BN

ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری


"فیضِ عالم"


حضرت داتا گنج بخش رحمۃ اللہ علیہ کے احوال و آثارسے یہ امر، بالاہتمام مترشح ہوتا ہے کہ ایک صوفیٔ باکمال کا متبحر عالم ہونا اور پھر اُس عالم کا، اپنے اس علم پر متبع ہونا از حد ضروری ہے ۔ حضرت علی بن عثمان الہجویریؒ ،جو بلاشبہ بلند پایہ "عالمِ ربّانی" اور عالی مرتبت "شیخِ کامل"تھے، کے اسلوبِ حیات اور طرزِ زیست سے یہ بات بھی نمایاں ہے کہ آپؒ نے دین اسلام کے ایک عظیم مبلّغ کے طور پر، ابتداً "عالمِ شریعت"اور ثانیاً "شیخ طریقت"ہونا پسند فرمایا، بایں وجہ لاہور میں آپؒ نے اپنے قیام کے معاً بعد،
هفته 18  ستمبر 2021ء مزید پڑھیے

ایشیا کا دل …افغانستان

پیر 13  ستمبر 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
کابل پر فتح مندی کے تین ہفتے بعد‘افغانستان میں طالبان کی تینتیس رکنی کابینہ کے اعلان کے ساتھ ہی، امارات اسلامی افغانستان کی عبوری حکومت کا اعلان عمل میں آ گیا ہے‘جس کے مطابق طالبان کی مشاورتی کونسل رہبر شوریٰ کے سربراہ ملا محمد حسن اخوند اس عبوری حکومت کے سربراہ ہوں گے‘جس کے بعد سے افغانستان کے معاملات بہتری کی طرف بڑھنے شروع ہو گئے ہیں‘موجودہ افغان یا طالبان لیڈر شپ ’’پرامن بقائے باہمی‘‘ کی پالیسی پر گامزن رہ کر عالمی برادری سے دوستانہ تعلقات کی خواہاں ہے۔جس کا لازمی اور یقینی راستہ مذاکرات باہمی گفت و شنید ،مکالمہ
مزید پڑھیے


’’بلوچگی حال احوال‘‘

جمعه 10  ستمبر 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
بلوچ فطرتاً وضعدار اور مہمان نواز ہوتا ہے،غریب سے غریب بلوچ بھی، اپنے گھر آئے مہمان کی خاطر مدارت اور دلجوئی میں کوئی کسر نہیں چھوڑتا،مہمان کے لیے حسبِ استطاعت قالین،نَمدہ،دری یا چٹائی آراستہ کی جاتی ہے، پانی،چائے وغیرہ پیش کرنے کے بعد،جب مہمان تھوڑا آرام کر کے تازہ دم ہو جاتا ہے،تو پھر میزبان اُس سے اپنی گفتگو اور بات چیت کا آغاز کرتا ہے،اپنے میزبان کے حسبِ استفسار۔۔۔ مہمان اپنا حال احوال۔۔۔یعنی وہ کہاں سے آیا ہے ،کیسے آیا ہے ، سفر کیسا رہا،راستے میں کیا کچھ دیکھا یا سُنا،علاقے میں آبادی،موسم اور بادو باراں کے حالات کیا
مزید پڑھیے


علی گیلانی اور تحریک آزادی۔۔۔قدم بقدم

هفته 04  ستمبر 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
گزشتہ صدی کے نصف اوّل ، ۔۔۔ آج سے 92 برس قبل ، اسی موسم اور اسی مہینے، یعنی، 29 ستمبر1929ء کو ، زوری منس تحصیل بانڈی پورہ۔۔۔ نہر زینہ گیرکی کھدائی کرنے والے ایک مزدور سیّد پیر شاہ گیلانی کے گھاس پھوس کے جھونپٹرے میں، ایک بچہ پیدا ہوا، جو درماندہ اور پثر مردہ کشمیریوں کے لیے ، جرأت ، ہمت اورعزم و استقامت کا ا ستعارہ ثابت ہوا،یہ محض اتفاق تھا یا کسی روحانی اور نسبی تعلق کا فیضان، کہ آپ کے والد نے آپ کا نام سیّد علی گیلانی رکھا، تاریخ انسانی اور بالخصوص مسلم ہسٹری میں
مزید پڑھیے


یکساں نصاب تعلیم۔۔۔

پیر 30  اگست 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
گزشتہ ہفتہ دورہ لاہور کے موقع پر، یکساں نصاب تعلیم کی افتتاحی تقریب میں وزیر اعظم عمران خاں کی باتیں دلچسپ بھی تھیں اور حقیقت کشابھی ، انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہونے والی ہماری بہت سی تقریبات ، جس میں سْننے والے اور بولنے والے ، سارے پاکستانی ہوتے ہیں ، لیکن اس کی کارروائی انگریزی میں ہورہی ہوتی ہے ، ان کا یہ کہنا درست تھا کہ ہماری تنزلی کی بڑی وجہ نظام تعلیم ہے، جس میں انگریزی کو بطور زبان فوقیت میسر ہے ، انگلش میڈیم سسٹم۔۔۔ وہ ذہنی غلامی ہے ، جس میں ساری
مزید پڑھیے



