Common frontend top

قادر خان یوسف زئی


کابل سے انخلا ء کا مشکل فیصلہ !


افغانستان سے انخلاء کا فیصلہ ایک پیچیدہ عمل تھا، انخلا کئے بغیر امن کو موقع فراہم کرنا مشکل ہوگیا تھا ، جس کا کوئی آسان جواب نہیں تھا۔ لیکن بالآخر، صدر بائیڈن نے سابق صدر کے فیصلے پر تمام تر تحفظات و خدشات کے باوجود انخلا کرکے افغانستان کے مستقبل کا فیصلہ ان کے عوام پر چھوڑ دیا ۔ افغانستان میں جنگ 20 سال سے جاری تھی، اور یہ واضح تھا کہ یہ جیتنے والی جنگ نہیں تھی۔ افغان طالبان دوبارہ منظم ہو رہے تھے اور طاقت حاصل کر رہے تھے، اور افغان حکومت تیزی سے کرپٹ اور غیر موثر
منگل 29  اگست 2023ء مزید پڑھیے

سیاسی مہمات اور سوشل میڈیا انفلونسرز

بدھ 23  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
دنیا بھر میں نوجوانوں کی بڑی تعداد سیاسی و سماجی دبائو یا آگاہی کے لئے سوشل میڈیا کا استعمال کرتیہے۔ بالخصوص سیاسی مہمات کے لئے سوشل میڈیا ونگ کسی بھیجماعت یا تنظیمکے لئے ناگزیر ضرورت بن چکا ۔ پاکستان میں بھی حالیہ برسوں میں، ووٹروں اور سپورٹروںتک پہنچنے کے لیے سوشل میڈیا پر سیاسی مہمات کا بڑھتا ہوا رجحان دیکھا گیا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ نوجوان تیزی سے سوشل میڈیا سے اپنی خبریں اور معلومات حاصل کر رہے ہیں، اور وہ روایتی میڈیا آؤٹ لیٹس کے مقابلے میں مقبول شخصیات پر زیادہ اعتماد کرتے ہیں۔ پیو
مزید پڑھیے


سیاسی قیادت کے لیے بڑا چیلنج

اتوار 20  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
پاکستان میں اگلے عام انتخابات جب بھی ہوں اس امر کے بڑھتے ہوئے امکانات ہیں کہ ان کے نتیجے میں معلق پارلیمنٹ ہو سکتی ہے۔ اس کا مطلب کہ کسی ایک جماعت کو اکثریت حاصل نہیں ہوگی، اور حکومت بنانے کے لئے سیاسی جماعتوں کو اتحاد تشکیل دینا ہوگا۔ ایسے کئی عوامل ہیں جو ملک میں معلق پارلیمنٹ کے لئے ساز گار بن چکے ہیں۔ اس وقت سیاسی طور پر قریباً تمام سیاسی جماعتیں منظر نامے سے بکھرئی ہوئی نظر آتی ہیں ، ملک میں اس وقت دجن سے زیادہ بڑی سیاسی جماعتیں جبکہ چھوٹی جماعتوں کی بڑی تعداد موجود
مزید پڑھیے


نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ کو درپیش چیلنجز!

منگل 15  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
سینیٹر انوار الحق کاکڑ کی پاکستان کے آٹھویں نگراں وزیر اعظم کے طور پر نامزدگی سابق حکمراں اتحادی جماعتوں سمیت تمام حلقوں کے لئے سر پرائز ثابت ہوئی۔ کاکڑ کی نامزدگی حیران کن ہونے کی کئی وجوہات ہیں۔ وہ پاکستان کی کسی بھی بڑی سیاسی جماعت کے کا رکن نہیں، جو ظاہر کرتا ہے کہ سیاسی اسٹیبلشمنٹ کے اندر ان کی حمایت کی مضبوط بنیاد نہیں تھی۔وہ عام لوگوں کے لیے نسبتاً غیر معروف رہے ہیں، کسی عوامی حلقے سے کامیاب بھی نہیں ہوئے، تاہم نگران وزیر اعظم کی حیثیت سے کاکڑ کی نامزدگی پر کڑی تنقید یا کسی قسم
مزید پڑھیے


11اگست :قائد اعظم کی تقریر

جمعه 11  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
11 اگست کی تقریر، جو بانی پاکستان، قائد اعظم محمد علی جناح نے 1947ء میں کی تھی، ایک اہم تاریخی واقعہ ہے جو پاکستان میں ایک ایسی بحث کو جنم دیتا ہے، جو پاکستان کی تشکیل و تکمیل کے حوالے سے اہم سمجھی جاتی ہے ۔ اس تقریر کو، اکثر 'اقلیتوں کی تقریر' بھی کہا جاتا ہے، تاہم، اس تقریر کی تشریح ایک تنازع کا شکار رہی ہے، جس کی وجہ سے پاکستان کے مختلف دھڑوں میں اتفاق رائے کا فقدان پیدا ہوا ہے۔ قائد اعظم کی 11 اگست کی تقریر کو پاکستان کے مستقبل کے لیے ایک بلیو
مزید پڑھیے



