پشاور(تیمور خان) خیبر پختونخوا محکمہ صحت کے سیکرٹریٹ اور ڈائریکٹوریٹ کے مابین روابط کے فقدان اور منصوبہ بندی نہ ہونے کے باعث اڑھائی ہزار سے زائد ڈاکٹرز کو بغیر ریکوزیشن کے تعینات کرنے کا انکشاف ہوا ہے ،جس کے باعث 2800میڈیکل آفیسرز سرپلس ہوگئے ہیں۔ذرائع کے مطابق گریڈ 17کے ڈاکٹرز کی منظورشدہ پوسٹس پ5200 ہیں جبکہ 7ہزار200 ڈاکٹرز تعینات کئے گئے ہیں اور مزید کی تعیناتیاں کی جارہی ہیں۔ ذرائع کے مطابق ہیلتھ سیکرٹریٹ نے میڈیکل آفیسرز کی براہ راست تعیناتیاں کی ہیں جبکہ پبلک سروس کمیشن کے ذریعے بھی 786ڈاکٹرز کی بھرتی ہوئی۔ ذرائع کے مطابق ماضی میں جن
مزید پڑھیے


پشاور:30ڈاکٹروں کی معطلی بھی ہڑتال سے نہ روک سکی،مریض پریشان

اتوار 10 نومبر 2019ء
پشاور (92نیوز )30ڈاکٹروں اور دو پیرا میڈیکس کی معطلی کے باوجود حیات آباد میڈیکل کمپلیکس کے ڈاکٹروں کی ہڑتال جاری رہی ، حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں او پی ڈیز بند ہونے کی وجہ سے مریضوں اور اس کے لواحقین کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جبکہ بیشتر مریض علاج کے لئے تڑپتے رہے تاہم ہسپتال میں داخل مریضوں کو صحت سہولیات ملتی رہیں، او پی ڈی بندش کے باعث دور دراز علاقوں سے آنے والے مریضوں اور لواحقین میں شدید غم و غصہ پایا گیا اور حکومت کو ڈاکٹروں کے مسائل حل نہ کرنے پر شدید تنقید کا
مزید پڑھیے


اے این پی کا اجلاس ، رہبر کمیٹی کے فیصلہ کا ساتھ دینے پر اتفاق

اتوار 10 نومبر 2019ء
پشاور(92نیوز)عوامی نیشنل پارٹی کے مشاورتی کمیٹی کا اجلاس زیر صدارت مرکزی صدر اسفندیار ولی خان ولی باغ چارسدہ میں منعقد ہوا،تین گھنٹوں تک جاری رہنے والے اجلاس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال پر تفصیلی غور کیا گیا،آزادی مارچ اور اس کے بعد بننے والے صورتحال پر تفصیلی بحث مباحثے کے بعد مشترکہ فیصلہ کیا گیا کہ اپوزیشن کی رہبر کمیٹی آزادی مارچ کے حوالے سے جو فیصلہ کریگی اے این پی اُس کے ساتھ ہوگی۔اجلاس میں مشاورتی کمیٹی کے ممبران مرکزی سینئر نائب صدر امیر حیدر خان ہوتی،مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین،مرکزی ترجمان زاہد خان،مرکزی سیکرٹری خارجہ
مزید پڑھیے




ہائیکورٹ کا حکم،ہسپتالوں میں ہڑتال ختم ، 24ہزارالائیڈہیلتھ پروفیشنلزکی ترقیاں معطل

جمعه 08 نومبر 2019ء
لاہور ،ملتان،فیصل آباد، پشاور(نامہ نگارخصوصی، جنرل رپورٹر،سٹاف رپورٹر،92نیوزرپورٹ،مانیٹرنگ ڈیسک)گرینڈ ہیلتھ الائنس نے لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے بعد سرکاری ہسپتالوں میں ہڑتال ختم کردی ۔ آج سے او پی ڈی اور ان ڈور معمول کے مطابق کھلنے کا اعلان کر دیا۔ پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین گرینڈ ہیلتھ الائنس ڈاکٹر سلمان حسیب نے کہا کہ حکومت معاملات کو حل کرنے میں بری طرح ناکام ہوگئی ،عدلیہ کے پیچھے چھپنے کی کوشش کی ۔جسٹس جواد حسن نے بھی ہمارے مطالبات پورے کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔ عدالتی فیصلے کو من و
مزید پڑھیے


