BN

ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری


ملک گیر مشاورت…اور ’’رمضان فارمولا‘‘


صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان کی سربراہی میں پیش آمدہ ماہ رمضان 1442ھ کے امور بالخصوص’’نماز تراویح‘‘ کی بابت‘ ایک جامع اور اعلیٰ مشاورت کے بعد ’’متفقہ اور مشترکہ اعلامیہ‘‘ ڈاکٹر عارف علوی ‘ صدر پاکستان نے قوم کا عطا کر دیا‘ جو کہ یقینا اطمینان بخش امر ہے‘ ایک روز قبل‘ ایوان صدر میں منعقدہ اس اجلاس میں‘ ویڈیو لنک کے ذریعے چاروں صوبائی دارالحکومت کے ساتھ‘ صدر آزاد کشمیر سردار مسعود احمد خان اور گورنر گلگت بلتستان بھی اپنے صوبے کے اکابر علماء اور دینی شخصیات کے ساتھ اس میں شریک تھے۔ لاہور سے گورنر پنجاب کی سربراہی میں
پیر 20 اپریل 2020ء

دنیا کوہے اس مہدی برحق کی ضرورت

جمعه 17 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
سیّدنا امام محمد المھدی علیہ السلام کے حوالے سے مختلف اعتقادی فتنے ہماری تاریخ میں پیدا ہوتے رہے ہیں۔ جن میں ایک یہ بھی تھا کہ امام محمد المہدی ۔ نام کی کوئی معین شخصیت نہ ہے، بلکہ ہر دور میں ایک امام مہدی ہوتا ہے، جولوگوں کی راہنمائی کا فریضہ سرانجام دیتارہا ہے۔ اس خیال اور نظریے کے پیشِ نظر بہت سے لوگ اپنے آپ کو تاریخ کے مختلف ادوار میں ’’المھدی‘‘ خیال کرتے رہے۔ جبکہ دوسری طرف کثیر احادیث، جن میں متواتر اور مرفوع درجے کی بھی شامل ہیں۔ حضرت شاہ ولی اللہ محدثِ دھلوی نے ’’التفہیمات الالٰہیہ‘‘
مزید پڑھیے


’’کورونا‘‘…… اورمذہبی لیڈر شپ

پیر 13 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
پنجاب حکومت نے ’’کورونا بحران‘‘ سے نبرد آزما ہونے کے لیے ابتدا ہی سے، مذہبی لیڈر شپ کیساتھ خصوصی رابطے کا اہتمام کیا اور موجودہ نازک صورتحال میں دینی طبقات کیساتھ مفاہمت اور بہترین تعلقاتِ کار کو یقینی بنایا، جس کے سبب، دوسرے صوبوں کی نسبت پنجاب میں کسی نوعیت کا کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا، جس کا کریڈٹ یقینی طور پر صوبے کے سربراہ کے ساتھ ساتھ ان کی اس ’’کورٹیم‘‘کو بھی جاتا ہے، جنہوں نے بہترین حکمتِ عملی کو مرتب کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا، اس سلسلے میں یقینا پنجاب کے محکمہ اوقاف و مذہبی امور
مزید پڑھیے


مدارس دینیہ میں ’’تصوف‘‘ کی تدریس……(2)

جمعه 10 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
صوفیاء و علماء کی برکتوں اور کوششوں سے لاہور نہ صرف مرکز اسلام ہند شمار کیا جانے لگا بلکہ اس کو ثانی دارا لملک غزنین کا رتبہ حاصل ہو گیا۔ کتب خانوں کی یہ حالت تھی کہ فخر الدین مبارک شاہ نے جب بحرالانساب کی تالیف شروع کی تو نسب جیسے دقیق موضوع پر ایک ہزار کتاب ان کو میسر آ گئی۔بالعموم یہ خیال کیا جاتا ہے کہ شمالی ہندوستان میں مسلمانوں کی آبادی اور ان کے مذہبی‘ دینی‘ تعلیمی اور تمدنی ادارے غوریوں کی فتوحات کے بعد وجود میں آئے۔ لیکن یہ امر حقیقت کے منافی ہے، شمالی
مزید پڑھیے


۔۔۔وقتِ دعا ہے

پیر 06 اپریل 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
سلطان المشائخ حضرت خواجہ نظام الدین اولیائؒ فوائد الفواد کی نویں مجلس میں فرماتے ہیں کہ مصیبیت کے نازل ہونے سے قبل دعا کرنی چاہیے، مصیبت جب اوپر سے نازل ہوتی اور دعا نیچے سے اوپر جاتی ہے، تو ہر دو کا فضا میں آمنا سامنا ہوتا ہے ، اگر دعا میں قوت اور طاقت ہو تو وہ مصیبت کو واپس لوٹا دیتی ہے اور اگر قوت نہ ہوتو پھر مصیبت نازل ہوجاتی ہے ۔ آپ مزید فرماتے ہیں کہ جب تاتاریوں نے 1221ء میں یلغار کی اور یہ مصیبت نیشاپور کے پاس پہنچی ، جِس کے نتیجے میں
مزید پڑھیے