وہ نگاہ کی تیغ بازی۔۔۔

هفته 28  اگست 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
برصغیر میں اشاعت دین اور تبلیغ اسلام کا سہرا صوفیا کے سر ہے،جنکی مساعی جمیلہ سے کفر و ضلالت کے اندھیرے چھَٹ گئے اور نیکی،تقویٰ و طہار ت اور ایثار و بھائی چارے کی شمع فروزاں ہوئی۔سرز مین پاک و ہند اور بالخصوص خطۂ پنجاب کو ہدایت کی روشنی اور تابند گی عطا کرنیوالی ہستی،الشیخ السید علی بن عثمان الہجویری ؒ المعروف حضرت داتا گنج بخش ہیں،جنکا آستاں گزشتہ ایک ہزار سال سے مرجع خلائق ہے،مگر اس آستاں کے فیوض و برکات کو برصغیر کے شرق و غرب میں روشناس کرانے، اور اس سرز مین پر ایک مربوط اور مستحکم
مزید پڑھیے


بیعت اور ووٹ۔۔۔ فرق اور فاصلے

پیر 23  اگست 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
لغوی طور پر’’بیعت‘‘عہد و پیمان کو کہتے ہیں‘بیع اور بیعت کا مادہ ایک ہی ہے۔’’بیعت‘‘ایک سوشل کنٹریکٹ یعنی سماجی یا معاشرتی معاہدہ ہے‘جو اسلامی مملکت کے حکمران کی تخت نشینی کے موقع پر وقوع پذیر ہوتا ہے۔اس سے مراد فقہا امت کے نزدیک کسی شخص کو خلافت کا رتبہ اور منصب عطا کرنا‘یہ ایک معاہدہ ہے۔جس کا ایک فریق وہ شخص ہے جو اس عہدے کو قبول کرے اور دوسرا فریق جماعت اسلام ہے۔اس ضمن میں ابن خلدون کے الفاظ ملاحظہ ہوں: ’’جان لو: بیعت ہے۔اطاعت کا عہد ھے،گویا بیعت کنندہ اپنے امیر کے ساتھ عہد باندھتا ہے کہ اسکا معاملہ
مزید پڑھیے


’’جمہوری اقدار‘‘

پیر 16  اگست 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
مدینہ منورہ اور دمشق دو مختلف اور متضاد رویوں کے عکاس اور نمائندے بنے۔دمشق سے ملوکیت کا انسٹیٹیوشن معرض عمل میں آیا۔شورائی اقدار کا تقدس پامال اور اصولی وآئینی انحراف ہوا۔ولی عہد نامزد کرنے اور بزور شمشیر،طاقت اور بیعت کی رسم کا اجرا ہوا۔حضرت علی المرتضی ؓجیسی ہستی پر سرکاری آرڈر کے تحت سب و شتم ہونے لگا۔دربار اور دربار داری کے لوازمات اور طبقات معرض عمل میں آئے۔ سٹیٹ بینک اور بیت المال ذاتی جاگیر قرار پایا۔مال زکوٰۃ، خمس،جہاد اور منبر کو یرغمال بنا دیا گیا۔خلافت پہلے امارت اور پھر ملوکیت کے سانچے میں ڈھل گئی۔وسیع فتوحات دارالسلام کی
مزید پڑھیے


پاکپتن اور بلبن کی ’’ڈیفنس پالیسی‘‘

جمعه 13  اگست 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حضرت بابا فریدالدین مسعود گنج شکرؒ کے 779ویں،سالانہ عرس مبارک کی پندرہ روزہ تقریبات،انکی درگاہِ مقدسہ پاکپتن شریف میں ان دنوں جاری ہیں،جہاں کی خانقاہی رسومات از حد متنوع اور منفرد ہیں،دربارشریف کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ان عرس تقریبات کا آغاز و افتتاح صوبائی وزیر اوقاف پیر سیّد سعید الحسن شاہ اور سیکرٹری اوقاف نبیل جاوید نے کیا،جبکہ راقم کو بھی اس میں شمولیت کی سعادت میسر رہی،اس موقع پر پِسی ہوئی چینی،کوزہ ہائے گل پختہ میں نیاز شریف۔۔۔یعنی دو طباقوں میں مٹی کی چھوٹی چھوٹی پیالیاں شربت سے بھری ہوئی،جن میں نصف شکر اور نصف چینی کے شربت
مزید پڑھیے


محرم الحرام سے ذرا پہلے---

پیر 09  اگست 2021ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
کل سے نئے اسلامی و قمری سال 1443ھ کا آغاز ہوگا، محرم الحرام کی شروعات اور ذوالحجہ کے آخری ایام میں ، گذشتہ کچھ عرصے سے کوئی نہ کوئی ایسا حادثہ یاسانحہ رونما ہو جاتا ہے ، جس سے ملکی استحکام اور وقا ر پر حرف اور پُر امن مذہبی ماحول بالخصوص بین المسالک ہم آہنگی اوربین المذاہب رواداری سے آراستہ ملکی ماحول متاثر ہو نے کا اندیشہ پیدا ہو جاتا ہے،جسکا ایک مقصد پیش آمدہ محرم الحرام میں کشیدگی اور انتہا پسندانہ رجحانات کو تقویت ،دیگرملکی امن وامان کو سبو تاژ کرنا اور بین الاقوامی سطح پرپاکستان
مزید پڑھیے








اہم خبریں