BN

ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری


’’لنگر سسٹم‘‘۔۔۔اورپنجاب حکومت کی سبقت


برصغیرمیں’’ہیومن ازم‘‘ کی سب سے بڑی تحریک کے داعی اور مبلّغ تو ہمارے صوفیا ہی تھے، فرق صرف اتنا ہے کہ انہوں نے فرضی، عارضی یا نمائشی’’موم بتیوں‘‘کی بجائے ، تکریمِ آدمیت اور شرفِ انسانیت کی وہ شمعیں روشن کیں،جن کی لَو اورضَو صدیاں گزرنے کے باوجود مدہم نہ ہوئیں،کہ ان کی حیاتِ ظاہری میں اگر شمس الدین التمش، قطب الدین ایبک، غیا ث الدین بلبن اور ناصرالدین محمود حاضری کی سعادت سے بہر ہ مند ہوتے تھے،ان کے دنیا سے پردہ کرجانے کے بعد بھی وقت کے حکمران روشنی اور راہنمائی بلکہ اختیار اور اقتدار کے حصول اور استحکام
پیر 14  ستمبر 2020ء

میں خیال ہوں کسی اور کا ۔۔۔

جمعه 11  ستمبر 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
ہمارے ایک بزرگ دوست نے جب قرآنِ پاک کا منظوم پنجابی ترجمہ کیا، تو تفسیر کے ہر صفحہ پر اپنا طویل اسمِ گرامی" مع الا لقاب" ثبت فرمایا ، وجہ اس کی یہ بیان ہوئی ، کہ جب تک از خود اپنے آپ کو بڑا نہ سمجھو، دنیا کیسے سمجھے گی ، اور دوسری توجیح یہ سامنے آئی کہ ہر آدمی مرکر بھی ، لوگوں کے ذہنوں اور تاریخ کے اوراق میں زندہ رہنے کا خواہشمند تو ہوتا ہی ہے، اس کا اہتمام زندگی ہی میں کیوں نہ کر لیا جائے، بہرحال یہ ۔۔۔ اور ایسی بہت سی تمنائیں اور
مزید پڑھیے


پارلیمان کا تاریخ ساز فیصلہ

پیر 07  ستمبر 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
تقریباً نصف صدی قبل، 30جون 1974ء کو قومی اسمبلی میں مولانا شاہ احمد نورانی ، مولانا مفتی محمود ، مولانا عبدالمصطفیٰ الازہری، پروفیسر غفور احمد، مولانا عبدالحق (اکوڑہ خٹک) ، چوہدری ظہور الہٰی ، سردار شیرباز خان مزاری سمیت ، حزب اختلاف سے تعلق رکھنے والے 22پارلیمینٹیرینز نے قادیانیوں کو غیر مسلم قرار دینے کیلئے قرار داد جمع کروائی ۔ جس پر ازاں بعد پندرہ مزید ممبران اسمبلی نے دستخط کیے ، جن میں صاحبزادہ نذیر سلطان، نواب محمد ذاکر قریشی ، مہر غلام حیدر بھروآنہ اور خواجہ جمال محمد کوریجہ سمیت دیگر شخصیات شامل تھیں۔ قرارداد میں تحریر کیا
مزید پڑھیے


’’ہو صداقت کے لیے جس دل مرنے کی تڑپ‘‘

جمعه 04  ستمبر 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حضرت بابا بلھے شاہؒ کا 263واں سالانہ عرس، جس کا آغاز آج دوپہر کو ہوگا، کے حوالے سے ، تین روز قبل انتظامی اجلاس جاری تھا، کہ معاً ایک درویش میٹنگ روم میں آ دھمکا اوریہ’’ پنجابی آکھان‘‘ یعنی کہاوت، فضاؤں میں مرتعش کر دی : اَندر ہووے سچ/ تے باہر کھلو کے نَچ یعنی جو حق پر ہو، وہ کس طرح دَب سکتا ہے، امام عالی مقام نے بھی کربلاسے یہی پیغام دیا کہ جب جسم موت ہی کے لیے بنا ہے ، پھر حق و صداقت کی خاطر، اللہ کی راہ میں شہید ہونے سے بہتر اور کیا
مزید پڑھیے


’’بہشتی دروازہ‘‘ ۔ اورسردار عثمان بزدار کی حاضری

جمعه 28  اگست 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
برصغیر کی تاریخِ تصوّف و حکمت اس امر پر شاہد ہے کہ ہر عہد کے سلاطین اور حکمران حضرت بابا فرید الدین مسعودِ گنج شکر رحمہ اللہ کے مزار پر حاضری کی سعادت سے خود کو بہرہ مند کرتے رہے، اسی تسلسل میں گذشتہ شام ، پنجاب کے وزیراعلیٰ سردار عثمان احمد خاں بزدار بھی حضرت بابا صاحبؒ کے دربارِ اقدس پر حاضر تھے۔ صوبائی وزیر اوقاف و مذہبی امور ، سیکرٹری اوقاف و مذہبی امور ، ڈائریکٹر جنرل اوقاف پنجاب سمیت دینی ، روحانی، سیاسی اور سرکاری عمائدین بھی موجود تھے۔اس موقع پر ملک و ملت کی ترقی او
مزید پڑھیے