مدارس دینیہ میں ’’تصوف‘‘ کی تدریس…(1)

پیر 30 مارچ 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
قومی اور بین الاقوامی سطح پر ’’دینی مدرسہ سسٹم‘‘ کو بے شمار چیلنجز درپیش ہیں۔ ایک طرف دہشت گردی اور انتہا پسندی کے تانے دینی مدارس سے منسلک کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے‘ جبکہ دوسری طرف دینی مدارس کے فارغ التحصیل۔ دور حاضر میں دینی اور عصری تقاضوں سے عہدہ برآ ہونے کو تیار نہ ہیں۔ جدید عصری تناظر میں صاحبان محراب و منبر‘ اصحاب سجادہ و ارباب مسند تدریس کو اخلاص‘ محبت ‘ رواداری‘ انسان دوستی اور تحمل و برداشت جیسے جذبوں سے سرشار ہونے کی اشد ضرورت ہے‘ جس کے لئے ’’صوفیانہ انداز فکر و عمل‘‘
مزید پڑھیے


سرِ لا مکاں سے طلب ہوئی---

پیر 23 مارچ 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
غمگسار چچا اور وفا شعار رفیقہ حیات کے دنیا سے اُٹھ جانے کے بعد ،مکہ والوں کے تیور یک لخت بدل گئے ، شائستگی اور احترام کی بجائے بے مروتی اور سنگدلی غالب آگئی ،مکہ میں اسلام کے شجر طیبہ کے بار آور ہونے کے امکانات مشکل نظر آئے، توحضورﷺ نئے اُفق دریافت فرمانے کی طرف متو ّجہ ہوئے ،جس کے لیے فوری طور پر طائف کا سفر اختیار فرمایا ، طائف مکہ سے 120میل دور ایک خوشگوار اور پُر فضا پہاڑی مقام، جہاں کی آبادی خوشحال اور آسودہ حال تھی ، یہ علاقہ بنو ثقیف کی ملکیت تھا ،جن
مزید پڑھیے


در شبستان ِحرأ۔۔۔۔۔

پیر 16 مارچ 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
"غارحرأ" ۔۔۔ طلب وجستجو کی غار،" جبل نور" ۔۔۔ روشنی اور رحمت کا پہاڑ۔ مکہ معظمہ میں، بجانب شمال مشرق، تقریباً چار کلومیٹر کے فاصلے پر ، یہ خشک اور بے آب و گیاہ پہاڑ، جس کا راستہ کٹھن اور دشوار---کہ صحتمند اور طاقتور آدمی بھی ذراہمت ہی سے پہنچ پاتا، جہاں اظہارِ نبوت سے قبل، خلوت گزیں ہو کر ، حضور ﷺ، اللہ تعالیٰ کی عبادت کیا کرتے تھے،پتھر کی بڑی سِلوں سے بنے، اس غار کی لمبائی بارہ فٹ جبکہ چوڑائی اور اونچائی چھ فٹ ہے، اندر صرف ایک آدمی کے نماز پڑھنے ، بیٹھنے یا لیٹنے کی گنجائش
مزید پڑھیے


بہ کعبہ ولادت

پیر 09 مارچ 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
آج تیرہ رجب المرجب ہے‘ معتبر روایات کے مطابق آج سے تقریباً چودہ سو پینسٹھ سال قبل؟30عام الفیل‘ اظہار نبوت سے دس سال پہلے ‘ حرم کعبہ کے اندر ‘ آج‘ یعنی 13رجب کے دن‘ کعبہ کے متولی اور بنو ہاشم کے سردار حضرت ابو طالب کے ہاں ایک ایسی جلیل القدر ہستی اور عظیم المرتبت شخصیت کی ولادت ہوئی‘ جن کے اسلام کو نبی اکرم رسولِ محتشم ﷺ نے سب پر مقدم‘ جن کے علم کو سب سے افضل اور بُردباری میں سب سے بڑھ کر قرار دیتے ہوئے‘ اس کی عظمت اور فضیلت کا اعلان کیا۔ آپ کی
مزید پڑھیے


خوا جۂ خواجگان---غریب نوازؒ

پیر 02 مارچ 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حضرت خواجہ غریب نواز،خواجہ معین الدین چشتیؒ کے 808ویں سالانہ عرس کی مرکزی تقریبات آج بیک وقت لاہور اور اجمیر شریف میں جاری ہیں ، لاہور میں منعقدہ اہم ترین تقریب ،آپ کے اُ س "حجرئہ اعتکاف"یا"چلّہ گاہ"کا غسل شریف ہے ، جہاں آپؒ کم وبیش ساڑھے سات سو سال قبل ، برصغیر میں تشریف فرما ہوتے ہوئے ، اوّلین حاضری دے کر ،اکتساب فیض کرکے ،دنیا کو اس دَر کی "گنج بخشیوں"کی طرف متوجہ کیا۔یہ "چلّہ " خواجۂ اجمیر کے لیے جہاں فیضِ رَبّا نی کا ذریعہ بنی وہیں آنے والے دور کے تقاضوں اور ضروریات کے حوالے سے
مزید پڑھیے