BN

ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری


مکہ کی شہری ریاست اور----’’حج‘‘


"92"کے "نور ِقرآ ن "کی لائیو ٹرانسمیشن میں ایک کالر نے سوال پوچھا لیا کہ ـ"ریاست مدینہ "کی بات تو ہوتی ہے لیکن کیا"مکہ کی شہری ریاست "کابھی کہیں کوئی ذکرملتا ہے ---؟کیا یہاں بھی کوئی حکومتی نظم ونسق اور قانون کی عملداری تھی ---؟سوال اپنی جگہ صائب تھا ۔ رمضان المبارک 8ہجری میں فتح مکہ کا عظیم معرکہ سَرہوا، اور یہ خطہ بھی "ریاست مدینہ " کی عملداری میںعملاً شامل ہوگیا، نبی اکرم ﷺ نے فتح مکہ کے بعد پندرہ روز یہاں قیا م فرمایا ۔ عتاب بن اُسید ،کو مکہ کا گورنر بنایااور فرمایا ،"میں نے اللہ کے
جمعه 09  اگست 2019ء

پاکپتن کا عرس---- اور اراضی الاٹمنٹ کیس

پیر 05  اگست 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
حضرت بابا فرید الدین مسعود گنج شکرؒ کے 777ویں سالانہ عرس کی ابتدائی تقریب "رسم چلّہ" 24ذیقعد،بمطابق 27جولائی2019ء (اتوار) آپ کے دربار دُرِّبار واقع پاکپتن شریف میں اوقاف ایڈمنسٹریشن ،خانوادہ چشتیہ فریدیہ اور عقید تمندوں نے مشترکہ طور پر ادا کرتے ہوئے ،پیش آمدہ عرس کی آمد کا" سندیسہ "دے دیا ۔ اس رسم میں سجادہ نشین صاحب عشاء کے وقت دربار شریف میں حاضر ہو کر ،اس کے غربی گوشے میں کچھ دیر قیام کرتے اور ، ازاں بعد ’’ موہلی کا ایک دھاگہ‘‘ روضہ کے اندرونی حصے میں واقع نوری دروازے کے ساتھ باندھتے ہیں، اسی کو ’’رسمِ
مزید پڑھیے


’’تلاشِ حق‘‘----اورامام غزالی

جمعه 02  اگست 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
اسلامی تاریخ میں متصوفانہ افکار اور فلسفیانہ نظریات کے حوالے سے امام غزالی ؒ کی شخصیت نہایت نمایاں اور معتبر ہے ۔مسلم فکر میں ’’فلسفہ اور تصوّف‘‘ کا خوبصورت امتزاج صرف اور صرف امام غزالیؒ کے ہاں ملتا ہے ،جوہمیشہ باطنی اسرار اور الفاظ کے اندر چھپی ہوئی معنویت کے ادراک کے لیے کوشاں رہے ۔ گوکہ ’’ صوفی اور فلسفی‘‘ اپنے مقصود ومنتہا یعنی ’’حقیقت مطلقہ‘‘ تک رسائی کے حوالے سے ہمیشہ سرگرداں رہتے ہیں ----تاہم دونوں کے طریقہ ہائے کار میں واضح فرق ہے ۔ ’’فلسفی‘‘ حقیقت کا فہم وشعور حاصل کرنے کے لیے عقل کو اپنا راہنما
مزید پڑھیے


پاسپورٹ ایمنسٹی سکیم ۔۔۔اور ہمارے ’’سرکاری علمائ‘‘

پیر 29 جولائی 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
گورنمنٹ کی حالیہ ’’پاسپورٹ ایمنسٹی سکیم‘‘ سے سب سے زیادہ ہمارے وہ علمائ/خطباء استفادہ کر رہے ہیں جو مختلف سرکاری محکموں میں ’’سرکاری خطیب‘‘ کے طور پر فائز ہیں۔ وگرنہ ہمارا یہ ’’سرکاری طبقہ علماء و خطبا‘‘ بہت سے ملازمانہ قواعد و ضوابط بالخصوص پاسپورٹ میں’’گورنمنٹ سرونٹ‘‘ کے اندراج سمیت سرکاری امور اور ضروریات کو درخور اعتنا نہیں سمجھتا‘ سرکاری ملازمت کے باوجود ان کے پاسپورٹ پرائیویٹ ہی ہوتے اور اسی پر وہ اکثر محکمانہ این، او، سی اور’’ رخصت بیرون ملک‘‘ کے بغیر ہی ،بیرونی ممالک کے تبلیغی اور روحانی دورے بھگتا لیتے ہیں‘ اگرچہ وہ حق ‘ حقیقت
مزید پڑھیے


حضرت علی المرتضیٰ ؓ کا خط----اور اقوام متحدہ کی قرار داد

پیر 22 جولائی 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
اقوامِ متحد ہ کی کمیٹی برائے انسانی حقوق نے حضرت علی المرتضیٰؓ کے مکتوب بنام مالک بن اشتر کو تاریخ ِ عالم کا منصفانہ ترین خط قرار دیتے ہوئے ، دنیا کے تمام حکمرانوں کو ، اسے بطورِ مثال اپنانے کی تجویز پیش کی ہے ، کمیٹی نے اس خط کو ’’سماجی انصاف‘‘ اورامنِ عالم کا اعلیٰ ترین نمونہ اور حضرت علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ کو نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے بعد ، انسانی تاریخ کا عادل ترین حکمران قرار دیا ہے ، انہوں نے لکھا ہے: "The Caliph Ali Bin Abi Talib is considered the fairest
مزید پڑھیے