خیبر پختونخوا،24گھنٹوں میں ڈینگی وائرس سے مزید 30افراد متاثر

جمعه 08 نومبر 2019ء
لاہور،پشاور(اپنے سٹاف رپورٹر سے ،خبر نگار ، سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا میں24 گھنٹوں کے دوران ڈینگی وائرس سے مزید 30افراد متاثر ہوئے جس سے صوبہ میں ڈینگی سے متاثرہ افراد کی تعداد 6 ہزار 828 تک پہنچ گئی۔علاوہ ازیں پشاور ہائیکورٹ نے ڈینگی سے متعلق کیس میں آئندہ سماعت پر چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا کو طلب کرلیا، سماعت کے موقع پر ڈی جی ہیلتھ، اسسٹنٹ کمشنراور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل عدالت میں پیش ہوئے ، ڈی جی ہیلتھ نے عدالت کو بتایا کہ صوبے میں 6 ہزار 803ڈینگی کیسز رپورٹ ہوئے جس پر جسٹس قیصر رشید نے استفسار کیا کہ پشاور
مزید پڑھیے


ڈینگی کا وارجاری،پنجاب 70 خیبرپختونخوا میں 48افراد شکار

جمعرات 07 نومبر 2019ء
لاہور،پشاور(جنرل رپورٹر،وقائع نگار)پنجاب میں ڈینگی سے مزید 70جبکہ خیبرپختونخوا میں 48افراد شکار ہوگئے ۔پنجاب کے تمام ہسپتالوں میں ڈینگی کل 176کنفرم مریض زیر علاج ہیں۔پچھلے چوبیس گھنٹوں میں پنجاب میں 70نئے مریض سامنے آئے جبکہ 52مریض ڈسچارج ہوئے ہیں۔راولپنڈی میں 49، لاہور میں 09، ملتان، سرگودھا، اٹک 02، 02 جبکہ بھکر،چکوال ، ننکانہ صاحب، رحیم یار خان، ساہیوال اور شیخوپورہ میں ایک ایک کیس سامنے آیا۔صوبہ بھر میں زیر علاج مریضوں میں سے 2انتہائی نگہداشت میں جبکہ باقی خطرے سے باہر ہیں۔گزشتہ روز محکمہ صحت کی ٹیموں نے پنجاب بھر میں 238827ان ڈور اور88112آؤٹ ڈور مقامات کوچیک کیا جبکہ622
مزید پڑھیے


گرینڈ ہیلتھ الائنس سے مذاکرات کیلئے کمیٹی تشکیل : ہائیکورٹ نے سیکرٹری صحت پنجاب کو طلب کرلیا

بدھ 06 نومبر 2019ء
لاہور،پشاور،ملتان،گجرات (جنرل رپورٹر،نامہ نگار خصوصی،خبر نگار،سپیشل رپورٹر،ڈسٹرکٹ رپورٹر) ڈاکٹروں کی مسلسل ہڑتال وڈیوٹی سے بائیکاٹ کے باعث مزید ڈاکٹرز کو بھرتی کرنے کا فیصلہ کیا جس کیلئے باضابطہ اسامیوں کو مشتہر کردیا گیا جبکہ لاہور ہائیکورٹ نے ڈاکٹروں کی ہڑتال کے خلاف درخواست پر سیکرٹری صحت پنجاب کو ریکارڈ سمیت آج ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا،عدالت نے مریضوں کو بلاتعطل صحت کی سہولیات کی فراہمی کا بھی حکم دے دیا۔تفصیل کے مطابق لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں گریڈ 17 میں 30 میڈیکل آفیسرز اور 30مختلف کنسلٹنٹ ڈاکٹرز بھرتی کئے جائیں گے ۔ علاوہ ازیں لاہور سمیت پنجاب کے تمام بڑے
مزید پڑھیے


گرینڈ ہیلتھ الائنس کا احتجاج ختم نہ ہوسکا،مریض رل کر رہ گئے

منگل 05 نومبر 2019ء
لاہور ،ملتان ،پشاور( جنرل رپورٹر،سپیشل رپورٹر،خبر نگار ) لاہور سمیت پنجاب کے تمام بڑے سرکاری ہسپتالوں میں ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائنس کی ان ڈور،آؤٹ ڈور ،لیبارٹریز اور آپریشن تھیٹرز سمیت باقی سروسز کا ہڑتال 26ویں روز بھی جاری رہی۔ہسپتالوں میں ہڑتال کی وجہ سے مریضوں اور انکے لواحقین کو شدید مشکلات و پریشانی کا سامنا کرنا پڑر ہا ہے ۔ ہسپتالوں کے او پی ڈیز کے بعد وارڈز میں بھی سناٹے چھائے رہے ۔ہسپتالوں میں چیک اپ اور ادویات کے حصول کیلئے آنیوالے شہری گھنٹوں انتظار کے بعدخالی ہاتھ واپس لوٹنے پر مجبور ہوگئے ۔
مزید پڑھیے