سیاست، طاقت اور مفاہمت کی کہانی

منگل 08  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
موجودہ حکومت کا دور اقتدار اختتام پذیر ہے۔ 15ماہ کی اس حکومت نے بدترین معاشی بحران و سیاسی عدم استحکام کا سامنا کیا۔ سابق وزیر اعظم عمران خان کی جماعت 9مئی کے ایک قومی سانحے کے نتیجے میں فی الوقت پوری طرح بکھر چکی ہے۔ اتحادی حکومت کے سربراہ وزیر اعظم شہباز شریف کا دور مشکل لیکن نتیجہ خیز رہا ہے۔ وہ اپریل 2022 میں عمران خان کی برطرفی کے بعد اقتدار میں آئے تھے، اور اس کے بعد سے انہیں شدید اقتصادی بحران، سیاسی عدم استحکام اور دہشت گردی کا خطرہ سمیت کئی چیلنجز کا سامنا رہا۔ ان
مزید پڑھیے


اسپیڈ قانون سازی

هفته 05  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
پارلیمنٹ در حقیقت ایک آئین ساز ادارہ ہے اور قانون سازی کا عمل کسی بھی جمہوریت کا ایک اہم حصہ ہوتا ہے۔ اس عمل کے ذریعے ہی قوانین بنائے جاتے ہیں، جو حکومت کو عوام کے سامنے جوابدہ بناتی ہے۔ تاہم، جب قانون سازی کے درست عمل کو نظرانداز کیا جاتا ہے، یا بغیر بحث کے قوانین منظور کیے جاتے ہیں، تو یہ انصاف کی فراہمی پر سنگین اثر ڈال سکتا ہے اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خدشات و تحفظات جنم لیتے ہیں۔ کسی بھی قانون میں ترمیم کے لئے ایوانوں میں اراکین اور قائمہ کمیٹی ایک ایسے
مزید پڑھیے


امریکہ ،افغان دوحہ مذاکرات کے نتائج

بدھ 02  اگست 2023ء
قادر خان یوسف زئی
دوحہ میں امریکی اور افغان عبوری انتظامیہ کے درمیان دو روزہ مذاکرات کے وہی نتائج سامنے آئے جن کی توقع کی جارہی تھی۔ بادی النظر دوحہ مذاکرات میں دونوں فریقین نے اپنے اپنے تحفظات سامنے رکھے تاہم اس کے حل کے لئے دونوں فریقوں کو دوحہ مفاہمتی عمل کے دوران ہونے والے معاہدے پر عمل درآمد بنانا ہوگا ، معاہدے کے تیسرے مرحلے میں بلیک لسٹ کا خاتمہ ،اقوام متحدہ سے افغان طالبان رہنمائوںکو دہشت گرد لسٹ سے نکالنے کے لئے معاملات کو آگے بڑھانا تھا لیکن افغان عبوری انتظامیہ نے کئی اہم معاملات میں عالمی
مزید پڑھیے


جرمن قوم کی پاکستان سے محبت

جمعه 28 جولائی 2023ء
قادر خان یوسف زئی
جرمنی کی پاکستان سے محبت سیاحوں کے پرتپاک استقبال اور مہمان نوازی سے عیاں ہے۔ جرمن عوام پاکستانی ثقافت، فن اور روایات میں ایک خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں،واضح رہے کہ افغانستان میں امن کے قیام کے لئے جرمن فارمیٹ نے ناقابل فراموش کردار ادا کیا تھا، جرمن فارمیٹ کی وجہ سے افغانستان میں 19برس سے جار ی جنگ کے خاتمے کا ایک سلسلہ شروع ہوا۔ جرمن فارمیٹ کو افغان تنازع کے حل میں بین الاقوامی ثالثی اور تعاون کی ایک کامیاب مثال سمجھا جاتا تھا۔ چلیں اس موضوع پر پھر بات کریں گے میں اپنے اصل موضوع پر آتا
مزید پڑھیے


پیپلز پارٹی کا طرز سیاست اور ناکامیاں

منگل 25 جولائی 2023ء
قادر خان یوسف زئی
پاکستان پیپلز پارٹی کی طرز سیاست نے قومی سطح پر اسے ناکامیوں سے دوچار کردیا اور وہ اقتدار کیلئے ’ووٹ اور جنگ میں سب جائز ‘کے فارمولے کو اپنارہی ہے۔ ندی نالوں اور ٹوٹی پھوٹی سڑکوں کے آگے فوٹو سیشن کروا کر سمجھتے ہیں کہ اس نے لیاری ہی نہیں بلکہ پورے کراچی کو پیرس اورباقی سندھ کو نیو یارک یا لندن بنا دیا ہے ۔ فخر سے تصویر لینے والے نہ جانے کس دنیا میں رہتے ہیں۔ انہیں اس عمل سے اندازہ نہیں ہورہا کہ شہری علاقوں کو تو چھوڑیں دیہی علاقوں میں بھی ان کے خلاف شدید بے
مزید پڑھیے








اہم خبریں