’’مدرسہ ایجوکیشن ‘‘…چند فکری زاویے

پیر 15 جولائی 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
داتاؒ دربار میں منعقدہ جامعہ ہجویریہ کے نئے تعلیمی سال کی افتتاحی تقریب میں معروف دانشو راوریا مقبول جان کایہ استفسار بجا کہ اگر ’’درس نظامی ‘‘ کا نصاب اہل سنت کے دونوں مکاتبِ فکر (بریلوی +دیوبندی) کا تقریباً ایک جیسا ہے ،توپھر اِن دونوں میں بُعد اور دوری کیوں----؟ ،مولانا ضیاء الحق نقشبندی نے ہمیشہ کی طرح خوش طبعی کی اور کہنے لگے کہ ’’اختلاف ---نصاب پڑھانے میں نہیں ، سمجھانے میںہے ۔‘‘بہر حال یہ بات تو اپنی جگہ معتبر ہے کہ برصغیر کی غالب اکثریت تصوّف پسند اور حنفی ُ المشرب ہے ،اور یہ دو مکاتبِ فکر اپنے
مزید پڑھیے


’’روڈ ٹو مکہ ‘‘…

پیر 08 جولائی 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
’’دی روڈ ٹو مکہ‘‘ علامہ محمد اسد کی شہرئہ آفاق کتاب ہے ،جس کو علمی ،ادبی اور تہذیبی حوالے سے معتبر مقام میسر ہے ۔ علامہ صاحب صرف یہودی النسل ہی نہ تھے، بلکہ یہودیوں میں دینی اہمیت کے حامل …ایک اعلیٰ خاندان کے فرد بھی تھے ،وہ جولائی1900ء میں ، یوکرین کے شہر ’’لیویو‘‘ میں پیدا ہوئے ،ان کا نام ’’لیوپولڈویز‘‘ تھا ۔26سال کی عمر میں برلن کے سب وے پر ، اَپر کلاس میں سفر کے دوران ، اپنے اردگرد بیٹھے ---بظاہر آسودہ اور خوشحال… مگر مضطرب اوراُداس ہمسفروں کی کیفیت نے لیو پولڈویز کو گہری سوچ اور
مزید پڑھیے


’’علماء اکیڈمی ‘‘کا ریفریشر کورس۔۔۔

پیر 01 جولائی 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
علماء اکیڈمی ایڈمنسٹریشن نے 42ویں آئمہ /خطباء ریفریشر کورس کی افتتاحی تقریب "حضوری باغ"کی اس بارہ دری میں برپا کرڈالی ،جہاںکہیں مہاراجہ رنجیت سنگھ اپنی عدالت لگایا کرتا۔ ہمارے ایک سابق صدر بلکہ آرمی چیف اس" قرییکو دنیا کی خوبصورت ـ"Location"سے تعبیر کرتے تھے ۔جس کے ایک طرف مسلمانوں کی سطوت وشاہی کا عظیم نشان "شاہی قلعہ"اس کے بالمقابل تاریخی عالمگیری بادشاہی مسجد ،جس کے بانی کو اقبالؒ نیـ"خدنگ آخریں" لکھتے ہوئے ---اسلامی ترکش کے آخری تیر سے تعبیر کیا، اور اسی مسجد کے وہ کشادہ اور مضبوط زینے ----جن پر بیٹھ کر’’ آوازِ دوست ‘‘کا مصنف برصغیر کی
مزید پڑھیے


’’مالی بحران ‘‘کیسے پیدا ہوتے ہیں---؟

پیر 24 جون 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
ابن خلدون کہتا ہے کہ اگر حکمران ا ز خود تاجر بن جائیں اور کاروبارِ سلطنت کی بجائے ،ذاتی تجارت اور اپنے نجی کاروبار کے پھیلائو میں لگ جائیں ،تو ریاست زوال اور ملکی شہری خسارے ، نقصان اور بے اعتمادی کا شکار ہوجاتے ہیں ،جس کا لازمی نتیجہ ،عوام کا حکومتی اداروں پر عدم اعتماد اور ٹیکسوں کی ادائیگی سے اِعراض کی صورت میں ظہور پذیر ہوتا ہے۔ ابن خلدو ن نے اپنی شہرئہ آفاق کتاب ’’تاریخ ابن خلدون‘‘ کے مقدمہ کی دوسری جلد میں ،یہ بھی تحریر کیا ہے کہ جب حکمران تجارتیں کرنے اور اپنے کاروبار پھیلانے
مزید پڑھیے


گورو ارجن دیو کا شہیدی دن(جوڑ میلہ)

پیر 17 جون 2019ء
ڈا کٹر طا ہر رضا بخاری
سکھوں کے پانچویںگورو’’ ارجن دیو‘‘ کے 413ویں شہیدی دن (Martydom day)اور جوڑ میلہ کے سلسلہ کی مرکزی تقریب کل یعنی 16جون، اتوار، لاہور کے گوردوارہ ڈیرہ صاحب میں منعقد ہوئی, یہ وہی گورو ارجن دیو ہیں, جو گولڈن ٹیمپل کی بنیاد رکھوانے کے لئے لاہور سے حضرت میاں میر قادریؒ کو بطور خاص امرتسر لے کر گئے۔ جی سی یونیورسٹی کے استاد سردار کلیان سنگھ کلیان کی یہ فکر مندی اور درد مندی اپنی جگہ بجا،کہ خطے میں ’’سکھ مسلم تعلقات‘‘ کے درخشاں نقوش ایک سازش کے تحت تاریخ اور بالخصوص ہندوستان کے موجودہ نصاب سے محو کئے جا
مزید پڑھیے