سوشل میڈیا کا بگاڑ۔ دینی طبقات کی تشویش

پیر 24  اگست 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان خان بزدار کی زیرصدارت، محرم الحرام1442ھ میں امن و امان کے قیام، فرقہ وارانہ ہم آہنگی، بین المسالک رواداری اور موجودہ مستحکم ملکی فضا کو مزید مؤثر اور مضبوط بنانے کے لیے، دو روز قبل، ایوانِ وزیراعلیٰ،90۔شاہراہ قائداعظم میں، علمائ،مذہبی و دینی شخصیات،عمائدین حکومت اور ارباب حِل و عقد پر مشتمل ایک عظیم اور وقیع اجتماع منعقد ہوا،جو یقینا قومی یکجہتی اور مِلّی استحکام کے حوالے سے نہایت مثبت اور دوررس اثرات کا حامل ہوگا، جو نہ صرف پنجاب بلکہ پورے ملک کی مجموعی مذہبی، دینی اور معاشرتی صورتحال اور ماحول پر محبت آفریں اور اتحاد
مزید پڑھیے


نئے اسلامی سال کاآغاز

جمعه 21  اگست 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
سوشل میڈیا ازحد فعال ہے ، نئے اسلامی سال کی شروعات کے ساتھ ہی ، سالِ نو کی مبارک بادوںکے سلسلے بھی شروع ہوجاتے ہیں، حالانکہ ہمارا نیا سال تو شروع ہی شہادتوں کے عظیم سفر اور روزِ روشن تذکرے سے ہوتا ہے، اور پھر اس کے بعد یکم سے لے کر دس محرم الحرام۔۔۔ بالخصوص’’یوم عاشور‘‘شہادتوں کے وہ چراغ فیروزاں ہوئے ، جس کی مثال تاریخِ انسانیت پیش کرنے سے قاصر ہے۔ ذی الحجہ 23ھ ، خلیفۂ دوم حضرت عمر فاروق ؓحج کے امور سے فراغت پاکر ، مدینہ منورہ واپس تشریف لائے۔ دنیا کی عظیم ترین سلطنت کا
مزید پڑھیے


محرم کے’’امن وفد‘‘ اور عام الوفود

پیر 17  اگست 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
محرم الحرام ۱۴۴۲ھ کی آمد آمد ہے،صوبے میں بین المسالک ہم آہنگی اورامن وامان کی صورتحال کو مزید موثر اورمستحکم رکھنے کے لیے ایوانِ اوقاف ،لاہور سے صوبہ بھرکے لیے تمام مسالک کے علماء اورمذہبی شخصیات پر مشتمل ’’امن وفد‘‘ آج روانہ ہورہے ہیں،جس میں مفتی محمدرمضان سیالوی کی سربراہی میں گوجرانولہ،راولپنڈی۔مولانا سیّد عبدالخبیر آزاد کی سرکردگی میں ساہیوال،ملتان ، بہاولپور اور ڈی جی خاں جبکہ مفتی محمداسحاق ساقی الازہری فیصل آباد اور سرگودھا کے وفود کی قیادت کریں گے۔ایک طرف انتظامی سطح پر پنجاب کے وزیرقانون راجہ بشارت کی سربراہی میں کیبنٹ کمیٹی لا اینڈ آرڈر سرگرمِ عمل ہے۔
مزید پڑھیے


’’ریاست مدینہ ‘‘سے ’’ریاست پاکستان‘‘تک

جمعه 14  اگست 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
پہلی اسلامی ریاست جو مدینہ منورہ میں قائم ہوئی، وہ ایک ’’آئیڈیل اسلامی ریاست‘‘ تھی، جس کی بنیاد از خود نبی اکرم ﷺ نے اپنے دستِ خاص سے رکھی، اور آپ ﷺ ہی اس کے سربراہ تھے، اس کے نظمِ اجتماعی میں ، آپ ﷺ کے ساتھ آپ کے معتبر اور جلیل القدر صحابہؓ تھے، جو آپ ﷺ کے فیضِ نظر اور سایۂ تربیت سے بنے ، سنورے اورپروان چڑھے۔ یہی وجہ ہے کہ مدینہ منورہ کی یہ ریاست صرف اس وقت ، اس دور یا عرصہ تک کے لیے نہیں، بلکہ رہتی دنیا تک ، ہر دور، ہر
مزید پڑھیے


حضرتِ عثمانِ غنی ؓ ’’جامع القرآن‘‘

پیر 10  اگست 2020ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
آج19، ذوالحجہ1441ھ ہے ،آج سے چودہ سو، چھ سال قبل،18 ذوالحجہ35ھ کو ، مدینتُہ الرسول میں، آپ ﷺ کے پیارے صحابیؓ، اور داماد جن کے عقد میں آپ ﷺ کی دو صاحبزادیاں ، حضرت ِ رقیہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا اور حضرتِ اُمِّ کلثوم رضی اللہ تعالیٰ عنہا،یکے بعد دیگرے آئیںاور آپ ﷺ نے فرمایا’’ اگرمیری چالیس بیٹیاں بھی ہوتیں، تو میں ایک کے فوت ہوجانے کے بعد دوسری کی شادی عثمان رضی اللہ تعالیٰ عنہُ سے کردیتا ۔۔۔‘‘ نہایت مظلومیت کے ساتھ مدینہ منورہ میں شہید ہوئے۔ امیر المومنین، خلیفہ سوم،ذوالنورین حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہُ نے
مزید پڑھیے